کھیل

دورہ پاکستان کے لئے سری لنکا کے ون ڈے اور ٹی 20 اسکواڈز کا اعلان

کولمبو: سری لنکا نے رواں ماہ کے آخری ہفتے شروع ہونے والے دورہ پاکستان کے لیے اپنے اسکواڈ کا اعلان کردیا ہے۔

پاکستان کے خلاف سری لنکن ون ڈے ٹیم کی قیادت لاہیرو تھریمانے کریں گے، ٹیم میں سدیرا سمارا وکرما، اویشکا فرنینڈو، شہیان جے سوریا، ڈاسن شناکا، اینجیلو پریرا، منود بھانوکا، وانندو ہسورنگا، لکشمن سندیکان، نووان پرادیپ، کاسن راجیتھا اور اسورو اڈانا شامل ہوں گے۔

آئی لینڈرز کے ٹی ٹوئنٹی اسکواڈ کے کپتان ڈاسن شناکا ہوں گے، دیگر کھلاڑیوں میں سدیرا سمارا وکرما،اویشکا فرنینڈو، شہیان جے سوریا، اوشنڈا فرنینڈو،اینجیلو پریرا، منود بھانوکا، وانندو ہسورنگا،لکشمن سندیکان،نووان پرادیپ،کاسن راجیتھا ،لاہیرو کمارا،اسورو اڈانا،بھانوکا راجا پکسا شامل ہیں۔

یاد رہے کہ ون ڈے کپتان ڈیموتھ کرونا رتنے، ٹی 20 قائد لیستھ مالنگا اور دیگر کھلاڑیوں اینجیلو میتھیوز، سورنگا لکمل، اکیلا دھننجایا، دنیش چندی مل، دھننجیا ڈی سلوا، کوشل پریرا، نیروشن ڈکویلا اور تھسارا پریرا نے پاکستان آنے سے انکار کردیا تھا، کوشل مینڈس انجری کی وجہ سے باہر ہوگئے، اب اسکواڈ میں کئی غیر معروف کرکٹرز کو بھی جگہ مل گئی ہے۔

سری لنکن ٹیم کی 25 ستمبر کو کراچی آمد کے بعد پہلا ون ڈے27 ستمبر، دوسرا 29 ستمبر اور تیسرا 2 اکتوبر کو نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا، ٹی 20 سیریز کے تینوں میچز قذافی سٹیڈیم لاہور میں 5، 7 اور 9 اکتوبر کو شیڈول ہیں۔

پاک بھارت کشیدہ تعلقات: ویمن کرکٹ سیریز کا انعقاد کھٹائی میں پڑ گیا

‏پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات میں تناؤ کی وجہ سے دونوں ممالک کے درمیان ویمن کرکٹ سیریز کا انعقاد مشکلات کا شکار ہو گیا۔

پاکستان اور بھارت کے درمیان سیریز آئی سی سی چیمپئین شپ کا حصہ ہے جس کی میزبانی بھارت نے کرنی ہے، دونوں ممالک کے درمیان سیریز جولائی سے نومبر تک ہونی ہے۔

سیریز کی میزبانی کی اجازت بھارتی بورڈ نے اپنی حکومت سے طلب کی ہوئی ہے لیکن بھارتی حکومت نے اجازت دینے کے حوالے سے چپ سادھ لی ہے۔

پی سی بی کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان بھارت سے سیریز کے حوالے سے رابطہ نہیں کرے گا کیونکہ سیریز کرانا بھارت کی ذمہ داری ہے، لیکن بھارت کی جانب سے سیریز کے لیے تاحال کوئی رابطہ نہیں کیا گیا ہے۔

ماضی میں بھی بھارتی ویمن کرکٹ ٹیم نے پاکستان کے ساتھ سیریز نہیں کھیلی تھی، تب پاکستان نے نیوٹرل مقام پر بھی کھیلنے کی پیشکش کی تھی، سیریز نہ کھیلنے کی وجہ سے بھارتی ٹیم کو پوائنٹس پاکستان کو دینے پڑے تھے۔

آئی سی سی ترجمان کا کہنا ہے کہ یہ دو ممالک کے درمیان سیریز ہے، سیریز کے انتظامات کرنا ممبر ممالک کی ذمہ داری ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ جب پوائنٹس ٹیبل کا معاملہ آئی سی سی کے پاس آئے گا تو اسے حل کیا جائے گا۔

دورہ پاکستان؛ سری لنکن سینئرز نے کورا جواب دے دیا

لاہور: دورئہ پاکستان سے پریشان سری لنکن سینئر کرکٹرز نے کورا جواب دے دیا۔

پی سی بی رواں سال اکتوبر میں سری لنکا کیخلاف ٹیسٹ سیریزکی ہوم گراؤنڈز پر میزبانی کا خواہاں تھا،انتظامات کا جائزہ لینے کیلیے ایس ایل سی کا ایک سیکیورٹی وفد بھی کراچی و لاہور آیا اور اطمینان کا اظہار کیا، جس کے بعد چیئرمین احسان مانی نے سری لنکن بورڈ کے صدر سے فون پر بات کی تھی،بالآخر اتفاق رائے سے فیصلہ ہوا کہ پہلے ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی سیریز کھیلی جائے گی، ٹیسٹ سیریز دسمبر میں ہوگی جس کے شیڈول اور وینیو کا فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے۔

نئے پلان کے مطابق سری لنکا کی ٹیم 25 ستمبر کو کراچی پہنچے گی جہاں 3 ون ڈے انٹرنیشنل میچز 27، 29 ستمبر اور 2 اکتوبر کو نیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جائیں گے، ٹی ٹوئنٹی سیریز کے تینوں میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور میں 5، 7 اور 9 اکتوبر کو ہونا ہیں۔

دوسری جانب یہ اطلاعات بھی سامنے آتی رہی ہیں کہ بعض سری لنکن کھلاڑیوں کو دورے پر تحفظات ہیں، اب برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ٹیم کے متعدد سینئر کھلاڑیوں نے پاکستان میں ہونے والی ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی سیریز کھیلنے سے انکار کر دیا ہے، ون ڈے کپتان ڈیموتھ کرونارتنے، ٹی ٹوئنٹی قائد لسیتھ مالنگا اور سابق کپتان انجیلومیتھیوز کو تاحال قائل نہیں کیا جا سکا۔

سری لنکا کے وزیر کھیل ہیرن فرنانڈو نے تصدیق کی کہ کچھ کھلاڑیوں نے اپنے اہل خانہ کی طرف سے اٹھائے گئے سیکیورٹی خدشات کی بنا پر کھیلنے سے انکار کیا ہے، انھوں نے کہا کہ سری لنکن کرکٹ حکام پیر کوکھلاڑیوں سے ملاقات کریں گے تاکہ دورے پر راضی کر سکیں۔ وزیر کھیل نے کہا کہ میں پلیئرز سے پہلے ہی کہہ چکا کہ ان کے ساتھ پاکستان جانے کو تیار ہوں۔

یاد رہے کہ بعض سری لنکن کرکٹرز کی جانب سے تحفظات کا اظہار کیے جانے کے باوجود پی سی بی ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میچز کی میزبانی کیلیے تیاریاں جاری رکھے ہوئے ہے، قذافی اسٹیڈیم میں گھاس کی کٹائی مکمل ہوچکی، اسٹینڈز کا کام بھی شروع ہونے والا ہے، میڈیا باکس کی تزئین و آرائش کی جائے گی۔

ذرائع کے مطابق ٹکٹوں کی فروخت یوم عاشور کے بعد شروع ہوگی، پہلے مرحلے میں آن لائن اور پھر نجی کوریئر کمپنی کے ذریعے ٹکٹ دستیاب ہوں گے،کم سے کم قیمت 500 روپے رکھی گئی ہے، وی وی آئی پی انکلوژر کا ٹکٹ 3 ہزار روپے تک میں ملنے کا امکان ہے۔

پی سی بی کے ترجمان پہلے ہی کہہ چکے کہ پاکستان بھجوانے کیلیے کھلاڑیوں کا انتخاب اور ان کے تحفظات دور کرنا سری لنکن بورڈ کا کام ہے،ہماری طرف سے تیاریاں مکمل ہیں۔

سرینا ولیمز ناکام، بیانکا آندریسکو پہلی مرتبہ یو ایس اوپن ٹائٹل جیت گئیں

رومانین نژاد کینیڈین ٹینس اسٹار بیانکا آندریسکو نے یو ایس اوپن 2019 کے خواتین مقابلوں میں امریکی ٹینس اسٹار سینا ولیمز کو شکست دے کر پہلی مرتبہ یو ایس اوپن ٹائٹل اپنے نام کرلیا۔

امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق سرینا ولیمز اپنا 24واں گرینڈ سلیِم ٹائٹل جیتنے کے لیے میدان میں اتریں تاہم اس مرتبہ ان کا مقابلہ ایک نسبتاً کمزور حریف سے تھا۔

اس میچ سے قبل بیانکا آندریسکو کو اتنے بڑے ایونٹ کا فائنل کھیلنے کا تجربہ نہ تھا تاہم انہوں نے اس میچ میں سرینا کا ڈٹ کا مقابلہ کیا۔

کینڈین اسٹار نے پہلا سیٹ 3-6 سے باآسانی اپنے نام کیا تو دوسرے سیٹ میں سخت مقابلے کی توقع کی جانے لگی۔

امیدوں کے عین مطابق سرینا ولیمز نے دوسرے سیٹ میں حریف کھلاڑی کو جیت سے دور کرنے کی کوشش کی تاہم اعصاب شکن مقابلے کے بعد بیانکا آندریسکو 5-7 سے دوسرا سیٹ بھی اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوئیں۔

سرینا ولیمز کو زیر کرکے بیانکا آندیسکو پہلی مرتبہ نہ صرف یو ایس اوپن جبکہ اپنے کیریئر کا پہلا گرینڈ سلیِم ٹائٹل جیتے میں کامیاب ہوئیں۔

اس ناکامی کے ساتھ ہی سرینا ولیمز اپنے کیریئر کے 24ویں گرینڈ سلیِم ٹائٹل سے محروم ہوگئیں۔

اپنی جیت پر گفتگو کرتے ہوئے بیانکا آندریسکو نے کہا کہ ’سرینا ولیمز ایک حقیقی چیمپئن ہیں، وہ نہ صرف میرے لیے بلکہ کئی دوسرے لوگوں کے لیے ایک رول ماڈل ہیں‘۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ’سرینا ولیمز کی ٹینس کورٹ کے باہر بھی خدمات قابل ستائش ہیں، وہ ایک بڑے دل کی خاتون ہیں‘۔

کینیڈین ٹینس اسٹار نے بتایا کہ میچ سے قبل لاکر روم میں سرینا ولیمز خود ان کے پاس آئیں اور انہیں اچھے مشورے دیے جو انہیں طویل عرصے تک یاد رہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ’میں ان (سرینا ولیمز) کی طرح بننے کی بھرپور کوشش کرتی ہوں، کون جانتا ہے؟ میں ان سے بہتر ہوسکتی ہوں لیکن یہ ایک بہت ہی بڑا ہدف ہے‘۔

بیانکا آندریسکو 1968 کے بعد شروع ہونے والے اوپن ایرا کی وہ پہلی خاتون ہیں جنہوں نے نیویارک میں اپنے پہلے ہی ایونٹ میں ٹائٹل اپنے نام کیا۔

اس کے ساتھ ساتھ وہ 1990 میں سابقہ یوگوسلاویہ اور امریکی ٹینس اسٹار مونیکا سیلیز کے بعد پہلی خاتون ہیں جنہوں نے صرف اپنے چوتھے گرینڈ سلیِم ایونٹ کے اندر ہی ٹائٹل اپنے نام کیا۔

بیانکا آندریسکو کینڈا سے تعلق رکھنے والی پہلی خاتون ہیں جنہوں نے ومن سنگلز میں گرینڈ سلیِم اپنے نام کیا۔

خیال رہے کہ اپنے بچے کی پیدائش کے بعد دوبارہ ٹینس کورٹ کا رخ کرنے والی سرینا ولیمز اب تک 23 گرینڈ سلیِم اپنے نام کرچکی ہیں، تاہم انہیں مارگریٹ کورٹ کے 24 گرینڈ سلیِم کا ریکارڈ برابر کرنے کے لیے ایک ٹائٹل درکار ہے۔

اس حوالے سے سرینا ولیمز کا کہنا تھا کہ ‘میں ریکارڈ کا پیچھا نہیں کر رہی، میں بس گرینڈ سلیِم جیتنے کی کوشش کر رہی ہوں‘۔

انہوں نے کامیابی پر بیانکا آندریسکو کو مبارکباد دی تاہم ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہہ دیا کہ ’سچ کہوں تو میں نے آج بہترین کھیل پیش نہیں کیا، میں زیادہ بہتر انداز میں کھیل سکتی تھی‘۔

انڈر 19 ایشیا کپ: پاکستان سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر

لاہور: اے سی سی انڈر 19 ایشیا کپ میں مسلسل دوسری شکست کے بعد پاکستان سیمی فائنل کی دوڑ سے باہر ہوگیا۔

ٹائران فرنانڈو اسٹیڈیم موراٹوا،سری لنکا میں کھیلے جانے والے میچ میں 306رنز کے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے پاکستانی ٹیم مقررہ 46.4 اوورز میں245 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی،کپتان روحیل نذیر 117 رنز بنا کر نمایاں رہے، محمد حارث نے 43 رنز اسکور کیے، ان کے سوا عبدالبنگزئی 15، محمد عامر 12اور نسیم شاہ 11رنز کے ساتھ ہی ڈبل فیگر میں داخل ہوسکے، اتھاروا انکولے کار نے 3 اور ودیادر پٹیل نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

اس سے قبل بھارتی کپتان دھرو چاند جوریل نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا، ٹیم نے مقررہ 50 اوورز میں 9 وکٹ پر 305 رنز بنائے، 38 کے مجموعی اسکور پر اوپنر سوید پارکر 3 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے، جس کے بعد ارجن آزاد اورٹھاکر تلک ورما کے درمیان183رنز کی شراکت نے ٹیم کا اسکور 221تک پہنچا دیا،ارجن آزاد نے121 اور ٹھاکر تلاک ورما نے 110 رنز بنائے، آخری 8 وکٹیں محض 73 رنز کے دوران گریں،6 کھلاڑی ڈبل فیگرز میں داخل نہیں ہوسکے۔

پاکستان نے میچ میں 24 فاضل رنز دیے، نسیم شاہ نے 52 جبکہ عباس آفریدی نے 72 رنز کے عوض 3،3 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، عامر علی اور محمد عامر نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

یاد رہے کہ اس سے قبل گروپ اے میں شامل پاکستان ٹیم کو افغانستان نے بھی شکست دیدی تھی، بھارت اور افغانستان نے اپنے دونوں میچز میں کامیابی کے ساتھ 4، 4پوائنٹس کرکے سیمی فائنل میں جگہ پکی کرلی،گرین شرٹس کا پیر کو کویت سے میچ اب بے مقصد ہوگیا ہے۔

مصباح الحق کو پی ایس ایل کے دوران معاوضہ نہیں ملے گا

عباس رضا: ہیڈکوچ و چیف سلیکٹر مصباح الحق کو پاکستان سپر لیگ کے لیے کام کے دوران پی سی بی سے معاوضہ نہیں ملے گا۔

قبل ازیں ہیڈ کوچ مکی آرتھر کو بورڈ کی جانب سے کراچی کنگز کی کوچنگ کی اجازت دے دی گئی تھی، تاہم اس دوران ان کو پی سی بی کی جانب سے دی جانے والی تنخواہ نہیں ملتی تھی، مصباح الحق بھی اگر کسی فرنچائز کے ساتھ وابستہ ہوجاتے ہیں تو پی ایس ایل شروع ہونے سے پانچ روز قبل اور دو روز بعد تک کی تنخواہ وصول نہیں کریں گے۔

یاد رہے کہ مصباح الحق کی ماہانہ تنخواہ 32 لاکھ کے قریب ہے۔ پی سی بی نے دوہری ذمہ داریاں سرانجام دینے والے سابق کرکٹرز کی حوصلہ شکنی کے لیے ایک پالیسی متعارف کرانے کا اعلان کیا تھا لیکن مصباح الحق کے معاملے میں یو ٹرن لیتے ہوئے انہیں پی ایس ایل میں بھی کام کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

شاہد آفریدی پاک فضائیہ کی شہید خاتون پائلٹ مریم مختار کے گھر پہنچ گئے

کراچی: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی پاک فضائیہ کی شہید خاتون پائلٹ مریم مختار کے گھر پہنچ گئے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹوئٹ کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان بوم بوم آفریدی نے کہا کہ 6 ستمبر کی مناسبت سے شہدا کو خراج عقیدت پیش کیا اور اس سلسلے میں وہ پاک فضائیہ کی شہید خاتون پائلٹ مریم مختار کے گھر پہنچ گئے۔

شاہد آفریدی نے شاہد آفریدی پاک فضائیہ کی شہید خاتون پائلٹ مریم مختار کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور شہید کی خدمات کو سراہا، سابق کپتان نے کتاب میں اپنے تاثرات بھی درج کیے۔

آفریدی کا کہنا تھا کہ شہید مریم مختار کے اہل خانہ سے ملکر ان کے ہمت وحوصلے کی داستان سن کر بہت اچھا لگا، شہید مریم مختار کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

مصباح الحق کو بورڈ کا چیئرمین کیوں نہیں بنایا گیا، شعیب اختر کا مذاق

کراچی: سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے مصباح الحق کو کوچ اور چیف سلیکٹربننے کی مبارکباد دینے کے ساتھ ان پر دلچسپ انداز میں طنز بھی کردیا۔

گزشتہ روز جب مصبا ح الحق کو دونوں ذمہ داریاں سونپی گئیں تو شعیب نے ٹویٹ کیا کہ ’ مصباح الحق آپ کو پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کی صورت میں دہری ذمہ داری مبارک ہو۔ مجھے حیرت ہوئی کہ آپ کو اس کے ساتھ بورڈ کا چیئرمین کیوں نہیں بنایا گیا‘۔ بعد میں شعیب نے وضاحت کی کہ وہ صرف مذاق کررہے تھے۔

واضح رہے کہ خود شعیب اختر کے بارے میں یہ رپورٹس آئی تھیں کہ وہ چیف سلیکٹر بننے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

Google Analytics Alternative