کھیل

شکایات کے انبار دیکھ کر بھارتی کرکٹ بورڈ کے محتسب پریشان

ممبئی: شکایات کے انبار نے بھارتی کرکٹ بورڈ کے محتسب اور ایتھک آفیسر ڈی کے جین کو بھی پریشان کردیا۔

بی سی سی آئی کا کہنا ہے کہ بہت زیادہ ای میلز کی وجہ سے اصل شکایتوں کا نمبر آنے میں تاخیر ہورہی ہے، اس لیے گائیڈ لائن متعارف کرانا پڑیں تاکہ وقت کا ضیاع نہ ہو اور صرف اس شکایت ہی محتسب تک پہنچے۔

یاد رہے کہ ڈی کے جین کی جانب سے پہلے مفادات کے ٹکراؤ پر سابق اسٹار کرکٹرز سچن ٹنڈولکر، ساروگنگولی اور لکشمن کو منگل کے روز سماعت کیلیے طلب کیا گیا ہے۔

 

دوسرا ون ڈے: انگلینڈ کی پوزیشن مستحکم، بارش کے باعث کھیل روک دیا گیا

پاکستان کے خلاف 5 میچوں کی سیریز کے دوسرے ون ڈے انگلینڈ کی محتاط انداز میں بیٹنگ جاری ہے جہاں دونوں اوپنرز نے قومی ٹیم کے خلاف پہلی وکٹ کی شراکت میں سنچری پارٹنرشپ قائم کردی، تاہم بارش کے باعث میچ روک دیا گیا۔

ساؤتھمپٹن میں کھیلے جانے والے سیریز کے دوسرے میچ میں پاکستان کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

میزبان ٹیم کے اوپننگ بلے بازوں جیسن رائے اور جونی بیئرسٹو نے سرفراز احمد کی تمام حکمت عملی پر پانی پھیرتے ہوئے پہلی وکٹ پر سنچری پارٹنرشپ قائم کردی۔

قومی ٹیم کو پہلی کامیابی 115 کے مجموعے پر ملی جب جونی بیئرسٹو 51 رنز بنانے کے بعد شاہین آفریدی کی گیند پر فخر زمان کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

میزبان ٹیم نے ایک وکٹ کے نقصان پر 29ویں اوور میں 170 رنز بنائے تھے کہ بارش کے باعث میچ روکنا پڑا، اس موقع پر جیسن رائے 83 اور جو روٹ 28 رنز پر ناٹ آؤٹ تھے۔

ٹاس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے پاکستان ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ہمیں مثبت کرکٹ کھیلنی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ حریف ٹیم کو 270 سے 280 کے درمیان محدود کرکے ہدف کو حاصل کرنے کی پوری کوشش کریں گے۔

اس موقع پر انگلینڈ کے کپتان ایون مورگن کا کہنا تھا کہ وکٹ اچھی ہے، پہلے بیٹنگ کرنے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

دوسرے ون ڈے کے لیے فاسٹ باؤلر محمد عامر کی جگہ پر لیگ اسپنر یاسر شاہ کو قومی ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان کھیلا جانے والا سیریز کا پہلا میچ بارش کی نظر ہوگیا تھا، جبکہ موسم بہتر ہونے کی وجہ سے دوسرا ون ڈے مکمل ہونے کی امید ہے۔

قبل ازیں سیریز کے واحد ٹی ٹوئنٹی میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو 8 وکٹوں سے زیر کیا تھا۔

سری لنکا کے سابقہ کوچز پر کرپشن کے الزامات، دوسرا کوچ بھی برطرف

اماراتی کرکٹ بورڈ (ای سی بی) نے اپنی اینٹی کرپشن کے ضوابط کی خلاف ورزی پر سری لنکا کے دوسرے کوچ کو بھی برطرف کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے ‘اے پی’ کی رپورٹ کے مطابق اَوشکا گوناوردنے کو دسمبر 2017 میں متحدہ عرب امارات میں ہونے والے ٹی 10 لیگ کے حوالے سے 2 الزامات کا سامنا ہے۔

لیگ میں سری لنکا کے کوچ اوشکا گوناوردنے کے خلاف الزامات میں بدعنوانی کو اینٹی کرپشن یونٹ (اے سی یو) کے سامنے نہ لانے کا الزام بھی شامل ہے۔

لیگ کے باؤلنگ کوچ نوان زوئےسا جنہیں گزشتہ سال اکتوبر میں 3 الزامات کے بعد برطرف کیا گیا تھا، ان پر بھی آج ایک اضافی الزام عائد کیا گیا جس میں اے سی یو کی جانب سے کی جانے والی تحقیقات میں بغیر کسی وجہ کے تعاون میں ناکامی یا مسترد کرنا شامل ہے۔

دونوں سری لنکن کھلاڑیوں کو ان الزامات کا جواب دینے کے لیے 14 روز کا وقت دیا گیا ہے۔

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی جانب سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق گورننگ باڈی نے ای سی بی کی جانب سے نوان زوئےسا پر ٹی 10 لیگ کے شرکا کے لیے ای سی بی کے اینٹی کرپشن ضوابط کی خلاف ورزی کے 4 الزامات عائد کیے، جبکہ اوشکا گوناوردنے پر 2 الزامات عائد کیے گئے۔

بیان میں بتایا گیا کہ ای سی بی نے ٹورنامنٹ میں اپنے ضوابط کی پاسداری کے لیے آئی سی سی کی خدمات حاصل کی تھی، جس کی وجہ سے آئی سی سی نے ای سی بی کی جانب سے یہ الزامات عائد کیے۔

سجل علی کی بہن صبورعلی کی صفائی کرنے والے کا مذاق اڑانے پروضاحت

کراچی: نامور پاکستانی اداکارہ سجل علی کی بہن صبور علی کو کھڑکی صاف کرنے والے شخص کا مذاق اڑانے پرسوشل میڈیا پرشدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے تاہم صبورعلی نے اپنے اقدام کی وضاحت کردی ہے۔

اداکارہ صبورعلی نے گزشتہ روز اپنے انسٹاگرام پرایک اسٹوری شیئر کی جس میں وہ کسی ڈرامے کے سیٹ پر موجود ہیں اور وہاں موجود کھڑکی صاف کرنے والے شخص کا مذاق اڑاتی نظرآرہی ہیں۔ صبورعلی صفائی کرنے والے کی ویڈیو بناتے ہوئے کہہ رہی ہیں ’کیا خواب دیکھ کر اس کی ماں نے اسے گھرسے بھیجا ہوگا‘ یہ کہتے ہوئے صبورعلی مسلسل ہنسے جارہی ہیں۔ سیٹ پر ان کے ساتھ اداکارہ صحیفہ جبار اور اداکار عفان وحید بھی موجود ہیں۔

سیٹ پر موجود اداکارہ صحیفہ جبار نے صبورعلی کا ساتھ دیتے ہوئے کہا یہ شخص صبح اٹھ کر اپنی بیڈ شیٹ بھی ٹھیک نہیں کرتا ہوگا اور نا ہی اپنا کمبل طے کرتا ہوگا۔ صبور علی کی اس ویڈیو پر سوشل میڈیا صارفین شدید غصے میں آگئےاورانہیں شدید تنقید کا نشانہ بناڈالا۔

جب تنقید حد سے بڑھ گئی تو صبورعلی نے انسٹاگرام پر وضاحت جاری کرتے ہوئے لکھا میری انسٹاگرام اسٹوری غلط فہمی کی وجہ سے وائرل ہورہی ہے، میں وضاحت کرنا چاہتی ہوں کہ ویڈیو میں موجود کھڑکی صاف کرنے والا شخص دراصل ہمارے اگلے ڈرامے کا اسسٹنٹ ڈائریکٹرہے ہم کئی ماہ سے ایک دوسرے کے ساتھ کام کررہے ہیں اور ساتھ کام کرنے کی وجہ سے ہم ایک دوسرے سے مذاق بھی کرتے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے سوشل میڈیا پر خود کو تنقید کا نشانہ بنانے والوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ کسی کے متعلق کچھ بھی لکھنے سے قبل ایک بارسوچ لیا کریں۔

واضح رہے کہ چند روز قبل بھی صبورعلی کے بارے میں افواہیں گردش کررہی تھیں کہ انہوں نے خودکشی کرنے کی کوشش کی ہے تاہم انہیں بچالیا گیا ہے اور وہ اسپتال میں داخل ہیں۔

شعیب اختر کے حمایتی بیان پر شاہد آفریدی خوشی سے کھل اٹھے

سابق فاسٹ بولر شعیب اختر کے حمایتی بیان نے شاہد آفریدی کا دل خوش کر دیا۔

شاہد آفریدی نے نے اصل حقائق دنیا کے سامنے لانے کی کوششوں کو سراہنے اور کتاب کی حمایت کرنے پرماضی کے عظیم بولر شعیب اختر کا شکریہ ادا کیا ہے۔

سوشل میڈیا پر شعیب اختر کی ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے شاہدآفریدی کا کہنا ہے کہ ”شکریہ شعیبی! تمہارے نقش قدم پر چلا اور ایک کتاب لکھ دی، کبھی کسی سابق کھلاڑی کی دل آزاری کرنے کا نہیں سوچا، صرف حقائق بتانے کی کوشش کی، تم سے جلد ملاقات ہو گی۔

یاد رہے کہ شاہد آفریدی کی حال ہی میں شائع ہونے والی کتاب گیم چینجر کو جاوید میانداد،عمران فرحت سمیت متعدد سابق ٹیسٹ کرکٹرز نے سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے تاہم شعیب اختر نے شاہد آفریدی کی کتاب میں شائع ہونے والی انکشافات کی بھر پور حمایت کی۔

شعیب اختر کا اپنے بیان میں کہنا تھا کہ شاہد آفریدی اپنی کتاب میں بہت کچھ لکھ سکتا تھا، اسے اکثر سینئر کھلاڑیوں کی جانب سخت اور ناروا روئیے کا سامنا کرنا پڑا اور کچھ واقعات کا تو میں چشم دید گواہ بھی ہوں۔ سابق فاسٹ بولر نے مزید لکھا کہ حقیقت میں شاہد آفریدی کو یہ سب 20 سال پہلے ہی کہنا چاہیے تھا، شاہد آفریدی نے درست وقت پر یہ باتیں کی ہوتیں تو انہیں کتاب لکھنے کی ضرورت ہی نہ پڑتی ۔

آئی سی سی نے کرکٹ کرپشن الزامات پر سری لنکا کے 2 کرکٹرز کو معطل کردیا

دبئی: آئی سی سی نے کرکٹ کرپشن الزامات پر سری لنکا کے 2 کرکٹرز کو معطل کرکے 14 روز میں جواب طلب کرلیاہے۔

انٹرنیشنل کرکٹ کاؤنسل نے کرکٹ کرپشن میں الزامات پر سری لنکا کے 2 کھلاڑی نوان زوئیسا اور اویشکا گوناوردھنے کو معطل کرکے 14 روز میں جواب طلب کرلیاہے، نوان زوئیسا اور اویشکا گوناوردھنے پر دسمبر میں یواے ای میں کھیلی گئی ٹی ٹین کرکٹ لیگ میں ایمریٹس کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن قوانین کی خلاف ورزی کا الزام ہے، بائیں ہاتھ کے فاسٹ بولر 40 سالہ نوان زوئیسا کوڈ کی چارشقوں اور گونا ورد نے کو دو شقوں کی خلاف ورزی کا مرتکب ٹہرایا گیا ہے۔

پیسر پر تحقیقات میں عدم تعاون، کرپشن کرنے اور کھلاڑیوں کو اکسانے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں، 30 ٹیسٹ اور 95 ون ڈے میچوں میں سری لنکا کی نمائندگی کرنے والے زوئیسا کو اس سے پہلے نومبر میں بھی آئی سی سی کی جانب سے تین خلاف ورزیوں پر معطلی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

اب انہیں ایمریٹس کرکٹ بورڈ کی جانب سے معطل کیا گیا ہے، بائیں ہاتھ کے اوپنر اویشکا گوناورد 6 ٹیسٹ اور 61 ون ڈے میچ سری لنکا کی جانب سےکھیل چکے ہیں، انہیں ایونٹ کے شرکا کو کرپشن کے لیے اکسانے اور اینٹی کرپشن یونٹ سے عدم تعاون کے الزامات کا سامنا ہے۔

کوچ مکی آرتھر کو کارکردگی میں عدم تسلسل کا خوف ستانے لگا

لاہور:  ورلڈکپ سے قبل گرین شرٹس کی کارکردگی میں عدم تسلسل کا خوف مکی آرتھرکو ستانے لگا۔

برطانوی چینل ’’اسکائی اسپورٹس ‘‘ کو ایک انٹرویو میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر نے کہاکہ2سال قبل انگلینڈ میں ہی چیمپئنز ٹرافی فتح کی یادیں آج بھی تازہ ہیں،گرین شرٹس نے شاندار انداز میں مشن مکمل کیا،وہ پاکستان کرکٹ کے حیران کن 3ہفتے تھے،توقعات کے برعکس ہم ایک مضبوط ٹیم بن کر ابھرے،اس کے بعد بھی مسلسل مزید استحکام کیلیے کام کیا ہے۔

ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ میری سب سے بڑی تشویش کارکردگی میں تسلسل کے حوالے سے ہے۔ نوجوان ٹیموں میں اس طرح کے مسائل ہوتے ہیں،ہم چیمپئنز ٹرافی میں درست ٹریک کی جانب گامزن ہوئے،ٹی ٹوئنٹی میں کارکردگی غیر معمولی رہی،مضبوط حریفوں کیخلاف مشکل کرکٹ میں بھی تاثر چھوڑا،آسٹریلیا کیخلاف سیریز میں 8اہم کھلاڑیوں کو آرام دیا اور ’’بی‘‘ ٹیم کے ساتھ کھیلے جس کی سخت ضرورت بھی تھی۔

انہوں نے کہا کہ مسلسل کرکٹ کی وجہ سے جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کی ٹیموں کے بھی ورلڈکپ سے قبل فٹنس مسائل سامنے آئے ہیں،اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ کینگروز کیخلاف ہوم سیریز میں کھلاڑیوں کو آرام دینے کا ہمارا فیصلہ غلط نہیں تھا،ہمارا مقصد تھا کہ ورلڈکپ میں تازہ دم،سپر فٹ، مضبوط اور مستعد کھلاڑیوں پر مشتمل اسکواڈ کے ساتھ میدان میں اتریں،ویسٹ انڈیز کیخلاف میچ سے اپنی مہم کا آغاز کریں تو کوئی مسائل نہ ہوں۔

مکی آرتھر نے کہا کہ گرین شرٹس کی بیٹنگ اور بولنگ میں مہارت بہترین لیکن فیلڈنگ اور فٹنس پر کام کرنے اوربہتری لانے کی ضرورت تھی، فیلڈرز نے کئی بار جہاں ایک رن بنتا تھا2دیے، یا2کے بجائے3رنز بن گئے،مجموعی طور پر ہر اننگز میں 20سے 30رنز زیادہ بنے جس کا نتائج پر بھی اثر پڑا، ہم نے فٹنس میں بہتری کیلیے کام کیا، اس وقت ہمارے ڈریسنگ روم میں چند کھلاڑی جونٹی رہوڈز تو نہیں لیکن سپر فٹ اور اچھے فیلڈرز ضرور ہیں، 2 سال کی محنت کے ثمرات نظر آنے لگے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ امید ہے کہ محمد عامر اپنی اصل فارم میں واپس آجائیں گے،چیمپئنز ٹرافی کے بعد پیسر نے رنز تو زیادہ نہیں دیے، اکانومی ریٹ 4.7بُرا نہیں،وہ حیران کن مہارت رکھنے والے بولر ہیں،ہم چاہتے ہیں کہ محمد عامر تسلسل کے ساتھ وکٹیں حاصل کریں،کسی بھی حریف کو محدود رکھنے کیلیے وکٹوں کا حصول ضروری ہے،دوسری جانب ہمیں حیران کن ٹیلنٹ میسر آیا ہے، 19سال عمر کے شاہین شاہ آفریدی اور محمد حسنین کو عالمی معیار کی بولنگ کرتے دیکھنا بڑا ہی خوشگوار تجربہ ہوتا ہے،دونوں طویل عرصے تک پاکستان کرکٹ کی خدمت کریں گے۔

مکی آرتھر نے کہا کہ پی ایس ایل نوجوان کرکٹرز کو سخت مقابلوں اور مشکل صورتحال میں ڈٹ کر مقابلہ کرنے کا ہنر سکھاتی اور ڈومیسٹک کرکٹ سے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے عالمی معیار کی کرکٹ کھیلنے کا موقع ملتا ہے،قومی ٹیموں کیلیے اسٹارز دباؤ سے بھرپور میچز میں ہی تیار کیے جا سکتے ہیں۔

ورلڈکپ 2019: افغان کرکٹ ٹیم کو بھارتی اسپانسر مل گیا

افغانستان کرکٹ ٹیم کو اپنی مالی پریشانی کا حل بھی اب بھارت سے مل گیا، جہاں اس کا اسپانسر کے لیے ورلڈ کپ 2019 کے متعلق بھارتی کمپنی سے معاہدہ ہوگیا۔

طلوع نیوز کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی ایک نجی کمپنی افغانستان کرکٹ ٹیم کو انگلینڈ میں ہونے والے عالمی کپ کے دوران اسپانسر کرے گی۔

رپورٹ میں نیوز ایجنسی ڈبلیو ڈی آئی او کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ بھارتی کمپنی کے منیجنگ ڈائریکٹر (ایم ڈی) آر ایس سوڈھی نے بتایا کہ ان کی کمپنی ’امول‘ ورلڈ کپ میں افغان ٹیم کی مرکزی اسپانسر ہوگی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہماری جانب سے پہلی مرتبہ کسی کرکٹ ٹیم کو اسپانسر کیا جارہا ہے اور کمپنی کا لوگو افغان ٹیم کی جرسی پر نظر آئے گا۔

افغانستان کرکٹ بورڈ (اے سی بی) کے چیف ایگزیکٹو آفیسر (سی ای او) اسد اللہ خان کا کہنا تھا کہ کرکٹ افغانستان کا مقبول ترین کھیل ہے، ہر کوئی یہاں کرکٹ سے محبت کرتا ہے، یہ امن کی جانب ایک اشارع ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارتی کرکٹ بورڈ اور حکومت ہماری مدد کر رہی ہے، یہ اچھا موقع ہے، اس سے ملک میں امن کی فضا قائم ہوگی۔

نیوز ایجنسی کے مطابق بھارت قندھار میں ایک کرکٹ اسٹیڈیم کی تعمیر کر رہا ہے جس میں 14 ہزار شائقین کے بیٹھنے کی گنجائش ہوگی جس پر بھارت کی 10 لاکھ ڈالر کی لاگت آئے گی، اس کے علاوہ بلخ میں بھی نئی دہلی کی جانب سے اسٹیڈیم تعمیر کیا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ افغان کرکٹ ٹیم انگلینڈ میں ہونے والے کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں شامل 10 ٹیموں میں سے ایک ہے، جہاں وہ اپنی مہم کا آغاز یکم جون کو دفاعی چیمپیئن آسٹریلیا کے خلاف کرے گی۔

ورلڈ کپ کے دوران پاکستان اور افغانستان کے مابین میچ 29 جون کو کھیلا جائے گا۔

Google Analytics Alternative