کھیل

کرکٹ کی دنیا میں حیران کن ریکارڈ،اور وہ بھی خواتین کے نام

کرکٹ کی دنیا میں آئے روز نئے نئے ریکارڈز بنتے رہتے ہیں ، مگر قارئین یہ پڑھ کر حیران ہونگے کہ کرکٹ کی دنیا میں اب تک کا بننے والا سب سے بڑا ریکارڈ خواتین کا ہے۔تفصیلات کیمطابق خواتین کے ڈومیسٹک ایک روزہ کرکٹ ٹورنامنٹ میں زرعی ترقیاتی بینک کی ٹیم نے سب سے زیادہ ٹوٹل کا عالمی ریکارڈ قائم کر دیا ہے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے تحت کروایا جانے والا خواتین کا قومی ڈومیسٹک ایک روزہ کرکٹ ٹورنامنٹ جاری ہے۔اس سلسلے میں زرعی ترقیاتی بینک اور ملتان کی ٹیموں کے درمیان کھیلے جانے والے میچ میں ایک حیران کن عالمی ریکارڈ بن گیا ہے۔زرعی ترقیاتی بینک کی ٹیم نے ملتان کیخلاف بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں 3 وکٹوں کے نقصان پر 504 رنز بنا ڈالے۔ زرعی ترقیاتی بینک کی جانب سے بسمہ معروف نے 159 رنز جبکہ جویریہ خان نے 150 رنز کی شاندار اننگ کھیلی۔ ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں 50 اوورز میں بنایا جانے والا یہ سب سے بڑا ٹیم ٹوٹل ہے۔

انضمام الحق کو12 لاکھ روپے دینے سے انکار کر دیا

پی سی بی نے انضمام الحق کو12 لاکھ روپے ماہانہ دینے سے انکار کر دیا، سابق کپتان کو افغان بورڈ بطور کوچ اتنی ہی رقم دے رہا ہے، پاکستانی حکام کے مطابق سابق چیف سلیکٹر ہارون رشید 5 لاکھ روپے لیا کرتے تھے انھیں اس سے کچھ زائد معاوضہ دینا ہی ممکن ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق انضمام الحق کو افغان کرکٹ بورڈ کوچنگ کیلیے ماہانہ 12 لاکھ روپے تنخواہ ادا کرتا ہے، انھوں نے پی سی بی کو جب اس بابت بتایا تو حکام نے ان سے معذرت کرلی کہ اتنی رقم دینا ممکن نہ ہوگا، افغانستان انھیں غیرملکی کوچ کا معاوضہ دے رہا ہے جبکہ یہاں وہ مقامی چیف سلیکٹر ہوں گے، بورڈ ہارون رشید کو 5لاکھ روپے ماہانہ دے رہا تھا، اس سے کچھ زائد انھیں دے سکے گا۔ ذرائع نے بتایا کہ6 سے 7 لاکھ روپے میں ڈیل ہونے کا امکان ہے۔ انضمام الحق نے اپنی مرضی کے سلیکٹرز رکھنے کا مطالبہ بھی کیا جسے بورڈ چیف شہریارخان نے منظور کر لیا، سابق کپتان آئندہ ہفتے فہرست پیش کریں گے۔ سابقہ سلیکشن کمیٹی سے بھی ایک سلیکٹر کو لیے جانے کا امکان ہے۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ انضمام بھی پی سی بی کی پیشکش قبول کرنے کا ذہن بنا چکے اور آئندہ 1،2روز میں ان کے تقرر کا باضابطہ اعلان کر دیا جائے گا، بطور چیف سلیکٹر انھیں کار، پیٹرول، موبائل فون و دیگر مراعات بھی حاصل ہوں گی، ان کا کام سال میں بس چند ٹیمیں منتخب کرنا ہی ہوگا، ایسے میں 7 لاکھ روپے ماہانہ ملنا بھی گھاٹے کا سودا ثابت نہیں ہوگا

انضمام الحق پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ کام کرنے پر رضامند

افغان کرکٹ بورڈ کا نیوٹرل وینیو شارجہ سے دلی منتقل ہو گیاہے افغانستان کرکٹ بورڈ نے اپنے کوچ انضمام الحق کا استعفی منظور کر لیا ہے۔ افغان کرکٹ بورڈ کے چیئر مین شفیق اللہ ستانکزئی کا کہنا ہے کہ انضمام کی جانب سے بھیجا گیا استعفی انہیں ای میل کے ذریعے مل گیاہے جسے انہوں نے قبول بھی کرلیا ہے ،انضمام نے قومی مفاد کی خاطر ہماری ٹیم کی کوچنگ چھوڑی ،ہم سمجھتے ہیں کہ اپنا ملک سب سے پہلے ہونا چاہیے۔ ان کا مزیدکہنا تھا کہ ان کی آج صبح چیئر مین پی سی بی شہریار خان سے بھی فون پر بات چیت ہوئی ہے اور انہوں نے افغانستان کے لیے ہیڈ کوچ دینے کی پیش کش کی ہے،پی سی بی نے ہمیشہ ہمارا ساتھ دیا اور ہم اس سے بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں۔قومی ٹیم کے سابق کپتان انضمام الحق نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ کام کرنے پر رضامندی ظاہر کر دی ہے۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق پاکستان کرکٹ بور ڈ کے چیئرمین شہریار خان نے انضمام الحق کے ساتھ ملاقات کی ہے جس دوران سلیکشن اور کوچنگ کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیاہے۔ نجی ٹی وی کا کہناتھا کہ انضمام الحق نے پی سی بی کے ساتھ کا م کرنے پر رضامندی ظاہر کر دی ہے جس کے بعدسابق کپتان کو چیف سلیکٹر سمیت اضافی ذمہ داریاں ملنے کا امکان ہے۔واضح رہے کہ انضمام الحق کو افغان کرکٹ بورڈ سے 10ہزار ڈالر مانانہ ملتے تھے

کرس گیل کے لیے اچھی خبر

کوچ فل سیمنز نے ویسٹ انڈین کرکٹ بورڈ سے درخواست کی ہے کہ آسٹریلیا کے خلاف آئندہ ماہ شیڈول ون ڈے سیریز کے لیے ٹیم میں کرس گیل اور ڈیرن سیمی کو شامل کیا جائے۔ کوچ نے کہا کہ وہ صرف اس بات کی امید ہی کرسکتے ہیں کہ بورڈ اپنی حالیہ پالیسی کا دوبارہ جائزہ لے جس میں انٹرنیشنل کرکٹ کا اہل ہونے کیلیے بہت زیادہ ڈومیسٹک کرکٹ میں موجودگی پر زور دیا گیا ہے، جون میں ویسٹ انڈیز، آسٹریلیا اور جنوبی افریقا کی 3 ملکی سیریز کے سلسلے میں میزبانی کرے گا جس میں اسے اسٹار کرکٹرز کا ساتھ حاصل نہیں ہوگا۔ امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ کرس گیل اور آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوئنٹی جیتنے والی سائیڈ کے قائد ڈیرن سیمی اس ایونٹ کا حصہ نہیں ہوں گے تاہم ٹیم کے کوچ فل سیمنز چاہتے ہیں کہ دونوں مایہ ناز کھلاڑی اس ایونٹ میں شریک ہوں جن کی موجودگی سے ٹیم بیلنس ہوگی جب کہ اس حوالے سے انہوں نے کرکٹ بورڈ پر بھی زور دیا ہے

پاکستانیوں کےلیے کھیل کے میدان سے خوشخبری

اذلان شاہ ہاکی کپ میں پاکستان نے جاپان کو 1-4 سے شکست دے کر ایونٹ میں دوسری کامیابی حاصل کرلی۔ملائشیا کے شہر ایپوہ میں جاری 25ویں اذلان شاہ ہاکی کپ میں پاکستان نے جاپان کو ایک کے مقابلے میں 4 گول سے شکست دی۔ پاکستان کی جانب سے ارسلان قادر نے 2، رضوان علی اور علی شان نے ایک ایک گول کیا۔ دونوں ٹیموں کی جانب سے پہلے کوارٹر میں دفاعی کھیل کا مظاہرہ کیا گیا لیکن دوسرے ہاف کے 20ویں منٹ میں علی شان نے پہلا گول کرکے ٹیم کو برتری دلائی اور 4 منٹ بعد ہی رضوان علی نے ایک اور گول داغ کر سبقت کو دو درجے تک بڑھا دیا، تھوڑی ہی دیر بعد جاپان کو پنالٹی کارنر ملا لیکن شوتا یانادا گول کرنے میں ناکام رہے، اس طرح دوسرے کوارٹر کے اختتام تک گرین شرٹس کو جاپان پر 0-2 کی برتری حاصل تھی۔<br/> کھیل کے تیسرے کوارٹر کے 48ویں منٹ میں جاپان کو ایک اور پنالٹی کوارٹر ملا جس کا بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے شوتا یانادا نے بغیر کوئی غلطی کئے گیند کو جال میں پہنچا دیا جس کے بعد گرین شرٹس کی جانب سے مخالف ٹیم کے کورٹ پر پے درپے حملے کئے گئے جس میں ارسلان قادر کو کامیابی ملی اور انہوں نے گول کر کے ٹیم کا اسکور 1-3 کردیا۔ کھیل کے اختتام سے 3 منٹ قبل ارسلان قادر نے ایک اور گول داغ کر ٹیم کا اسکور 1-4 تک پہنچا دیا جو میچ کے اختتام تک برقرار رہا۔ گرین شرٹس کی جانب سے ارسلان قادر نے جاپان کے خلاف 2 اور مجموعی طور پر ایونٹ میں 6 گول کئے۔<br/> پاکستان نے ایونٹ میں اپنے 6 میچز میں سے 2 میں کامیابی حاصل کی اور اس طرح پانچویں پوزیشن کے لئے گرین شرٹس کا مقابلہ کل ہوگا۔

حفیظ ایک بار پھر پی سی بی کی نظر میں

پی سی بی محمد حفیظ کو دوبارہ آل رائونڈر بنانے کیلیے بے تاب ہے،لاہور میں بائیو مکینک لیب فعال بنانے کے بعد ماہرین بولنگ ایکشن کو قانونی حد میں لانے کیلیے کام کرینگے۔ ایک سالہ پابندی کی مدت مکمل ہوتے ہی 8جولائی کو چنئی لیب میں ٹیسٹ کیلیے بھجوایا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق محمد حفیظ کا بولنگ ایکشن نومبر 2014 میں نیوزی لینڈ کیخلاف دبئی ٹیسٹ کے دوران مشکوک قرار دیا گیا تھا،اگلے ہی ماہ بازو کا خم 31ڈگری ریکارڈ کیے جانے پر انھیں پابندی کا سامنا کرنا پڑا، جنوری میں غیر رسمی ٹیسٹ میں بھی ان کے مسائل برقرار رہے، ورلڈ کپ 2015 سے قبل حفیظ انجری کا بھی شکار ہوئے اور پاکستان بطور بیٹسمین بھی ان کی خدمات سے محروم رہا، بولنگ ایکشن کی اصلاح کے بعد اپریل میں ٹیسٹ کلیئر کرنے کے بعد وہ ایک بار پھر بطور آل رائونڈر دستیاب ہوئے۔ جون میں سری لنکا کیخلاف گال ٹیسٹ کے دوران ایک بار پھر رپورٹ اور پابندی کا شکار ہوئے، ضابطے کے تحت اگر کوئی بولر 2 سال میں دوسری مرتبہ غیرقانونی بولنگ ایکشن کی زد میں آئے تو اس پر ایک سال کی پابندی عائد کر دی جاتی ہے، مدت پوری ہونے کے بعد محمد حفیظ اپنا ایکشن جولائی میں کلیئر کرا سکتے ہیں، مقامی ہوٹل میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی شہریار خان نے کہا کہ لاہور میں بائیو مکینک لیب کو فعال بنانے کیلیے تیزی سے پیش رفت جاری ہے، وہ جلد ہی کام شروع کردے گی۔ یہاں محمد حفیظ کے بولنگ ایکشن کا ٹیسٹ ہوگا، ماہرین اسے قانونی حد میں لانے کیلیے کام کرینگے، اس کے بعد انھیں 8جولائی کو آئی سی سی کی منظور شدہ چنئی لیب میں ٹیسٹ کیلیے بھجوایا جائے گا۔ یاد رہے کہ محمد حفیظ ورلڈ ٹوئنٹی 20 میں انجرڈ ہونے کے بعد فیصل آباد میں شیڈول پاکستان کپ کے مقابلوں میں بھی شریک نہیں ہو سکیں گے

افغانستان کی کرکٹ ٹیم جولائی میں آئرلینڈ کا دورہ کرے گی

کابل ۔ آئرلینڈ اور افغانستان کی کرکٹ ٹیموں کے مابین ون ڈے سیریز کے شیڈول کا اعلان کر دیا گیا ہے، افغان ٹیم جولائی میں آئرش ٹیم کے خلاف پانچ ون ڈے میچوں کی سیریز کھیلے گی۔ دونوں ٹیموں کے مابین پہلا ون ڈے 10 جولائی، دوسرا 12 جولائی، تیسرا 14 جولائی، چوتھا 17 جولائی جبکہ پانچواں اور آخری میچ 19 جولائی کو کھیلا جائے گا۔ تمام میچز سول سروس کرکٹ کلب بیلفاسٹ میں ہوں گے۔ افغانستان نے ورلڈ ٹی 20 میں عالمی چیمپئن ویسٹ انڈیز کو گروپ میچ میں شکست دی جبکہ دیگر ٹیموں کے خلاف بھی اس کی کارکردگی شاندار رہی۔ آئرلینڈ ٹیم کے کوچ جان بریسویل کے مطابق افغانستان کے خلاف سیریز مشکل اور کانٹے دار ہو گی۔

آئی پی ایل میں (آج) دو میچ کھیلے جائیں گے

ممبئی ۔ انڈین پریمیئر لیگ میں (آج) ہفتہ کو مزید دو میچ کھیلے جائیں گے، پہلا میچ سن رائیزرز حیدر آباد اور کولکتہ نائٹ رائیڈرز جبکہ دوسرا میچ ممبئی انڈینز اور گجرات لائنز کے درمیان کھیلا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق آئی پی ایل کے نویں ایڈیشن کے سنسنی خیز مقابلے بھارت میں جاری ہیں، میگا ایونٹ میں (آج) ہفتہ کو پہلے میچ میں سن رائیزرز حیدر آباد اور کولکتہ نائٹ رائیڈرز کی ٹیمیں راجیو گاندھی سٹیڈیم، حیدر آباد میں مدمقابل ہوں گی۔ دوسرا میچ ممبئی انڈینز اور گجرات لائنز کے مابین وانکھیڈے سٹیڈیم، ممبئی میں کھیلا جائے گا۔

Google Analytics Alternative