سا ئنس اینڈ ٹیکنالوجی

دنیا کی طاقتور ترین بیٹری والا اسمارٹ فون

 ایسا اسمارٹ فون لینا کون پسند نہیں کرے گا، جو ایک بار چارج کیے جانے کے بعد کئی دن بلکہ ایک ہفتے تک چل سکے؟ تو ایک امریکی کمپنی ایسی ہی ڈیوائس متعارف کرانے والی ہے جو کئی دن تک ایک چارج پر چلے سکے گی۔

بیٹریاں بنانے کے حوالے سے مشہور کمپنی انرجائزر نے گزشتہ دنوں ٹوئٹر پر اعلان کیا کہ وہ موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر 26 نئے فون متعارف کرانے والی ہے جن میں 18000 ایم اے ایچ بیٹری اور فولڈ ایبل ڈسپلے والے اسمارٹ فونز بھی شامل ہوں گے۔

نائن ٹو فائیو گوگل کے مطابق یہ کمپنی اپنے فونز 4 سیریز پاور میکس، الٹی میٹ، انرجی اور ہارڈ کیس میں متعارف کرائے گی۔

18000 ایم اے ایچ بیٹری والا فون متوقع طور پر پاور میکس رینج کا حصہ ہوگا جبکہ الٹی میٹ رینج میں پوپ اپ کیمروں والے اسمارٹ فونز ہوسکتے ہیں۔

انرجی اور ہارڈ کیس سیریز میں بجٹ اسمارٹ فونز متعارف کرائے جائیں گے۔

18000 ایم اے ایچ بیٹری سے لیس فون کتنا طاقتور ہوگا، اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس وقت دستیاب ڈوجی نامی کمپنی کا ایس 80 اسمارٹ فون 10800 ایم اے ایچ بیٹری کے ساتھ ہے۔

اس کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس فون سے لگاتار 76 گھنٹے ویڈیو ، 136 گھنٹے تک بات کی جاسکتی ہے جبکہ اسٹینڈ بائی میں یہ 1308 گھنٹے یا لگ بھگ 55 دن تک کام کرسکتا ہے۔

عام استعمال کی صورت میں بھی یہ فون 10 دن سے زیادہ چل سکتا ہے۔

تو اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ 18000 ایم اے ایچ بیٹری والا فون کم از کم بھی 15 دن تو چل ہی جائے گا۔

اس کمپنی کا فلیگ شپ فون یو 260 ایس پوپ میں ہیلیو پی 70 پراسیسر، سکس جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج دیئے جانے کا امکان ہے جبکہ 3200 ایم اے ایچ بیٹری اور فنگرپرنٹ سنسر بھی ہوگا۔

یہ تمام فون 25 فروری سے اسپین کے شہر بارسلونا میں شروع ہونے والی موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر متعارف کرائے جائیں گے۔

دنیا کا پہلا 52 میگا پکسل کیمرے سے لیس اسمارٹ فون

اگر تو آپ اسمارٹ فون کیمرے کی وجہ سے لینا پسند کرتے ہیں تو اچھی خبر یہ ہے کہ اب دنیا کا پہلا 50 میگا پکسل سنسر سے لیس فون جلد سامنے آنے والا ہے۔

ابھی کسی فون میں سب سے زیادہ میگا پکسل کا ریکارڈ شیاﺅمی اور ہواوے کے فونز کے پاس ہے جن میں 48 میگا پکسل مین کیمرہ استعمال ہورہا ہے۔

مگر ایک نئی لیک میں یہ دعویٰ سامنے آیا ہے کہ سونی کا نیا فلیگ شپ فون ایکسپیریا ایکس زی 4 دنیا کا پہلا فون ہے جس میں 52 میگا پکسل کیمرہ دیا جارہا ہے۔

درحقیقت یہ اس کمپنی کا پہلا فون ہوگا جس میں 3 بیک کیمروں کا سیٹ اپ دیا جارہا ہے جو کہ عمودی ڈیزائن میں دیا جائے گا۔

لیک تصویر کے مطابق 52 میگا پکسل کیمرہ درمیان میں موجود ہوگا جو کہ ایف 1.6 آپرچر سے لیس ہوگا۔

اس سے ہٹ کر 16 میگا پکسل کا ٹیلی فوٹو لینس ایف 2.6 آپرچر کے ساتھ جبکہ تیسرا 0.3 میگا پکسل ٹائم آف فلائٹ کیمرہ ہوگا جس میں ایف 1.4 آپرچر ہوگا۔

ٹی او ایف کیمرہ ممکنہ طور پر فاصلے کو جانچنے کے لیے استعمال ہوگا جبکہ اگیومینٹڈ رئیلٹی فیچرز کے لیے بھی اہم کردار ادا کرے گا۔

پرائمری اور سیکنڈری کیمرے ہائی ریزولوشن تصاویر میں مدد دیں گے جبکہ ٹی او ایف سنسر آٹو فوکس اور تھری ڈی اسکیننگ کا بھی کام کرے گا۔

اوپو آر 17 میں ٹی او ایف سنسر موجود ہے جبکہ ایل کی جانب سے رواں سال نئے آئی فونز میں اسے متعارف کرائے جانے کا امکان ہے۔

اس سے قبل سامنے آنے والی لیکس کے مطابق ایکسپیریا ایکس زی 4 میں 6.5 انچ کا کیو ایچ ڈی پلس او ایل ای ڈی ڈسپلے دیئے جانے کا امکان ہے جبکہ اسنیپ ڈراگون 855 پراسیسر، سکس جی بی ریم، 128 جی بی اسٹوریج اور 4400 ایم اے ایچ بیٹری نمایاں فیچرز ہوسکتے ہیں۔

یہ فون رواں ماہ کے آخر میں بارسلونا میں شیڈول موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر متعارف کرائے جانے کا امکان ہے۔

واٹس ایپ میں اپنے پیغامات دوسروں سے دور رکھنا اب بہت آسان

واٹس ایپ میں صارفین کے پیغامات کو محفوظ رکھنے کے لیے فیس آئی ڈی یا ٹچ آئی ڈی سپورٹ کا فیچر متعارف کرادیا گیا ہے۔

یعنی اس سپورٹ کے بعد صارفین چہرے کی شناخت یا ٹچ آئی ڈی سے اپنی ڈیوائسز پر واٹس ایپ اپلیکشن اوپن کرسکیں گے جبکہ ان کے علاوہ کوئی اور اسے اوپن کرکے پیغامات نہیں دیکھ سکے گا۔

تاہم یہ فیچر آئی او ایس صارفین کے لیے متعارف کرایا گیا ہے جس سے آئی فون ایکس، آئی فون ایکس ایس، آئی فون ایکس ایس میکس اور آئی فون ایکس آر کے صارفین فیس آئی ڈی سے جبکہ دیگر آئی فون ماڈلز میں ٹچ آئی ڈی سے اس سے فائدہ اٹھانا ممکن ہوگا۔

اس نئے فیچر کو قابل استعمال بنانے کے لیے آئی فون کی سیٹنگز میں جاکر اکاﺅنٹس اور پھر پرائیویسی پر کلک کریں اور اسکرین لاک ان ایبل کریں۔

اسکرین لاک ان ایبل ہونے پر واٹس ایپ ہر بار اوپن کرنے پر ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی کو استعمال کرنا ہوگا۔

صارفین کے سامنے چند آپشن بھی ہوں گے جیسے فوری واٹس ایپ ان لاک کرنا، ایک منٹ بعد، 15 منٹ بعد یا ایک گھنٹے بعد کے آپشن بھی ہوں گے۔

ان میں سے کسی کا انتخاب کرنے کے بعد جب آپ واٹس ایپ کو ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی سے ان لاک کریں گے تو یہ اپلیکشن اتنی دیر بعد ہی اوپن ہوگی۔

اگر ٹچ آئی ڈی یا فیس آئی ڈی صارفین کی شناخت کرنے میں ناکام رہے تو ایپ تک رسائی کے لیے پاس کوڈ کا سہارا لینا ہوگا۔

واٹس ایپ میں اس فیچر کی آزمائش گزشتہ سال شروع ہوئی تھی اور ابھی بھی یہ آزمائشی مراحل سے ہی گزر رہی ہے جس کا حتمی ورژن کچھ عرصے میں متعارف ہوگا۔

واٹس ایپ کی جانب سے اسی طرح کے فیچر اینڈرائیڈ صارفین کے لیے متعارف کرانے پر بھی کام ہورہا ہے جس میں فنگرپرنٹ اسکینر کی مدد سے اپلیکشن اوپن کی جاسکے گی۔

یہ فیچر فنگرپرنٹ سنسر سے لیس ایسے اسمارٹ فونز میں استعمال ہوسکے گا جس میں اینڈرائیڈ 6 مارش میلو یا اس کے بعد کے ورژن ہوں گے۔

تاہم یہ فیچر کب تک سامےن آئے گا، فی الحال اس پر کچھ کہنا مشکل ہے۔

مقناطیسی دانت والا سمندری کیڑا نئی ٹیکنالوجی میں مددگار

کیلیفورنیا: سمندروں میں پایا جانے والا ایک صدفہ (مولسک) ایسے دانت رکھتا ہے جو مقناطیسی مادے پرمشتمل ہیں اور اسے دیکھ کر ماہرین اگلی نسل کے سخت ترین مٹیریل اورتوانائی کے لیے نینو اسکیل اشیا بناسکیں گے جس کی ابتدائی تحقیق شروع ہوگئی ہے۔ 

گمبوٹ کائٹن نامی کیڑے کا دانت تمام جان داروں میں سب سے مضبوط ہوتا ہے اور مقناطیسی معدن ’میگنیٹائٹ‘ پرمشتمل ہوتا ہے۔ اپنے مضبوط دانتوں کی بدولت یہ جانور سمندر سے الجی کھرچ کھرچ کے کھاتا ہے۔ اسے دیکھتے ہوئے ماہرین  نے خیال ظاہر کیا ہے کہ اس سے ٹوٹ پھوٹ سے محفوظ رہنے والے اوزار اور توانائی پیدا کرنے والے نینو پیمانے کے مٹیریل بھی بنائے جاسکتے ہیں۔

حیرت کی بات یہ ہے کہ میگنیٹائٹ زمینی چٹانوں میں پایا جاتا ہے اوراسے بہت ہی کم جان داروں میں دیکھا گیا ہے۔ اسے تجربہ گاہ میں تیار کرنے کے متعلق بھی ہماری معلومات ناکافی ہیں۔ اب یونیورسٹی آف کیلی فورنیا، ریور سائیڈ کے سائنس داں پروفیسر ڈیوڈ کیسائلس اور اوکایاما یونیورسٹی کے ڈاکٹر میشی کونیموٹو نے مشترکہ طور پر اس جانور کے اس جینیاتی وجوہ کو معلوم کیا ہے جس کے ذریعے اس کے دانتوں میں مقناطیسی خواص پیدا ہوتے ہیں۔

اس جانور کے منہ میں دانتوں کی کئی قطاریں ایک ربن کی طرح موجود ہوتی ہیں۔ دانت کی نوک میگنیٹائٹ پر مشتمل ہوتی ہے اور نیچے اس کی جڑ ہوتی ہے۔ جیسے ہی دانت میں ٹوٹ پھوٹ ہوتی ہے تو نیا دانت بننا شروع ہوجاتا ہے۔

کسی خاص جین کی بجائے سائنس دانوں نے اس جانور کے دانتوں میں موجود وہ تمام آراین اے معلوم کیے جو کوئی خاص پروٹین یا شے بناتے ہیں۔ ماہرین نے دیکھا کہ دانت میں فولاد جمع کرنے اور خارج کرنے والے ایک حصے میں فیراٹن نامی پروٹین موجود ہے جو دانتوں کی افزائش میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

مجموعی طور پر ماہرین نے 22 ایسے پروٹین دریافت کیے جو دانتوں میں مقناطیسیت پیدا کرتے ہیں اور ان میں بالکل نیا پروٹین ’ریڈیولر ٹیتھ میٹرکس پروٹین ون‘ بھی شامل ہے۔

اسے سمجھ کر ماہرین الیکٹرانکس، نینو اسکیل توانائی، حیاتیاتی مقناطیس اور دیگرکئی اشیا اور ٹیکنالوجی پر کام کرسکیں گے۔

ایکسپیریا ایکس زیڈ 4 میں 52 میگا پکسل کیمرہ دیا جائے گا‎

سونی کمپنی ایکسپیریا ایکس زیڈ 4 اسمارٹ فون کو موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہے۔ فون سے متعلق لیکس سامنے آنے کا سلسلہ جاری ہے اور تازہ جاری ہونے والی تفصیلات کے مطابق اس اسمارٹ فون کی پشت پر ٹرپل کیمرہ سیٹ اپ دیا جائے گا جس میں 52 میگا پکسل کا پرائمری سنسر ، 16 میگا پکسل کا ٹیلی فوٹو لینز اور 0.3 میگا پکسل کا ٹی او ایف سنسر دیا جائے گا۔ اسمارٹ فون میں 6.5 انچ کا ڈسپلے دیئے جانے کا امکان ہے۔ فون اینڈرائڈ پائی آپریٹنگ سسٹم کے تحت کام کرے گا۔ فون میں اسنیپ ڈریگن 855 پروسیسر دیا جائے گا اور یہ اس پروسیسر کا حامل پہلا فون ہوگا۔ فون میں 6 جی بی ریم کے ساتھ 128 جی بی اسٹوریج دیا جائے گا۔ اسٹوریج کو مائیکرو ایس ڈی کارڈ کی مدد سے 512 جی بی تک بڑھایا جا سکے گا۔  اسمارٹ فون کی بیٹری 4400 ملی ایمپیئر آورز کی ہوگی۔ فون میں فنگر پرنٹ سنسر کو بھی جگہ دی جائے گی۔ فون کو ممکنہ طور پر جامنی ، کالے ، سنہری اور نیلے رنگ میں متعارف کرایا جائے گا۔ اسمارٹ فون کی قیمت سے متعلق تاحال کوئی تفصیلات سامنے نہیں آئی ہیں۔

مصر سے 306 قبل مسیح کی حنوط شدہ 50 لاشیں برآمد

قاہرہ: مصر کے دارالحکومت کے جنوبی علاقے المنیا سے 306 قبل مسیح سے تعلق رکھنے والے افراد کی 50 حنوط شدہ لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ 

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق مصر سے سلطنت بطلیموس کے دور (330-305 قبل مسیح) کی 50 حنوط شدہ لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ سائنس دانوں کو یہ تاریخی ممیاں جنوبی مصر کے علاقے المنیا میں ایک تجرباتی سائٹ پر کھدائی کے دوران ملیں۔

Egypt 4

مصری وزارتِ نوادرات کا کہنا ہے کہ یہ 50 حنوط شدہ لاشیں آثار قدیمہ کی سائٹ تونا الجبل سے 30 فٹ گہری 4 قبروں سے برآمد ہوئی ہیں جن میں سے 12 لاشیں بچوں کی ہیں۔ حنوط لاشوں کی شناخت کا کام جاری ہے۔

Egypt 2

گو یہ لاشیں سلطنت بطلیموس کے دور کی ہیں تاہم ان افراد کا تعلق شاہی خاندان سے نہیں تھا بلکہ ایسے شواہد ملے ہیں جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ یہ متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والا خاندان تھا۔

Egypt 3

کچھ حنوط شدہ لاشوں کو پٹیوں میں لپیٹا گیا تھا جب کہ کچھ کو تابوت میں محفوظ کیا گیا تھا۔ تمام لاشیں درست حالت میں جن سے تاریخ کے پراسرار اوراق کو سمجھنے کا موقع ہوگا۔

ہواوے کا پہلا فولڈ ایبل فون 24 فروری کو متعارف ہوگا

برسوں کی افواہوں اور رپورٹس کے بعد آخرکار رواں ماہ ایک نہیں بلکہ 2 فولڈ ایبل فونز متعارف ہونے والے ہیں۔

ایک تو سام سنگ کا گلیکسی ایف یا جوبھی اس کا نام رکھا جائے گا اور دوسری چینی کمپنی ہواوے کا پہلا فولڈ ایبل فون جو 24 فروری کو دنیا کے سامنے آئے گا۔

ہواوے نے ٹوئٹر پر بارسلونا میں شیڈول موبائل ورلڈ کانگریس کے موقع پر 24 فروری کو ایک ایونٹ کے انعقاد کا اعلان کیا۔

یہ کمپنی گزشتہ سال اکتوبر میں ایک فولڈ ایبل فون متعارف کرانے کے منصوبے کا انکشاف کرچکی ہے جبکہ گزشتہ ماہ اسے موبائل ورلڈ کانگریس میں پیش کرنے کا اعلان بھی کیا۔

اپنے ٹوئیٹ میں کمپنی نے فولڈ ایبل فون کا ذکر تو نہیں کیا مگر یہ ضرور لکھا ‘ کیا آپ ناقابل نظیر کے انکشاف کے لیے تیار ہیں؟’

ہواوے گزشتہ ماہ یہ بھی اعلان کرچکی ہے کہ اس کا فولڈایبل فون اس کمپنی کا پہلا فائیو جی فون بھی ہوگا۔

ایسا بھی امکان ہے کہ فولڈایبل فون سے ہٹ کر بھی کچھ اسمارٹ فونز اس کمپنی کی جانب سے اس ایونٹ میں متعارف کرائے جائیں۔

مگر حیران کن طورپر ہواوے اس معاملے میں سام سنگ سے پیچھے رہ جائے گی جو کہ اپنا فولڈ ایبل فون گلیکسی ایس 10 سیریز کے ساتھ 20 فروری کو متعارف کرارہی ہے۔

ویسے فروری میں تیسرا فولڈ ایبل فون سامنے آنے کا بھی امکان ہے۔

اگر حالیہ اطلاعات کو درست مانا جائے تو موٹرولا بھی اپنے ماضی کے ریزر وی تھری کو فولڈ ایبل اسمارٹ فون کی شکل میں متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہے۔

مگر ان تینوں فونز کو خریدنے کے لیے جیب میں رقم بھی کافی زیادہ چاہئے ہوگی کیونکہ ان کی کم از کم قیمت بھی ڈیڑھ ہزار ڈالرز (پونے 2 لاکھ پاکستانی روپے کے قریب) ہوگی۔

ہاں ایل جی بھی ایک منفرد قسم کا فولڈ ایبل فون متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہے مگر اس کے بارے میں فی الحال تفصیلات سامنے نہیں آسکی ہیں۔

سام سنگ گلیکسی ایس 10 سیریز توقع سے زیادہ مہنگی

سام سنگ کا نیا فلیگ شپ فون گلیکسی ایس 10 کم از کم 3 مختلف ورژن میں متعارف کرایا جائے گا اور یہ جنوبی کورین کمپنی کی طاقتور ترین ڈیوائس بھی ہوگی جس کا عندیہ مہینوں سے سامنے آنے والی لیکس اور افواہوں سے ہوتا ہے۔

مگر اس وقت جب سام سنگ کے موبائل فونز کی فروخت سست روی کا شکار ہے تو کیا اس کمپنی کے نئے فلیگ شپ فونز سستے ہوں گے؟

اگر ایک نئی لیک کو درست مانا جائے تو ایسا ممکن نظر نہیں آتا۔

ایک ٹوئٹر صارف نے گلیکسی ایس 10 ای، ایس 10 اور ایس 10 پلس کی آفیشل قیمتوں کو لیک کرنے کا دعویٰ کیا ہے جو کہ نیدرلینڈ کے لیے ہے، تاہم اس کے خیال میں دیگر ممالک میں قیمتوں میں زیادہ فرق نہیں ہوگا۔

اگر اس لیک کا جائزہ لیا جائے گا تو ریگولر گلیکسی ایس 10 کا سکس جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج والا ماڈل 899 یورو (ایک لاکھ 42 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) ہوگی جبکہ 8 جی بی اور 512 جی بی اسٹوریج والا ماڈل 1149 یورو (ایک لاکھ 82 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) میں دستیاب ہوگا۔

بڑی اسکرین والا گلیکسی ایس 10 پلس کا 6 جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج والا ورژن 999 یورو (ایک لاکھ 58 ہزار پاکستانی روپے سے زائد)، 8 جی بی/ 512 جی بی اسٹوریج 1249 یورو (ایک لاکھ 98 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) جبکہ 12 جی بی/ ایک ٹی بی اسٹوریج والا فون 1499 یورو (2 لاکھ 37 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) میں فروخت کیا جائے گا۔

جہاں تک انٹری لیول گلیکسی ایس 10 ای کی بات ہے تو وہ ایک ورژن میں ہی ہوگا سکس جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج، جس کی قیمت 749 یورو (ایک لاکھ 18 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) ہوگی۔

یہ قیمتیں چند ہفتے قبل ایک اطالوی سائٹ کی لیک کردہ قیمتوں سے کچھ کم ہیں، مگر یہ فرق زیادہ بڑا نہیں اور مختلف مارکیٹ اس کی وجہ ہوسکتی ہے۔

اور جہاں تک یورو قیمت کو روپے میں تبدیل کرنے کی بات ہے تو اکثر یہ قیمت پاکستان میں نہیں ہوتی، جہاں فون عام طور پر دیگر ممالک سے کچھ مہنگے ہوتے ہیں۔

اور یہ کہنے کی ضرورت نہیں کہ سام سنگ دنیا کا پہلا 12 جی بی ریم اور ایک ٹی بی اسٹوریج والا فون بھی متعارف کرارہی ہے، عام طورپر کمپیوٹرز یا لیپ ٹاپ میں بھی 8 سے 10 جی بی ریم سے زیادہ نہیں دیا جاتا۔

خیال رہے کہ سام سنگ 20 فروری کو سان فرانسسکو میں ایک ایونٹ کے دوران اپنے فلیگ شپ سیریز کے فونز کو متعارف کرائے گی۔

Google Analytics Alternative