بین الاقوامی

میانمار میں سیلاب سے 3 فوجی اہل کاروں سمیت 10 افراد ہلاک

رنگون: میانمار میں تیز بارشوں کے سبب آنے والے سیلاب میں 3 فوجی اہل کاروں سمیت 10 افراد ہلاک ہوگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق میانمار میں جاری مون سون بارشوں کے نتیجے میں آنے والے سیلاب نے دو صوبوں میں بڑے پیمانے پر تباہی مچادی اور سیلاب کا پانی گھروں میں داخل ہوگیا۔ اس دوران امدادی کام سرانجام دینے والے 3 فوجی اہلکاروں سمیت 10 افراد ہلاک اور 95 ہزار سے زائد بے گھر ہوگئے ہیں جنہیں محفوظ مقام پر منتقل کیا جا رہا ہے۔

Mayanmar 2

میانمار میں فلاحی تنظیم ریڈ کراس نے کہا ہے کہ سیلاب سے متاثرہ دو صوبوں میں صورت حال نہایت ابتر ہے، ہزاروں بے گھر افراد کی محفوظ مقام پر آباد کاری اور زخمیوں کو طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے تاہم دیگر تنظیموں کو بھی آگے بڑھ کر اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ دوسری جانب اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ یونیسیف بھی سیلاب سے متاثرہ علاقے میں تمام وسائل بروئے کار لا رہا ہے۔

Mayanmar 3

امدادی تنظیموں نے خبردار کیا ہے کہ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں وبائی امراض پھیلنے کا خدشہ ہے اس لیے متاثرہ افراد کی محفوظ مقام پر منتقلی اور کیمپوں میں حفاظتی اقدام اور صحت کی سہولیات مہیا کرنے کی اشد ضرورت ہے۔

امریکی ریاست کیلیفورنیا کے جنگلات میں آتشزدگی سے 6 افراد ہلاک

کیلیفورنیا: امریکی ریاست کیلی فورنیا کے جنگلات میں لگنے والی آگ کی زد میں آکر 5 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق کیلیفورنیا کے 90 ہزار ایکڑ پر محیط جنگلات میں خوفناک آتشزدگی سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 6 ہو گئی ہے۔ جنگل میں لگنے والی آگ نے رہائشی آبادی کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا جس کے نتیجے میں 874 عمارتیں اور گھر جل کر راکھ کا ڈھیر ہو گئے۔ جلے ہوئے ایک مکان سے 70 سالہ بزرگ خاتون اور اُن کے دو پوتوں کی لاشیں ملی ہیں۔

ریسکیو ادارے کے حکام کا کہنا ہے کہ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جب کہ 3 ہزار سے زائد افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا ہے اور مزید 9 ہزار افراد کے انخلاء کی ضرورت پڑے گی۔ 7 دنوں سے ہزاروں فائر فائٹرز آگ بجھانے کی سر توڑ کوششوں میں مصروف ہیں لیکن درجہ حرارت میں اضافہ اور تیز ہواؤں کے باعث آگ بجھانے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

واضح رہے کہ کیلیفورنیا کے جنگلات میں ایک ہفتے قبل آگ لگی تھی تاہم ہفتے سے چلنے والی تیز ہواؤں کے باعث جانی و مالی نقصان میں اضافہ ہوا ہے جب کہ درجہ حرارت میں اضافے، ہوا میں نمی کے کم تناسب اور بارشوں کا بھی امکان نہیں ہے جس کی وجہ سے آگ پر جلد قابو پانا ممکن نظر نہیں آتا۔

بھارت میں 40 لاکھ افراد مصدقہ شہریوں کی فہرست سے خارج

گوہاٹی: مودی سرکار نے ریاست آسام کے 40 لاکھ باشندوں کو بھارتی شہریت سے محروم کرتے ہوئے اپنی شہریت ثابت کرنے کے لیے ستمبر تک آخری موقع دینے کا اعلان کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق آسام کے دارالحکومت گوہاٹی سے شہریوں کی دوسری اور آخری فہرست جاری کردی گئی ہے۔ فہرست میں 40 لاکھ درخواست گزار افراد کو بھارتی شہری تسلیم نہیں کیا گیا ہے۔ شہریت کے لیے مجموعی طور پر 3 کروڑ 29 لاکھ باشندوں نے کاغذات داخل کیے تھے جن میں سے 2 کروڑ 89 لاکھ  شہریوں کے کاغذات کو درست قرار دیا تاہم 40 لاکھ افراد کو قبول نہیں کیا گیا۔

بھارتی حکومت نے شہریت ثابت نہ کر پانے والے 40 لاکھ باشندوں کو اپنی شہریت ثابت کرنے کے لیے ستمبر تک کا موقع دیتے ہوئے مقررہ وقت تک کسی قسم کی قانونی کارروائی نہ کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ آسام حکومت نے کہا ہے کہ ان 40 لاکھ افراد کی جانب سے جمع کرانے والے نئے کاغذات کی مکمل چھان بین کی جائے گی اور کسی کے ساتھ ناانصافی نہیں کی جائے گی۔

بھارتی حکومت کی جانب سے ان 40 لاکھ افراد کی قومیت اور شناخت کے حوالے سے کوئی تفصیل جاری نہیں ی گئی ہے تاہم آسام میں رہائش پذیر بنگالی نژاد شہریوں میں مایوسی پھیل گئی ہے اور انہوں نے برملا اس خدشے کا اظہار بھی کیا ہے کہ شہریت کے تنازعے میں انہیں نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ ان علاقوں میں ممکنہ احتجاج سے بچنے کے لیے بڑی تعداد میں افواج تعینات کر دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ ریاست میں شہریت کے اندراج کے لیے تین کروڑ 29 لاکھ افراد نے درخواستیں اور کاغذات جمع کروائے تھے۔ شہریوں کی پہلی فہرست جنوری میں جاری کی گئی تھی جس میں ایک کروڑ 90 لاکھ لوگوں کے نام شامل تھے جب کہ دوسری فہرست میں یہ تعداد 2 کروڑ 89 لاکھ تک پہنچ گئی لیکن 40 لاکھ افراد کو تاحال شہریت نہیں دی گئی ہے۔

پاکستان کی نئی حکومت سے بہتر تعلقات کی توقع ہے، بھارت

نئی دہلی: بھارت کی وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے امید ظاہر کی ہے کہ پاکستان کی نئی حکومت خطے کو محفوظ اور پر امن بنانے کیلیے کام کرے گی۔

ترجمان بھارتی وزارت خارجہ نے کہا کہ بھارت خوش حال اور ترقی پسند پاکستان کا خواہشمند ہے، امید کرتے ہیں نئی حکومت جنوبی ایشیا کو محفوظ، مستحکم پرامن اور دہشت گردی و تشدد سے پاک خطہ بنانے کے لیے تعمیری کام کرے گی۔

ترجمان وزارت خارجہ کے مطابق پاکستانیوں نے انتخابات کے ذریعے جمہوریت پر اعتماد کا اظہار کیا جو خوش آئند ہے ، نئی حکومت سے دونوں ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات کی توقع ہے۔

بھارت خوشحال اور ترقی پسند پاکستان دیکھنے کا خواہشمند

نئی دہلی: بھارت نے پاکستان میں ہونے والے عام انتخابات کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ان انتخابات کو زبردست کامیابی کے طور پر دیکھتا ہے تاہم عمران خان کی جیت کے حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔

بھارتی اخبار کے مطابق نئی دہلی میں بھارتی دفتر خارجہ کے ترجمان نے اپنی بریفنگ کے دوران کہا کہ انہیں امید ہے کہ پاکستان کی نئی حکومت جنوبی ایشیا میں امن و امان کے حوالے سے کام کرے گی۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستانی عوام کی جانب سے عام انتخابات میں جمہوریت پر بھروسہ کرنے پر بھارت ان کا خیر مقدم کرتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارت خوشحال اور ترقی پسند پاکستان دیکھنے کا خواہشمند ہے جبکہ اپنے پڑوسی ممالک کے ساتھ امن کا خواہاں ہے۔

بھارتی دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ پاکستان کی نئی حکومت ایک مضبوط، مستحکم، محفوظ اور ترقی یافتہ جنوبی ایشیا کے لیے کام کریں گے۔

واضح رہے کہ 25 جولائی کو ہونے والے انتخابات میں کامیابی کے بعد پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سربراہ عمران خان نے اپنی پہلی تقریر کرتے ہوئے کشمیر کا مسئلہ بات چیت کے ذریعے حل کرنے پر زور دیا تھا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ وہ ان سیاستدانوں میں شامل ہیں جو بھارت کے ساتھ بہتر تعلقات چاہتے ہیں، اس لیے بھارت اگر ایک قدم آگے بڑھائے گا تو پاکستان کی نئی حکومت 2 قدم آگے بڑھے گی۔

نریندر مودی، عمران خان کی پیشکش قبول کریں، محبوبہ مفتی

ادھر بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر کی سابق وزیرِاعلیٰ محبوبہ مفتی نے بھارتی وزیرِ اعظم نریندر مودی سے اپیل کی ہے کہ عمران خان کی جانب سے کشمیر کا مسئلہ حل کرنے کے لیے بڑھائے گئے ’دوستی کے ہاتھ‘ کو قبول کیا جائے۔

اپنے ایک بیان میں محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نئی حکومت اور نیا وزیرِ اعظم بننے جارہا ہے، تاہم ایسے میں ان (عمران خان) کی جانب سے دوسری پیشکش کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں بھارتی وزیرِ اعظم سے اپیل کرنا چاہوں گی کہ عمران خان کی اس پیشکش کا مثبت جواب دیا جائے۔

محبوبہ مفتی نے عمران خان کو عام انتخابات میں کامیابی حاصل کرنے پر مبارکباد بھی پیش کی۔

اپنی جماعت کے یومِ تاسیس پر پارٹی کے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ حکمراں جماعت بھارتی جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ساتھ کشمیر میں ان کی جماعت کا اتحاد زہر کا پیالہ پینے کے مترادف تھا۔

انہوں نے بتایا کہ اپنے دورِ اقتدار کے دوران انہوں نے جتنی مرتبہ بھی نریندر مودی سے ملاقات کی ان سے ہمیشہ پاکستان اور حریت رہنماؤں کے ساتھ بات چیت کا سلسلہ شروع کرنے پر زور دیا۔

محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ انہوں نے حکمراں جماعت سے حریت رہنماؤں کو نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) کی قید سے رہا کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ کشمیر میں امن قائم کیا جاسکے۔

2016 میں حزب المجاہدین کے رہنما برہان مظفر وانی کی شہادت کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے حوالے سے محبوبہ مفتی کا کہنا تھا کہ انہوں نے احتجاجی مظاہروں کے دوران پیلیٹ گنز کا نشانہ بننے والوں کے درد کو ہمیشہ محسوس کیا۔

فلسطین کی بہادر بیٹی احد تمیمی جیل سے رہا

یروشلم: فلسطین میں مزاحمت کار نوجوان لڑکی احد تمیمی کو 8 ماہ قید کے بعد گزشتہ شب رہا کردیا گیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اسرائیلی فوجیوں کے منہ پر تھپڑ رسید کرنے والی نڈر لڑکی احد تمیمی کو جیل میں 8 ماہ کی قید و بند کی صعوبتیں اُٹھانے کے بعد گزشتہ شب رہائی مل گئی ہے۔ آٹھ ماہ کی سخت تکالیف نازک اور کم سن لڑکی کے پایہ استقلال میں لرزش نہیں لا سکیں۔ اسرائیلی حکام نے احد تمیمی کی رہائی کی تصدیق کردی ہے۔

اسرائیل کے محکمہ جیل خانہ جات کے ترجمان نے میڈیا کو بتایا کہ آج صبح احد تمیمی اور اُن کی والدہ نریمان کو رہا کردیا گیا ہے۔ دونوں قیدیوں کو اُن کے رہائشی علاقے مغربی کنارے بھیج دیا گیا ہے۔ دوسری جانب احد تمیمی نے جیل سے آزاد ہونے کے بعد پریس کانفرنس کرنے کا اعلان کیا ہے۔ احد تمیمی کا پورا گھرانہ سماجی کارکن اور مزاحمت کار کے طور پر شہرت رکھتا ہے۔

واضح رہے فلسطین میں دو اسرائیلی سپاہیوں کو طمانچہ رسید کرنے اور دھکے دینے کی ویڈیو منظر عام پر آنے کے بعد جرات و بہادری کا استعارہ بننے والی نوجوان لڑکی احد تمیمی کو قابض اسرائیلی فوج نے دسمبر 2017 کو والدہ کے ہمراہ گھر سے گرفتار کیا تھا۔

حریت رہنماؤں کا مقبوضہ کشمیر میں دو روزہ ہڑتال اور احتجاجی مہم کا اعلان

سری نگر: حریت پسند رہنماؤں نے بھارت کو خبردار کیا ہے کہ اگر  آئین کی دفعہ 35۔اے کو ختم کرنے کی کوشش کی گئی تو بھرپور احتجاجی مہم چلائیں گے جبکہ  5 اور 6 اگست کو وادی میں مکمل ہڑتال کی جائے گی۔ 

کشمیر میڈیا سیل کے مطابق حریت رہنماؤں یاسین ملک اور میر واعظ عمر فاروق نے آج سید علی گیلانی کے گھر جا کر ملاقات کی اور بھارت کی جانب سے آئین کی دفعہ 35 – اے کو ختم کرنے کے لیے دائر پٹیشن پر تفصیلی گفتگو کی۔ حریت رہنماؤں نے بھارت کو اس مکروہ عمل سے باز رہنے کی تاکید کرتے ہوئے متنبہ کیا ہے کہ بنیادی حقوق کی حفاظت کے لیے احتجاجی مہم چلائی جائے گی۔

چیئرمین حریت کانفرنس میر واعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ ہندو انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس  کی سرپرستی میں قائم غیر سرکاری تنظیم نے دفعہ 35۔ اے کی منسوخی کیلئے 2014ء میں بھارتی سپریم کورٹ میں ایک عرضداشت دائر کی تھی۔ اس کی سماعت 6 اگست کو ہوگی۔ اس موقع پر وادی بھر میں مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کی جائے گی۔

واضح رہے کہ آئین کا آرٹیکل 35 – اے کشمیریوں کو آزادی اظہار رائے، بنیادی حقوق اور ریاستی تحفظ کی ضمانت دیتا ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ اس پر عملدرآمد نہیں ہوتا۔ بھارتی انتہا پسند جماعتیں کشمیریوں کے بنیادی حقوق اور اس علامتی آزادی کو سلب کرنے کے لیے گھناؤنا کھیل رہی ہیں۔

انڈونیشیا میں زلزلے سے 14 افراد ہلاک، متعدد عمارتیں منہدم

جکارتہ: انڈونیشیا میں 6.4 شدت کے زلزلے سے 14 افراد ہلاک جب کہ عمارتیں منہدم ہونے سمیت مختلف حادثات میں متعدد افراد زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق انڈونیشیا میں زلزلے کے باعث عمارتیں گرنے سمیت مختلف حادثات میں 14 افراد ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوگئے، امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت 6.4 ریکارڈ کی گئی جب کہ زلزلے کا مرکز متارم کے شہر میں 50 کلومیٹر زیر زمین تھا تاہم انڈونیشیائی حکام کے مطابق سونامی کا خطرہ نہیں ہے۔

انڈونیشیا کا جزیرہ لمبوک زلزلے سے سب سے زیادہ متاثر ہوا جہاں متعدد عمارتیں منہدم ہو گئیں جب کہ درجنوں کو جزوی نقصان پہنچا۔ ملبے تلے دبنے کے باعث سیکڑوں افراد زخمی ہوگئے جب کہ لوگوں کو ملبے سے نکالنے کے لیے امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

Google Analytics Alternative