بین الاقوامی

سلامتی کونسل نے شام میں جنگ بندی کی قرارداد منظور کرلی

نیویارک:سلامتی کونسل نے شام میں ایک ماہ کی جنگ بندی کی قرارداد منظور کرلی۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے شام میں 30 روزہ جنگ بندی کی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرتے ہوئے شامی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ امدادی اور طبی سامان متاثرہ علاقوں تک پہنچانے کی اجازت دی جائے۔

شام کے دارالحکومت دمشق کے قریب واقع علاقے مشرقی غوطہ میں شامی اور روسی افواج ایک ہفتے سے بمباری اور گولہ باری کررہی ہیں جس کے نتیجے میں وہاں 127 بچوں سمیت 500 سے زیادہ شہری جاں بحق اور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: شام میں 200 نئے اقسام کے ہتھیار استعمال کیے،روس کا اعتراف

کویت اور سوئیڈن نے غوطہ میں جاری قتل عام رکوانے کے لیے مشترکہ طور پر سلامتی کونسل میں شام میں 30 روزہ جنگ بندی کی قرارداد پیش کی جو متفقہ طور پر منظور ہوگئی۔

یہ قرارداد جمعرات کو پیش ہوئی تھی لیکن روس کی مخالفت اور ارکان کے درمیان عدم اتفاق رائے کی وجہ سے قرارداد دو روز کی تاخیر کے بعد منظور ہوئی۔

سلامتی کونسل نے 3 دن میں جنگ بندی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے شامی حکومت پر زور دیا کہ متاثرہ علاقوں میں غذا اور طبی سامان کی فراہمی اور زخمیوں کو انخلا کی اجازت دی جائے۔ تاہم شامی حکومت اور روسی افواج نے قرارداد کو ہوا میں اڑا دیا اور قرارداد منظور ہونے کے چند منٹ بعد ہی مشرقی غوطہ پر دوبارہ فضائی بمباری کی گئی۔

یمن میں محکمہ انسدادِ دہشتگردی کے ہیڈ کوارٹر پر داعش کا حملہ، 19 افراد ہلاک

صنعا: یمن کے ساحلی شہر عدن میں انسدادِ دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر پر داعش کے حملے میں 10 اہلکاروں سمیت 19 افراد ہلاک ہوگئے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یمن کے شہر عدن میں دو کار بم دھماکوں میں 19 افراد ہلاک جب کہ 40 سے زائد زخمی ہوگئے ہیں۔ عدن کے سیکیورٹی حکام نے حملوں کی تصدیق کرتے ہوئے بیان جاری کیا ہے کہ دو کاروں میں موجود 6 مسلح حملہ آوروں نے انسداد دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر پر حملہ کیا۔ سیکورٹی اہلکاروں نے حملہ آوروں کو روکنے کی کوشش کی اور فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا جس میں 4 اہلکار اور گاڑیوں میں موجود 6 مسلح دہشت گرد ہلاک ہوگئے تاہم باقی حملہ آور پولیس اور فوج کا سیکیورٹی حصار توڑ کر مرکزی دروازے تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئے۔

حکام کے مطابق حملہ آوروں نے ہیڈ کوارٹر کے مرکزی دروازے پر پہنچتے ہی دھماکا خیز مواد سے بھری 2 گاڑیوں کو اڑا دیا جس کے نتیجے میں مزید 9 افراد ہلاک ہوگئے جن میں 3 فوجی بھی شامل ہیں۔ دھماکے اس قدر شدید تھے کہ کالونی کی متعدد عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور درجنوں گاڑیوں کو بھی شدید نقصان پہنچا۔

حملے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم داعش نے قبول کرلی ہے اور بیان جاری کیا ہے کہ یہ دونوں حملے انسدادِ دہشت گردی فورس کے ہیڈ کوارٹر کو تباہ کرنے کے لئے کئے گئے تھے۔

امریکی نے مئی میں سفارتخانے یروشلم منتقل کرنے کا اعلان کر دیا

واشنگٹن: امریکا کی ڈھٹائی ابھی بھی برقرار ہے دنیا بھرمیں مسلمانوں کا احتجاج نظر انداز کرتے ہوئے امریکی سفارتخانے کو اس سال مئی میں یروشلم منتقل کرنے کا اعلان کر دیا۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی محکمہِ خارجہ کا کہنا ہے کہ مئی میں اسرائیل کی سترویں سالگرہ پر امریکی سفارتخانہ یروشلم میں کھولا جائے گا۔ حکام کا کہنا ہے کہ فی الحال سفارتخانہ یروشلم میں موجود امریکی قونصل خانے میں منتقل کر دیا جائے گا۔ اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو نے اس اعلان پر ردعمل دیا کہ یہ اسرائیلی عوام کے لیے ایک بہترین دن ہے۔دوسری جانب فلسطین میں اس فیصلے کے خلاف شدید غم اور غصہ پایا جا رہا ہے۔

جرمنی کا مہاجرین کو قبول نہ کرنیوالے یورپی ممالک کو فنڈ نہ دینے کا مطالبہ

برسلز: جرمن چانسلرانجیلا میرکل نے کہا ہے کہ یورپی یونین کو چاہیے کہ وہ اپنی رکن ریاستوں کو مہیا کیے جانے والے فنڈز کو ان ممالک کی طرف سے تارکین وطن کو اپنے ہاں قبول کرنے سے مشروط کر دے۔
میڈیارپورٹس کے مطابق چانسلر میرکل نے یہ بات برسلز میں یورپی یونین کے سربراہی اجلاس سے قبل کہی۔ میرکل کا کہنا تھا کہ یہ بہترین موقع ہے کہ یورپی یونین کے پورے مالیاتی شعبے کا جائزہ لیا جائے۔ برطانیہ کے یورپی یونین سے آئندہ اخراج کی وجہ سے یونین کے فنڈز میں 14 ارب یورو سالانہ کا خلا پیدا ہو گا اور اس لیے بیلجیئم کو اس سلسلے میں اپنی طویل المدتی پالیسی بھی تبدیل کرنا ہو گی۔انہوں نے کہاکہ ہمیں ہر حال میں یورپ کو ایک نیا آغاز فراہم کرنا ہے، ہمیں ماضی میں کسی بھی موقع سے زیادہ اب ان سوالات کے مشترکہ جوابات دینا ہیں جو یورپی عوام ہم سے پوچھ رہے ہیں۔

میانمار میں تین بم دھماکے، پولیس اہلکار سمیت متعدد افراد زخمی

ینگون: میانمار میں تین بم دھماکوں کے نتیجے میں پولیس اہلکار سمیت متعدد افراد زخمی ہوگئے۔

میانمار کی ریاست راکھائن کے دارالحکومت سٹوے میں تین بم دھماکوں کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار سمیت 3 افراد زخمی ہوگئے۔ تاحال دھماکوں کی ذمہ داری کسی تنظیم نے قبول نہیں۔ پولیس کے مطابق ایک بم حملہ اعلیٰ حکومتی افسر کے گھر پر ہوا۔ دوسرا دھماکا عدالت کے باہر اور تیسرا ایک سرکاری دفتر کے قریب ہوا۔

دھماکوں کی شدت سے آس پاس کی عمارتوں اور گھروں کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ سٹوے شہر میں ہی مزید 3 بم بھی برآمد ہوئے جنہیں سیکیورٹی اہلکاروں نے ناکارہ بنادیا۔ بم حملوں کے بعد شہر میں خوف و ہراس پھیل گیا جب کہ پولیس نے شاہرائیں بند کرکے مشتبہ افراد کو گرفتار کرنے کے لیے سرچ آپریشن بھی کیا۔

مسلم اکثریتی ریاست راکھائن میں ان دھماکوں کو مسلمانوں پر جاری مظالم کے تناظر میں دیکھا جارہا ہے اور غیرمعمولی قرار دیا جا رہا ہے۔ چار روز پہلے بھی میانمار کے صوبہ شان کے شہر لاسہیو میں ایک بم دھماکے میں دو خواتین ہلاک اور گیارہ زخمی ہوگئی تھیں۔

گزشتہ سال میانمار حکومت کی جانب سے راکھائن میں مسلمانوں کے خلاف فوجی آپریشن کے نتیجے میں ہزاروں مسلمان شہید اور 7 لاکھ ہجرت پر مجبور ہوگئے تھے۔ میانمار کی فوج اور پولیس نے ہجرت کرنے والے مسلمانوں کے گھر بار نذرآتش کردیے تھے۔ اقوام متحدہ نے میانمار میں مسلمانوں پر مظالم کو ان کی نسل کشی قرار دیا تھا۔

عالمی برادری نے میانمار کی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بنگلہ دیش ہجرت کرنے والے روہنگیا مسلمانوں کو اپنے گھر واپس آنے کی اجازت دے تاہم میانمار حکومت مسلم مہاجرین کو واپس لینے سے انکاری ہے۔

افغانستان: بم دھماکوں، حملوں میں 23 افراد جاں بحق

افغانستان کے مختلف علاقوں میں بم دھماکوں اور حملوں کے نتیجے میں 23 افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

طالبان کی جانب سے سب سے بڑا حملہ افغانستان کے مغربی صوبے فراہ میں ایک فوجی مرکز میں کیا گیا جہاں کم ازکم 18 فوجی ہلاک ہوگئے۔

افغانستان کی وزارت دفاع کے ترجمان دولت وزیر کا کہنا تھا کہ ‘دہشت گردوں کے ایک بڑے گروہ نے گزشتہ روز فراہ کے ضلع بالا بلوک میں قائم فوجی مرکز پر حملہ کیا جہاں 18 فوجی ہلاک ہوگئے اور دو فوجی زخمی بھی ہوگئے’۔

صوبے کے ڈپٹی گورنر یونس رسولی کا کہنا تھا کہ بالابلوک میں ہونے والے دہشت گرد حملے کی تحقیقات کے لیے ایک وفد بھیجا جا چکا ہے جو تفتیش کرے گا دوسری جانب طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔

اے ایف پی کو افغان وزارت دفاع کے ترجمان نصرت رحیمی نے کہا کہ دوسرا حملہ کابل کے ڈپلومیٹک علاقے میں ہوا جہاں کم ازکم 3 افراد جاں بحق اور دیگر 5 زخمی ہوگئے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک خوش لباس خود کش بمبار کی صبح سویرے ہی چیک پوائنٹ پر شناخت کی گئی تھی تاہم اس نے خود کو اڑا دیا جس کے نتیجے میں 3 افراد ہلاک اور 5 زخمی ہوگئے۔

نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر ایک سیکیورٹی عہدیدار نے کہا کہ بم دھماکا افغانستان کی خفیہ ایجنسی نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سیکیورٹی (این ڈی ایس) کے ایک کمپاؤنڈ کے قریب ہوا جو نیٹو ہیڈ کوارٹر اور امریکی سفارت خانے کے قریب واقع ہے۔

کابل میں ہونے والے خود کش دھماکے کی ذمہ داری کسی گروپ نے قبول نہیں کی۔

افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں دو کار بم دھماکے ہوئے جہاں دو فوجی ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔

صوبائی ترجمان عمر زواک نے اے ایف پی کو بتایا کہ پہلا حملہ ضلع ناد علی میں فوجی مرکز میں ہوا جہاں فوجیوں کو نشانہ بنایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس کار بم دھماکے میں 2 فوجی ہلاک اور سات زخمی ہوئے جبکہ صوبائی دارالحکومت لشکر گاہ میں ہونے والے دھماکے میں بھی سات افراد زخمی ہوئے۔

ہلمند کے پولیس ترجمان سلام افغان نے کہا کہ حملہ این ڈی ایس کے کمپاؤنڈ کے عقب میں شہر کے پولیس مرکز کے قریب ہوا۔

طالبان کی جانب دونوں حملوں کی ذمہ داری قبول کی گئی۔

یاد رہے کہ طالبان کی جانب سے افغانستان میں سیکیورٹی فورسز اور فوجیوں کو نشانہ بنانے کی مہم میں اچانک تیزی آئی ہے اس سے قبل کابل میں شدید حملے کیے گئے تھے جہاں سینکڑوں افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

کابل میں 22 جنوری 2018 کو انٹر کانٹی نینٹل ہوٹل میں فوجی لباس میں ملبوس دہشت گردوں کے حملے میں 30 سے زائد افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

افغان دارالحکومت میں گزشتہ برس سب سے بڑا حملہ کیا گیا تھا جہاں 150 کے قریب شہری جاں بحق ہوئے اور اس حملے کو شہر کی تاریخ کا خونی ترین حملہ قرار دیا گیا تھا۔

سعودی عرب میں خوفناک ٹریفک حادثہ، 7 افراد جاں بحق

رماح : سعودی عرب کے علاقے  رماح کی  شویہ روڈ پر 2گاڑیوں میں ٹکر سے 7افراد جاں بحق ہوگئے۔ حادثہ اتنا شدید تھا کہ ٹکر کے بعد  دونوں گاڑیاں جل کر تباہ ہوگئیں۔ 5 افراد ایک گاڑی اور 2مرد و خواتین دوسری گاڑی میں سوار تھے۔

دونوں گاڑیوں میں ٹکر کے باعث دونوں کے مسافر ہلاک ہوگئے۔ رماع کمشنری کے سیکیورٹی اہلکاروں ہلال احمر اور شہری دفاع کے افسران نے جائے وقوعہ پہنچ کر مطلوبہ کارروائی انجام دی۔ سبق ویب سائٹ کے مطابق رماح شویہ روڈ ریاض ، کویت ، حفر الباطن اور حدود شمالیہ کو ایک دوسرے سے جوڑتا ہے اور رویہ سڑک ہے ۔

خراب سڑ ک کو مرمت کرنے کے لیے متعدد بار درخواستیں دی گئیں ہیں مگر ابھی تک اس کی تعمیر و مرمت نہیں ہو سکی ۔جس کی وجہ سے  اس روڈ پر خوفناک حادثات روز کا معمول بن چکے ہیں۔

قاہرہ میں رہائشی عمارت منہدم، 10 افراد ہلاک ہوگئے

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں رہائشی عمارت گرنے سے کم از کم 10 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق قاہرہ کے علاقے منصیت نصر میں 5 منزلہ رہائشی عمارت گرنے سے متعدد افراد ملبے تلے دب گئے۔

رپورٹ کے مطابق حادثے میں کم از کم 10 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ 9 افراد کی لاشیں امدادی ٹیموں کے اہلکار ملبے سے نکال چکے ہیں۔

مصری حکام کے مطابق عمارت میں 12 خاندان رہائش پزیر تھے جبکہ امدادی ٹیموں کے اہلکار ملبے میں دبے مزید افراد کو تلاش کر رہی ہیں۔

حکام کے مطابق عمارت گرنے کی وجوہات کا تاحال علم نہیں ہو سکا ہے تاہم اس حوالے سے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

Google Analytics Alternative