کھیل

پبلشنگ پارٹنر دنیائے کرکٹ کو 23سال بعد نیا عالمی چیمپیئن ملے گا

ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں بھارت اور آسٹریلیا کی شکست کے ساتھ ہی نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کی ٹیمیں فائنل میں پہنچ گئی ہیں اور 23سال بعد دنیائے کرکٹ کا ایک نیا عالمی چیمپیئن بن جائے گا۔

انگلینڈ میں جاری ورلڈ کپ میں نیوزی لینڈ کی ٹیم نے بھارت اور میزبان ٹیم نے دفاعی چیمپیئن آسٹریلیا کو شکست دے کر فائنل میں جگہ بنائی اور دونوں ٹیمیں 14 جولائی کو ٹائٹل کے لیے لارڈز کے تاریخی میدان میں ٹکرائیں گی۔

اس کے ساتھ ہی 23 سال بعد دنیائے کرکٹ کو نیا عالمی چیمپیئن مل جائے گا کیونکہ گزشتہ برسوں کے دوران وہی ٹیمیں چیمپیئن بنتی رہیں جو اس سے قبل بھی چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کر چکی تھیں۔

اس سے قبل 1996 میں سری لنکا کی ٹیم نے چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کیا تھا تو وہ آخری ٹیم تھی جو پہلی مرتبہ چیمپیئن بنی تھی۔

اس کے بعد 1999 میں آسٹریلین ٹیم چیمپیئن بنی تھی لیکن وہ 1987 میں ٹائٹل اپنے نام کر چکی تھی اور پھر آسٹریلیا نے 2003 اور 2007 کا بھی ورلڈ کپ جیتنے کا اعزاز حاصل کیا۔

2011 میں بھارتی ٹیم نے اپنی سرزمین پر چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کیا تو دوسری بار ورلڈ چیمپیئن بنی تھی، اس سے قبل 1983 میں کپیل دیو کی زیر قیادت بھارت پہلی مرتبہ چیمپیئن بنا تھا۔

2015 ورلڈ کپ کے فائنل میں نیوزی لینڈ کی ٹیم پہنچنے میں کامیاب رہی تھی لیکن آسٹریلیا نے انہیں شکست دے کر پانچویں مرتبہ چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کر لیا تھا۔

تاہم 2019 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں بھارت اور آسٹریلیا دونوں کی شکست کے بعد اب انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں فائنل میں پہنچ گئی ہیں لہٰذا اب دنیا ایک ایسی ٹیم کو عالمی چیمپیئن بنتا ہوا دیکھی گی جس نے اس سے قبل کبھی بھی یہ اعزاز حاصل نہیں کیا۔

اب دیکھتے ہیں کہ 14 جولائی کو لارڈز کے تاریخی میدان پر فتح کس ٹیم کے قدم چومتی ہے۔ آیا انگلینڈ کی ٹیم عالمی چیمپیئن کا تاج سر پر سجائے گی یا نیوزی لینڈ کی ٹیم کرکٹ کے تمام پنڈتوں اور ماہرین کو ایک مرتبہ پھر حیران کر کے ورلڈ چیمپیئن بننے کا اعزاز حاصل کرے گی۔

راشد خان تینوں فارمیٹ کیلئے افغانستان کے کپتان مقرر

افغان کرکٹ بورڈ نے اسٹار لیگ اسپنر راشد خان کو تینوں فارمیٹ کے لیے کپتان مقرر کردیا ہے جبکہ سابق کپتان اصغر افغان کو ان کا نائب مقرر کیا گیا ہے۔

افغان بورڈ نے یہ فیصلہ ورلڈ کپ میں ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد کیا جہاں گلبدین نائب کی زیر قیادت افغان ٹیم کو اپنے تمام میچوں میں شکست کا منہ دیکھنا پڑا۔

عالمی نمبر ایک ٹی20 باؤلر راشد خان کے لیے بھی یہ ورلڈ کپ بہت اچھا نہیں رہا اور وہ توقعات کے برعکس کچھ اچھا کھیل پیش نہ کر سکے لیکن افغانستان کرکٹ کے مستقبل کو مدنظر رکھتے ہوئے 20سالہ کرکٹر کو قیادت کی ذمے داری سونپی گئی ہے۔

ورلڈ کپ کے دوران 8 اننگز میں راشد خان تقریباً 70کی اوسط سے صرف 6 وکٹیں لے سکے جبکہ انگلینڈ کے خلاف میچ میں انہیں 110 رنز کی پٹائی برداشت کرنی پڑی اور وہ ون ڈے کرکٹ کی تاریخ میں دوسرے مہنگے ترین باؤلر ثابت ہوئے۔

گزشتہ سال زمبابوے میں ورلڈ کپ کوالیفائر کے دوران کپتان اصغر افغان کی غیرموجودگی میں 4 میچوں میں افغانستان کی راشد نے قیادت کی تھی اور ان سے تین میں انہیں شکست کا منہ دیکھنا پڑا تھا۔

رپورٹس کے مطابق ورلڈ کپ سے قبل بھی راشد خان کو ون ڈے ٹیم کی قیادت کی پیشکش کی گئی تھی لیکن انہوں نے اسے مسترد کردیا تھا جس کے بعد انہیں گلبدین کا نائب مقرر کیا گیا تھا۔

محمد عامر ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ میں شرکت کیلیے تیار

ورلڈکپ میں عمدہ کارکردگی دکھانے والے پاکستانی پیسر محمد عامر انگلش ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ میں شرکت کی تیاری کرنے لگے ہیں۔

میگا ایونٹ کے سیمی فائنل سے باہر ہونے کے بعد دیگر کھلاڑیوں کے ہمراہ پاکستان واپس آنے کے بجائے انگلینڈ میں ہی قیام کرنے والے قومی ٹیم کے بولر ایسیکس کی نمائندگی کریں گے، انہوں نے گزشتہ روز اپنی کاؤنٹی ٹیم کیلیے فوٹو شوٹ بھی کروایا۔

واضح رہے ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ لیگ کا آغاز 18 جولائی کو ہو رہا ہے، ایونٹ کا فائنل 21 ستمبر کو برمنگھم کے ایجبسٹن گراؤنڈ میں کھیلا جائے گا، وورسٹرشائر ریپیڈز دفاعی چیمپئن ہے۔

ورلڈ کپ سے باہر ہونے پر کوہلی کا شائقین کے نام پیغام

لندن: نیوزی لینڈ سے شکست اور ورلڈ کپ سے باہر ہونے پر بھارتی کپتان ویرات کوہلی نے مایوس شائقین کے نام جذباتی پیغام لکھا ہے۔

نیوزی لینڈ سنسنی خیز مقابلے کے بعد بھارت کو ہرا کر ورلڈ کپ کے فائنل میں پہنچ گیا۔ بھارتی ٹیم کی شکست پر کرکٹ شائقین کے ساتھ بھارتی ٹیم بھی دلبرداشتہ ہے۔ بھارتی کپتان ویرات کوہلی نے اس موقع پر شائقین کا حوصلہ بڑھاتے ہوئے ہر حال میں بھارتی ٹیم کو سپورٹ کرنے پر شکریہ ادا کیا ہے۔

ویرات کوہلی نے ٹوئٹر پر شکستہ دل کے ساتھ لکھا کہ سب سے پہلے میں ان تمام شائقین کا شکریہ اداکرنا چاہتاہوں جو اتنی بڑی تعداد میں ہمیں سپورٹ کرنے آئے۔ آپ نے اس ٹورنامنٹ کو ہمارے لیے یاد گار بنادیا اور ہم نے ٹیم کے لیے آپ کی محبت کو بھرپور طریقے سے محسوس کیا۔ ہم سب بھی بالکل آپ کی طرح مایوس ہیں اور ہمارے جذبات بھی آپ کے جذبات سے مختلف نہیں۔ ہم  نے وہ سب کچھ کیا جوہم کرسکتے تھے۔

نیوزی لینڈ سے شکست کے بعد بھارتی ٹیم سوشل میڈیا پر مذاق کا نشانہ بن گئی

کراچی: ورلڈ کپ میچ کے دوران نیوزی لینڈ کے ہاتھوں شکست کے بعد بھارتی ٹیم سوشل میڈیا پر مذاق کا نشانہ بن گئی۔

نیوزی لینڈ اور بھارت کے گزشتہ روز ہونے والے میچ سے قبل خیال کیا جارہا تھاکہ یہ میچ بھارت باآسانی جیت لے گا لیکن نیوزی لینڈ نے نہ صرف میچ میں شاندار کارکردگی دکھائی بلکہ بھارت کو ورلڈ کپ سے ہی باہر کر دیا اور بھارت کا ورلڈ کپ جیتنے کا خواب ادھورا رہ گیا۔

نیوزی لینڈ کے ہاتھوں بھارت کی شکست نے پاکستانیوں کے زخموں پر مرہم کا کام کیا اورپاکستانیوں کو قومی ٹیم کا ورلڈ کپ سے باہر ہونے کا غم بھلادیا۔ بھارت کی ہار پر جتنا نیوزی لینڈ میں جشن منایا گیا اس سے کہیں زیادہ پاکستانیوں نے اس جیت کا جشن منایا۔  پاکستانی صارفین سوشل میڈیا پر بھارت کو ہرانے پر نیوزی لینڈ کا شکریہ ادا کر رہے ہیں۔

پاکستانی سوشل میڈیا پر سرگرم ناصر خان جان نے بھارت کی شکست پر کہا انڈیا اگر چاہے تو ہم سے ابھی نندن والا کپ لے سکتا ہے۔

پاکستانی سوشل میڈیا پر سب سے زیادہ وائرل ہونے والی تصویر نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن کی ہے جس میں انہوں نے پاکستانی کٹ  پہنی ہے یقیناً یہ تصویر فوٹوشاپ ہے تاہم پاکستانیوں نے اس تصویر کو بہت شیئر کیا ہے اور ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں میجر کین ولیمسن کا خطاب دیتے ہوئے کہا ہمیں آپ پر فخر ہے۔

سوشل میڈیا پر ایک پاکستانی مداح کی تصویر بہت زیادہ وائرل ہورہی ہے جس نے نیوزی لینڈ کا جھنڈا ہاتھ میں پکڑا ہوا ہے اور نیوزی لینڈ کی جیت پر مسکرارہا ہے۔ یہاں تک کہ پاکستانیوں نے بھارت کو ہرانے پر نیوزی لینڈ کا نام بدل کر نیوزیستان رکھ دیا ہے۔

انوشکا شرما اور کوہلی کی یہ تصویر بھی بہت زیادہ وائرل ہورہی ہے جس میں انوشکا کوہلی کے برابر میں افسوسناک انداز میں بیٹھی ہوئی ہیں۔

ایک صارف نے لکھا 2 بھارتی جنہوں نے لائن کراس کرنے کی کوشش کی اورمنہ کی کھائی۔

بھارت کی شکست پر نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈرا آرڈرن کی تصویر بہت زیادہ وائرل ہورہی ہے جس پر کیپشن لکھا ہوا ہے پاکستانیوں آپ کی بہن کشمیر بھی آزاد کروائے گی۔

بھارت کی شکست کو بیان کرنے کا ایکسپریس نیوز کا یہ انداز سوشل میڈیا پر بہت زیادہ وائرل ہورہا ہے۔

نیوزی لینڈ نے بھارت کو ورلڈ کپ سے باہر کردیا

مانچسٹر: نیوزی لینڈ سنسنی خیز مقابلے کے بعد بھارت کو ہراکر کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے فائنل میں پہنچ گیا ہے۔

کرکٹ ورلڈکپ 2019 کے پہلے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ بھارت کو 18 رنز سے شکست دیکر ورلڈکپ کے فائنل میں پہنچ گیا ہے، نیوزی لینڈ نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے بھارت کو جیت کے لیے 240 رنز کا ہدف دیا جس کے جواب میں بھارت کی جانب سے اننگز کا آغاز روہت شرما اور لوکیش راہول نے کیا تاہم بھارتی ٹاپ آرڈر نیوزی لینڈ کے بولرز کے سامنے بے بس دکھائی دیا اور صرف 5 رنز پر 3 بیٹسمین پولین لوٹ گئے، روہت شرما، لوکیش راہول اور ویرات کوہلی نے صرف ایک ایک رن بنایا اور آؤٹ ہوگئے۔

24 رنز پر 4 کھلاڑی آؤٹ ہونے کے بعد رشپ پنٹ اور ہاردیک پانڈیا نے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا، دونوں کے درمیان 47 رنز کی شراکت قائم ہوئی تاہم رشپ پنٹ 32 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

ساتویں وکٹ کی شراکت میں مہیندرا سنگھ دھونی اور رویندرا جڈیجا کے درمیان 116 رنز کی شراکت قائم ہوئی، رویندرا جڈیجا نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور 77 رنز بنائے تاہم چھکا مارنے کی کوشش میں وہ کیچ آؤٹ ہوگئے جب کہ اگلے ہی اوور میں دھونی بھی 50 رنز بناکر رن آؤٹ ہوگئے۔

بھارتی ٹیم مقررہ 49.3 اوورز میں 221 رنز ہی بناسکی، نیوزی لینڈ کی جانب سے میٹ ہنری نے 3، ٹرینٹ بولٹ اور مچل سانٹنر نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے قبل آج جب نیوزی لینڈ نے اپنی نامکمل اننگز 211 رنز 5 وکٹوں کے نقصان پر شروع کی تو صرف 15 رنز کے اضافے کے بعد راس ٹیلر رن آؤٹ ہوگئے جب کہ اگلی ہی گیند پر ٹام لیٹھم بھی کیچ آؤٹ ہوگئے۔

آخری 4 اوورز میں نیوزی لینڈ کی ٹیم کچھ خاص کارکردگی کا مظاہرہ نہ کرسکی اور مقررہ 50 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر صرف 239 رنز ہی بناسکی۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے راس ٹیلر نے 74 اور کپتان کین ولیمسن نے 67 رنز کی اننگز کھیلی۔

گزشتہ روز نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اننگز کا آغاز مارٹن گپٹل اور ہینری نکولس نے کیا تاہم مارٹن گپٹل صرف ایک رن بناکر آؤٹ ہوگئے، دوسری وکٹ پر کپتان ولیمسن نے نکولس نے محتاط بیٹنگ کرتے ہوئے اننگز کو آگے بڑھایا  تو 69 کے مجموعے پر نکولس  بولڈ ہوگئے، کپتان نے تجربہ کار راس ٹیلر کے ساتھ تیسری وکٹ پر 65 رنز جوڑ ے، اس دوران ولیمسن نے نصف سنچری اسکور کی تاہم وہ  134 کے مجموعی اسکور پر کیچ آؤٹ ہوگئے، ولیمسن نے 95 گیندوں پر 67 رنز بنائے جس میں 6 چوکے بھی شامل تھے۔

نیوزی لینڈ کی چوتھی وکٹ 162 رنز  پرجیمس نیشن کی صورت میں گری جو تجربہ کار راس ٹیلر کا ساتھ  چھوڑ گئے، انہوں نے صرف 12 رنز بنائے جب کہ گرینڈ ہوم 16 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوگئے تاہم 46 عشاریہ ایک اوورز میں تیز بارش کی وجہ سے میچ روک دیا گیا تھا، کیوی ٹیم نے 46 اعشاریہ ایک اوورز میں 5 وکٹوں پر 211 رنز بنائے تھے۔

کھیل پر جتنی مرضی تنقید کریں لیکن خدارا نجی زندگی کو زیر بحث نہ لایا جائے، امام الحق

لاہور: امام الحق کا کہنا ہے کہ ہمارے کھیل پر بے شک جتنی مرضی تنقید کریں لیکن خدارا ہماری پرسنل لائف کو زیر بحث نہ لایا جائے۔

قذافی اسٹیڈیم لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے اوپنر امام الحق کا کہنا تھا کہ پہلا ورلڈکپ تھا زیادہ تر کھلاڑی پہلی بار کھیل رہے تھے، ہار جیت کھیل کا حصہ ہوتا ہے، ہم ورلڈکپ سے کافی پہلے انگلینڈ گئے تاکہ سپورٹ مل سکے لیکن ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ میں عمدہ پرفارم نہ کر سکے۔

امام الحق نے کہا کہ میں اپنی پرفارمنس سے مطمئن ہوں، کوشش ہے کہ ذہنی طور پر خود کو مضبوط کروں، عوام معصوم ہیں، میڈیا نے ہی سفارشی کہا تاہم  میرا اللہ پر اور محنت پر یقین ہے، ہمارے کھیل پر بے شک جتنی مرضی تنقید کریں لیکن خدارا ہماری پرسنل لائف کو زیر بحث نہ لایا جائے۔

قومی ٹیم کے اوپنر نے کہا کہ چیف سلیکٹر کے جانے نہ جانے سے ہماری پرفارمنس کا کوئی تعلق نہیں، چیف سلیکٹر کو پی سی بی نے بنایا، ہمارا کام کھیلنا ہے، چیف سلیکٹر نے ہمیشہ بیک اپ کیا ہے، پہلے پانچ میچوں میں پرفارمنس نہ دینے کی وجہ چیف سلیکٹر نہیں ہوسکتے، سری لنکا کا میچ بارش کی نذر ہوا اس کا بھی نقصان ہوا۔

بابراعظم نے کہا کہ پہلا ورلڈکپ تھا کافی کچھ سیکھنے کو ملا، پی سی بی کا فیصلہ ہے کہ وہ کپتان کسے بناتا ہے، میرا کام محنت کرنا ہے جو میں کرتا ہوں، پہلے میچ میں اپنے پلان پر عمل نہیں کرسکے جب کہ  کپتان اور کوچ کا فیصلہ ہے کہ ٹیم کمبینیشن کیا ہونا ہے۔

بابراعظم نے کہا کہ بھارت سے میچ ہاریں تو ہمیشہ ہر چیز نیگیٹو ہی جاتی ہے، بھارت سے ہارنے کے بعد ہی ٹیم کی گروپ بندی کی باتیں ہوئیں اور جب جیتنا شروع ہوئے تو یہ گروپ بندی کی باتیں بھی ختم ہوگئیں۔

مکی آرتھر ڈوبتے کیریئر کو بچانے کیلیے ہاتھ پاؤں مارنے لگے

کراچی:  ورلڈکپ کے پہلے راؤنڈ سے اخراج پر پاکستانی کرکٹ میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا امکان ہے جب کہ کوچ مکی آرتھر کا بھی برقرار رہنا دشوار ہوگا،انھوں نے ڈوبتے کیریئر کو بچانے کیلیے ہاتھ پاؤں مارنے شروع کر دیے ہیں۔

ورلڈکپ میں قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کی بازگشت جاری ہے، کوچ مکی آرتھر کی کرسی بھی خطرے میں ہے مگر انھوں نے عہدے پر برقرار رہنے کیلیے کوششیں شروع کر دی ہیں، کوچ نے گذشتہ روز  لندن میں چیئرمین پی سی بی احسان مانی و ایم ڈی وسیم خان سے ملاقات کی اور گرین شرٹس کیلیے اپنے ’’کارنامے‘‘ گنوائے۔

انھوں نے ورلڈکپ2019کے پہلے راؤنڈ سے باہر ہونے کا ملبہ کارکردگی نہیں بلکہ قسمت پر ڈال دیا، وہ  پریس کانفرنس میں بھی نیٹ رن ریٹ کے قانون کو تنقید کا نشانہ بنا چکے جبکہ ان کے خیال میں نیوزی لینڈ کی ٹیم خراب کھیل پیش کرنے کے باوجود فائنل فور میں شامل ہو گئی۔

ذرائع کے مطابق بورڈ حکام نے انھیں کسی قسم کی یقین دہانی کرانے سے گریز کرتے ہوئے فیصلہ کرکٹ کمیٹی پر چھوڑنے کا کہا جس کے سربراہ وسیم ہی ہیں، آرتھر کو بتایا گیاکہ نئے کوچ کیلیے اشتہار دیا جائے گا اور  وہ بھی درخواست دے سکتے ہیں،کوچ کرکٹ کمیٹی میٹنگ میں اپنے دور کے حوالے سے پریذنٹیشن دیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر مکی آرتھر کو برقرار نہ رکھا گیا تو نیا کوچ بھی غیرملکی ہی ہوگا، ایم ڈی وسیم خان کسی پاکستانی کوچ کا تقرر نہیں چاہتے، ان کے مطابق فارن کوچ قومی کرکٹرز کو بہتر انداز میں سنبھال سکتا ہے اور اس کی بات سنی بھی جاتی ہے، وسیم خان سابق کپتان وسیم اکرم اور رمیز راجہ کی رائے کو بہت اہمیت دیتے ہیں اور وہ دونوں بھی غیرملکی کوچ کے ہی حق میں ہیں۔

Google Analytics Alternative