کھیل

محمد عامر کے پاس لائف لائن سے فائدہ اٹھانے کا موقع موجود

لاہور: پاکستان محمد عامر کو لائف لائن سے فائدہ اٹھانے کا بھرپور موقع فراہم کرے گا۔

اسپاٹ فکسنگ کیس میں 5 سالہ پابندی کی وجہ سے عامر ورلڈکپ 2011 کے بعد 2015میں بھی شرکت سے محروم رہے، انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی پر اس بار بھی ان کا یہ خواب پورا ہوتا دکھائی نہیں دیتا، چیمپئنز ٹرافی فائنل کے بعد 14ون ڈے میچز میں صرف 5وکٹیں حاصل کرنے والے پیسر کو ورلڈکپ اسکواڈ کے بجائے انگلینڈ سے ون ڈے سیریز میں صلاحیتیں ثابت کرنے کا ایک اور موقع فراہم کیا گیا۔

گزشتہ روز پہلے ون ڈے کی ٹیم میں بھی وہ شامل تھے، پاکستانی بولنگ لائن اپ میں حسن علی اور شاہین شاہ آفریدی کی پوزیشن تو مستحکم ہے۔ البتہ عامر انگلینڈ کیخلاف چیمپئنز ٹرافی فائنل کی کارکردگی دہرانے میں کامیاب ہوئے تو جنید خان اور محمد حسنین کی جگہ خطرے میں پڑے گی۔

نوجوان پیسر کا پی ایس ایل کے سوا کوئی تجربہ نہیں لیکن وہ پاکستان ٹیم میں ایک عرصے سے محسوس کی جانیوالی اسپیڈ اسٹار کی کمی پوری کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں،امکان یہی ہے کہ محمد عامر کی واپسی ہوئی تو جنید کی چھٹی ہوگی۔

اوول میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کپتان سرفراز نے کہاکہ محمد عامر کو بھرپور موقع دیا جائے گا، ورلڈکپ اسکواڈ میں تبدیلیوں کیلیے 23مئی تک کا وقت باقی ہے،اس سے قبل سینئر پیسر اپنی صلاحیتیں ثابت کرتے ہوئے جگہ بنا سکتے ہیں۔

پہلا ون ڈے: انگلینڈ کی پاکستان کو پہلے بیٹنگ کی دعوت، کھیل بارش سے متاثر

انگلینڈ اور پاکستان کے درمیان 5 میچوں کے سیریز کا پہلا میچ بارش کے باعث روک دیا گیا ہے جبکہ پاکستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے17 ویں اوور میں 2 وکٹوں پر 71 رنز بنا لیے ہیں۔

انگلینڈ نے پاکستان کے خلاف سیریز کے پہلے ایک روزہ میچ میں ٹاس جیت کر مہمان ٹیم کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تاہم لندن میں بارش کے باعث میچ مقررہ وقت پر شروع نہ ہوسکا جس کے باعث میچ کو 47،47 اوورز تک محدود کردیا گیا ہے۔

پاکستان کی جانب سے بیٹنگ کا آغاز فخرزمان اور امام الحق نے کیا لیکن فخرزمان صرف 10 رنز پر آرچر کی گیند پر پویلین لوٹ گئے۔

بابراعظم آؤٹ ہونے والے دوسرے بلے باز تھے جو 45 کے اسکور پر 16 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جس کے بعد حارث سہیل اور امام الحق نے اسکور کو 71 رنز تک پہنچایا تھا کہ ایک مرتبہ پھر بارش شروع ہوئی اور کھیل کو روک دیا گیا۔

بارش تھمتے ہی دوبارہ کھیل کا آغاز ہوا تو میچ کو مزید محدود کرتے ہوئے 41 اوورز کی اننگز کردیا گیا۔

سیریز کے پہلے میچ کے لیے پاکستان نے تجربہ کار باؤلر محمد عامر اور آصف علی کو بھی ٹیم میں شامل کرلیا ہے جبکہ دونوں کھلاڑی ورلڈ کپ ٹیم کا حصہ نہیں ہیں۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہیں:

پاکستان: سرفرازاحمد( کپتان)، امام الحق، فخرزمان، بابراعظم، حارث سہیل، آصف علی، عماد وسیم، فہیم اشرف، حسن علی، شاہین شاہ آفریدی، محمد عامر

انگلینڈ: آئن مورگن (کپتان)، جیمز وینس، جونی بیئراسٹو، جو روٹ، جوز بٹلر، بین اسٹوکس، جو ڈینلی، عادل رشید، جوفرا آرچر، کرس ووکس، لیام پلنکٹ

قبل ازیں قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ہماری تیاری بہت اچھی ہے اور کوشش کریں گے کہ ہم انگلینڈ کے خلاف 5 میچوں میں اچھی کرکٹ کھیلیں گے۔

انہوں نے کہا کہ میزبان ملک کے خلاف سیریز کھیل کر ورلڈ کپ سے قبل اعتماد حاصل کرنے کی کوشش کریں گے۔

ٹیم کی خامیوں پر بات کرتے ہوئے سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ جب دو بہترین ٹیمیں کھیل رہی ہوتی ہیں تو باؤلنگ اور بیٹنگ تو اچھی ہوتی ہے، تاہم ایسے میں اچھی فیلڈنگ دونوں ٹیموں کے درمیان واضح فرق ثابت ہوتی ہے۔

انہوں نے اعتراف کیا کہ ٹی ٹوئنٹی میچ میں ٹیم کی فیلڈنگ خراب رہی تھی۔

سرفراز احمد نے کہا کہ انگلینڈ کی ٹیم گزشتہ ڈیڑھ سال سے بہترین کرکٹ کھیل رہی ہے اور کوشش کریں گے کہ ان کے خلاف اچھی کرکٹ کھیلی جائے۔

قومی ٹیم کے کپتان نے بتایا کہ تجربہ کار آل رآؤنڈر شعیب ملک سیریز کے دوسرے میچ میں ٹیم کو دستیاب ہوں گے۔

خیال رہے کہ 5 مئی کو کھیلے گئے سیریز کے واحد ٹی ٹوئنٹی میچ میں انگلینڈ نے پاکستان کو 8 وکٹوں سے باآسانی شکست دے دی تھی۔

ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ کی نمبر ایک ٹیم کے ون ڈے فارمیٹ پر نظر ڈالی جائے تو مایوس کن اعداد و شمار سامنے آئیں گے۔

گرین شرٹس کو حال ہی میں متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں آسٹریلیا کے ہاتھوں 0-5 سے وائٹ واش کا سامنا کرنا پڑا تھا، جبکہ اس سے قبل جنوبی افریقہ کے خلاف 5 میچوں کی سیزیز میں اسے 2-3 سے شکست ہوئی تھی۔

اس سے قبل متحدہ عرب امارات میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے خلاف ہونے والی تین میچوں کی سیریز 1-1 سے برابر ہوگئی تھی۔

ریسلر انعام بٹ ورلڈ بیچ ریسلنگ سیریز کیلیے برازیل روانہ

قومی ریسلر انعام بٹ ورلڈ بیچ ریسلنگ سیریز میں حصہ لینے کے لیے برازیل روانہ ہوگئے۔

کامن ویلتھ گیمز کے گولڈ میڈلسٹ اور ورلڈ بیچ ریسلنگ چیمپئین انعام بٹ اور کوچ محمد ریاض اسلام آباد سے براستہ  دبئی برازیل روانہ ہو ئے، ورلڈ بیچ ریسلنگ سیریز کے مقابلے 10 اور 11 مئی کو ریو ڈی جنیرومیں  شیڈول ہیں۔ ورلڈ بیچ ریسلنگ سیریز ورلڈ بیچ مقابلوں کا کوالیفائنگ راونڈ بھی ہیں جن کی میزبانی امریکہ کرے گا۔

انعام بٹ کا کہناہے کہ انہوں نے سخت محنت کرکے اپنے وزن میں 10 کلو گرام کی کمی کی ہے، تیاری توبھر پور ہے، قوم سے بھی اپیل ہے کہ وہ بھی کامیابی کے لیے دعا کرے۔

علیم ڈار نے ون ڈے میچوں کی ڈبل سنچری مکمل کرلی

لاہور: علیم ڈار نے ایک اور اعزاز اپنے نام کرتے ہوئے ایک روزہ میچز سپروائز کرنے کی ڈبل سنچری مکمل کرلی۔

لگاتار 3 بار آئی سی سی کے بیسٹ امپائر کی ٹرافی جیتنے والے 50 سالہ پاکستانی امپائر علیم ڈار نے ایک روزہ میچز سپروائز کرنے کی ڈبل سنچری مکمل کرلی ہے، یہ اعزاز انہوں نے آئرلینڈ میں جاری تین ملکی ٹورنامنٹ میں بنگلا دیش اور ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ سپروائز کرکے اپنے نام کیا۔

علیم ڈار کا کہنا ہے کہ آئی سی سی کا مشکور ہوں جنہوں نے مجھ پر اعتماد کیا، پاکستانی شائقین کرکٹ اور میڈیا نے ہمیشہ بہت سپورٹ کیا، جب تک فٹ رہا امپائرنگ جاری رکھوں گا۔

واضح رہے کہ علیم ڈار 125 ٹیسٹ میچوں میں ذمہ داریاں نبھاچکے ہیں، انہیں عالمی ریکارڈ کے لیے مزید 3 میچ درکار ہیں، علیم ڈار کو سب سے زیادہ 43 ٹی ٹوئنٹی میچز بھی سپروائز کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔ اس سے پہلے نیوزی لینڈ کے بلی باوڈن 200 میچز میں کھڑے ہونے کا اعزاز رکھتے تھے، جنوبی افریقین روڈی کوئٹزن سب سے زیادہ 209 میچ سپروائز کرکے پہلے نمبر پر ہیں۔

پاکستان ٹیم کے دورہ آسٹریلیا کا شیڈول جاری

لاہور: کرکٹ آسٹریلیا نے رواں سال پاکستانی ٹیم سے ہوم سیریز کا شیڈول جاری کردیا۔

کرکٹ آسٹریلیا نے رواں سال پاکستانی ٹیم سے ہوم سیریز کا شیڈول جاری کردیا۔ دونوں ٹیمیں تین ٹی ٹوئنٹی اور دو ٹیسٹ میچز میں مد مقابل ہوں گی، ایک ڈے نائٹ ٹیسٹ پنک گیند سے کھیلا جائے گا، ٹی ٹوئنٹی میچز3، 5 اور8 نومبر کو شیڈول ہیں۔

میزبانی سڈنی، کینبرا اورپرتھ کریں گے، پہلا ٹیسٹ 21 سے 25 نومبرتک برسبین میں ہوگا، دوسرے ڈے نائٹ ٹیسٹ کا انعقاد 29 نومبرسے 3 دسمبر تک ایڈیلیڈ میں ہوگا۔

انگلینڈ کے خلاف سیریز میں بھی پاکستان ٹیم میں تجربات کا سلسلہ جاری رہے گا

لاہور: آسٹریلیا میں انگلینڈ کے خلاف سیریز میں بھی پاکستان ٹیم میں تجربات کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

آسٹریلیا میں انگلینڈ کے خلاف سیریز میں بھی پاکستان ٹیم میں تجربات کا سلسلہ جاری رہے گا۔ شاداب خان کا خلا پر کرنے کے لیے محمد نواز کا نام بھی زیر غور آگیا، ورلڈ کپ سے قبل اپنے اسکواڈ کو متوازن بنانے کے خواہاں پاکستان کو انگلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز میں اہم فیصلے کرنا ہیں، خطرناک وائرس کا شکار شاداب خان زیر علاج اور ان کی اسکواڈ میں شمولیت کے حوالے سے یقینی طور پر کچھ نہیں کہا جاسکتا، متبادل کے طور پر یاسر شاہ اس وقت انگلینڈ میں اسکواڈ کے ہمراہ ہیں لیکن محدود اوورز کی کرکٹ میں ان کی کارکردگی پر سوالیہ نشان موجود ہے۔

ذرائع کے مطابق انگلینڈ کے خلاف میچز میں آزمائش پر پورا نہ اتر سکے تو متبادل کے طور پر محمد نواز کو ورلڈکپ میں شرکت کا پروانہ جاری ہوسکتا ہے، آل راؤنڈر پی ایس ایل میں اچھی فارم میں نظر آئے تھے، بیٹنگ میں بھی یاسر شاہ سے بہتر کارکردگی دکھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

اسی سیریز میں پاکستان کو محمد عامر اور آصف علی کے حوالے سے بھی فیصلے کرنا ہیں، دونوں ورلڈ کپ کے 15 رکنی اسکواڈ میں شامل نہیں، آصف علی کو بھی ثابت کرنا ہوگا کہ وہ ٹیم میں موجود پاور ہٹر کا خلا پُر کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق آل راؤنڈر محمد حفیظ تاحال میچ فٹنس حاصل نہیں کر پائے، 2 ماہ کے قریب کرکٹ کے میدانوں سے دوری کے بعد فوری طور پر فارم اور فٹنس ثابت کرنا ان کے لیے بہت بڑا چیلنج ہوگا، محمد حفیظ ناکام رہے تو ٹیم کمبی نیشن بہتر بنانے کے لیے مینجمنٹ کو نئے سرے سے پلاننگ کرنا ہوگی۔

یونس خان کا انڈر 19 ٹیم کی کوچنگ سے انکار

پی سی بی نے یونس خان کے ساتھ معاملات طے نہ ہونے پر انڈر19 ٹیم کی کوچنگ کے لیے نئے امیدوار کی تلاش شروع کردی۔

سابق کپتان یونس خان نے سوشل میڈیا پر قومی انڈر 19 کی کوچنگ سے انکار کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے سوشل میڈیا پر اپنے اکاونٹ سے اس پوسٹ کو شیئر کیا ہے جس میں ان کی جانب سے انڈر نائن ٹین کی کوچنگ سے انکارکیا گیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے جونیئر سطح پر یونس خان  کو کوچنگ کی پیشکش کی تھی۔ ذرائع کےمطابق  یونس خان اوربورڈ کے درمیان کافی حد تک معاملات طے بھی پاگئے تھے لیکن سابق کپتان کوچنگ کے ساتھ جونیئر ٹیم کی سلیکشن کی سربراہی کے بھی خواہش مند تھے۔ ان کے مطالبات میں مرضی کا کوچنگ اسٹاف رکھنے کے ساتھ سلیکٹرز بھی ان کی پسند کے شامل تھے۔

بورڈ اور یونس خان کے درمیان  بعض معاملات پر اتفاق رائے ہو چکا تھا لیکن مالی معاملات سمیت چند دوسرے ایشوز پر فریقین کے اپنے موقف پر قائم رہنے کی وجہ سے مذاکرات کو حتمی شکل نہیں دی جاسکی۔

یونس خان کا موقف تھا کہ جس طرح بھارتی کرکٹ بورڈ راہول ڈریوڈ کو کوچنگ کے لیے بھاری معاوضہ اور مراعات دے رہا ہے، ان کے ساتھ بھی ایسا ہی سلوک کیا جائے۔ اس وقت انڈر نائن ٹیم کے کوچ تیمور اعظم خان ہیں ، محتشم رشید اسسٹنٹ کوچ کی ذمہ داریاں نبھارہے ہیں، بورڈ جونیئر ٹیم کے ساتھ مستقل کوچ کی تقرری کا خواہش مند ہے۔

علیم ڈار ون ڈے میچوں کی ڈبل سنچری سے ایک میچ کی دوری پر

پاکستانی امپائرعلیم ڈار ون ڈے میچوں کی ڈبل سنچری سے ایک میچ کی دوری پر ہیں۔

پاکستانی آئی سی سی ایلیٹ امپائر علیم ڈار کل ون ڈے میچوں کی ڈبل سنچری مکمل کریں گے، آئرلینڈ میں جاری تین ملکی ٹورنامنٹ میں 7 مئی کو  ویسٹ انڈیز اور بنگلہ دیش کے درمیان میچ ان کے کیرئرکا 200واں میچ ہوگا جس کو وہ سپروائز کرنے کا اعزاز حاصل کریں گے۔

اتوار کو  آئرلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے درمیان کھیلا گیا ریکارڈ ساز ون ڈے میچ علیم ڈارکا 199واں میچ تھا۔ جھنگ سے تعلق رکھنے والے 50 سالہ علیم سرور ڈار ایک روزہ میچوں کی ڈبل سنچری مکمل  کرنے والے تیسرے امپائر بن جائیں گے۔ اس فہرست میں جنوبی افریقہ کے روڈی کوٹزن 209  میچوں کے ساتھ ٹاپ پر ہیں، نیوزی لینڈ کے بلی باوڈن  206 ایک روزہ میچ سپروائز کرکے دوسرے نمبرپر ہیں۔

پی اینڈ ٹی جم خانہ لاہور کے پلیٹ فارم سے امپائرنگ شروع کرنے والے علیم ڈار 2004 میں آئی سی سی کے ایلیٹ پینل کا حصہ بنے۔ انہیں سب سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں امپائرنگ کا ریکارڈ قائم کرنے کے لیے مزید تین ٹیسٹ میچوں کی ضرورت ہے۔ جمیکا کے اسٹیوبکنر نے 128 ٹیسٹ میچ اپنے نام کے آگَے درج کرواچکے ہیں۔ علیم ڈار کے ٹیسٹ میچز کی تعداد 126 ہے، 2009  سے 2011 تک لگاتار تین بار آئی سی سی کے بیسٹ امپائر کی ٹرافی جیتنے والے یہ قابل فخر پاکستان امپائر اس سے پہلے سب سے زیادہ 43 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں امپائرنگ کا اعزاز بھی رکھتے ہیں۔ پرائیڈ آف پرفارمنس سمیت متعدد ایوارڈ اپنے نام کرنے والے علیم ڈار اس بار پانچویں بار ورلڈکپ میں ذمہ داریاں بھی نبھائیں گے۔

Google Analytics Alternative