کھیل

والدہ علیل، کرکٹر سرفراز کا وطن واپسی کا فیصلہ

آسٹریلیا کا دورہ کرنے والی پاکستان ٹیم کو ایک دھچکالگا ہے، نائب کپتان وکٹ کیپر سرفراز احمد کی والدہ کراچی میں شدید علیل ہیں، جس کے باعث وہ وطن واپس آرہے ہیں۔

سرفراز کی والدہ نجی اسپتال میں زیرعلاج ہیں،دوسری جانب سلیکشن کمیٹی کی جانب سے سرفراز کی جگہ کامران اکمل کو آسٹریلیا بھیجنے پر غور کیا جارہا ہے۔

سلیکشن کمیٹی کا متبادل کھلاڑی کو بھیجنے کا فیصلہ کچھ دیرمیں کرنے کا امکان ہے

کراچی کی مقامی عدالت نے وسیم اکرم کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے

کراچی: عدالت نے قومی کرکٹ ٹیم کے سابق مایہ ناز آل راؤنڈر اور کپتان وسیم اکرم کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے ہیں۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق مایہ ناز آل راؤنڈر اور سابق کپتان وسیم اکرم کے وارنٹ گرفتاری جاری ہوئے ہیں۔ کراچی کی مقامی عدالت نے وسیم اکرم کے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے انہیں 17 جنوری کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

وسیم اکرم نے خود پر ہونے والے قاتلانہ حملے کی ایف آئی آر میجر ریٹائرڈ عامر اور دیگر کے خلاف تھانہ بہادرآباد میں درج کرا رکھی ہے جبکہ وہ کیس کے سلسلے میں  گزشتہ 31 سماعتوں سے عدالت میں گواہی کے لئے پیش نہیں ہورہے۔

وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ انہیں ملزمان کی جانب سے قتل کی دھمکیاں دی جارہی ہیں جس کے باعث عدالت میں پیش ہونے سے قاصر ہوں۔

قطراوپن ٹینس کا فائنل نوواک جوکووچ نےجیت لیا

نوواک جوکووچ نے قطراوپن کے فائنل میں عالمی نمبرایک اینڈی مرے کو شکست دے کر سال کا پہلا ٹائٹل حاصل کرلیا۔

سابق عالمی نمبر ایک جوکووچ نے برطانوی اسٹار اینڈی مرے کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 6-3،5-7 اور6-4 سے شکست دیدی۔اینڈی مرے نے 2016 میں جوکووچ سے عالمی نمبر ایک کا درجہ چھین لیا تھا ، جوکووچ کی مرے کے خلاف یہ 25 ویں فتح ہے۔

نوواک جوکووچ نے میچ کے بعد خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یقیناً سال کا آغاز کرنے کا یہ بہترین طریقہ ہے،قطراوپن میں کامیابی کے ساتھ جوکووچ نے 2 لاکھ 9 ہزار 665 ڈالر کی سال کی پہلی انعامی رقم بھی حاصل کی۔

ٹیسٹ رینکنگ، وہاب ریاض پہلی بار دنیا کے 20 صف اول بولرز میں شامل

دبئی: یونس خان نے ایک ہی جست میں اپنی ساکھ بحال کردی، سڈنی میں ناقابل شکست سنچری نے ماسٹر بیٹسمین کو ٹاپ ٹین ٹیسٹ بیٹسمین رینکنگ میں واپس لے آئی، سینئر بیٹسمین ساتویں پوزیشن پرقابض ہوگئے، اظہرعلی بدستور چھٹے نمبر سے لطف اندوز ہورہے ہیں، مصباح الحق بدترین 25 ویں نمبر پر پہنچ گئے۔ وہاب ریاض نے بھی آخر کار ٹاپ 20 میں انٹری دے دی، مزید تنزلی نے یاسر شاہ کو 17 ویں نمبر پرپہنچا دیا۔
آسٹریلیا کے خلاف سڈنی ٹیسٹ میں175رنز ناٹ آؤٹ کی شاندار اننگز کھیلنے والے یونس خان کو رینکنگ میں بھی فوری صلہ مل گیا ہے، وہ 10 درجے کی بڑی چھلانگ سے 14 ویں نمبر سے 7 ویں پر پہنچ گئے ہیں۔ ایک ہفتہ قبل ناقص فارم کی وجہ سے انھیں ٹاپ ٹین سے باہر ہونا پڑا تھا مگرایک ہی ماسٹر پیس اننگز کی بدولت انھوں نے کھوئی ساکھ بحال کرلی ہے۔
اظہر علی کی چھٹی پوزیشن برقرار ہے۔ ٹیسٹ کپتان مصباح الحق سیریز کے دوران بھرپورکوشش کے باوجود اپنے بیٹ کو خواب غفلت سے نہیں جگاپائے، جس کی وجہ سے مزید ایک درجہ تنزلی نے انھیں 25 ویں نمبر پر پہنچادیا ہے، اسد شفیق بھی دو درجہ خسارے سے 23 ویں نمبر پر پہنچ چکے ہیں جبکہ ان کے بعد 24 پوزیشن پر وکٹ کیپر بیٹسمین سرفراز احمد موجود ہیں۔

جنوبی افریقہ کے کوئنٹین ڈی کک کیپ ٹاؤن میں سری لنکا کے خلاف 101 اور 29 رنز اسکور کرنے کی بدولت کیریئر بیسٹ آٹھواں نمبر سنبھال چکے ہیں، آسٹریلیا کے عثمان خواجہ دو درجہ بہتری سے گیارہویں، پیٹرہینڈزکومب 17 درجے ترقی پاکر 38 ویں اور ڈین ایلجر گیارہ درجے کی چھلانگ سے پہلی بار 21 ویں نمبر پرپہنچے ہیں۔
ٹاپ پربدستور آسٹریلیا کے اسٹیون اسمتھ موجود ہیں۔ دوسری جانب بولرز میںوہاب ریاض نے سڈنی میں 4 وکٹیں حاصل کرکے پہلی بار ٹاپ 20 میں جگہ بنائی ہے، پانچ درجے بہتری سے وہ 25 ویں سے 20 ویں نمبر پر پہنچے ہیں۔
آسٹریلیا میں مکمل طور پر ناکام رہنے والے یاسر شاہ مزید تنزلی کے بعد اب 17 ویں نمبر پر پہنچ گئے، راحت علی 33، ذوالفقار بابر 38، سہیل خان 50 اور محمد عامر56 پوزیشن سنبھالے ہوئے ہیں۔ ٹاپ پر بدستور بھارت کے روی چندرن ایشون اور رویندرا جڈیجا کی حکمرانی ہے تاہم آسٹریلیا کے جوش ہیزل ووڈ نہ صرف تیسری پوزیشن سنبھال چکے بلکہ ان کا ٹاپ بھارتی جوڑی سے فرق بھی بہت کم رہ گیا ہے۔

عرفان کی جگہ جنید خان کو ون ڈے اسکواڈ کا حصہ بنا لیا گیا

کراچی: پی سی بی نے محمد عرفان کی جگہ جنید خان کو ون ڈے اسکواڈ کا حصہ بنا لیا۔

فاسٹ بولر محمد عرفان والدہ کے انتقال کے باعث وطن واپس آ رہے ہیں جن کی جگہ جنید خان کو ٹیم میں شامل کر لیا گیا ہے، وہ جلد قومی ٹیم کو جوائن کر لیں گے۔ جنید خان نے حالیہ ڈومیسٹک سیزن اور اس سے قبل بنگلہ دیش پریمیئر لیگ میں بھی عمدہ پرفارم کیا تھا لیکن اس کے باوجود انہیں ٹیم کا حصہ نہ بنانے پر سلیکٹرز تنقید کی زد میں تھے۔

عرفان والدہ کے انتقال کی وجہ سے واپس آ رہے ہیں اس لیے جنید کو واپسی کا موقع مل گیا،  قومی ٹیم کے میڈیا منیجر امجد حسین بھٹی نے تصدیق کی کہ جنید خان کو آسٹریلیا طلب کر لیا گیا ہے، انہوں نے کہا کہ عرفان والدہ کے انتقال کی وجہ سے بیحد غمزدہ اور تمام کھلاڑی انہیں دلاسہ دینے کی کوشش کر رہے ہیں۔

فاسٹ بولر محمد عرفان کی والدہ انتقال کر گئیں

لاہور: چند ماہ قبل ہی والد کے انتقال کے صدمے سے دوچار ہونے والے قومی ٹیم کے دراز قد فاسٹ بولر محمد عرفان کی والدہ بھی انتقال کر گئیں۔

طویل القامت فاسٹ بولر محمد عرفان کی والدہ انتقال کر گئیں، محمد عرفان ان دنوں آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے سیریز میں پاکستانی اسکواڈ کا حصہ ہیں اور قومی ٹیم کے ساتھ برسبین میں موجود ہیں، محمد عرفان کو آسٹریلیا میں ہی والدہ کے انتقال کی خبر دی گئی جس کے بعد وہ ٹور ادھورا چھوڑ وطن واپس آ جائیں گے۔

آسٹریلیا میں موجود قومی کے ٹیم کے کھلاڑیوں اور ٹیم منجمنٹ نے محمد عرفان سے ان کی والدہ کے انتقال پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار کیا اور مرحومہ کے لئے دعائے مغفرت بھی کی گئی۔

واضح رہے کہ گزشتہ 3 ماہ  قبل ہی محمد عرفان کے والد کا انتقال ہوا تھا جس پر انہوں نے اپنے والد کے ایصال ثواب کے لئے اپیل بھی کی تھی۔ محمد عرفان نے یکم ستمبر 2016 کو اپنا آخری ون ڈے انٹرنیشنل میچ انگلینڈ کے خلاف ہیڈنگلے میں کھیلا تھا جس میں صرف 5 اوورز کروانے کے بعد وہ فٹنس مسائل کا شکار ہو گئے تھے۔

کوچ ون ڈے اسکواڈ کے کھلاڑیوں کی فٹنس سے ناخوش

پاکستانی ٹیم کے کوچز ون ڈے اسکواڈ کا حصہ بننے والے کھلاڑیوں کی فٹنس سے ناخوش ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان کھلاڑیوں نے آخری مرتبہ یواے ای میں ویسٹ انڈیز کے خلاف مختصر دورانیے کی کرکٹ میں حصہ لیا تھا، ٹیم کے ساتھ نہ رہنے کے بعد کھلاڑیوں نے فٹنس پر کام نہیں کیا۔

کوچز نے آسٹریلیا پہنچنے والے کھلاڑیوں کے فٹنس ٹیسٹ لیے، دو سیشنز میں ان کھلاڑیوں کو بھرپور ٹریننگ کرائی، کھلاڑی سخت ٹریننگ سے بلبلا اٹھے۔

آسٹریلیا میں جیت کے لئے سپر فٹ ہونا ضروری ہے ، مصباح

پاکستانی کپتان مصباح الحق نے شکست کےبعد نئی بحث چھیڑدی ، کہتے ہیںننانوے کی ٹیم میں بڑے سپر اسٹار تھے لیکن ہار گئے ، آسٹریلیا میں جیت کے لیے سپر اسٹار نہيں ، سپر فٹ ہونا ضروری ہے ۔

کپتان مصباح الحق نے سڈنی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ٹیم کو برسبین ٹیسٹ سے بہت اعتماد ملا تھا لیکن میلبورن ٹیسٹ کے آخری دن کی وجہ سے ٹیم کا مورال گرا۔

انہوں نےکہا کہ کچھ کھلاڑیوں کو ریگولر بنیادوں پر کھیلنے کے لیے آسٹریلیا بھیجنا چاہیے۔کیریئر کے ابتدائی مرحلے سے ہی کھلاڑیوں کو آسٹریلوی کنڈيشنز سے ہم ہنگی ہونی چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگلی سیریز کے لیے لائن اپ میں موجود کھلاڑیوں کو دو تین ماہ کے لیے آسٹریلیا یا جنوبی افریقہ بھیجاجائے۔صرف اسی طریقے سے ہم بہتری لاسکتے ہیں ۔

پاکستانی کپتان کہتے یہ بھی کہتے ہیں کہ بولنگ ہو یا بیٹنگ آسٹریلیا میں مشکلات سے دوچار رہتے ہیں۔یہاں کی کنڈیشنز ہر جگہ سے مختلف ہیں ۔کسی بھی ایشین ٹیم کے لیے یہاں رنز کرنا اور بیس وکٹیں لینا مشکل ہے۔

شکست نے مصباح کے ہوش اڑاے نہیں ، بلکہ انہیں ہوش میں لے آئی ہے، میلبورن ٹیسٹ میں شکست کے بعد جذبات میں آکر ریٹائرمنٹ کی باتیں کرنے والے مصباح کے لیے ایک اور شکست انہیں جذبات سے باہر لے آئی ہے اور اب کپتان نے صاف صاف کہہ دیا ہےکہ ابھی ان کے پاس بہت کام ہے۔

مصباح کہتے ہیں ابھی بہت کام ہے ، پی ایس ایل کے بعد دیکھوں گا کیا کرناہے۔

مطلب یہ ہوا کہ ابھی کپتان نے کہیں جانے کا ارادہ بظاہر ملتوی کردیا ہے ، اور لگتا یہ ہے کہ اب وہ کوئی جذباتی فیصلہ کرنے کےبجائے اگلی سیریز میں اپنی پرفارمنس کی بنیاد پر ہی مستقبل کا فیصلہ کریں گے ۔

Google Analytics Alternative