کھیل

تینوں سیریز میں کلین سوئپ کرنے والا پہلا ملک بن جائے گا۔

پاکستان گذشتہ نو سال سے ہوم ٹیسٹ سیریز میں ناقابل شکست ہے، ویسٹ انڈیز کےخلاف دوسرا ٹیسٹ جیت کر پاکستان نے مصباح الحق کی کپتانی میں دسویں سیریز بھی اپنے نام کرلی۔ شارجہ ٹیسٹ جیت کر پاکستان تینوں سیریز میں کلین سوئپ کرنے والا پہلا ملک بن جائے گا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم گزشتہ نوسال سے کوئی ہوم ٹیسٹ سیریز نہیں ہاری، ابوظہبی میں پاکستان کی ویسٹ انڈیز کے تینوں فارمیٹ میں مسلسل دسویں فتح ہے

انگلینڈ کےخلاف آخری ون ڈے میں کامیابی کے بعد سے پاکستان تاحال کوئی میچ نہیں ہارا۔ ویسٹ انڈیز کےخلاف ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے سیریز میں وائٹ واش کے بعد شاہینوں کے پاس ٹیسٹ میں بھی وائٹ واش کا نادر موقع ہے

شارجہ ٹیسٹ جیت کر پاکستان تینوں سیریز میں کلین سوئپ کرنے والا پہلا ملک بن جائے گا۔ مصباح کی کپتانی میں پاکستان نے ایک اور ہوم سیریز اپنے نام کی۔ شاہینوں نے مصباح الحق کی قیادت میں دسویں سیریز جیتی

مصباح الحق غیر ملکی سرزمین پر سب سے زیادہ ٹیسٹ جیتنے والے کپتان بن گئے۔ مصباح الحق نے چوبیس ٹیسٹ میچز میں پاکستان کو فتح دلوائی اورتمام ہی میچ ملک سے باہرکھیل

پاکستان دوہزار سات سے ہوم ٹیسٹ سیریز میں ناقابل شکست ہے۔ آخری بار نو سال قبل پاکستان کو جنوبی افریقہ کےہاتھوں ٹیسٹ میچ میں شکست ہوئی تھی

ابوظہبی:پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو 133 رنز سے سکشت دے دی

ابوظہبی میں کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو 133 رنز سے شکست دے دی ہے۔

ویسٹ انڈیز کے آؤٹ ہونے والے آخری کھلاڑی داوندرا بشو تھے جو ذوالفقار بابر کا شکار بنے۔

منگل کو کھیل کے آخری دن ویسٹ انڈیز نے چار وکٹ کے نقصان پر 117 رنز سے اننگز دوبارہ شروع کی تو راسٹن چیز اور جرمین بلیک وڈ نے سکور میں مزید 70 رنز کا اضافہ کیا۔

اس موقع پر چیز یاسر شاہ کی گیند پر سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔

جرمین بلیک وڈ پانچ رنز کی کمی سے سنچری مکمل نہ کر سکے اور جب ویسٹ انڈیز کا سکور 244 رنز پر پہنچا تو وہ یاسر شاہ کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔

جیسن ہولڈر کو بھی یاسر نے 16 کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو کیا اور یہ یاسر شاہ کی اس اننگز میں پانچویں وکٹ تھی۔

یاسر کے علاوہ محمد نواز اور راحت علی نے پاکستان کے لیے ایک ایک وکٹ لی ہے۔

اس میچ میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگز میں یونس خان کی سنچری کی بدولت 452 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم 224 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

228 رنز کی سبقت حاصل ہونے کے باوجود پاکستانی کپتان مصباح الحق نے فالو آن کے بجائے دوبارہ بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور دوسری اننگز 227 رنز بنا کر ڈیکلیئر کر دی تھی۔

ابوظہبی:ٹیسٹ کے پانچویں دن ویسٹ انڈیز کی سات وکٹیں گر چکی,پاکستان کی گرفت مضبوط

ابوظہبی میں پاکستان کے خلاف دوسرے کرکٹ ٹیسٹ کے پانچویں دن 456 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز کی سات وکٹیں گر چکی ہیں۔

اس وقت کریز پر دویندر بشو اور شائے ہوپ موجود ہیں اور اب سے کچھ دیر قبل تک ویسٹ انڈیز نے 287 رنز بنا لیے تھے۔

منگل کو کھیل کے آخری دن ویسٹ انڈیز نے چار وکٹ کے نقصان پر 117 رنز سے اننگز دوبارہ شروع کی تو راسٹن چیز اور جرمین بلیک وڈ نے سکور میں مزید 70 رنز کا اضافہ کیا۔

اس موقع پر چیز یاسر شاہ کی گیند پر سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔

جرمین بلیک وڈ پانچ رنز کی کمی سے سنچری مکمل نہ کر سکے اور جب ویسٹ انڈیز کا سکور 244 رنز پر پہنچا تو وہ یاسر شاہ کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔

جیسن ہولڈر کو بھی یاسر نے 16 کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو کیا اور یہ یاسر شاہ کی اس اننگز میں پانچویں وکٹ تھی۔

یاسر کے علاوہ محمد نواز اور راحت علی نے پاکستان کے لیے ایک ایک وکٹ لی ہے۔

اس میچ میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگز میں یونس خان کی سنچری کی بدولت 452 رنز بنائے تھے جس کے جواب میں ویسٹ انڈیز کی ٹیم 224 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

228 رنز کی سبقت حاصل ہونے کے باوجود پاکستانی کپتان مصباح الحق نے فالو آن کے بجائے دوبارہ بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور دوسری اننگز 227 رنز بنا کر ڈیکلیئر کر دی تھی۔

بنگلا دیش کو پہلے ٹیسٹ میں دلچسپ مقابلے کے بعد 22 رنز سے شکست دے دی

انگلینڈ نے بنگلا دیش کو پہلے ٹیسٹ میں دلچسپ مقابلے کے بعد 22 رنز سے شکست دے دی. بنگلا دیش کی ٹیم ہوم گراؤنڈ پر ناکام ہوگئی، بنگال ٹائیگرز 286 رنز کا ہدف حاصل نہ کرسکے۔

چٹا گانگ ٹیسٹ میں انگلینڈ نے بنگلا دیش کو 22 رنز سے شکست دے دی، انگلینڈ کے 286 رنز کے تعاقب میں بنگلا دیش کی ٹیم 263رنزپر آؤٹ ہوگئی۔

بنگلادیش ایک بار پھر جیت کے قریب پہنچ کر ہار گیا، پانچویں روز بنگلا دیشی کھلاڑی دن کو یادگار بنانے کا خواب لیے میدان میں اترے لیکن تمام خواب چکنا چور ہوگئے اور پوری ٹیم 263 رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئی۔

دوسری اننگز میں بنگلا دیش نے انگلینڈ کو تو جلد آؤٹ کرلیا لیکن خود سنبھل کر نہ کھیل سکے، میزبان ٹیم کو ابتدا سے ہی مشکلات کا سامنا رہا، وقفے وقفے سے وکٹیں گرنے کا سلسلہ جاری رہا۔

چوتھے روز ہی بنگلا دیش کی ٹیم مشکل میں آگئی، بنگلا دیش کی آدھی ٹیم 140 رنز پر پویلین لوٹ گئی، بنگلا دیش کے تین کھلاڑی 33 رنز کے تعاقب میں محض 10 رنز ہی بنا سکے اور یوں ایک تاریخی فتح سے محروم ہو گئے۔

دوسری اننگز میں بنگلا دیش کی جانب سے تمیم اقبال نے 9، امر القیس نے 43، مومن الحق نے 27، محمود اللہ نے 17، شکیب الحسن نے 24، مشفیق الرحیم نے 39 اور مہدی حسن مرزا نے 1 اسکور بنایا جبکہ قمر الاسلام بغیر کوئی اسکور بنائے آﺅٹ ہو گئے۔

برطانوی ٹیم کی جانب سے بین اسٹوکس نے بہترین باﺅلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ معین علی نے 3، عادل راشد نے 2 اور گیریتھ بیٹی نے ایک وکٹ حاصل کی۔

آخری روز بنگلا دیش کے بیٹسمینوں نے ہتھیار ڈال دیئے اور پوری ٹیم 263 رنز پر ڈھیر ہوگئی، بین اسٹاکس کو بیٹنگ اور باﺅلنگ دونوں شعبوں میں بہترین کارکردگی دکھانے پر مین آف دی میچ قرار دیا گیا، انگلینڈ نے دو میچز کی سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل کرلی۔

ویمنز انڈر 17 ورلڈ کپ فٹبال شمالی کوریا نے جاپان کو دلچسپ اور سنسنی خیز مقابلے کے بعد شکست

شمالی کوریا نے جاپان کو دلچسپ اور سنسنی خیز مقابلے کے بعد پنالٹی ککس پر شکست دی اور ویمنز انڈر 17 ورلڈ کپ فٹبال جیت لیا ۔

اردن میں انڈر 17 ورلڈ کپ کے فائنل میں شمالی کوریا اور جاپان آمنے سامنے تھے۔دونوں کے درمیان دلچسپ مقابلہ ہوا جس میں ایک دوسرے کے گول پر کئی حملے ہوئے۔کبھی قسمت نے ساتھ نہ دیا ،کبھی فارورڈ غلطی کر بیٹھے۔

میچ صفر صفر سے برابری پر ختم ہو گیا۔ٹائٹل کا فیصلہ پنالٹی ککس پر ہواجس میں شمالی کوریا نے چار کے مقابلے میں پانچ گول سے فتح اپنے نام کی

ابو ظہبی: ٹیسٹ کے چوتھے روز کے کھیل جاری,جیتنے کے امکانات روشن

ابو ظہبی ٹیسٹ کے چوتھے روز کے کھیل میں ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسری اننگز میں پاکستان کی بیٹنگ جاری ہے۔گرین کیپس کے لیے سیریز جیتنے کے امکانات روشن ہیں۔

اس وقت یونس خان اور اسد شفیق کریز پر موجود ہیں اور کچھ دیر قبل تک پاکستان نے اپنی دوسری اننگز میں دو وکٹ کے نقصان پر164رنز بنا لیے تھے۔

پاکستان کےآؤٹ ہونے والے پہلے بیٹسمینسمیع اسلم نے 50 رنز جبکہ دوسرے بلے باز اظہر علی نے79 رنزاسکور کیے تھے۔پاکستان کو اپنی دوسری اننگز میں 392 رنز کی مجموعی برتری حاصل ہے۔

میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر پاکستان نے اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 114 رنز بنائے تھے۔جب کھیل کا اختتام ہوا تو اظہرعلی 52 اور اسد شفیق پانچ رنز پر کھیل رہے تھے۔

ویسٹ انڈیز کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 224 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔ 228 رنز کی سبقت حاصل ہونے کے باوجود کپتان مصباح الحق نے فالو آن کے بجائے دوبارہ بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

مصباح الحق نے مسلسل دوسرے ٹیسٹ میں ویسٹ انڈیز کو فالو آن نہیں دیاجبکہ مجموعی طور پر پانچ بار پہلے بھی ایسا ہوچکا ہے جب انہوں نے حریف ٹیم کو فالو آن نہیں دیا۔

ٹیسٹ میچ کے چوتھے روز پاکستان نے اپنی دوسری اننگز 224 رنز پر دکلیئر کر دی-

ابوظہبی میں ویسٹ انڈیز کے خلاف کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کے چوتھے روز پاکستان نے اپنی دوسری اننگز 224 رنز پر دکلیئر کر دی ہے۔

اس طرح ویسٹ انڈیز دوسرا ٹیسٹ میچ جیتنے کے لیے 456 رنز کا ہدف ملا ہے۔

اس وقت کریگ بریتھ ویٹ اور ڈیرن براووکریز پر موجود ہیں اور اب سے کچھ دیر قبل تک ویسٹ انڈیز نے اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 30 رنز بنا لیے تھے۔

ویسٹ انڈیز کے آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز لیون جانسن تھے جو نو رنز بنا کر یاسر شاہ کا شکار بنے۔

اس سے قبل کھانے کے وقفے سے قبل پاکستان کی جانب سے اسد شفیق 58 اور یونس خان 29 رنز پر کھیل رہے تھے تاہم کھانے کے وقفے کے بعد پاکستان نے بیٹنگ جاری نہ رکھنے کا فیصلہ کیا۔

میچ کے چوتھے روز پاکستان کے آؤٹ ہونے والے واحد بلے باز اظہر علی تھے جو 79 رنز بنانے کے بعد کمنز کی گیند پر کیچ دے بیٹھے۔

پاکستان کے آؤٹ ہونے والے واحد بلے باز سمیع اسلم تھے جنھوں نے 50 رنز سکور کیے تھے۔

اس سے قبل اتوار کو میچ کے تیسرے دن کھیل کے اختتام پر پاکستان نے اپنی دوسری اننگز میں ایک وکٹ کے نقصان پر 114 رنز بنائے تھے۔

جب کھیل کا اختتام ہوا تو اظہرعلی 52 اور اسد شفیق پانچ رنز پر کھیل رہے تھے۔

ویسٹ انڈیز کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 224 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔ 228 رنز کی سبقت حاصل ہونے کے باوجود کپتان مصباح الحق نے فالو آن کے بجائے دوبارہ بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

مصباح الحق نے مسلسل دوسرے ٹیسٹ میں ویسٹ انڈیز کو فالو آن نہیں کرایا۔ انھوں نے مجموعی طور پر پانچ بار حریف ٹیم کو فالو آن نہیں کرایا ہے

بھارت نے پاکستان کےخلاف اہم میچ جیت لیا, دو کےمقابلے میں تین گول سے کامیابی حاصل کی۔

ایشئن ہاکی چیمپیئنز ٹرافی میں بھارت نے پاکستان کےخلاف اہم میچ جیت لیا۔ بھارت نے دو کےمقابلے میں تین گول سے کامیابی حاصل کی۔

چوتھی ایشین چیمپیئنز ٹرافی ہاکی کےاہم میچ میں روائتی حریف پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں مدمقابل تھیں۔ میچ کےآغازسے ہی دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے کے گول پوسٹ پر تابڑ توڑ حملے کیے۔

بھارت کی جانب سے پرادیپ مور نے کھیل کے 22 ویں منٹ میں دوسرے کوارٹر میں گول داغ کربرتری حاصل کی۔ جواب میں پاکستان نے بھرپور حملہ کیا اور بالآخر پاکستان کے محمد رضوان سینئر نے گیند مخالف ٹیم کی گول پوسٹ میں ڈال کر میچ 1-1 گول سے برابر کردیا۔

پاکستان کی جانب سے دوسرا گول محمد عرفان نے 39 ویں منٹ میں کیا اور اپنی ٹیم کو پہلی بار برتری دلا دی، تیسرے کوارٹر میں بھارت نےشاندار موو کی بدولت حساب برابر کردیا۔ دو منٹ بعد بھارت نےتیسرا گول کرکے میچ میں تین دو کی برتری حاصل کرلی۔

چوتھے کوارٹر میں پاکستان نے خسارہ ختم کرنے کی بھرپور کوشش کی لیکن پاکستان میچ نہ جیت سکا۔ بھارت نے اس ایونٹ میں اب تک جاپان کے خلاف واحد میچ کھیلا ہے جس میں اس نے 2 کے مقابلے میں 10 گولوں سے کامیابی سمیٹی۔

واضح رہے کہ ایشین ہاکی چیمپین شپ میں پاکستان، بھارت، ملائیشیا، جنوبی کوریا، چین اور جاپان کی ٹیمیں شریک ہیں۔ قومی ہاکی ٹیم نے اس ایونٹ میں اپنا پہلا میچ ملائیشیا کے خلاف کھیلا جس میں اسے 2 کے مقابلے میں 4 گول سے شکست نصیب ہوئی جبکہ دوسرا میچ جنوبی کوریا کے خلاف کھیلا اور 0 کے مقابلے میں 1 گول سے فتح حاصل کی۔

Google Analytics Alternative