کھیل

ای ین چیپل نے ٹیسٹ کرکٹ کی بقا کیلیے مزید اقدامات کو ناگزیر قرار دے دیا

سڈنی:آسٹریلیا کے سابق کپتان ای ین چیپل نے ٹیسٹ کرکٹ کی بقا کیلیے مزید اقدامات کو ناگزیر قرار دے دیا، وہ کہتے ہیں کہ سینئر فارمیٹ میں زیادہ تیزی لانا ہوگی۔ ٹیسٹ میچز کو چار روز تک محدود کرنے کیلیے دیگر لوازمات پر عملدرآمد بھی ضروری ہے، ہر وینیو میں نائٹ ٹیسٹ کا انعقاد نہیں ہوسکتا، ان خیالات کا اظہار انھوں نے ایک ویب سائٹ کیلیے اپنے کالم میں کیا۔ چیپل کہتے ہیں کہ ایڈیلیڈ میں گلابی گیند کے ساتھ کھیلے جانے والے نائٹ ٹیسٹ کو بہت زیادہ سپورٹ حاصل ہوئی، بھارت کے کپتان ویرات کوہلی نے بھی اس کو اہم قدم قرار دیا۔ نائٹ ٹیسٹ کے انعقاد کے ساتھ ایک بارپھر ٹیسٹ میچز کو پانچ کے بجائے چار روز تک محدود کرنے کی بھی تجاویز سامنے آنا شروع ہوگئی ہیں، یہ ایک طرح سے ماضی کی جانب واپس لوٹنے کے مترادف ہے، کیری پیکر کی ورلڈ سیریز کے دوران 4 روز پر مشتمل سپر ٹیسٹ میچز کھیلے گئے تھے مگر انھیں 9 کے بجائے7 گھنٹے فی دن محدود کیا گیا تھا، اب ایک بار پھر 4 روز تک ٹیسٹ کرکٹ کو محدود کرنے کی باتیں ہورہی ہیں مگراس کا تب تک فائدہ نہیں ہوگا جب تک پلیئرز اور آفیشلز خود گیم کو تیز رکھنے کی کوششیں جاری نہیں رکھیں گے۔ چیپل نے بیس بال کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ اس کا مقابلہ 3 گھنٹوں میں ختم ہوجاتا اس کے باوجود منتظمین اس میں زیادہ سے زیادہ تیزی لانے کیلیے قانون سازی میں مصروف رہتے ہیں جب کہ کرکٹ کا معاملہ الٹ ہے، اس میں مقابلے کی رفتار کو زیادہ سے زیادہ سست کیا جارہا ہے، ڈی ا?ر ایس، ڈرنکس اور دیگر چیزوں میں کافی وقت ضائع ہوجاتا ہے، اگر آپ کو 4 روزہ ٹیسٹ کھیلنا ہے تو پھر ایک دن میں 90 کے بجائے 100 اوورز ہونے چاہئیں مگر اس کیلیے ضروری ہے کہ آپ کھیل کی رفتار کو بھی تیز رکھیں اور غیرضروری تاخیر سے گریز کیا جائے، اس کے لیے باقاعدہ قانون سازی کی ضرورت ہوگی۔ چیپل نے مزید کہا کہ بنگلور میں بھارت اور جنوبی افریقہ کے درمیان روایتی ٹیسٹ تین دن میں ختم ہوا جبکہ مصنوعی روشنیوں میں کھیلے گئے پہلے نائٹ ٹیسٹ کا اختتام بھی تین ہی دن میں ہوا، یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ دونوں ہی طرز قابل عمل اور قابل قبول ہیں۔

پاکستان کو وائٹ واش کی کوشش کرینگے، جیمز وینس

دبئی: نئے انگلش بلے باز جیمز وینس کو امید ہے کہ ان کی ٹیم پیر کو شارجہ میں پاکستان کے خلاف تیسرا اور آخری ٹی ٹوئنٹی میچ جیت کر سیریز میں کلین سوئپ کرے گی۔پراعتماد24 سالہ وینس نے اپنے ڈیبیو پر 41 اور پھر دوسرے میچ میں 38 رنز بنا کر انگلینڈ کو سیریز میں 0-2 کی فیصلہ کن برتری دلانے میں اپنا کردار ادا کیاتھا۔وینس نے عزم ظاہر کیا کہ انگلینڈ ریلکس نہیں کرے گی اور سیریز 0-3 سے اپنے نام کرنے کی بھرپور کوشش کرے گی۔’یہاں آنا اور 0-3 سے جیتنا بڑی کامیابی ہو گی اور ہم یہی کرنے کی کوشش کریں گے‘۔وینس نے بتایا کہ وہ ٹی ٹوئنٹی میں پہلا موقع ملنے سے لطف اندوز ہوئے۔’مجھے پچھلے سیزن میں سکواڈ میں جگہ ملی تھی لیکن کھیلنے کا موقع نہ مل سکا، لہذا یہاں کھیلنے کا موقع ملنے پر میں خوش ہوں‘۔وینس نے اگلے مہینے یواے ای میں پاکستان اے اور انگلینڈ لائنز کے درمیان سیریز کے حوالے سے بتایا کہ وہ سیریز کھیلنے کیلئے مزید یہاں تین سے چار مہینے ٹھہریں گے۔’یہ ایک اور مشکل سیریز ہو گی۔مجھے لائنز کی کپتانی کا موقع ملا ہے، لہذا یہ ایک اور اچھا تجربہ ہو گا‘۔وینس نے تسلیم کیا کہ جمعرات کو ڈیبیو ٹی ٹوئنٹی کھیلتے ہوئے وہ بہت نروس تھے۔’مجھے تمام فارمیٹس کھیلنا پسند ہے۔ مجھے ٹی ٹوئنٹی کھیلنے کا موقع ملا ہے، امید ہے کہ مستقبل میں ون ڈے اور ٹیسٹ بھی کھیل سکوں گا‘۔

آل راونڈر کرس کینز میچ فکسنگ الزامات سے بری

لندن: نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان آل راونڈر کرس کینز کو لندن کی ایک عدالت نے ٹیسٹ کرکٹ میں میچ فکسنگ کے الزامات سے بری کر دیا۔سات خواتین اور پانچ مرد ججوں پر مشتمل ثالثی عدالت نے نو ہفتوں کی سماعت کے بعد 45 سالہ کرس کینز کو جھوٹے بیان اور انصاف کی راہ میں حائل ہونے کا مرتکب نہیں پایا۔کرس کینزنے عدالت سے باہر آکر کہا کہ “گزشتہ پانچ سال کسی عذاب سے کم نہ تھے، میں زیادہ خوش نہیں ہوسکتا تھا، یہ ایک فتح نہیں ہے کیونکہ میرے خیال میں اس طرح کے مقدموں میں کسی کی جیت نہیں ہوتی، جو کوئی بھی اس کا شکار ہو اس کیلئے یہ سب کسی عذاب سے کم نہیں ہوتا۔کرکٹ میں واپسی کے ایک سوال پران کا جواب تھا کہ “نہیں، یہ واپس جانے کے لیے بہت مشکل وقت ہوگا، بہت نقصان ہوچکا ہے میرے خیال میں یہ بدقسمتی اور مایوس کن ہے”۔کرس کینزکی جانب سے انڈین پریمیئر لیگ کے سابق چییئرمین للیت مودی پر2010 میں میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کا الزام لگانے پر 2012 میں مقدمہ دائر کیا گیا تھا جس کے بعد ان پر الزام لگائے گئے تھے۔
2013 میں کرس کینز کے خلاف اس وقت الزامات ترتیب دیے گئے تھے کہ جب آئی سی سی نے نیوزی لینڈ کے تین سابق کھلاڑیوں کے خلاف میچ فکسنگ کے الزامات پر تفتتیش کی تصدیق کی تھی۔کرس کینز نے الزام تراشی کے مقدمے میں 1لاکھ 35 ہزار ڈالر جیتے ہیں لیکن ان پر عدالت سے جھوٹ بولنے کا الزام عائد کیا گیا تھا جہاں انہوں نے کہا تھا کہ میں نے کرکٹ میں کبھی بھی دھوکے بازی نہیں کی۔سابق آل راو¿نڈر پر ساتھی کھلاڑی لو ونسنٹ کو جھوٹی گواہی دینے کے لیے تیار کر کے انصاف کی راہ میں رکاو¿ٹیں ڈالنے کا بھی الزام تھا۔کرس کینز کے دوست اور ان کے وکیل بیرسٹر اینڈریو فچ ہولینڈ بھی اس الزام سے بری ہوگئے ہیں۔دس گھنٹے طویل غور و خوض کے بعد جسٹس سوینے نے وکیل کو کرکٹ میں کسی غلطی کا مرتکب ہونے کے الزام سے بری کرنے کا پروانہ جاری کردیا۔عدالت نے نیوزی لینڈ کے کپتان مک کولم اور آسٹریلیا کے سابق کپتان رکی پونٹنگ سے شہادتیں اکھٹی کی تھیں۔مک کولم نے کہا تھا کہ کرس کینز نے ان سے بھی میچ فکسنگ کے حوالے سے ‘کاروباری معاملات”طے کرنے کی کوشش کی تھی۔لیکن کینز نے مقدمے کی سماعت کے دوران مسلسل میچ فکسنگ میں ملوث ہونے کے الزامات کی تردید کی تھی۔کینز نے للیت مودی کی جانب سے میچ فکسنگ کے الزامات پر انتہائی حیرت اور غصے کا اظہار کیا تھا اور اس بات پر انھیں صدمہ ہواتھا کہ میک کولم ان پر میچ فکسنگ کی ترغیب دینے کا الزام دے سکتے ہیں۔انھوں نے عدالت کو کہا تھا کہ انھوں نے 2008 میں مک کولم سے اسپاٹ فکسنگ کے موضوع پر بات کی تھی کیونکہ اس وقت ہندوستان میں میچ فکسنگ عام موضوع تھا۔کیزکا کہنا تھا کہ میچ فکسنگ کے حوالے سے بہت مختصر بات کی گئی تھی اور یہ کہنا مکمل طور پر غلط ہے کہ شرط لگانا میچ فکسنگ کے برابر ہے۔

بٹسمین یونس خان نے اپنا تاریخ ساز بیٹ انڈس اسپتال کو عطیہ کردیا

پاکستان ٹیسٹ ٹیم کے تجربہ کار بیٹسمین یونس خان نے اپنا تاریخ ساز بیٹ انڈس اسپتال کو عطیہ کردیا جو مستحق افراد کے علاج میں مدد کے لیے نیلام کردیا جائے گا.پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے تجربہ کار بیٹسمین یونس خان کراچی کے مقامی ہوٹل میں ایک تقریب میں شریک تھے جہاں انھوں نے اپنے تاریخ ساز بلے کو انڈس اسپتال کے لیے عطیہ کرنے کا اعلان کیا۔اسپتال انتظامیہ کا کہنا تھا کہ وہ اس بیٹ کو نیلام کریں گے اور اس کے ذریعے جو رقم حاصل ہوگی وہ اسپتال کی تعمیر اور دیگر کاموں میں خرچ ہوگی۔۔یونس خان نے مخیر افراد سے اپیل کی وہ اگے آئیں اور اس ریکارڈ ساز بلے کو جتنے زیادہ پیسوں سے خرید سکتے ہیں خریدیں تاکہ مستحق افراد کے لیے اسپتال کا تعمیراتی کام جلد از جلد مکمل کیا جاسکے۔یونس خان نے حال ہی میں انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں قومی ٹیم کے سابق کپتان جاوید میانداد کا پاکستان کی جانب سے ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے کاریکارڑ خوب صورت چھکا لگا کراپنے نام کیا تھا، اب اسی بلے کو مستحق افراد کی بہتری کے لیے عطیہ کردیاہے۔اس موقع پر یونس خان کا کہنا تھا کہ پاکستان نے انھیں بہت کچھ دیا ہے اب وقت آگیا ہے کہ پاکستان کے لیے کچھ کروں۔انھوں نے مخیر حضرات سے اپیل کی کہ آگے بڑھیں اور سماجی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔قومی ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی بھی پشاور میں اسپتال کی تعمیر اور دیگر فلاحی کاموں میں سرگرم عمل ہیں۔پاک بھارت سیریز کے حوالے سے یونس خان کا کہنا تھا کہ دونوں ملکوں کے درمیان کرکٹ سے خطے کو بہت فائدہ ہو گا اور کھلاڑیوں کو انفرادی طور پر بھی بہت سیکھنے کو ملے گا۔

پاکستان اور بھارت کی سیریز کے امکانات کم ہو گئے

نئی دہلی: بھارتی حکومت پرپاک بھارت کرکٹ سیریز کو گرین سگنل نہ دینے کے لیے ہندو انتہا پسندوں کا دباو¿ بڑھ گیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ہندو انتہا پسندوں کے بڑھتے دباو کے سبب اس بات کا امکان انتہائی کم نظر آتا ہے کہ مودی سرکار پاک بھارت سیریز کے لیے بھارتی کرکٹ بورڈ کو گرین سگنل دے۔ معروف بھارتی صحافی وکرانت گپتا کے مطابق اگر چہ بھارتی حکومت تاحال پاک بھارت کرکٹ کے حوالے سے کوئی اعلان کرنے سے ہچکچا رہی ہے تاہم اب بھی اس بات کا امکان موجود ہے کہ منگل تک مودی سرکار کی جانب سے بھارتی کرکٹ بورڈ کو پاکستان سے سیریز کے لیے گرین سگنل مل جائے گا۔

آفریدی ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بولر بن گئے

دبئی:پاکستانی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد خان آفریدی ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بولر بن گئے۔جمعے کو انگلینڈ کے خلاف دبئی میں شاہد آفریدی نے 4اوورز میں 15 رنز دے کر 3وکٹیں حاصل کیں۔شاہد آفریدی نے86وکٹیں 86میچوں میں حاصل کی ہیں۔یہ عالمی ریکارڈ ہے۔اس سے قبل یہ عالمی ریکارڈ پاکستان ہی کے سعید اجمل کا تھا جنہوں نے64میچوں میں85کھلاڑیوں کو آ?ٹ کیا تھا۔پاکستان کے عمر گل نے 83کھلاڑیوں کو ا??ٹ کیا ہے۔سری لنکا کے لاستھ ملنگا 74 وکٹ کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہیں۔

جیمز سدر لینڈ نے پاکستان کو دو ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ کھیلنے کی تجویز دے دی

سڈنی:بھارت کے منہ پرطمانچہ ،کرکٹ آسڑیلیانے پاکستان کرکٹ بورڈکواہم پیغام دے دیا۔کرکٹ آسٹریلیا کے سربراہ جیمز سدر لینڈ نے آئندہ گرمیوں میں پاکستان کو دو ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ کھیلنے کی تجویز دی ہے۔ایک انٹرویو میں انہوںنے کہاکہ ہم جنوبی افریقہ سے بھی ایک اور ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ کھیلنے کےلئے تیار ہیں . آئندہ گرمیوں میں چھ ٹیسٹ میچ ہونگے جن میں سے پاکستان اور جنوبی افریقہ کے خلاف تین . تین ٹیسٹ کھیلے جاسکتے ہیں. انہوںنے کہاکہ یہ درست وقت میں درست جگہ پر اور بہتر حالات میں میچ ہوسکتے ہیں۔انہوںنے کہاکہ نیوزی لینڈ کے خلاف بھی آئندہ سیزن میں مزید میچ کھیلے جاسکتے ہیں

بھارتیوں کی ارجنٹائنی ٹیم کی بس پر پتھراو

رائے پور: بھارت میں ہندو انتہا پسندوں سے شروع ہونے والا پرتشدد رویہ ختم ہونے ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہاہے اور تازہ ترین اطلاعات کے مطابق اب غیر ملکی ٹیمیں بھی اس کا نشانہ بننے لگی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ورلڈ ہاکی مینز لیگ میں شکست کے بعد بھارتیوں نے ارجنٹائنی ٹیم کی بس پر پتھراو کر دیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق میچ کے بعد ہوٹل روانگی کے وقت ارجنٹائنی ٹیم کی بس پر پتھر برسائے گئے جس سے بس کے شیشے ٹوٹ گئے اور اس میں سوار ارجنٹائنی ٹیم کے کھلاڑی شدید خوف زدہ ہوگئے۔یاد رہے کہ مینز ہاکی میں ارجنٹائن نے بھارت کو 3گولز سے شکست دی تھی۔ واضح رہے کہ بھارت میں غیرملکی ٹیموں کے ساتھ کیا جانے والا یہ سلوک پہلی مرتبہ نہیں اس سے قبل حال ہی میں جنوبی افریقا کے خلاف ٹی ٹونٹی میچ کے دوران جب شائقین نے اپنی ٹیم کی شکست کو قریب دیکھا تو گراونڈ میں کچرا پھینکنا شروع کردیا جس کے باعث میچ کو روکنا پڑا جب کہ چیئرمین پی سی بی شہریار خان جب بی سی سی آئی کے صدر ششانک منوہر کی دعوت پر بھارت پہنچے تو ان کی موجودگی میں انتہا پسند بی سی سی آئی ہیڈکوارٹر پہنچ گئے اور دونوں ممالک کے کرکٹ سربراہان کے درمیان ملاقات رکوا دی۔

Google Analytics Alternative