کھیل

آئی سی سی بولنگ ایکشن قوانین پر تنقید، پی سی بی نے محمد حفیظ کو معافی دیدی

لاہور: بولنگ ایکشن قوانین کے حوالے سے آئی سی سی پر تنقید کرنے والے محمد حفیظ کو پی سی بی ڈسپلنری کمیٹی سے معافی مل گئی۔

آل راﺅنڈر پی سی بی کی ڈسلپنری کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے اور اپنا موقف بیان کیا، کمیٹی نے ان کی وضاحت قبول کرتے ہوئے اپنا موقف میڈیا کے سامنے بھی پیش کرنے کی ہدایت کی۔  پی سی بی کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں محمد حفیظ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ میرا مقصد آئی سی سی کے بولنگ ایکشن کے حوالے سے قوانین کو تنقید کا نشانہ بنانا نہیں تھا۔

اپنے انٹرویو میں کسی بھی کرکٹ بورڈ کا ذکر نہیں کیا، میرے بیان میں صرف بولنگ ایکشن ٹیسٹ کے معیار کو بہتر بنانے کیلیے تجاویز دی گئیں تاکہ کسی شک و شبے کی گنجائش نہ رہے، بدقسمتی سے میری بات کو سیاق و سباق سے ہٹ کر غلط رنگ دیا گیا۔

بیٹ پر نازیبا الفاظ لکھنے پر بٹلر مشکل میں پھنس گئے

انگلش بلے باز جوز بٹلر نے پاکستان کے خلاف فتح گر اننگز کھیل کر اپنی ٹیم کو فتح سے ہمکنار کرایا لیکن ہیڈنگلے ٹیسٹ میچ کے دوران بلے پر نازیبا الفاظ لکھنے کی پاداش میں ان پر انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی) کی جانب سے سخت کارروائی کا خطرہ منڈلانے لگا ہے۔

بٹلر نے پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہیڈنگلے میں کھیلے گئے ٹیسٹ میچ میں ناقابل شکست 80رنز کی اننگز کھیلی تھی جس کی بدولت انگلینڈ نے پاکستان کو میچ میں اننگز اور 55رنز سے شکست دی تھی اور بٹلر میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے تھے۔

تاہم اس شاندار اننگز نے جہاں ان کی انگلینڈ کی ٹیسٹ ٹیم میں جگہ پکی کردی ہے وہیں میچ کے دوران استعمال کیے گئے بلے پر نازیبا الفاظ لکھنا ان کو بھاری پڑ گیا۔

میچ کے دوران ہی کیمرے نے ان کے بلے کے اوپری حصے پر فوکس کیا تو اس پر نازیبا الفاظ تحریر تھے۔

آئی سی سی کے کپڑوں اور سازوسامان سے متعلق قانون کے مطابق کھلاڑی اور ٹیم آفیشلز کو کوئی بھی ایسی چیز پہننے، ظاہر کرنے یا کوئی بھی آرم بینڈ یا دیگر سامان یا کپڑا پہننے کی اجازت نہیں دی جا سکتی جس سے کسی قسم کا پیغام پہنچے یہاں تک کہ اس کی آئی سی سی سی کرکٹ آپریشنز سے اجازت طلب کی جائے۔ اس سلسلے میں بھی حتمی فیصلے کا اختیار آئی سی سی کے پاس ہی ہو گا کہ اس طرح کے پیغام کو منظور کیا جائے یا نہیں۔

یہ بات ہضم نہیں ہوتی کہ آئی سی سی نے بٹلر کو اس کی اجازت دی ہو گی لہٰذا ماضی میں کھلاڑیوں کو خلاف قانون حرکت پر دی گئی سزاؤں کو دیکھتے ہوئے بٹلر مشکل میں نظر آتے ہیں۔

اب بٹلر پر کسی بھی قسم کی پابندی یا سزا کا انحصار اس بات پر ہے کہ آیا امپائرز اس معاملے کو رپورٹ کرتے ہیں یا نہیں اور اس کے بعد میچ ریفری جیف کرو کا کیا فیصلہ ہوتا ہے۔

تاہم بٹلر نے اپنی اس حرکت کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ میں نے اقدام خود کو کرکٹ کے دوران اور عام زندگی میں بھی تحریک دینے کے لیے اٹھایا۔

فکسنگ کیس، محمد نواز نے ناصر جمشید کےخلاف گواہی دیدی

لاہور: اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں سہولت کاری کے ملزم ناصر جمشید کے کیس میں محمد نواز پی سی بی کی جانب سے بطور گواہ ٹریبیونل کے سامنے پیش ہو گئے۔

نواز نے ٹریبیونل کو بتایا کہ بکی نے رابطہ کیا تھا اور فکسنگ کی پیشکش تھی جس پر میں نے آلہ کار بننے سے انکار کر دیا تھا۔ پی سی بی کے قانونی مشیر تفضل رضوی نے بتایا کہ بدھ کو ہونے والی اگلی سماعت میں برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی کے نمائندے بطور گواہ پیش ہوں گے۔

دوسری جانب ناصر جمشید کے وکیل حسن وڑائچ نے کہا کہ کیس میں کوئی جان نہیں، ناصر جمشید نے کوئی حکم عدولی کی ہے جس کی سزا بھگت رہے ہیں۔

وسیم اکرم کی سالگرہ میں احترام رمضان ملحوظ نہ رکھنے پر وقار یونس کی معذرت

لاہور: وقار یونس نے وسیم اکرم کی سالگرہ میں احترام رمضان المبارک کو مدنظر نہ رکھنے پر شائقین سے معذرت کرلی ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وقار یونس نے ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا کہ ” گزشتہ روز وسیم بھائی کی سالگرہ پر کیک کاٹنے پر معذرت چاہتا ہوں، ہمیں رمضان المبارک اور روزہ داروں کا خیال رکھنا چاہیے تھا، یہ میری جانب سے ایک نامناسب حرکت تھی۔“

واضح رہے کہ 3 جون کو وسیم اکرم کی 52 ویں سالگرہ تھی، لیڈز ٹیسٹ کے دوران وسیم اکرم کی سالگرہ پر پریس باکس میں کیک منگوایا گیا تھا، وقار یونس، رمیز راجہ اور صحافیوں نے بھی اس میں شرکت کی تھی، شائقین کی جانب سے رمضان المبارک کا احترام بالائے طاق رکھتے ہوئے روزہ داروں کے سامنے کیک کاٹنے پر تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

لیڈز میں بدترین شکست کے باوجود سرفراز کو نوجوان ٹیم پر فخر

قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ ہیڈنگلے میں انگلینڈ کے خلاف اننگز اور 55رنز سے شکست کے باوجود انہیں اپنی نوجوان ٹیم کی کارکردگی پر فخر ہے۔

پاکستان نے انگلینڈ کو لارڈز میں ہونے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں 9 وکٹوں سے شکست دے کر سیریز میں برتری حاصل کی تھی لیکن انگلینڈ نے پاکستان کی ناقص بیٹنگ کی بدولت سیریز میں شاندار انداز میں واپسی کرتے ہوئے تیسرے دن ہی پاکستان کو شکست دے کر سیریز 1-1 سے برابر کردی۔

اس شکست کے ساتھ ہی پاکستان نے انگلینڈ میں 22 سال بعد سیریز جیتنے کا نادر موقع گنوا دیا جہاں اس سے قبل قومی ٹیم نے 1996 میں وسیم اکرم اور وقار یونس کی باؤلنگ کی بدولت انگلینڈ کو شکست سے دوچار کیا تھا۔

لارڈز میں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے والی انگلینڈ کی ٹیم کو 184 رنز پر آؤٹ کرنے کے باوجود لیڈز میں پاکستانی ٹیم کے کپتان نے ٹاس جیت کر خود بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

ہیڈنگلے کی وکٹ ٹیسٹ کرکٹ کے لیے ایک بہترین وکٹ قرار دی جا سکتی ہے لیکن ابرآلود موسم نے وکٹ کو باؤلنگ کے لیے سازگار بناتے ہوئے بیٹنگ کو مشکل بنا دیا۔

پہلی اننگز میں ٹاپ آرڈر بلے بازوں کی ناکامی کے بعد لیگ اسپنر شاداب خان کی نصف سنچری کی بدولت پاکستان کی ٹیم کسی طرح 174 رنز کا مجموعی اسکور بورڈ پر سجانے میں کامیاب رہی۔

بدترین بیٹنگ کے بعد باؤلنگ بھی کچھ خاص کارکردگی نہ دکھا سکی لیکن ٹیم کی امیدوں پر اصل پانی اس وقت پھرا جب حسن علی نے صرف 4 کے انفرادی اسکور پر جوز بٹلر کا کیچ ڈرا کردیا اور یہی میچ کا ٹرننگ پوائنٹ ثابت ہوا اور بٹلر نے ناقابل شکست 80رنز کی اننگز کھیل کر انگلینڈ کا مجموعہ 363 تک پہنچا کر پہلی اننگز میں 189 رنز کی برتری دلائی۔

پاکستان کی بیٹنگ ایک مرتبہ ناکامی سے دوچار ہوئی اور بلے بازوں کی ناقص شاٹ سلیکشن کے سبب پوری ٹیم صرف 134 رنز پر ڈھیر ہو کر میچ کے تیسرے ہی دن اننگز اور 55رنز کی بدترین شکست سے دوچار ہوئی۔

تاہم اس بدترین شکست کے باوجود بلے سے مستقل ناقص کارکردگی دکھانے والے قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد اپنی ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن نظر آتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب ہم یہاں آئے تو لوگ ہی سوچ رہے تھے کہ ہم ایک میچ بھی نہیں جیت سکیں گے لیکن ہم نے جس طرح لارڈز میں کارکردگی دکھائی وہ بہت شاندار تھی، ہماری فاسٹ باؤلنگ، فیلڈنگ اور بیٹنگ بہت عمدہ تھی۔

انہوں نے کہا کہ مایوس کن امر یہ ہے کہ ہمارے پاس سیریز جیتنے کا نادر موقع تھا لیکن بدقسمتی سے ہم نے یہاں اچھا کھیل پیش نہیں کیا۔

ہیڈنگلے میں شکست سے قطع نظر اس سیریز میں پاکستان کے لیے کئی مثبت پہلو رہے جس میں محمد عباس کی شاندار باؤلنگ سرفہرست ہے جنہوں نے لارڈز میں 64رنز کے عوض 8وکٹیں لے کر میچ کے بہترین کھلاڑی کا اعزاز اپنے نام کیا اور سیریز کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ بھی اپنے نام کیا۔

‘مجھے اپنی نوجوان ٹیم پر فخر ہے، جس طرح عباس نے باؤلنگ کی، شاداب بھی اچھی کارکردگی دکھا رہے ہیں، فہیم اشرف نے بھی اچھا کھیل پیش کیا البتہ میں ہیڈنگلے میں میچ نہ جیتنے پر بہت مایوس ہوں لیکن سیریز 1-1 سے برابر کرنا بھی اچھا نتیجہ ہے’۔

سیریز میں پاکستان میں سب سے پریشان کن امر تجربہ کار کھلاڑیوں خصوصاً بلے بازوں کی مایوس کن کارکردگی رہی جہاں سیریز میں اظہر علی کی اوسط 16.75 اور کپتان سرفراز کی اوسط 10.33 رہی۔

سرفراز نے کہا کہ اظہر ہمارے سب سے اہم بلے باز ہیں اور یہ درست ہے کہ وہ اچھی فارم میں نہیں لیکن لارڈز میں انہوں نے ففٹی اسکور کی تھی۔

کپتان نے کہا کہ میں سیریز میں اپنی بیٹنگ سے بھی مطمئن نہیں، میں نے غلطیاں کیں اور چند برے شاٹس کھیلے۔

اس سیریز سے قبل پاکستان نے اپنا آخری ٹیسٹ میچ مئی ماہ قبل سری لنکا کے خلاف دبئی میں کھیلا تھا جہاں قومی ٹیم کو 68رنز سے ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا تھا اور سرفراز نے کہا کہ ایک عرصے بعد یکے بعد دیگرے تین ٹیسٹ میچ کھیلنا ٹیم کے لیے سخت چیلنج ثابت ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنا آخری ٹیسٹ اکتوبر میں کھیلا تھا لہٰذاپانچ سے چھ ماہ بعد ٹیسٹ کھیلنا کافی مشکل ہوتا ہے۔ ٹیسٹ کرکٹ ایک مختلف فارمیٹ ہے اس لیے آپ کو پانچ روزہ کرکٹ میں خود کو ایڈجسٹ کرنا ہوتا ہے اور اگر تین دن تک فیلڈنگ کرنا ہو تو یہ بھی مشکل مشکل کام ہوتا ہے۔

کپتان نے مزید کہا کہ ہم جتنا ٹیسٹ کرکٹ کھیلتے ہیں، اتنا ہی میچور ہوتے چلے جاتے ہیں۔ اب ہمارے متحدہ عرب امارات میں 5 ٹیسٹ میچ ہیں جس کے بعد تین ٹیسٹ میچ جنوبی افریقہ میں ہوں گے اور ان سے ٹیم کو میچور ہونے میں مدد ملے گی۔

‘میسی ہمارا دل نہ توڑیں’، فلسطینی بچوں کی درخواست

غزہ: فٹبال ورلڈ کپ سے قبل ارجنٹائن اور اسرائیل کے درمیان ہونے والے دوستانہ میچ پر فلسطینی بچوں نے احتجاج کرتے ہوئے عالمی شہرت یافتہ فٹبالر لیونل میسی سے یہ میچ نہ کھیلنے کی درخواست کی ہے۔

عالمی کپ کی تیاریوں کے سلسلے میں ارجنٹائن اور اسرائیل کے درمیان 9 جون کو ایک دوستانہ میچ کھیلا جائے گا جس پر فلسطینیوں نے صدا احتجاج بلند کرتے ہوئے میسی سے میچ نہ کھیلنے کی درخواست کی ہے۔

یہ میچ مقبوضہ بیت المقدس کے جنوب میں واقع ٹیڈی سٹیڈیم میں کھیلا جائے گا جو 70 برس قبل عرب اسرائیل جنگ میں تباہ ہو گیا تھا اور 1948 میں ہونے والے اس جنگ کے بعد اسرائیلی افواج نے فلسطینی عوام کو بے گھر کرتے ہوئے دربدر کر دیا تھا۔

دونوں ملکوں کے درمیان جاری تایخی تنازع اور حال ہی میں فلسطینی عوام پر کی گئی اسرائیلی فوج کے بربریت کے بعد 70 فلسطینی بچوں پر مشتمل گروپ نے ارجنٹائن کے فٹ بالر لیونل میسی کو خط لکھ کر درخوااست کی ہے کہ وہ اسرائیل کے خلاف دوستانہ میچ میں شرکت نہ کریں۔ یہ خط اتوار کو اسرائیل میں ارجنٹائن کے سفارتخانے کے حوالے کیا گیا جس میں فلسطینی بچوں نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ ان خاندانوں کے بچے ہیں جن سے چھینی گئی زمینوں پر اب ٹیڈی اسٹیڈیم دوبارہ قائم کیا گیا ہے۔

خط کے متن میں مزید کہا گیا کہ ہمیں بتایا گیا ہے کہ آپ ہمارے تباہ شدہ گاؤں پر تعمیر شدہ اسٹیڈیم میں اپنے دوستوں کے ساتھ میچ کھیلنا چاہتے ہیں جس پر ہماری خوشی اس وقت آنسوؤں میں بدل گئی اور ہمارے دل ٹوٹ گئے کہ ہمارا ہیرو میسی ہمارے آباؤ اجداد کی قبروں پر تعمیر ہونے والے اسٹیڈیم میں کھیلنے جا رہا ہے۔

فلسطینی بچوں نے کہا کہ 9 جون کو جب اسرائیل اور ارجنٹائن دوستانہ میچ کھیلیں گے تو یہ ہمارے لیے ایک اداس دن ہو گا اور خط کے اختتام کچھ یوں کیا کہ ‘آئیے، ہم خدا سے دعا کریں کہ میسی ہمارے دلوں کو نہ توڑیں۔

دوسری جانب فلسطین کی فٹبال ایسوسی ایشن کے سربراہ جبریل رجب نے بھی میسی سے میچ نہ کھیلنے کی درخواست کرنے کے ساتھ ساتھ شائقین کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ اگر میسی یہ میچ کھیلیں تو فلسطینی شائقین ان کی شرٹ جلا دیں۔

انہوں نے رملہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں نے ارجنٹینا کی حکومت کو خط لکھ کر اس میں درخواست کی ہے کہ وہ میسی کو 9 جون کو ہونے والے میچ میں شرکت نہ کرنے دیں۔

رجب نے کہا کہ میسی امن اور محبت کی علامت ہیں اور اسرائیل اس میچ کو سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ عرب دنیا اور مسلم ملکوں میں میسی کے کروڑوں چاہنے والے ہیں اور میں ان سے درخواست کرتا ہوں کہ اگر میسی میچ میں شرکت کریں تو وہ ان کے نام کی حامل شرٹ جلا دیں۔

ویمنز ٹی ٹوئنٹی ایشیا کپ، بنگلہ دیش نے پاکستان کو 7 وکٹوں سے ہرا دیا

لاہور:ویمنز ٹی ٹوئنٹی ایشیا کرکٹ کپ میں بنگلہ دیش نے پاکستان کو 7 وکٹوں سے ہرا دیا۔ ایشین کرکٹ کونسل کے زیر اہتمام ملائیشیا کے شہر کوالالمپور میں جاری ویمنز ٹی ٹوئنٹی ایشیا کرکٹ کپ میں بنگلہ دیشن نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا، پاکستان ٹیم پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں 5 وکٹوں پر 95 رنز ہی بنا پائی، ثناءمیر 21 اور ندا ڈار 17 رنز پر ناٹ آﺅٹ رہیں۔

بنگلہ دیشی ٹیم نے 17.5 اوورز میں 3 وکٹوں کے نقصان پر ہی ہدف حاصل کرلیا پ، نگارسلطانہ نے 31 اور فہیمہ خاتون نے 23 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلتے ہوئے ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا، فہیمہ خاتون پلیئر آف دی میچ قرار پائیں۔
واضح رہے کہ پاکستان ٹیم نے ایونٹ کے پہلے میچ میں تھائی لینڈ کے خلاف 8 وکٹوں سے کامیابی سمیٹی تھی ، قومی ویمن ٹیم اگلا میچ 6 جون کو سری لنکا کے خلاف کھیلے گی جبکہ 9 جون کو روایتی حریف بھارت سے ٹاکرا ہو گا۔

اسکاٹ لینڈ کے خلاف سیریز کیلئے پاکستان ٹیم کا اعلان

لاہور: اسکاٹ لینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے قومی ٹیم کا اعلان کردیا گیا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر انضمام الحق نے کوچ مکی آرتھر اور کپتان سرفراز احمد سے مشاورت کے بعد اسکاٹ لینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی میچز کے لیے 15 رکنی اسکواڈ کا اعلان کیا۔

قومی اسکواڈ میں کپتان سرفرازاحمد، فخرزمان، شعیب ملک، آصف علی، حسین طلعت، فہیم اشرف، محمود نواز، شاداب خان، محمدعامر، حسن علی، راحت علی، عثمان شنواری اور شاہین آفریدی شامل ہیں۔

PCB Official

@TheRealPCB

Pakistan 15-member squad for T-20I series against Scotland

Fakhar Zaman
Ahmed Shehzad
Haris Sohail
Shoaib Malik
Asif Ali
Hussain Tallat
Sarfraz Ahmed (Captain)
Fahim Ashraf
Shadab Khan
Muhammad Nawaz
Muhammad Amir
Hassan Ali
Rahat Ali
Usman Shanwari
Shaheen Shah Afridi

ویسٹ انڈیز کے خلاف حال ہی میں ٹی 20 سیریز کھیلنے والی قومی ٹیم میں صرف ایک تبدیلی کی گئی ہے۔ انگلینڈ کے خلاف لارڈز ٹیسٹ میں زخمی ہونے والے بابر اعظم کی جگہ حارث سہیل کی ٹیم میں واپسی ہوئی ہے۔

پاکستان اور اسکاٹ لینڈ کے درمیان ٹی ٹوئنٹی میچز 12 اور 13 جون کو کھیلے جائیں گے۔

یاد رہے کہ قومی ٹیم کو لیڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ نے ایک اننگز 55 رنز سے شکست دے کر 2 ٹیسٹ میچوں کی سیریز ایک ایک سے برابر کرلی ہے۔

Google Analytics Alternative