سا ئنس اینڈ ٹیکنالوجی

ون پلس 7 سیریز کے فونز کی تاریخ رونمائی سامنے آگئی

ون پلس وہ کمپنی ہے جس کے فونز کو آئی فون کلر قرار دیا جاتا ہے۔

اور اب یہ کمپنی اپنا نیا فلیگ شپ فون ون پلس 7 آئندہ ماہ متعارف کرانے والی ہے۔

ون پلس 7 سیریز کے فونز 14 مئی کو 4 مختلف شہروں نیویارک، لندن، بیجنگ اور بنگلور میں بیک وقت متعارف کرائے جائیں گے۔

ون پلس نے اس ایونٹ کی تصدیق کرتے ہوئے گو بیونڈ اسپیڈ ٹیگ لائن کو استعمال کیا ہے، جوکہ ممکنہ طور پر اس کمپنی کے پہلے 5 جی ورژن فون کی جانب اشارہ کرتا ہے۔

کمپنی کے سی ای او پیٹ لاﺅ نے ایک انٹرویو میں بتایا تھا کہ یہ فون نئے طرز کے ڈسپلے سے لیس ہوگا جبکہ مختلف رپورٹس کے مطابق اس سیریز فونز کے میں پوپ اپ سیلفی کیمرا بھی دیا جائے گا۔

اس بار کمپنی کی جانب سے اسٹینڈرڈ ون پلس 7 کے ساتھ پرو ورژن بھی متعارف کرایا جائے گا جس میں کواڈ ایچ ڈی پلس سپر امولیڈ ڈسپلے 90Hz ریفریش ریٹ موجود ہوگا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ فون تو 14 مئی کو متعارف ہوگا مگر اس کی قیمت پہلے ہی لیک ہوگئی ہے۔

اینڈرائیڈ سینٹرل کی ایک رپورٹ کے مطابق ون پلس 7 پرو کا 8 جی بی ریم اور 256 جی بی اسٹوریج والا ورژن 749 یورو میں دستیاب ہوگا۔

اس کے علاوہ 12 جی بی ریم اور 256 جی بی اسٹوریج والا ماڈل 819 یورو تک فروخت ہوگا۔

اس فون کا 6 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج والا ورژن بھی ہوگا مگر اس کی قیمت سامنے نہیں آئی مگر ممکنہ طور پر 699 یورو ہوسکتی ہے۔

ناسا نے مریخی زلزلے کی پہلی ریکارڈنگ جاری کردی

پیساڈینا، کیلیفورنیا: ناسا کی جانب سے مریخ پر اتارے گئے جدید ترین خلائی کھوجی ’’انسائٹ مارس لینڈر‘‘ نے انسانی تاریخ میں پہلی مرتبہ ’مارس کوئیک‘ یعنی مریخی زلزلے کو ریکارڈ کرتے ہوئے اس کی گڑگڑاہٹ بھی گرفت میں لی ہے۔

ماہرین نے اسے ’مارس کوئیک‘ یعنی مریخی زلزلے کا نام دیا ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ سرخ سیارہ مریخ اب بھی ارضیاتی طور پر سرگرم ہے۔ اس سے قبل ماہرین نے کہا تھا کہ مریخ پر رونما ہونے والے زلزلے کے جھٹکے اس پر چلنے والی ہوا یا فضا کی بجائے اندرونی زلزلوں سے واقع ہورہے ہیں اور اب اس بات کی تصدیق ہوچکی ہے۔

سائنسدانوں کا خیال ہے کہ مریخی زلزلوں کو جان کر ہم اس کی اندرونی ارضیاتی ساخت کو سمجھ سکتے ہیں۔ انسائیٹ خلائی جہاز گزشتہ برس نومبر میں مریخ پر اترا تھا اسے خاص طور پر مریخ کی اندرونی خبر دینے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔ جدید ترین آلات سے لیس انسائیٹ مریخ کا اندرونی درجہ حرارت، مٹی کی کیفیت، اس کی گردش اور زلزلہ جاتی سرگرمیوں پر تحقیق کے لیے بنایا گیا ہے۔ مریخی زلزلے اس پراسرار سیارے کے متعلق ہماری معلومات میں بہت اضافہ کرسکتے ہیں۔

انسائیٹ میں نصب سیسمک ایکسپیریمنٹ فار انٹیریئر اسٹرکچر (ایس ای آئی ای ایس) نے مریخی زلزلے کی پہلی آواز 6 اپریل کو ریکارڈ کی ہے جس پر ماہرین بہت خوش ہیں۔ ایس ای آئی ای ایس ٹیم کے سربراہ فلپ لاگنون نے بتایا، ’کئی ماہ سے ہم اس سگنل کے منتظر تھے۔ یہ جان کر خوشی ہوئی ہے کہ مریخ اب بھی ارضیاتی لحاظ سے سرگرم ہے اور اس کی بدولت مریخ کی اندرونی کیفیت کو جاننے میں بھی مدد ملے گی۔‘

لیکن ماہرین نے زلزلے کے مزید تین جھٹکے بھی محسوس کئے ہیں تاہم ان کی شدت بہت ہی کمزور ہے۔ اب اگر قسمت مہربان رہی تو آگے بھی ایسے زلزلے وقوع پذیر ہوتے رہیں گے اور یوں مریخ کو سمجھنے میں مزید مدد ملے گی۔ انسائیٹ سے وابستہ مرکزی سائنسداں بروس بینرٹ کہتے ہیں کہ اب تک مریخ پر اس کے پس منظر کی آوازیں ہی ریکارڈ ہوئی تھیں لیکن پہلی مرتبہ ہم مریخی زلزلوں کے مشاہدے کی جانب بڑھ رہے ہیں۔

چہرہ پہچاننے والے سافٹ ویئر کی غلطی، ایپل پر ایک ارب ڈالر ہرجانے کا دعویٰ

نیو یارک کے رہائشی 18 سالہ نوجوان نے ایپل کمپنی پر 1 ارب ڈالر ہرجانے کا دعویٰ کردیا۔

خبر رساں ویب سائٹ سی نیٹ کی رپورٹ کے مطابق نوجوان نے دعویٰ کیا کہ کمپنی کا چہرہ پہچاننے والا سافٹ ویئر ایپل کے متعدد اسٹورز میں اسے چور بتاتا ہے۔

قانونی دعوے کے مطابق اوسمانے باہ کو 29 نومبر کو نیو یارک پولیس ڈپارٹمنٹ نے بوسٹن، نیو جرسی، ڈیلویر اور مین ہیٹن میں قائم ایپل کے اسٹوروں میں چوری کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

شکایت میں ان کا کہنا تھا کہ اصل چور کو 1200 ڈالر کی ایپل کی ایسسریز (بالخصوص ایپل پیسلز) چوری کرتے ہوئے بوسٹن کے اسٹور سے گزشتہ سال مئی کے مہینے میں پکڑا گیا تھا۔

ان کے مطابق مبینہ چور نے ان کی آئی ڈی استعمال کی جس میں ان کا نام، پتہ اور دیگر نجی تفصیلات موجود تھیں تاہم ان کی تصویر نہیں تھی۔

اوسمانے باہ نے نشاندہی کی کہ وہ چوری کے دن شہر میں موجود ہی نہیں تھے اور مین ہیٹن میں سینیئر پروم میں شرکت کے لیے گئے ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ ایپل نے مبینہ طور پر اپنے اسٹورز میں چہرہ پہنچاننے والا سسٹم نصب کر رکھا ہے جو اوسمانے باہ کو اصل چور بتاتا ہے جس کی وجہ سے ان پر چوریوں کا الزام عائد ہوا۔

تاہم نیو یارک پولیس کے تفتیش کار جنہوں نے مین ہیٹن کے اسٹور کی فوٹیج دیکھی ہے کا کہنا تھا کہ ’ملزم اوسمانے باہ جیسا بالکل نہیں دکھتا‘۔

قانونی دعوے میں کہا گیا کہ ’ایپل کے اسٹور میں استعمال ہونے والے چہرہ پہچاننے والے سافٹ ویئر سے صارفین میں خدشات پیدا ہورہے ہیں کیونکہ زیادہ تر صارفین کو یہ معلوم ہی نہیں کہ ان کے چہرے کا خفیہ طور پر معائنہ کیا جارہا ہے‘۔

ایپل کی جانب سے معاملے پر تاحال کوئی رائے سامنے نہیں آئی ہے۔

سعودی انجینیئر نے ڈرون کیلئے ماچس کی ڈبیہ جتنا ریڈار تیار کرلیا

ریاض: دنیا بھر میں ڈرون کا غیرمعمولی استعمال بڑھتا جارہا ہے جس کے بعد اب ڈرون کی رہنمائی کے لیے ماچس کی ڈبیہ جتنا ریڈار تیار کیا گیا ہے جو رات کے وقت ان کی رہنمائی کرسکتا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ آلہ نابینا افراد کو بھی راستہ دکھانے اور رکاوٹیں عبور کرنے میں مدد فراہم کرے گا۔  

یہ ایک انتہائی کم خرچ آلہ ہے جس کا وزن صرف 150 گرام اور یہ 5 وولٹ کی بیٹری سےچلتا ہے۔ اگر اسے بصارت سے محروم شخص کی چھڑی پر لگادیا جائے تو یہ 12 سے 20 میٹر کے فاصلے پر موجود کسی رکاوٹ یا خطرے سے آگاہ کرسکتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ کسی بھی رکاوٹ یا شے کی جسامت کو بھی ظاہر کرتا ہے۔

اس اہم ریڈار کو کنگ عبدالعزیز یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی (کے اے یو ایس ٹی) کے انجینیئر سیف اللہ جردک اور ان کے ساتھیوں نے تیار کیا ہے۔ وہ کہتے ہیں کہ موجودہ ریڈار بھاری اور بہت بڑے ہیں جبکہ وہ لمبے طولِ موج کی ریڈیائی لہروں کو استعمال کرتے ہوئے بہت سے اہم تفصیلات کو ظاہرہی نہیں کرپاتے ۔ اسی لیے یہ کم بجلی استعمال کرنے والا ننھا منا ریڈار بنایا گیا ہے۔

چھوٹے ریڈار کی تیاری میں وی ٹی ٹی ٹٰیکنیکل ریسرچ سینٹر فِن لینڈ کے ماہرین نے بھی اپنا اہم کردار ادا کیا ہے۔ ریڈار ایک سیکنڈ میں 8 مرتبہ سگنل بھیجتا ہے جس کا مطلب ہے کہ یہ ایک سیکنڈ میں 8 مرتبہ سامنے کے ماحول کی شناخت کرتا ہے۔

ریڈار فری کوئنسی ماڈیولیٹڈ کنٹی نیوس ویو (ایف ایم سی ڈبلیو) طرز کا آلہ ہے جو مسلسل مختلف فریکوئنسیوں کی ریڈیائی لہریں پھینکتا رہتا ہے جس سے پس منظر میں معمولی تبدیلیوں کو بھی نوٹ کیا جاسکتا ہے۔ ماہرین نے جب اس کی آزمائش کی تو حیرت انگیز نتائج برآمد ہوئے ۔ ایک کرسی پر بیٹھے ہوئے شخص کے سانس لینے کے عمل کو بھی نوٹ کیا گیا جو ایک بڑی کامیابی ہے۔

ریڈار میں دو مائیکرواینٹینا نصب ہیں جو ہدف کا زاویائی محلِ وقوع معلوم کرنے میں مدد دیتا ہے۔ تاہم یہ اتنا طاقتور نہیں کہ اسے فوجی مقاصد کے لیے استعمال کیا جاسکے۔ اسے نابینا افراد کےعلاوہ روبوٹ میں بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

معدوم قرار دیا گیا پودا، ڈرون کی مدد سے دریافت

ہوائی، امریکہ: سائنسدانوں کی خوشی کا کوئی اندازہ نہیں رہا جب انہوں نے ڈرون کی مدد سے ایک ایسا پودا دیکھا جسے عالمی سطح پر معدوم قرار دیا جاچکا تھا۔

امریکی جزیرہ نما خطے ہوائی کے ایک پہاڑی علاقے کوائی میں واقع نیشنل ٹراپیکل بوٹانیکل گارڈن واقع ہے جس کے سائنسداں اس علاقے میں تحقیق کررہے ہیں۔ کوائی کا علاقہ نایاب درختوں، پودوں، جڑی بوٹیوں اور جانداروں کے لیے دنیا بھر میں مشہور ہے جس کے تحفظ کے لیے بھرپور کوششیں کی جارہی ہیں۔

ان میں سے ایک پودا ’ Hibiscadelphus woodii بھی ہے جس کے تین پودے ڈرون کی مدد سے دکھائی دیئے جو ’کالالاؤ‘ کی وادی میں موجود تھے۔ یہ علاقہ پہاڑی اور دشوار گزار ہے جس کا جائزہ لینے کے لیے ڈرون سے مدد لی گئی تھی۔ ماہرین نے جب محتاط انداز میں اس کی ویڈیو دیکھی تو حیرت انگیز طور پر انہیں یہ پودا دکھائی دیا۔

1991 میں اسی ادارے کے ایک ماہرِ نباتیات نے یہ پودا دیکھا تھا اور اسے1995میں  ایک نئی قسم کے پودے کے طورپر شامل کرلیا گیا۔ اس کے بعد 2009 تک یہ دنیا میں کہیں نہیں ملا اور ماہرین نے آخرکار اسے معدوم قرار دیدیا تھا۔ یہ ایک طرح کی بیل ہے جس پر روشن پیلے رنگ کے پھول اگتے ہیں جو وقت کے ساتھ ساتھ جامنی مائل سرخ رنگ کے ہوجاتے ہیں۔ ماہرین نے اس پودے کی افزائش کے لیے کئی جتن کئے لیکن سب میں ناکامی ہوئی ہے۔

ڈرون کی کامیابی کے بعد ماہرین پر امید ہیں کہ نئی ٹیکنالوجی سے پودوں کی شناخت اور تحفظ میں بھی مدد ملے گی۔

واٹس ایپ کی 17 بہترین ٹرکس

واٹس ایپ دنیا کا مقبول ترین میسنجر ہے، جس کے صارفین ڈیڑھ ارب سے زیادہ ہیں اور یہ سب سے زیادہ استعمال کی جانے والی ایپس میں سے ایک ہے تاہم بہت کم افراد اس میں موجود دلچسپ ٹرکس سے واقف ہوتے ہیں، جس سے اس ایپ کے استعمال کا مزہ دوبالا ہوجاتا ہے۔

ہم یہاں آپ کو ایسی ٹرکس کے بارے میں بتارہے ہیں جو آپ کے کام آسکتی ہیں۔

ڈیلیٹ پیغامات پڑھنا

درحقیقت آپ کو موصول ہونے والا پیغام اگر بھیجنے والا دوست ڈیلیٹ کردیتا ہے تو اسے واپس لانے کا طریقہ کافی آسان ہے، بس واٹس ایپ کو فون سے ڈیلیٹ کریں اور گوگل پلے اسٹور یا ایپل ایپ اسٹور سے دوبارہ ری انسٹال کرلیں۔ جب یہ ایپ لوڈ ہوگی تو صارف کو لاگ ہونا ہوگا اور اس کے بیک اپ میں موجود تمام چیٹ ری اسٹور ہوجائے گی اور اس میں ڈیلیٹ پیغامات بھی شامل ہوں گے۔ تاہم یہ فیچر اس وقت کام کام کرے گا جب آپ نے ایپ بیک ٹائمنگ کو روزانہ کی بنیاد پر شیڈول کررکھا ہو، جس پر یہ اپلیکشن ہر بھیجے یا موصول ہونے والے پیغامات کا لاگ بناتی رہتی ہے۔

ایچ ڈی تصاویر بھیجنا

کسی چیٹ میں جاکر پیپر کلپ آئیکون اور پھر ڈاکومیٹ پر کلک کریں۔ ڈاکو مینٹ آپشن پر کلک کرنے پر آپ کے سامنے وہ تمام ڈاکومینٹ فائلز آجائیں گی جو اسمارٹ فون میں محفوظ ہوں گی اور ہائی کوالٹی تصاویر بھیجنے کے لیے آپ Browse other docs پر کلک کریں اور پھر اس لوکیشن میں جائیں جہاں تصویر موجود ہو۔ مطلوبہ فولڈر اوپن کرنے پر منتخب تصویر پر ٹیپ کرکے اوپن کریں اور پھر سینڈ پر کلک کریں، جبکہ اس طرح ایک سے زیادہ تصاویر کو بھی بھیجا جاسکتا ہے، بس ایک تصویر کو انگلی سے کچھ دیر دبا کر رکھیں اور اس کے بعد دیگر کو سلیکٹ کرلیں۔

بغیر ایڈ کیے کسی کو میسج بھیجنا

اسمارٹ فون پر اپنی پسند کا ویب براﺅزر اوپن کریں۔ اس کے بعد یہ لنک سرچ بار میں ٹائپ کریں، ttps://api.whatsapp.com/send?phone=XXXXXXXXXXX (آخر میں جو ایکس ہیں وہاں وہ فون نمبر لکھیں جسے پیغام بھیجنا چاہتے ہیں اور آغاز میں کنٹری کوڈ بغیر پلس کے سائن کے لکھیں)۔ جیسے اگر اس شخص کا نمبر پاکستان کا ہے تو یہ کچھ ایسا ہوگا ttps://api.whatsapp.com/send?phone=923001234567۔ اس کے بعد انٹر دبا دیں۔ اس کے بعد ایک واٹس ایپ ونڈو اوپن ہوگی جس میں پوچھا جائے گا کہ کیا آپ اس نمبر پر پیغام بھیجنا چاہتے ہیں تو ‘ سینڈ میسج’ پر کلک کردیں۔ آپ خودکار طور پر واٹس ایپ ایپ میں پہنچ جائیں گے جہاں اسٹارٹ چیٹنگ ونڈو آجائے گی اور آپ کسی فرد کو ایڈ کیے بغیر پیغام بھیج سکیں گے۔

نئے ٹائپ رائٹر فونٹ کا استعمال

اپنے واٹس ایپ میسج کا فونٹ بدلنے کے لیے یہ سمبل (`) تین بار اپنے پیغام کے آگے یا پیچھے استعمال کریں جیسے یوں `میسج`، یہ اینڈرائیڈ کی بورڈ میں تو آسانی سے دستیاب ہے تاہم آئی او ایس میں نہیں، ایپل کی ڈیوائسز میں اسے کاپی پیسٹ کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔

واٹس ایپ ڈیٹا کا کم استعمال

آپ کتنا ڈیٹا واٹس ایپ پر استعمال کرتے ہیں اس کے لیے ایپ کی سیٹنگز میں ڈیٹا یوزیج اور نیٹ ورک یوزیج پر جائیں۔ ڈیٹا یوزیج مینیو میں آپ ڈیٹا کو محدود کرسکتے ہیں اور تصاویر، آڈیو، ویڈیو اور دستاویزات کا آٹو ڈاﺅن لوڈ کا آپشن وائی فائی سے کنکٹ کرسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ لو ڈیٹا یوزیج موڈ کو سلیکٹ کرکے بھی اس ایپ میں موبائل ڈیٹا کے استعمال کو کم کرسکتے ہیں۔

دستاویزات شیئر کریں

آپ اب گوگل ڈرائیو اور آئی کلاﺅڈ ڈرائیو سے براہ راست واٹس ایپ چیٹ میں دستاویزات بھی شیئر کرسکتے ہیں، اس کے لیے ٹیکسٹ ونڈو کے بائیں جانب بنے تیر کے نشان پر کلک کریں، پھر شیئر ڈاکیومنٹ اور پھر وہ جگہ سلیکٹ کریں جہاں سے اسے شیئر کیا جارہا ہے۔

فوٹوز اور ویڈیوز کو فون میں سیو ہونے سے روکیں

اگر آپ فون کی میموری یا کسی اور وجہ سے اپنے دوستوں کی تصاویر اور ویڈیوز ڈیوائس میں خودکار طور پر محفوظ ہوتے دیکھنا نہیں چاہتے تو ایپ کی سیٹنگز میں چیٹس میں جائیں اور وہاں سیو اِن کمنگ میڈیا کو ٹرن آف کردیں۔

بولڈ، اٹالک، اسٹرائیک تھرو

آپ واٹس ایپ میں اپنے ٹیکسٹ کو اب سجا کر بھی پیش کرسکتے ہیں۔

بولڈ : کسی لفظ کو بولڈ کرنا چاہتے ہیں تو اس کے آگے اور پیچھے * لگادیں مثال کے طور پر * سلام *۔

اٹالک : اپنے لفظ کے شروع اور آخر میں _ کا اضافہ کریں جیسے _ سلام _۔

اسٹرائیک تھرو : اپنے لفظ کے شروع اور آخر میں ~ کا اضافہ کردیں جیسے ~سلام~۔

بلیو ٹک ختم کریں

واٹس ایپ اوپن کریں، سیٹنگز، اکاﺅنٹ اور پھر پرائیویسی میں جائیں، وہاں ریڈ ریسپٹ کو اَن چیک کردیں، بدقسمتی سے ایسا کرنے پر آپ بھی نہیں دیکھ سکیں گے کہ دیگر افراد نے آپ کے پیغامات پڑھے ہیں یا نہیں۔

بلیو ٹک میسج میں ظاہر نہ ہونے دیں

جب کوئی میسج موصول ہو تو ایئرپلین موڈ آن کریں، میسج اوپن کریں اور پڑھ لیں۔ بھیجنے والے کے سامنے بلیو ٹک اُس وقت تک نہیں آئے گا جب تک آپ واٹس ایپ کو دوبارہ اوپن نہیں کرتے۔ جب پیغام پڑھ لیں تو ایپ کو بند کرنے کے لیے بیک کی جگہ ملٹی ونڈو کے ذریعے بیک کراﺅنڈ میں چلنے والی تمام ایپس کو بند کردیں۔ ایسا کرنے پر واٹس ایپ مکمل طور پر بند ہوجائے گی اور ایروپلین موڈ سوئچ آف کرنے پر بھی ڈیوائس آن لائن جانے پر سائنک نہیں ہوگی۔

چیٹ ہسٹری محفوظ کریں

سیٹنگز میں جاکر پہلے چیٹ اور پھر چیٹ بیک اپ میں جائیں۔ اپنی چیٹ سیٹنگز کو کونفیگر کریں تاکہ بیک اپ ہفتہ وار یا ماہانہ بنیادوں پر بنیں اور اگر چاہے تو اس میں ویڈیوز کو بھی شامل کرسکتے ہیں۔

آڈیو پیغامات اپنے حد تک محفوظ رکھنا

جب آڈیو پیغام آئے تو پلے بٹن پر پریس کرتے ہی تیزی سے فون کو اپنے کان پر لگالیں، جیسے کسی کو کال کررہے ہوں۔ ایسے کرتے ہی فون فوری طور پر آڈیو آﺅٹ پٹ کو مین اسپیکر سے ائیرپیس اسپیکر میں منتقل کردے گا اور صرف آپ ہی وہ پیغام سن سکیں گے۔

کمپیوٹر اور فون سے فائلز ٹرانسفر کرنا

ایک گروپ تشکیل دیں، جس میں ایک دوست کو شامل کرکے پھر ڈیلیٹ کردیں تاکہ آپ اکیلے ہی اس گروپ میں رہ جائیں۔ اب واٹس ایپ ویب اوپن کریں اور کیو آر کوڈ کے ذریعے لاگ اِن ہوجائیں، جس کے بعد واٹس ایپ گروپ کے ذریعے جو میڈیا فائل چاہیں اسے کمپیوٹر میں منتقل کردیں، یا کوئی بھی چیٹ اوپن کرکے وہاں سے فائلز کمپیوٹر میں ٹرانسفر کردیں۔

15 ایم بی سے بڑی فائل بھیجیں

فائل شیئرنگ کے حوالے سے واٹس ایپ کی صلاحتیں محدود ہیں۔ رار، زِپ، پی ڈی ایف، ایگزی، اے پی کے اور ورڈ فائل کے علاوہ کوئی فائل شیئر نہیں کی جاسکتی جبکہ یہ فائلز بھی 15 ایم بی تک ہی ہونی چاہئیں۔ یہاں پر کلاؤڈ سینڈ (CloudSend) نامی ایپ کام آتی ہے۔ اس ایپ پر فائل اَپ لوڈ کریں اور دیئے گئے لنک کو مطلوبہ صارف کو دے دیں۔ جب وہ اس پر کلک کریں گے تو باآسانی فائل ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں۔

واٹس ایپ پر موبائل نمبر تبدیل کریں

اکثر واٹس ایپ پر دیگر صارفین آپ کا فون نمبر دیکھ سکتے ہیں، لیکن اگر آپ متعدد موبائل فونز رکھتے ہیں تو نمبر تبدیل کرنے کے لیے اسے ان انسٹال کرکے ری انسٹال کرنا ہوتا ہے۔ تاہم ایسا کرنے کا ایک آسان طریقہ بھی موجود ہے۔ سیٹنگز میں اکاؤنٹس پر کلک کریں، وہاں پر واٹس ایپ کا نمبر تبدیل کرنے کا آپشن موجود ہوگا اس پر کلک کریں۔ یہاں دو فیلڈز موجود ہوں گی۔ پہلی فیلڈ میں اپنا نیا نمبر جبکہ دوسری میں پرانا نمبر درج کریں اور ڈن پر کلک کریں۔ اس نئے نمبر کی چھان بین کے بعد واٹس ایپ آپ کی گفتگو اس نئے نمبر پر منتقل کردے گا۔

لاسٹ سین (Last Seen) فیچر کو بند کریں

یہ فیچر ویسے تو کام کا ہے کیوں کہ اس سے آپ کو پتہ چلتا ہے کہ آپ کا دوست کس وقت آن لائن تھا تاہم اس سے صارف کی پرائیوسی پر بھی اثر پڑتا ہے۔ اس فیچر کو بند کرنے کے لیے اکاؤنٹ میں جاکر لاسٹ سین بٹن پر کلک کریں اور ضروری تبدیلیاں عمل میں لائیں۔

اپنے دوست کی پروفائل تصویر بدل دیں

کانٹیکٹس میں جائیں اور اپنے دوست کا نمبر کاپی کریں، اب کسی تصویر کو لے کر اس پر اپنے دوست کا نمبر پیسٹ کردیں اور پلس کا نشان ہٹا دیں یا لگادیں۔ اب اس تصویر کو دوست کی واٹس ایپ پروفائل پکچر پر پیسٹ کریں اور اس کی پروفائل امیج بدل جائے گی۔

‘ہیکرز کو 36 لاکھ انٹرنیٹ صارفین کے اکاؤنٹ تک رسائی حاصل ہے‘

برطانوی کمپنی نیشنل سائبر سیکیورٹی سینٹر (این سی ایس سی) کے فراہم کردہ اعداد وشمار کے مطابق ہیکرز دنیا بھر کے 36 لاکھ انٹرنیٹ صارفین کے اکاؤنٹ اور اہم معلومات تک باآسانی رسائی حاصل کر سکتے ہیں۔

دی گارجین میں شائع رپورٹ کے مطابق این سی ایس سی نے انکشاف کیا کہ ’جدید آلات کی بدولت ہیکرز کی انٹرنیٹ پر موجود خفیہ یا ذاتی معلومات تک رسائی کے امکانات بڑھ گئی ایسے میں عام صارفین لفظ “password” کو بطور پاس ورڈ استعمال کرکے خطرے کو کھلی دعوت دے رہے ہیں۔

علاوہ ازیں کمپنی نے انکشاف کیا کہ 2 کروڑ 32 لاکھ انٹرنیٹ صارفین’12345‘ج’12345‘جبکہ 30 لاکھ 80 ہزار صارفین نے کمپیوٹر کے کی بورڈ میں موجود پہلے 6 حرف ’qwerty‘ بطور پاس ورڈ استعمال کررہے ہیں۔

انٹرنیٹ سے متعلق برطانونی خفیہ ادارے جی سی ایچ کیو کے جاری منصوبے کے تحت این سی ایس سی نے انٹرنیٹ سیکیورٹی کے معیار کو جانچنے کے لیے روزمرہ استعمال ہونے والے تقریباً 1 لاکھ لفظوں کا استعمال کر کے صارفین کی ذاتی معلومات تک رسائی حاصل کرنے کے بعد مذکورہ رپورٹ تیار کی۔

رپورٹ کے مطابق انٹرنیٹ کے صارفین عمومی طور پر اپنے پسندیدہ نام، فٹ بال ٹیم، بینڈز اور فیکشن کرداروں کے نام بطور پاس ورڈ رکھتے جسے کریک کرنے میں ہیکرز کو زیادہ مشکل نہیں ہوتی۔

این سی ایس سی نے انٹرنیٹ صارفین کو تجویز دی کہ وہ اپنے اکاؤنٹ اور ذاتی معلومات کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے پاس ورڈ میں ’بے ترتیب حرف‘ استعمال کریں۔

ادارے کے مطابق ’2021 میں تقریباً 42 فیصد انٹرنیٹ صارفین ہیکنگ کی وجہ سے مالی نقصان کا شکار ہو سکتے ہیں‘۔

انہوں نے بتایا کہ صرف برطانیہ میں انٹرنیٹ کے 89 فیصد صارفین آن لائن خریدی داری کرتے ہیں جس میں سے صرف 15 فیصد صارفین پاس ورڈ کو محفوظ اور مضبوط بنانے کا بہتر ادراک رکھتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق 4 لاکھ 32 ہزار انٹرنیٹ صارفین نے “Ashley” اور 4 لاکھ 25 صارفین ’مائیکل‘ بطور نام پاس ورڈ استعمال کرتے ہیں۔

واٹس ایپ میں بہت جلد متعارف کرائے جانے والے بہترین فیچرز

واٹس ایپ دنیا کی مقبول ترین میسجنگ اپلیکشن ہے جس میں ہر سال ہی متعدد نئے فیچرز سامنے آتے ہیں۔

دنیا میں سب سے زیادہ استعمال ہونے والی میسجنگ اپلیکشن ہونے کی وجہ سے واٹس ایپ میں ہر چند ہفتے میں نئے فیچرز متعارف ہوتے رہتے ہیں۔

اس وقت بھی کمپنی کی جانب سے متعدد فیچرز کی آزمائش بیٹا ورژن میں ہورہی ہے۔

اکاﺅنٹ کو دوسروں کے ہاتھوں میں جانے سے روکنے، آڈیو فائلز اور ایسے ہی دیگر متعدد فیچرز، جو اس وقت واٹس ایپ میں دستیاب نہیں۔

ویسے تو آپ نئے فیچرز کو سب سے پہلے واٹس ایپ بیٹا پر سائن اپ ہوکر حاصل کرسکتے ہیں مگر اس میں بگز اور ایپ کریش کا سامنا بھی ہوتا ہے۔

آئندہ چند ماہ میں واٹس ایپ میں متعارف کرائے جانے والے فیچرز درج ذیل ہیں۔

چیٹ کو زیادہ محفوظ بنانا

آئی فون صارفین کے لیے تو یہ فیچر پہلے ہی دستیاب ہے مگر اب اینڈرائیڈ صارفین کے لیے بھی بیٹا ورژن میں اس کی آزمائش ہورہی ہے۔ اس فیچر کی بدولت صارفین ایپ میں سیکیورٹی مزید بڑھ جائے گی اور صرف وہ ہی اپنی طے کردہ سیٹنگز کے مطابق ایپ کو اوپن کرسکیں گے۔ اس فیچر کو ان ایبل کرنے کے بعد اس ایپ کو فنگرپرنٹ کی بدولت ہی اوپن کرنا ممکن ہوگا۔

اسکرین شاٹ لینا بلاک ہونا

اسے واٹس ایپ میں آنے والی چند بڑی تبدیلیوں میں سے ایک قرار دیا جاسکتا ہے، اس فیچر کے بعد صارفین کو چیٹ کے اسکرین شاٹ لینے سے اس وقت بلاک کردیا جائے گا جب وہ فنگرپرنٹ کی تصدیق کا آپشن ان ایبل کریں گے، یہ فیچر اس وقت بیٹا ورژن میں موجود ہے۔

کونسا صارف زیادہ فارورڈ میسج کرتا ہے

واٹس ایپ کی جانب سے ایک اور فیچر پر بھی کام ہورہا ہے جس کے تحت گروپس استعمال کرنے والوں کو آگاہ کیا جائے گا کہ کونسا صارف اکثر پیغامات فارورڈ کرتا ہے، صارفین اس فیچر کی بدولت ی بھی جان سکیں گے کہ کسی میسج کو کتنی بار فارورڈ کیا جاچکا ہے، یہ فیچر بھی فی الحال بیٹا ورژن میں نظر آیا ہے۔

ڈارک موڈ

ڈارک موڈ وہ فیچر ہے جس کا صارفین کو شدت سے انتظار ہے، یہ فیچر بیٹا ورژن 2.19.87 میں دیکھا گیا تھا مگر فی الحال وہاں موجود نہیں، مگر کمپنی گزشتہ سال وعدہ کرچکی ہے کہ صارفین کے لیے اسے بہت جلد متعارف کرایا جائے گا۔

آڈیو میسجز خودکار پلے ہونا

واٹس ایپ کی جانب سے بہت جلد صارفین کے لیے ایک بڑی سہولت وائس میسجز مسلسل پلے کرنے کی شکل میں فراہم کی جارہی ہے، یعنی صارفین کو ہر میسج پر بار بار پلے بٹن دبانے کی ضرورت نہیں رہے گی بلکہ ایک کے بعد دوسرا میسج خودکار طور پر پلے ہوجائے گا۔

ویڈیو ایپ بند ہونے پر بھی چلتے رہنا

جی ہاں واٹس ایپ کے بیٹا ورژن میں ایک ایسا فیچر بھی دیکھنے میں آیا جس کی بدولت صارفین یوٹیوب، فیس بک، انسٹاگرام اور دیگر سائٹس کی ویڈیو اس وقت بھی پلے ہوتی رہیں گی جب اسے بند کیے بغیر چیٹ ونڈو سے باہر نکل جائیں بلکہ کسی دوسری ایپ میں چلے جانے پر بھی ویڈیو چلتی رہتی ہیں۔

لنکس اوپن کرنے میں آسانی

واٹس ایپ کی جانب سے ان ایپ براﺅزر پر بھی کام ہورہا ہے جو کسی ویب لنک کو اوپن کرنے میں صارفین کو مدد دے گا۔ یہ براﺅزر یہ بھی دیکھے گا کہ کوئی پیج محفوظ ہے یا نہیں۔

چیٹ چھپانا اب آسان ہوگا

واٹس ایپ کی جانب سے ایک ایسے آپشن پر بھی کام ہورہا ہے جو صارفین کو یہ اختیار دے گا کہ آرکائیو میں ڈال دی جانے والی چیٹ پر کوئی نیا میسج ان کو نظر آئے یا نہیں، اس وقت کسی چیٹ کو آرکائیو میں ڈالنے کے بعد نئے میسج آنے پر وہ خودکار طور پر مین ونڈو پر نظر آنے لگتی ہے۔

جعلی تصویر پکڑنے میں مدد دینا

اس فیچر سے صارفین کسی چیٹ پر ملنے والی تصویر کے بارے میں انٹرنیٹ پر سرچ چیٹ ونڈو کے اندر رہتے ہوئے کرسکیں گے، اس سے انہیں جاننے میں مدد ملے گی کہ تصویر اصلی ہے یا نہیں۔

اسٹیکرز اور ایموجیز پہلے سے بہتر

واٹس ایپ کی جانب سے بہت جلد موجود ایموجیز اسٹیکر کو بدل دیا جائے گا اور اس کی جگہ کی بورڈ میں نظر آنے والے ایموجیز لے لیں گے۔ اسی طرح اینیمیٹڈ اسٹیکر بھی بہت جلد واٹس ایپ میں نظر آئیں گے جن کو موجودہ اسٹیکرز پیک کا حصہ بنایا جائے گا۔

Google Analytics Alternative