کھیل

ہمارے کھلاڑی انگلش پلیئرزکے مقابلے میں اتنے سپر فٹ نہیں ہیں،وقار یونس

شارجہ: ہیڈ کوچ وقار یونس نےاانگلش ٹیم سے شکست کا ملبہ سیلکٹرز پر ڈالتے ہوئے کہا ہے کہ پلیئرز ایسے رن آوٹ ہورہے ہیںجیسے اسکول کے بچے،پاکستان کی کارکردگی مایوس کن رہی، سینیئرزکا رن آوٹ ہونا افسوناک ہے۔وقار یونس نے کہا کہ ہمارے کھلاڑی انگلش پلیئرزکے مقابلے میں اتنے سپر فٹ نہیں ہیں۔ سیلکٹرز سے پوچھنا پڑے گا ایسا کیسے چلے گا۔

آئی سی سی نے ڈی آرایس نظام کا جائزہ لیااور اس میں غلطی کا اعتراف کیا ہے

کرکٹ ویب سائٹ کرک انفو کے مطابق”آئی سی سی نے فیصلے کا جائزہ لیا اور اس میں غلطی کا اعتراف کیا ہے”۔آئی سی سی کا کہنا ہے کہ “امپائر کی جانب سے صحیح طریقہ کار کا انتخاب کیا گیا لیکن فیصلہ غلط تھا”۔واضح رہے آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان حال ہی میں کھیلے گئے ڈے اینڈ نائٹ ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگز میں کیوی اسپنر مچل سیٹنر کی جانب سے آسٹریلوی بیٹسمین ناتھن لیون کے خلاف اپیل کو امپائر نے رد کردیا تھا حالانکہ گیند کو بلے سے چھوتے ہوئے دکھایا گیا تھا جس پر ڈی آرایس نظام پر زبردست تنقید کی گئی تھی۔

پاکستان نے سپر اوور میں کم ترین اسکور کا بدترین ریکارڈ اپنے نام کر لیا

شارجہ: قومی ٹیم نے انگلینڈ کے خلاف تیسرے ٹی ٹوئنٹی میچ میں سپر اوور میں کم ترین اسکور کا بدترین ریکارڈ اپنے نام کر لیا۔شارجہ میں پیر کو کھیلے گئے میچ میں انگلینڈ نے پہلے کھیلتے ہوئے پاکستان کو 155 رنز کا ہدف دیا تاہم متعدد اتار چڑھاو کے بعد پاکستانی ٹیم بھی مقررہ اوورز میں 154 رنز ہی بنا سکی اور میچ ٹائی ہو گیا۔اس کے بعد میچ کا فیصلہ قانون کے مطابق سپر اوور پر کیا گیا، یہ پہلا موقع تھا کہ انگلینڈ کی ٹیم نے کسی ٹی ٹوئنٹی میچ کو ٹائی کیا ہو.پاکستانی ٹیم سپر اوور میں ایک وکٹ کے نقصان پر صرف تین رنز بنا سکی جبکہ کپتان شاہد آفریدی تین گیندوں پر کوئی بھی رن نہ بنا سکے۔انٹرنیشنل ٹی ٹوئنٹی میں اب تک ہونے والے مقابلوں میں سپر اوور میں کسی بھی ٹیم کا یہ سب سے کم اسکور ہے۔انگلینڈ نے چار رنز کا ہدف ایک گیند قبل حاصل کر کے میچ میں فتح حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ سیریز میں بھی 3-0 سے کلین سوئپ مکمل کر لیا۔

قومی ٹیم انگلینڈ سے ٹی ٹونٹی سیریز ہارنے کے بعد دوسری سے چھٹی پوزیشن پر آگئی

شارجہ:قومی ٹیم انگلینڈ سے ٹی ٹونٹی سیریز ہارنے کے بعد دوسری سے چھٹی پوزیشن پر آگئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق گرین شرٹس انگلینڈ سے 3 ٹی ٹونٹی میچوں کی سیریز شروع ہونے سے قبل دوسری پوزیشن پر براجمان تھی مگر ابتدائی دونوں میچوں میں شکست کے بعد پاکستان چوتھی پوزیشن پر آگیا جب کہ انگلینڈ کے ہاتھوں کلین سویپ کے بعد آفریدی الیون دوسری سے چھٹی پوزیشن پر آگئی ہے۔ انگلینڈ نے پاکستان کو پہلے ٹی ٹونٹی میں 14 رنز اور دوسرے میچ میں 3 وکٹوں سے شکست دے جب کہ دونوں ٹیموں کے درمیان تیسرا میچ ٹائی ہوا اور میچ کا فیصلہ سپر اوور میں ہوا ، جس میں پاکستان نے انگلینڈ کو 4 رنز کا ہدف دیا جو انگلینڈ نے پانچویں گیند پر پورا کرلیا۔ ٹی ٹونٹی رینکنگ میں سری لنکا پہلے ، ویسٹ انڈیز دوسرے ، آسٹریلیا تیسرے ، انگلینڈ چوتھے ، جنوبی افریقہ 5ویں ، پاکستان چھٹے ، بھارت 7ویں، نیوزی لینڈ 8ویں، افغانستان 9ویں اور بنگلہ دیش 10ویں نمبر پر موجود ہے۔

رونالڈو، میسی اور نیمار میں مقابلہ

لندن: فٹ بال عالمی تنظیم فیفا نے سال 2015کے بہترین کھلاڑی کے ایوارڈ بیلن ڈی اور کے لیے دنیائے فٹبال کے تین فٹبالرز لیونل میسی، کرسٹیانو رونالڈو اور برازیل کے نوجوان فٹ بالر نیمار کے ناموں کو شارٹ لسٹ کیا گیا۔گزشتہ آٹھ سالوں میں ساتویں دفعہ بارسلونا کے میسی اور ریال میڈرڈ کے رونالڈو میں سے کوئی ایک ممکنہ طور پر سال کے بہترین کھلاڑی کا تاج پہننے والے ہیں۔
2010 میں فرنچ فٹ بال کے بیلن ڈی اور کے الحاق سے قبل دونوں کھلاڑیوں کے درمیان سالانہ دنیا کے بہترین کھلاڑی کا مقابلہ ان کا نجی معاملہ بن گیا تھا۔میسی 9ویں مرتبہ بہترین کھلاڑی کا مقابلہ کررہے ہیں جس میں انھوں نے 2009 سے 2012 کے دوران چار مرتبہ کامیابی حاصل کی جبکہ رونالڈو نے تین دفعہ یہ اعزاز حاصل کیا. پہلی مرتبہ 2008 میں مانچسٹر یونائیٹڈ کی نمائندگی کرتے ہوئے اور حال ہی میں دونوں ایوارڈ ریال میڈرڑ کی جانب سے کھیلتے ہوئے حاصل کیے۔میسی بارسلونا کی جانب سے چمپیئنزلیگ، لالیگا اور کنگز کپ میں شان دار کاکردگی کے ساتھ 48 گول کرکے پانچویں دفعہ ایوارڑ جیتنے کے لئے فیورٹ ہیں۔دوسری جانب رونالڈو بھی 48 گول کر کے ان کے ہم پلہ ہیں تاہم ان کی جانب سے خود کو نمبر ایک فٹبالر قرار دیے جانے کے دعوو¿ں کے بعد سے ان کے حمایت میں کمی ہوئی ہے۔میسی اور لوئس سواریز کے ساتھ بارسلونا میں بہترین کھیل کا مظاہرہ کرنے والے برازیل کے نوجوان سپر اسٹار نیمار اس ایوارڈ کیلئے نامزد تیسرے دعوے دار ہیں۔بیلن ڈی اور ایوارڑ کے فاتح کے لیے قومی ٹیموں کے کوچ، کپتان اور نامور صحافی ووٹ ڈالیں گے اور اعلان 11 جنوری کو زیورخ میں ایک تقریب میں کیا جائے گا۔میسی اور نیمار کے کوچ لوئس انرک سال کے بہترین کوچ کے لیے بائرن میونخ کے پیپ گوارڈیولا اور چلی کے کوچ جورج سیمپولی کے ساتھ نامزد ہیں۔

انگلینڈ نے پاکستان کو سیریز کے آخری میچ میں بھی شکست دے دی

شارجہ میں پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں انگلینڈ نے سپر اوور میں پاکستان کو شکست دے کر سیریز تین، صفر سے جیت لی ہے۔پاکستان نے انگلینڈ کو سپر اوور میں میچ جیتنے کے لیے چار رنز کا ہدف دیا ہے۔ اس سے قبل پاکستان کی جانب سے کپتان شاہد آفریدی اور عمر اکمل سپر اوور میں بیٹنگ کرنے آئے اور صرف تین رنز ہی بنا سکے۔انگلینڈ کی جانب سے جاز بٹلر اور مورگن بیٹنگ کرنے آئے ہیں۔ جبکہ پاکستان کی جانب سے شاہد آفریدی سپر اوور کروائیں گے۔

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہار جیت کا فیصلہ سپر اوور پر ہوگا

شارجہ میں تین ٹی ٹوئنٹی میچوں کی سیریز کا آخری میچ برابر ہو گیا ہے اور اب پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہار جیت کا فیصلہ سپر اوور پر ہوگا۔پاکستان کی جانب سے سپر اوور میں بیٹنگ کرنے کپتان شاہد آفریدی اور عمر اکمل میدان میں اترے ہیں۔پاکستان کو جیتنے کے لیے آخری اوور کی آخری گیند پر دو رنز درکار تھے لیکن سہیل تنویر صرف ایک رن بنانے میں ہی کامیب ہو سکے۔

کرکٹر شین وارن کا سب سے بڑا سکینڈل منظر عام پر آ گیا

سڈنی: آسٹریلیا کے مایہ ناز کرکٹر شین وارن کا سب سے بڑا سکینڈل منظر عام پر آ گیا ہے۔ انہوں نے اپنے نام سے ایک فاونڈیشن (شین وارن فاو¿نڈیشن)بنا رکھی تھی جو لوگوں سے چندہ لے کر بیمار بچوں کا علاج کرواتی تھی۔ اب انکشاف ہوا ہے کہ فاونڈیشن لوگوں سے چندہ تو لیتی تھی مگر چندے میں حاصل کیے گئے ہر ڈالر سے صرف16سینٹ بیمار بچوں پر خرچ کیے جاتے تھے۔ باقی تمام رقم شین وارن اور ان کے اہلخانہ پر صرف ہو جاتی تھی۔ آسٹریلوی تحقیقاتی ادارہ ”کنزیومر افیئرز وکٹوریہ“ معاملے کی تحقیقات کر رہا ہے۔شین وارن فاونڈیشن کے فنڈز میں اس قدر بڑے پیمانے پر گھپلوں کے انکشاف پر آسٹریلیا میں ایک ہنگامہ برپا ہو گیا ہے۔برطانوی اخبار”ڈیلی میل“ کی رپورٹ کے مطابق تحقیقات میں انکشاف ہوا ہے کہ چندے سے حاصل کی گئی رقم سے فاونڈیشن شین وارن کے والدین کو کرایہ بھی ادا کرتی رہی ہے جبکہ شین وارن کے بھائی کو اسی فاونڈیشن میں ایک ایگزیکٹو عہدے پر تعینات کرنے کے لیے 2لاکھ 10ہزار ڈالر (تقریباً 1کروڑ 60لاکھ روپے)خرچ کیے گئے۔ اس کے علاوہ کرکٹ میچوں، پوکر ٹورنامنٹس کے انعقاد اور عالی شان ضیافتوں پر بھی چندے کی رقم اڑائی جاتی رہی ہے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اس ہائی پروفائل فاونڈیشن نے رضاکارانہ طور پر کبھی اپنی مالیاتی رپورٹس ظاہر نہیں کیں بلکہ ہمیشہ اپنے ریکارڈ کو خفیہ رکھنے کی کوشش کی اور آسٹریلیا کے ادارے ”نیشنل چیرٹیز ریگولیٹر“کی رپورٹس کو بھی کبھی عوام کے سامنے نہیں آنے دیا۔

Google Analytics Alternative