کھیل

کامران اکمل کو ٹیم میں شامل کرنے سے مکی آرتھرکا انکار

پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھرنے ڈومیسٹک کرکٹ کے کامیاب بیٹسمین کامران اکمل کو پاکستان ٹیم میں شامل کرنے سے انکار کردیا ہے ۔

انکار کے بعد پاکستان کے قومی سیزن کی ساکھ پر سوالات اٹھائے جارہے ہیں۔ایسے میں بدھ کو چیف سلیکٹر انضمام الحق نے پی سی بی چیئر مین کی ہدایت پرپنڈی اسٹیڈیم میں ریجنل کوچز سے ملا قات کی اور انہیں ہدایت کی کہ وہ تینوں فارمیٹس کے لئے باصلاحیت کھلاڑی تلاش کریں اور ان کے بارے میں سلیکٹرز کو بتائیں۔

اس موقع پر قومی اکیڈمی کے ہیڈ کوچ مشتا ق احمدبھی انضمام الحق کے ساتھ موجود تھے،اس میٹنگ میں گراس روٹ لیول پر ٹیلنٹ کی تلاش کے لئے حکمت عملی بنائی گئی۔

ایک روزہ سیریز کا اچھے اندازمیں آغازکرنا چاہتے ہیں، کپتان اظہرعلی

برسبن: پاکستان ون ڈے کرکٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی نے کہا ہے کہ ورلڈ کپ 2019 کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم آسٹریلیا کے خلاف حالیہ ون ڈے سیریز کی اہمیت سے آگاہ ہیں۔ سیریز کا اچھے انداز میں آغاز کرنا چاہتے ہیں۔

گابا میں پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ ورلڈ کپ کیلئے براہ راست کوالیفائی کرنے والی ٹیموں کا طے شدہ وقت بہت قریب ہے، ٹیم آٹھویں پوزیشن پرموجود ہے اوررواں سال ستمبر تک ٹاپ 8 میں شامل رہنا ہمارا ہدف ہے۔ آسٹریلیا کے خلاف کھیلنا ایک بڑا چیلنج ہے لیکن یہ ہمارے لئے اپنی صلاحیتوں کے اظہار کا اچھا موقع بھی ہے، کارکردگی دکھا کر ہم اپنی رینکنگ میں بہتری لا سکتے ہیں، کینگروز کو ہوم گراؤنڈ پر شکست دینے سے ٹیم کا مورال بلند ہوگا اوراعتماد میں اضافہ ہو گا۔

اظہرعلی نے مزید کہا کہ ٹیسٹ سیریزمیں شکست کو پس پشت ڈالتے ہوئے نئے فارمیٹ کا اچھے انداز میں آغاز کرنا چاہتے ہیں، نئے پلیئرز کی شمولیت سے ٹیم مضبوط ہوئی ہے، پاکستان ٹیم نے آخری ون ڈے میچز میں اچھی پرفارمنس دکھائی ہے جسے کینگروز کے خلاف سیریز میں بھی برقرار رکھنے کی کوشش کریں گے۔ پہلے میچ میں نائب کپتان سرفراز احمد کی کمی محسوس ہو گی، دیگر میچز میں بھی انکی شمولیت یقینی نہیں ہے۔

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پہلا ون ڈے کل کھیلا جائے گا

دورہ آسٹریلیا میں پاکستان کرکٹ ٹیم اگلے امتحان کےلیے تیار ہے، پانچ میچوں کی سیریز کا پہلا ون ڈے کل برسبین میں کھیلا جائے گا ۔

کپتان اظہر علی کہتے ہیں وہ ورلڈ کپ میں براہ راست جانے کے لیے اس ون ڈے سیریز کی اہمیت سےواقف ہیں۔

آسٹریلوی گراؤنڈ میںپاکستان کو بڑا دھچکا وکٹ کیپر سرفراز احمد اور محمد عرفان کی واپسی سے لگاجب وہ والدہ کے انتقال اور سرفراز احمد والدہ کی بیماری کی وجہ سے وطن واپس آئے۔

واضح رہے کہ ٹیسٹ سیریز میں آسٹریلیا کے ہاتھوں پاکستان کی ٹیم کلین سوئپ ہوگئی تھی۔

سرفراز احمد کی والدہ کراچی میں شدید علیل

پاکستان کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان سرفراز احمد کی والدہ کراچی میں شدید علیل ہیں، جس کے باعث سرفراز احمد وطن واپس آرہے ہیں۔ سرفراز کی والدہ نجی اسپتال میں زیرعلاج ہیں۔سرفراز کی جگہ کا متبادل کھلاڑی بھیجنے کا فیصلہ ابھی نہیں کیا گیا تاہم سلیکشن کمیٹی کی جانب سے کامران اکمل کا نام زیر غور ہے۔ سرفراز احمد سے قبل فاسٹ باؤلر عرفان خان اپنی والدہ کے انتقال کے باعث وطن واپس آچکے ہیں اور ان کی جگہ جنید خان کو سیریز میں شرکت کے لیے بھیجا جارہا ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کی برسین میں ایک روزہ میچ سے قبل پریکٹس

قومی کرکٹ ٹیم نے برسین میں ایک روزہ میچ سے قبل پریکٹس کی ۔ پریکٹس سیشن میں کھلاڑیوں نے بیٹنگ ، باولنگ اور فیلڈنگ کے شعبوں میں ٹریننگ کی ۔بیٹسمین محمد حفیظ نے بھی آج پریکٹس سیشن میں حصہ لیا۔ پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ جمعہ کو برسبین میں کھیلا جائے گا ۔ میچ صبح آٹھ بجکر بیس منٹ سے پی ٹی وی سپورٹس پر براہ راست دکھایا جائے گا ۔

شراپووا کی ٹینس میں واپسی، 26اپریل کو پہلا میچ کھیلیں گی

ماریا شراپووا نے گذشتہ برس جنوری میں آسٹریلین اوپن میں آخری بار حصہ لیا تھا، لیکن اس کے بعد ڈوپنگ کا انکشاف ہوجانے کے بعد انھوں نے کھیل سے دوری اختیار کرلی تھی۔

ان پر 15 ماہ کی ڈوپنگ معطلی اپریل میں مکمل ہوگی، 29 سالہ سابق ورلڈ نمبرون کو مارچ میں دو برس پابندی کی سزا دی گئی تھی تاہم اپیل کیے جانے پر اکتوبر میں یہ سزا کم کردی گئی تھی۔

جرمن ایونٹ 24 اپریل سے شروع ہوگا تاہم ماریا اپنی پابندی کی سزا مکمل ہونے کے بعد 26 اپریل کو پہلا میچ کھیلیں گی. شراپووا کو وائلڈ کارڈ انٹری ملے گی، سابق چیمپئن نے کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ میں اپنے فیورٹ ایونٹ کے ذریعے کھیل میں واپس آئوں گی ۔

کبیرخان کوقومی ویمنزکرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ بنانے کا فیصلہ

 لاہور: سابق ٹیسٹ کرکٹر کبیر خان کو پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

پی سی بی آفیشل کے مطابق کبیرخان کوویمنزٹیم کے کوچنگ ڈیپارٹمنٹ کا سربراہ نامزد کیا گیا ہے، شاہد انوربیٹنگ کوچ اوراقبال امام فیلڈنگ کوچ جبکہ عائشہ اشعر ٹیم منیجرہوں گی۔ کبیرخان سے اس سے قبل ایچ بی ایل ٹیم کے ہیڈ کوچ تھے اور ان کی کوچنگ میں ٹیم نے نیشنل ون ڈے کپ میں فتح حاصل کی تھی، وہ خیبرپختونخوا ٹیم کے کوچ بھی رہ چکے ہیں۔

کبیر خان کو برطرف کئے جانے والے باسط علی کی جگہ ہیڈ کوچ مقرر کیا گیا ہے جنہیں گزشتہ ہفتے ساتھی کرکٹرمحمود حامد کو تھپڑ مارنے کی پاداش میں پی سی بی نے ویمنز ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیئرمین جونیئر سلیکشن کمیٹی کے عہدوں سے ہٹا دیا تھا۔ سلیکشن کمیٹی کے چیئرمین محمد الیاس ہوں گے جبکہ ممبرز میں ندیم عباسی اور عروج ممتاز شامل ہیں۔

شکست کے ذمہ دار بلے باز نہیں بولرز زیادہ ہیں ، شہریار خان

صحافیوں سے بات میں چیئر مین پی سی بی کا کہنا تھا کہ سلمان بٹ اچھا پرفارم کر رہے ہیں سلیکشن کمیٹی کو گرین سگنل دے دیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ویسٹ انڈیز کا سیکورٹی وفد رواں ماہ پاکستان آئے گا، جبکہ غیر ملکی کھلاڑیوں کو پاکستان میں کھیلنے کیلئے فیکا سے بات کریں گے۔

شہریار خان نے کہا کہ پاکستان سپر لیگ کے بعد 25 بہترین کھلاڑیوں کو منتخب کر کے ان کا کیمپ لگائیں گے جو مستقبل میں پاکستان کرکٹ ٹیم کا سرمایہ ہوں گے۔مکی آرتھر ٹیلنٹ ہنٹ کے لیے ڈومیسٹک کرکٹ بھی دیکھیں گے ۔

چیئرمین پی سی بی شہریار میڈیا سے گفتگوکہ ویسٹ انڈیز کے دورہ پاکستان کیلئے پلیئرز ایسوسی ایشن سے بات کریں گے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کے سیریز نہ کھیلنے پر آئی سی سی یا عدالت میں جاسکتے ہیں۔

Google Analytics Alternative