کھیل

ٹیسٹ چیمپئن شپ کا آئندہ برس تاریخی ایشز سے آغاز

لندن:  آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ کا آغاز آئندہ برس تاریخی ایشز سیریز سے ہوگا۔

انگلینڈ اور آسٹریلیا آئندہ برس ایشز کو آئی سی سی کی ٹیسٹ چیمپئن شپ کی پہلی سیریز بنانے پر متفق ہوگئے،9 ٹیموں پر مشتمل یہ لیگ 2019 سے شروع ہوگی، اس کی حتمی منظوری گذشتہ دنوں کولکتہ میں ہونے والی آئی سی سی میٹنگز میں دے دی گئی ہے۔

اس طرح اب انگلینڈ اور آسٹریلیا کے درمیان 19 ویں صدی میں شروع ہونے والی دشمنی ایک نئے دور میں داخل ہوگی، جس میں صرف ایشز سیریز ہی نہیں بلکہ پوائنٹس بھی داؤ پر لگے ہوں گے، دونوں ٹیموں میں ایجبسٹن، ہیڈنگلے، لارڈز،اولڈ ٹریفورڈ اور اوول میں مقابلے ہوئے ہیں، پہلے ہی یہ انگلینڈ کا بمپر ہوم سیریز قرار پا چکا ہے کیونکہ میگا سیریز سے قبل یہاں ورلڈ کپ بھی منعقد ہوگا۔

نئی ٹیسٹ چیمپئن شپ کے تحت تمام 9 ٹیموں کو پہلے سائیکل کے دوران 3 ہوم اور اتنی ہی اوے سیریز کھیلنا ہوں گی،اس میں تمام ٹیموں کا ایک دوسرے کے ساتھ کھیلنا لازمی نہیں ہے۔ پوائنٹس کی بنیاد پر ٹیموں کی درجہ بندی اور آخر میں 2 ابتدائی سائیڈزکے درمیان جون 2021 میں لارڈز میں پہلا فائنل کھیلا جائے گا۔

آئی سی سی نے فی الحال پوائنٹس سسٹم کی مکمل تفصیلات جاری نہیں کی ہیں، جنرل منیجر جیف ایلرڈائس اور ان کا ڈپارٹمنٹ سسٹم کو حتمی شکل دینے میں مصروف ہے۔ اس تجویز یہ ہے کہ ہر سیریز کے 100 پوائنٹس ہونے چاہئیں، ان میں سے 60 فاتح سائیڈ کو ملیں جبکہ باقی 40 ہر میچ کے نتیجے کی بنیاد پر تقسیم کیے جائیں۔

اسی طرح فائنل کے بارے میں بھی یہ تجویز موجود ہے کہ اس کو نتیجہ خیز بنانے کیلیے 6 روزہ ہونا چاہیے تاہم ابھی اس بارے میں حتمی فیصلہ ہونا باقی ہے۔

یاد رہے کہ زمبابوے اور ٹیسٹ اسٹیٹس پانے والی2دیگر ٹیمیں آئرلینڈ اور افغانستان اس ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ نہیں ہیں۔

سالانہ ٹی20 رینکنگ میں پاکستان سرفہرست

گزشتہ سال ٹی20 کرکٹ میں شاندار کارکردگی کی بدولت پاکستان انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی سالانہ رینکنگ میں پہلی پوزیشن برقرار رکھنے میں کامیاب رہا ہے جبکہ آسٹریلین ٹیم دوسرے نمبر پر موجود ہے۔

سالانہ درجہ بندی میں ابتدائی دو پوزیشنز میں کوئی تبدیلی نہیں آئی جہاں پاکستانی ٹیم 130پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر پر موجود ہے جبکہ آسٹریلین 126پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر موجود ہے۔

درحقیقت ابتدائی سات پوزیشنز میں کسی بھی قسم کی تبدیلی نہیں آئی لیکن آٹھویں نمبر پر افغانستان کی آمد کے ساتھ بڑی پیشرفت ہوئی ہے۔

123 پوائنٹس کے ساتھ بھارت نے تیسری پوزیشن حاصل کی جبکہ نیوزی لینڈ کی ٹیم 116 پوائنٹس کی بدولت چوتھا نمبر پانے میں کامیاب رہی، انگلینڈ کو ایک اضافی پوائٹس ملا جس کی بدولت ان کا پانچواں نمبر ہے۔

جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز دونوں کے یکساں 114 پوائنٹس ہیں تاہم اعشاریہ پوائنٹس کے فرق سے جنوبی افریقہ کی ٹیم چھٹی اور ویسٹ انڈیز ساتویں نمبر پر موجود ہے۔ رینکنگ میں افغانستان آٹھویں نمبر پر موجود ہے جبکہ سالانہ رینکنگ میں 4 پوائنٹس گنوا کر وہ آٹھویں سے نویں نمبر پر پہنچ گئی ہے۔

دیگر ٹیموں میں بنگلہ دیش دسویں، اسکاٹ لینڈ 11ویں، زمبابوے 12ویں، نیدرلینڈ 13ویں، متحدہ عرب امارات 14ویں، ہانگ کانگ 15ویں، عماد 16ویں اور آئرلینڈ 17ویں نمبر پر موجود ہے۔

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے دورہ پاکستان پر غور شروع کردیا

ویلنگٹن: نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے ٹیم پاکستان بھیجنے یا نہ بھیجنے پر غور شروع کردیا ہے۔

کیویز کرکٹ بورڈ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی کی جانب سے دورہ پاکستان کی دعوت کی درخواست آئی ہے جس پر غور شروع کردیا گیا ہے۔

ترجمان کیویز بورڈ کے مطابق دورہ پاکستان کے لئے حکومت، کھلاڑیوں اور سیکیورٹی فراہم کرنے والے اداروں سے بات چیت کی جائے گی۔

ترجمان نے کہا کہ پی سی بی کی درخواست پر مذکورہ طریقہ کار مکمل ہونے کے بعد جواب دیا جائے گا۔

دوسری جانب نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کی گورننگ باڈی کا کہنا ہے کہ کیویز نے سیکیورٹی خدشات کے باعث 2003 کے بعد سے پاکستان کا دورہ نہیں کیا تاہم اب رواں سال نومبر میں ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلنے کی درخواست کی گئی ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان ٹیسٹ اور ون ڈے سیریز رواں سال نومبر میں شیڈول ہے جس کی میزبانی پاکستان کو متحدہ عرب امارات میں کرنا ہے تاہم اب تک سیریز کی تاریخوں کا اعلان نہیں کیا گیا۔

نیشنل پارک میں نہیں، اسلام آباد میں اسٹیڈیم بنانا چاہتے ہیں،چیئرمین پی سی بی

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ ہمیں نیشنل پارک میں نہیں بلکہ اسلام آباد میں کرکٹ اسٹیڈیم بنانے میں دلچسپی ہے۔ شکر پڑیاں اسٹیڈیم نیشنل پارک کا حصہ ثابت ہوا تو واپس کر دیں گے۔

سپریم کورٹ کے 3 رکنی بنچ نے سابق بیورو کریٹ روئیداد خان نے شکر پڑیاں میں کرکٹ اسٹیڈیم کی تعمیر کےخلاف درخواست پر سماعت کی، درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے کہ شکرپڑیاں میں کرکٹ اسٹیڈیم اور فائیو اسٹار ہوٹل بننے سے آلودگی میں اضافہ ہوگا، عدالت نے 2 مئی کی سماعت میں اسٹیڈیم کی تعمیر اور درخت کاٹنے پر پابندی عائد کر دی تھی۔ چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں نے آج دوبارہ سماعت کے دوران نجم سیٹھی نے عدالت کو بتایا کہ اسٹیڈیم کی تعمیر کا منصوبہ 2008 میں شروع ہوا، ہم نیشنل پارک میں نہیں بلکہ اسلام آباد میں کرکٹ اسٹیڈیم کی تعمیر کرنا چاہتے ہیں۔ سی ڈی اے کی ذمے داری تھی کہ وہ نیشنل پارک میں جگہ ہی نہ دیتے، اگر اسلام آباد اسٹیڈیم نیشنل پارک کا حصہ ثابت ہوا تو جگہ واپس کر دیں گے۔

عدالت نے کہا کہ سی ڈی اے اسٹیڈیم سے اس حوالے سے وضاحت طلب کر لی ہے، چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ نیشنل پارک میں متاثرہ سائٹ کو اصل شکل میں بحال کرائیں گے، ہم کھیلوں کو سپورٹ کرتے ہیں اور اسلام آباد کرکٹ اسٹیڈیم کے لیے جگہ لینے میں پی سی بی کی مدد کریں گے۔ عدالت نے تعمیر روکنے کا حکم برقرار رکھتے ہوئے سماعت 2 ہفتوں تک کے لیے ملتوی کر دی۔

وہاب ریاض ڈربی شائر کی نمائندگی کریں گے

لاہور: قومی فاسٹ بولر وہاب ریاض نے ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ کیلیے ڈربی شائر کو جوائن کر لیا ہے وہ ایونٹ کے پہلے 10 میچز کیلیے ڈربی شائر کی نمائندگی کریں گے۔

32 سالہ پیسر 6 جولائی کو ڈربی شائر کے ہوم گراﺅنڈ پر لنکا شائر کے خلاف میچ سے آغاز کریں گے جبکہ 3 اگست کو برمنگھم بیئرز کے خلاف ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ کا آخری میچ کھیلیں گے۔ ڈربی کے کرکٹ ایڈوائزر کم برنٹ کا کہنا ہے کہ وہاب ایک تیز اور باصلاحیت فاسٹ بولر ہیں اور وہ ایونٹ میں ہماری ٹیم ان کے تجربے سے بھرپور استفادہ کرے گی۔

واضح رہے کہ وہاب ریاض اس سے قبل ٹی ٹوئنٹی بلاسٹ میں اسیکس، کینٹ اور سرے کی نمائندگی کر چکے ہیں۔ وہ مجموعی طور پر 167 ٹی ٹوئنٹی میچز میں 21.22 کی اوسط سے 197 وکٹیں اپنے نام کر چکے ہیں جبکہ پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے 27 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنلز میں 28 وکٹیں بھی حاصل کر رکھی ہیں۔

مشکوک ایکشن: ویسٹ انڈین رونسفورڈ بیٹن کی باؤلنگ پر پابندی

دبئی: انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے ویسٹ انڈین فاسٹ باؤلر رونسفورڈ بیٹن کے باؤلنگ ایکشن کو غیرقانونی قرار دیتے ہوئے انٹرنیشنل کرکٹ میں باؤلنگ پر پابندی عائد کر دی۔

گزشتہ سال 24 دسمبر کو نیوزی لینڈ کے خلاف ون ڈے انٹرنیشنل میچ کے دوران امپائرز نے رونسفورڈ کے ایکشن کو رپورٹ کیا تھا۔

آئی سی سی کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق غیرقانونی باؤلنگ ایکشن کی وجہ سے بیٹن کو تمام انٹرنیشنل کرکٹ سمیت ڈومیسٹک ایونٹس میں باؤلنگ کے لیے معطل کر دیا گیا ہے تاہم کرکٹ ویسٹ انڈیز کی رضامندی سے وہ ویسٹ انڈین ڈومیسٹک کرکٹ کھیل سکتے ہیں۔

بیٹن اب کرکٹ ویسٹ انڈیز کی جانب سے اینٹی گووا میں رواں فاسٹ باؤلنگ کیمپ کو جوائن کر کے اپنے باؤلنگ ایکشن کی درستگی پر کام کریں گے۔

قومی ٹیم کے آف اسپنر محمد حفیظ کا باؤلنگ ایکشن قانونی قرار

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے پاکستان کرکٹ ٹیم نے آف اسپنر محمد حفیظ کے باؤلنگ ایکشن کو قانونی قرار دیتے ہوئے انہیں باؤلنگ کی اجازت دے دی۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ محمد حفیظ کے باؤلنگ ایکشن پر دوبارہ کام کرنے اور اس کے جائزے کے بعد ان کا باؤلنگ ایکشن قانونی پایا گیا، جس کے بعد آف اسپنر بین الاقوامی کرکٹ میں باؤلنگ کا دوبارہ آغاز کر سکتے ہیں۔

محمد حفیظ کا 17 اپریل کو لف بورو یونیورسٹی میں باؤلنگ ایکشن کا ٹیسٹ ہوا تھا جس میں ان کی گیندوں میں بازو کا خم 15 ڈگری سے کم رہا، جو باؤلرز کے لیے آئی سی سی کی قانونی حد ہے۔

تاہم مستقبل میں بھی میچ آفیشلز محمد حفیظ کے باؤلنگ ایکشن میں بازو کا خم 15 ڈگری سے زائد معلوم ہونے پر اسے مشکوک قرار دے کر رپورٹ کر سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ محمد حفیظ کیریئر میں کئی مرتبہ باؤلنگ ایکشن پر پابندی کا شکار ہوئے اور گزشتہ سال سری لنکا کے خلاف 5 ون ڈے میچوں کی سیریز کے دوران محمد حفیظ کا ایکشن ایک بار پھر مشکوک رپورٹ ہوا تھا، جس کے بعد 2 نومبر کو ان کا ٹیسٹ لیا گیا اور اسی ماہ ان کے باؤلنگ ایکشن کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے باؤلنگ پر پابندی عائد کردی گئی تھی۔

محمد حفیظ کا باؤلنگ ایکشن پہلی مرتبہ 2014 میں رپورٹ ہوا تھا اور اسی سال دسمبر میں انہیں باؤلنگ سے معطل کردیا گیا تھا تاہم آزادانہ جائزے کے بعد اپریل 2015 میں ان کے ایکشن کو درست قرار دے کر باؤلنگ کی اجازت دے دی گئی تھی۔

تاہم ان کی یہ خوشی زیادہ عرصہ برقرار نہ رہی اور جون 2015 میں سری لنکا کے خلاف گال ٹیسٹ میں ان کا ایکشن دوبارہ رپورٹ ہوا، جس کے بعد جولائی 2015 میں ایکشن دوسری بار غیر قانونی قرار دیے جانے کے بعد انٹرنیشنل کرکٹ میں باؤلنگ پر ایک سال کی پابندی لگادی گئی تھی۔

نومبر 2016 میں حفیظ کا برسبین کے نیشنل کرکٹ سینٹر میں ٹیسٹ لیا گیا جہاں ان کا ایکشن درست قرار پایا تھا اور انہیں باؤلنگ کی اجازت دے دی گئی تھی تاہم ایک سال کے اندر ہی ان کا ایکشن دوبارہ رپورٹ ہو گیا۔

لاہور میں پاکستان کی پہلی کبڈی لیگ کا رنگا رنگ آغاز

لاہور: پاکستان سپر لیگ کرکٹ کے بعد پہلی پاکستان کبڈی سپر لیگ کی رنگا رنگ افتتاحی تقریب آج لاہور میں ہوئی۔

الحمرا اوپن ایئرتھیٹر میں ہوئی رنگا رنگ افتتاحی تقریب جس میں 10فرنچائزز گجرات واریئرز، گوادر بہادرز، لاہور تھنڈرز، ساہیوال بلز، کراچی زور آورز، اسلام آباد آل سٹارز، پشاور حیدرز، فیصل آباد شیر دلز، کشمیرجانباز اور ملتان سکندرز کے مالکان، آفیشلز اور کھلاڑی شریک ہوئے۔

پہلی کبڈی سپر لیگ میں شامل 10 ٹیموں کو 2 پولز میں تقسیم کیا گیا ہے۔

پاکستان سپر لیگ کی افتتاحی تقریب شائقین کی بھی بڑی تعداد موجود تھی۔

تقریب میں ایونٹ کی ٹرافی کی رونمائی بھی ہوئی جب کہ فنکاروں کی شاندار پرفامنس نے بھی خوب سماں باندھا۔

کبڈی لیگ میں شریک ٹیموں کے کھلاڑی لاہور کے اسپورٹس جمنازیم میں داؤ پیچ کے جوہر دکھائیں گے۔

میچز کا آغاز 2 مئی سے اسپورٹس جیمنیزیم لاہور میں ہو گا جب کہ فائنل میچ 10 مئی کو کھیلا جائے گا۔

Google Analytics Alternative