کھیل

پاکستان ٹیم جنوبی افریقہ کیلئے روانہ، کپتان اچھی کارکردگی کیلئے پُر عزم

پاکستان کرکٹ ٹیم دورہ جنوبی افریقہ کے لیے روانہ ہو گئی جو متحدہ عرب امارات (یو اے ای) سے ہوتی ہوئی جوہانسبرگ پہنچے گی، کپتان سرفراز احمد اچھی کارکردگی کے لیے پُر عزم ہیں۔

کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد، مڈل آرڈر بیٹسمین اسد شفیق اور اوپننگ بلے باز شان مسعود یو اے ای کے لیے روانہ ہوئے۔

امام الحق، بابر اعظم، حارث سہیل، اظہر علی سمیت دیگر کھلاڑی لاہور کے علامہ اقبال انٹرنینشل ایئرپورٹ سے روانہ ہوئے۔

جنوبی افریقہ سے ہی تعلق رکھنے والے پاکستان ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر پہلے ہی اپنے ملک میں موجود ہیں جبکہ دیگر ٹیم آفیشلز بشمول بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور اور باؤلنگ کوچ اظہر محمود بھی ٹیم کے ہمراہ روانہ ہوئے۔

جنوبی افریقہ روانگی سے قبل کپتان سرفراز احمد نے افریقہ میں بہترین کارکردگی دکھانے کے عزم کا اظہار کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹیم نے ماضی کی غلطیوں سے سیکھا ہے، تاہم نئی سوچ لے کر جنوبی افریقہ جارہے ہیں اور ماضی کو بھول کر پوری توجہ اس دورے پر ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ جنوبی افریقہ کی وکٹیں باؤلرز کے لیے ساز گار ہوتی ہیں اور یہاں فاسٹ باؤلرز کا کردار ہی اہم ہوتا ہے۔

ریکارڈ ساز لیگ اسپنر یاسر شاہ اپنی ذاتی مصرفیات کی وجہ سے جنوبی افریقہ روانہ نہیں ہوئے، وہ کچھ روز بعد جوہانسبرگ جائیں گے۔

پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان 3 ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ 26 دسمبر کو شروع ہوگا، دوسرا ٹیسٹ 3 جنوری 2019 اور تیسرا ٹیسٹ 11 جنوری سے شروع ہوگا۔

ٹیسٹ سیریز کے بعد دونوں ٹیموں کے درمیان 5 ون ڈے کی سیریز کھیلی جائے گی جس کا پہلا میچ 19 جنوری کو پورٹ الیزبتھ، دوسرا 22 جنوری کو ڈربن، تیسرا 25 جنوری کو سنچورین، چوتھا 27 جنوری کو جوہانسبرگ اور پانچواں 30 جنوری کو کیپ ٹاؤن میں کھیلا جائے گا۔

پاکستان ٹیم مہمان ٹیم کے خلاف اس طویل دورے میں 3 ٹی ٹوئنٹی میچز بھی کھیلے گی جس کا پہلا میچ یکم فروری کو کیپ ٹاؤن، دوسرا 3 فروری کو جوہانسبرگ اور تیسرا سنچورین میں 6 فروری کو کھیلا جائے گا۔

ہاکی ورلڈ کپ: ہالینڈ نے بھارت کی چھٹی کرا دی

بھونیشور: ہاکی ورلڈ کپ کے کوارٹر فائنل میں ہالینڈ نے میزبان بھارت کو شکست دیکر ٹورنامنٹ سے باہر کر دیا۔

بھارت کے شہر بھونیشور میں کھیلے گئے کوارٹر فائنل میں نیدرلینڈ نے بھارت کو دو کے مقابلے میں ایک گول سے شکست دی۔

ڈچ ٹیم سے شکست کے بعد بھارتی کھلاڑی افسردہ کھڑے ہیں۔ فوٹو: آئی ایچ ایف

ہالینڈ نے بھارت کو شکست دیکر سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے جہاں اس کا مقابلہ آسٹریلیا سے ہو گا۔

باہمی سیریز زر تلافی کیس؛ بھارت نے پاکستان سے 15 کروڑ روپے مانگ لیے

دبئی: باہمی سیریز کے معاہدے پر عمل درآمد نہ ہونے کے باعث زر تلافی پانے کے چکر میں پاکستان کو مزید زر سے ہاتھ دھونے پڑ سکتے ہیں۔

پاکستان آئی سی سی ڈسپیوٹ ریزولوشن کمیٹی میں باہمی سیریز معاہدے پر عمل درآمد نہ ہونے کے باعث زر تلافی لینے کی درخواست ہار گیا تھا۔ جس کے بعد اب بھارت نے پی سی بی سے قانونی اخراجات کی مد میں 15 کروڑ روپے مانگ لیے ہیں۔ اس سلسلے میں بھارتی کرکٹ بورڈ نے  آئی سی سی کی  ڈیسپیوٹ ریزولیشن کمیٹی کو خط بھی لکھ دیا ہے۔

خط کے متن میں کہا گیا ہے کہ پاک بھارت کرکٹ تنازع پر ہمارے 15 کروڑ روپے خرچ ہوئے لہذا کیس ہارنے پر ہمارے قانونی اخراجات اب پاکستان کرکٹ بورڈ پورے کرے۔

واضح رہے کہ پاکستان نے باہمی سیریز کھیلنے کا معاہدہ پورا نہ کرنے پر بھارت کیخلاف 63 ملین ڈالر کا مقدمہ کیا تھا جس میں فیصلہ پی سی بی کے خلاف آیا تھا۔

کمبلے کو بھارتی ٹیم کی کوچنگ سے ہٹانے میں کوہلی کا ہاتھ ثابت

نئی دلی: انیل کمبلے کو بھارتی کرکٹ ٹیم کی کوچنگ سے ہٹانے میں کپتان ویرات کوہلی کا ہاتھ ثابت ہوگیا

ایک بی سی سی آئی آفیشل کی جانب سے سپریم کورٹ کی مقرر کردہ کمیٹی آف ایڈمنسٹریٹرز کے سربراہ ونود رائے کو بھیجی گئی ای میل افشا ہوئی ہے، جس میں ان کا کہنا تھا کہ ویرات کوہلی چیف ایگزیکٹیو آفیسر کو باربار ایس ایم ایس بھیج کر کوچ کو تبدیل کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔

بیلجیم نے پاکستان کو شکست دے کر ہاکی ورلڈ کپ سے باہر کردیا

بھوبینشیور: ہاکی ورلڈ کپ میں بیلجیم نے پاکستان کوصفر کے مقابلے میں 5 گول سے زیر کر کے ٹائٹل کی دوڑ سے باہر کر دیا۔

فاتح ٹیم کی طرف سے الیگزینڈر ہینڈرک، تھامس بریلز، کیڈرک چارلیئر، ڈوکیئر اور ٹام بون نے ایک، ایک گول کیا جب کہ میچ کے دوران گرین شرٹس کو گولز کرنے کے متعدد مواقع میسر آئے لیکن فاروڈز گیند کو جال کے اندر پھینکنے میں کامیاب نہ ہو سکے۔

پہلے راؤنڈ کے کسی بھی میچ میں فتح حاصل نہ کرنے کے باوجود دوسرے مرحلے میں جگہ بنانے والی پاکستانی ٹیم کی قسمت اس بار کام نہ کر سکی، بیلجیم نے یکطرفہ مقابلے میں گرین شرٹس کو5-0 سے ہرا کر ہاکی ورلڈ کپ میں میڈلز کی دوڑ سے باہر کر دیا۔

بھارتی شہر بھوبینشیور کے کالنگا اسٹیڈیم میں ہونے والے اس میچ میں کھیل کے ابتدائی9منٹ میں کوئی بھی ٹیم گول کرنے میں کامیاب نہ ہو سکی تاہم اگلے ہی منٹ میں بیلجیم کی ٹیم پنالٹی کارنر لینے میں کامیاب ہو گئی جس کا بھر پور فائدہ الیگزینڈر ہینڈرک نے اٹھایا اور گیند کو جال کے اندر پھینک کر بیلیجیم کو ایک گول کی برتری دلا دی، 13ویں منٹ میں کپتان تھامس بریلز نے فیلڈ گول کے ذریعے اپنی ٹیم کی سبقت دوگنا کر دی۔

27ویں منٹ میں کیڈرک چارلیئر نے بیلجیم کی طرف سے تیسرا گول کر کے پاکستانی ٹیم کے لئے مشکلات بڑھا دیں۔تیسرے کوارٹر میں بیلجیم نے مزید ایک گول کر کے پاکستانی ٹیم کے میچ میں واپسی کے تمام راستے بند کر دیئے، یہ گول کھیل کے 35ویں منٹ میں ڈوکیئر نے کیا۔53ویں منٹ میں ٹام بون نے بیلجیم کی طرف سے پانچواں گول کیا۔ قوانین کی خلاف ورزی کرنے پر پاکستان کے ارشد توثیق اور عمر بھٹہ کو گرین کارڈز بھی دکھائے گئے۔

ایونٹ کے پہلے مرحلے میں پاکستانی ٹیم کو جرمنی نے صفر کے مقابلے میں ایک گول سے زیر کیا، ملائشیا کے خلاف مقابلہ ایک، ایک گول سے برابر رہا جبکہ ہالینڈ نے ایک کے مقابلے میں5گول سے شکست دی تھی۔

سابق اولمپئنز ہاکی ورلڈ کپ میں قومی ٹیم کی بدترین کارکردگی پر پھٹ پڑے

پاکستان ہاکی ٹیم کی ورلڈ کپ میں بدترین شکست پر سابق کھلاڑی برس پڑے اور وزیر اعظم سے قومی کھیل کی تباہی کا نوٹس لینے کا مطالبہ بھی کر دیا۔

سابق اولمپئن نوید عالم کا کہنا ہے کہ آج ملکی ہاکی کا سیاہ دن ہے، ورلڈ کپ کے دوران قومی ٹیم ایک بھی میچ نہ جیت سکی، بیلجیم سے شرمناک شکست سے دو چار ہو کر ورلڈ کپ کی دوڑ سے بھی باہر ہو گئی۔

نوید عالم نے کہا کہ کئی برسوں سے ہاکی فنڈز ذاتی جبیوں میں جارہے ہیں جس کا نتیجہ آج قوم نے دیکھ لیا، کرپشن کے خلاف متحرک ادارے پاکستان ہاکی کی بدحالی کا بھی جائزہ لیں۔

نوید عالم کا مزید کہنا تھا کہ جو 4 سال بویا تھا وہ آج کاٹ لیا، میگا ایونٹ میں گرین شرٹس کی کارکردگی سے سر شرم سے جھک گئے ہیں، ہاکی پاکستان کی عزت و توقیر تھی، چند لوگوں نے دنیا بھر میں رسوا کرادیا، وزیر اعظم سے مطالبہ ہے کہ وہ فوری طور پر ہاکی کی تباہی کا نوٹس لیں۔

سابق کپتان محمد ثقلین نے کہا کہ پاکستان ہاکی کے ساتھ مذاق کیا جارہا ہے، جب تک جواب طلبی نہیں ہوگی، ہاکی میں بہتری نہیں آسکتی۔

مشکل وقت میں چیئرمین نے کپتان کی پیٹھ تھپتھپا دی

کراچی: مشکل وقت میں چیئرمین پی سی بی نے کپتان سرفراز احمد کی پیٹھ تھپتھپا دی۔

آسٹریلیا کو 1-0 سے ہرانے والی پاکستان ٹیم کو نیوزی لینڈ سے ٹیسٹ سیریز میں 1-2 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا،اس کے بعد سے کپتان سرفراز احمد شدید تنقید کی زد میں آئے ہوئے ہیں، البتہ چیئرمین احسان مانی نے مشکل وقت میں انھیں مکمل سپورٹ کیا ہے۔

گزشتہ روز کراچی میں نمائندہ ’’ایکسپریس‘‘ کو خصوصی انٹرویو میں چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے کہا کہ دورئہ جنوبی افریقہ سر پر ہے، یہ وقت کپتانی کے بارے میں سوچنے کا نہیں، ہمیں مشکل وقت میں سرفراز احمد کو مکمل سپورٹ کرنا چاہیے، یہ افسوس کی بات ہے کہ جب ٹیم جیتے تو ٹھیک لیکن ایک میچ یا سیریز ہارے تو منفی باتیں شروع ہو جاتی ہیں، یہ انداز نہیں اپنانا چاہیے۔

انھوں نے کہا کہ یہ نہ بھولیں کہ اسی ٹیم نے آسٹریلیاکو ٹیسٹ سیریز میں شکست دی، البتہ نیوزی لینڈ کے خلاف کارکردگی کا معیار برقرار نہ رکھا جا سکا،پلیئرز کو غلطیوں سے سبق سیکھتے ہوئے اگلی سیریز میں اچھا کھیل پیش کرنا چاہیے اور وہ اس کے اہل بھی ہیں۔

احسان مانی نے کہا کہ میں پہلے ٹیسٹ سے قبل جنوبی افریقہ جا رہا ہوں، وہاں کپتان سمیت تمام کھلاڑیوں سے ملاقات کروں گا، میری کوچ مکی آرتھر وغیرہ سے اکثر بات ہوتی رہتی ہے مگر میں ٹیم کے معاملات میں دخل نہیں دیتا، مجھے کپتان اور کوچ دونوں پر پورا اعتماد ہے، اسی ٹیم ورک نے ہمیں پہلے فتوحات دلائیں اور آئندہ بھی ایسا ہوگا۔

اس سوال پر کہ چیف سلیکٹر نے ناقص کارکردگی کے باوجود اپنے بھتیجے کو عابد علی جیسے ان فارم کرکٹرز پر ترجیح دی چیئرمین بورڈ نے کہا کہ میں کسی انفرادی سلیکشن پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتا، مجھے سلیکشن کمیٹی کے کام کے حوالے سے کوئی فکر نہیں ہے،ان کا معاہدہ آئندہ برس اپریل تک کا ہے۔

انھوں نے کہا کہ پی سی بی کے منیجنگ ڈائریکٹر وسیم خان کو ابھی انگلینڈ میں اپنا معاہدہ پورا کرنا ہے،اسی کے بعد وہ پاکستان آئیں گے، آئین میں تبدیلی کے بعد وہ چیف ایگزیکٹیو آفیسر بن جائیں گے،میں ان کی تنخواہ وغیرہ کے بارے میں اظہار خیال نہیں کرنا چاہتا مگر جب آپ کسی قابل شخص کی خدمات حاصل کرتے ہیں تو اسے اچھا معاوضہ بھی دینا پڑتا ہے، ان کے آنے سے پاکستان کرکٹ کے معاملات میں مثبت تبدیلی آئے گی۔

اس سوال پر کہ وسیم خان کے آنے سے سبحان احمد کی پوزیشن کیا ہوگی احسان مانی نے کہا کہ دنیا بھر میں سی ای او اور سی او او ساتھ کام کرتے ہیں، آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹیو ڈیو رچرڈسن اور چیف آپریٹنگ آفیسر ای ین ہگنز ہیں ، ایسا پاکستان میں کیوں نہیں ہو سکتا، سبحان احمد کی پوزیشن کو کوئی خطرہ نہیں وہ وسیم خان کے ساتھ مل کر ہی کام کریں گے۔

 

صرف میری وجہ سےٹیم ہار رہی ہوگی تو قیادت چھوڑ دوں گا، سرفراز احمد

کراچی: قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز حمد نے کہا ہے کہ اگر ٹیم صرف میری وجہ سے ہاررہی ہوگی تو قیادت چھوڑ دوں گا۔

کراچی  میں سینئر اسپورٹس جرنلسٹ سلیم خالق کی کتاب’ کرکٹ نامہ‘ کی تعارفی تقریب سے خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سرفراز احمد نے کہا کہ نیوزی لینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز جیتنے کا بہترین موقع تھا تاہم اپنی غلطیوں کی وجہ سے کامیابی حاصل نہیں کرسکے، ہمیں غلطیوں پر قابو پانا ہوگا اور ناکامیوں سے سیکھنا ہوگا۔

سرفراز احمد نے کہا کہ اگر ٹیم برا کھیل پیش کرتی ہے تو ذمہ داری کپتان پر ڈالی جاتی ہے، صرف میری وجہ سے ٹیم کو شکست ہوئی تو قیادت چھوڑ دوں گا  تاہم بیٹسمینوں کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا اور کارکردگی میں تسلسل کو برقرار رکھنا ہوگا۔

نیوزی لینڈ سے ٹیسٹ سیریز میں شکست پر چیف سلیکٹر کے اظہار برہمی پرسرفراز احمد نے کہا کہ انضمام الحق نے جن غلطیوں  اور خامیوں کی طرف نشاندہی کی ہے اسے دورہ جنوبی افریقا میں نہیں دہرائیں گے، دورہ جنوبی افریقا میں منصوبہ بندی سے کھلیں گے اور بہترین نتائج دینے کی کوشش کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ٹیم میں شامل کھلاڑیوں کو اب غیر تجربہ کار نہیں کہہ سکتے، ٹیم  میں زیادہ تر وہ کھلاڑی ہیں جنہوں نے 10،10 ٹیسٹ میچ کھیل لیے ہیں۔

Google Analytics Alternative