بین الاقوامی

قطر کی ایک لاکھ پاکستانیوں کو ملازمتیں دینے کی پیشکش

نیو یارک: قطرنے پاکستان کے ایک لاکھ ہنرمند افراد کو ملازمتیں دینے کی پیشکش کردی۔

اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت کے لیے نیویارک میں موجود وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی قطری ہم منصب محمد بن عبدالرحمن سے ملاقات ہوئی جس میں دونوں ممالک کے درمیان دوطرفہ تعلقات اور تعاون کو فروغ دینے اتفاق کیا گیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور قطری ہم منصب کے درمیان ملاقات میں خارجہ امور پر گفتگو ہوئی اور اس دوران قطری وزیر خارجہ نے ایک لاکھ ہنرمند پاکستانیوں کو ملازمتیں دینے کی پیشکش بھی کی۔

بھارت میں انتہا پسند ہندووں نے مسلم نوجوان کا ہاتھ کاٹ دیا

چمپارن: بھارتی ریاست بہار کے ضلع چمپارن میں جے شری رام کہنے کے باوجود مسلم نوجوان کا ہاتھ کاٹ دیا گیا، ماحول کشیدہ ہو گیا۔

آر ایس ایس اور بجرنگ دل والوں نے امن برقرار رکھنے کی ہر کوشش کو ناکام بنا دیا، بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے ضلع چمپارن میں گزشتہ دنوں سے ماحول کشیدہ ہے، 23 ستمبر کو محرم کے جلوس پر پتھرائو کیا گیا جس میں ایک درجن کے قریب افراد زخمی ہوگئے، شرپسندوں نے کرسیاں، رکسا، جھوا رام، بٹوا اور کٹھملیا وغیرہ علاقوں میں مسلمانوں کو نشانہ بنایا۔

علاقے کے لوگوں نے بتایا کہ آر ایس ایس اور بجرنگ دل والوں نے امن برقرار رکھنے کی ہماری ہر کوششوں کو ناکام بنا دیا، شرپسندوں نے چھتوں سے اینٹ اور پتھر برسائے اور سڑکوں پر لوگوں کو زدوکوب کیا، ایک نوجوان اسپتال سے موٹر سائیکل کے ذریعے گھر جا رہا تھا کہ راستے میں انتہا پسند ہندووں نے حملہ کرکے اس کا ہاتھ کاٹ دیا۔

خون میں لت پت لڑکے نے کہا کہ میں تو دہلی میں پڑھائی کرتا ہوں، سڑک پر بعض لوگوں نے پکڑ لیا اور جے شری رام کا نعرہ لگانے کیلیے کہا، میں نے یہ نعرہ بھی لگایا لیکن انھوں نے مجھ پر حملہ کرکے زخمی کر دیا، موتیہاری ضلع میں اقلیتی طبقہ کے تقریباً ایک درجن افراد زخمی ہو گئے، جن میں وکیل نامی شخص کی حالت نازک ہے، اس درمیان بٹوا چوک پر بعض مسلم خواتین کو بھی آر ایس ایس اور بجرنگ دل کے لوگوں نے تشدد کا نشانہ بنایا۔

5 نومبر سے ایرانی تیل کی فروخت پر پابندی لگائیں گے، امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ

نیویارک: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ ایران پڑوسی ممالک کی خودمختاری کا احترام نہیں کرتا لہٰذا تمام ممالک ایران کو اس کے جارحانہ رویے پر تنہا کریں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی اجلاس سے خطاب میں کہنا تھا کہ امریکی معیشت ماضی کے برعکس تیزی سے ترقی کر رہی ہے اور میرے صدارت سنبھالنے کے بعد امریکا مضبوط اور محفوظ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے امریکیوں کے لیے ملازمتوں میں اضافہ کیا ہے اور ہم امریکا کو سب سے مضبوط اور محفوظ ملک بنانا چاہتے ہیں۔

امریکی صدر نے کہا کہ ہماری قوم دیگر اقوام کے حقوق کا خیال رکھتی ہے لہٰذا دوسرے ملکوں کو بھی امریکا کا خیال رکھنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھا کہ شمالی کوریا کے صدر سے ملاقات کے بعد ایٹمی تجربات بند ہوگئے ہیں اور اب شمالی کوریا سے میزائل ادھر ادھر نہیں داغے جا رہے جب کہ شمالی کوریا کے معاملے میں ہمیں کامیابی ملی اور شمالی کوریا نے بہت اچھی پیش رفت کا مظاہرہ کیا ہے۔

امریکی صدر نے کہا کہ جنوبی کوریا کے صدر مون، وزیراعظم جاپان اور چینی صدر کا شکر گزار ہوں، ہم نے کئی ممالک اور ان کے سربراہوں سے بہت اچھے تعلقات بنائے ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا ایران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہنا تھا کہ ایران کی کرپٹ آمریت مشرق وسطیٰ میں تباہی اور عدم استحکام کا سبب ہے اور ایرانی جارحیت کی قیمت اس کے ہمسائے چکا رہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ایران پڑوسی ممالک کی خودمختاری کا احترام نہیں کرتا لہٰذا تمام ممالک ایران کو اس کے جارحانہ رویے پر تنہا کریں۔

امریکی صدر نے کہا کہ 5 نومبر سے ایرانی تیل کی فروخت پر پابندی لگائیں گے، ایران پر پابندیاں خطے میں عدم استحکام کے لیے ایرانی فنڈنگ روکنے کی کڑی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ شام میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال ہوا تو کارروائی کریں گے، اسرائیل اور فلسطین کے درمیان امن کے لیے پرُعزم ہیں۔

یاد رہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا اجلاس جاری ہے جس میں کئی ممالک کے سربراہان مملکت اور دیگر آفیشل شریک ہیں جب کہ پاکستان کی جانب سے اجلاس میں شرکت کے لیے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نیویارک پہنچے ہیں۔

بھارت کی شمالی ریاستوں میں شدید بارشوں نے تباہی مچادی، 25 افراد ہلاک

نئی دہلی: بھارت کی شمالی ریاستوں میں شدید بارشوں نے تباہی مچادی جس کے نتیجے میں 25 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

بھارت کی کئی ریاستوں میں شدید بارشوں کا سلسلہ جاری ہے جس کے باعث کئی ندی نالوں میں طغیانی آگئی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاستوں ہماچل پردیش، پنجاب اور ہریانہ میں سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کے باعث 25 افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

سیلاب سے ہزاروں افراد متاثر بھی ہوئے ہیں اور کئی مکان سیلابی ریلے میں بہہ گئے جبکہ بارش سے متاثرہ علاقوں میں بھارتی فوج اور نیوی کی ٹیمیں امدادی کاموں میں مصروف ہیں۔

بارش سے شمالی ریاستیں بری طرح متاثر ہوئی ہیں جس کے بعد متعدد اضلاع میں ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا ہے جب کہ کئی ریاستوں میں ریڈ الرٹ بھی جاری کیا گیا ہے۔

محکمہ موسمیات نے شمالی ہندوستان کے کئی علاقوں کے علاوہ ممبئی میں بھی موسلادھار بارش کا امکان ظاہر کیا ہے۔

سویڈن کے وزیراعظم پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام

اسٹاک ہوم: سویڈن کے وزیراعظم اسٹیفن لووین پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکام رہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق سویڈن کی پارلیمنٹ میں وزیراعظم اسٹیفن لووین پر اظہار اعتماد کے لیے رائے شماری ہوئی جس میں وزیراعظم اسٹیفن لووین کو ناکامی کا سامنا رہا۔ وزیر اعظم کو 142 ووٹ ملے جب کہ 204 اراکین نے عدم اعتماد کا اظہار کیا۔

سویڈن کے وزیراعظم اسٹیفن لووین 2014 میں وزارت عظمیٰ کے عہدے پر فائز ہوئے تھے تاہم رواں ماہ ہونے والے انتخابات میں ان کی بائیں بازو کی جماعت محض 144 حاصل کر کے سب سے بڑی مخالف جماعت کے مقابلے میں ایک صرف نشست زیادہ جیت پائی تھی چنانچہ متحدہ اپوزیشن کے 204 اراکین نے عدم اعتماد کا اظہار کردیا۔

اعتماد کا ووٹ حاصل نہ کرنے کے باعث سویڈن کے وزیراعظم کو اپنے عہدے سے مستعفی ہونا پڑے گا۔ پارلیمنٹ کے اسپیکر وزیراعظم کے عہدے کے لیے نیا نام تجویز کریں گے جسے پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنا ہوگا تاہم نئے وزیراعظم کے انتخاب تک اسٹیفن لووین ہی کے نگراں وزیراعظم رہنے کے امکانات روشن ہیں۔

واضح رہے کہ سویڈن کی متحدہ اپوزیشن میں دائیں بازو سے تعلق رکھنے والی قدامت پسند جماعتیں شامل ہیں جو اسٹیفن لووین کی امیگریشن پالیسی کی سخت ناقد رہی ہیں۔

گوگل، مائیکرو سافٹ اور ایمیزون کا عالمی قحط کے خلاف لڑنے کا اعلان

واشنگٹن: مائیکرو سافٹ، ایمیزون اور گوگل نے بین الاقوامی تنظیموں کے اشتراک سے خشک سالی، قحط اور غذائی قلت کے خلاف مشترکہ جنگ کا اعلان کرتے ہوئے اس ضمن میں ٹیکنالوجی سے مدد لینے کا اعلان کیا ہے۔

اتوار کے روز جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اس ضمن میں ڈیٹا، سافٹ ویئر اور مصنوعی ذہانت کو استعمال کیا جائے گا۔ اس طرح قحط کے شکار ممالک کو بروقت اطلاع دے کر اس خطرے سے خبردار اور تیار کرنے میں مدد ملے گی۔

اس ضمن میں عالمی بینک اور اقوامِ متحدہ کی جانب سے جاری کردہ مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس سے غریب اور ترقی پذیر ممالک میں خشک سالی کے بعد قحط کی ’پیش گوئی‘ ممکن ہوگی جس کے بعد فنڈنگ کے ذریعے بروقت مدد کرکے قیمتی جانوں کو بچانے میں مدد ملے گی۔

عالمی بینک کے گروپ سربراہ جِم یونگ کِم نے کہا کہ ’ حقیقت یہ ہے کہ دنیا بھر میں بھی اس وقت بھی بچوں سمیت کروڑوں افراد خوراک کی شدید قلت کے شکار ہیں جو اکیسویں صدی کا ایک المیہ ہے، اسی لیے ہم نے یہ اشتراک قائم کیا ہے تاکہ اس صورتحال کو مزید رونما ہونے سے روکا جاسکے‘ ۔

گزشتہ سال نائیجیریا، صومالیہ ، جنوبی سوڈان اور یمن میں دو کروڑ سے زائد لوگ قحط کا شکار ہوئے جبکہ 12 کروڑ 40 لاکھ افراد اس وقت بھی غذائی عدم تحفظ میں مبتلا ہیں جہاں فوری مدد کی ضرورت ہے۔ ان میں سے نصف افراد جنگوں اور تنازعات کی وجہ سے اس مشکل کے شکار ہے۔

اس نظام کو فیمائن ایکشن مکینزم (ایف اے ایم) کا نام دیا گیا ہے جو غذائی بحران کی ابتدائی علامات کو وقت سے قبل ظاہر کرے گا۔ اس طرح فنڈنگ اور ضروری اقدامات اٹھا کر وقت سے پہلے اس صورتحال کو ٹالنے کے لیے مداخلت کرنا ممکن ہوگا۔

اس ضمن میں ایمیزون ویب سروس، مائیکرو سافٹ اور گوگل مل کر مصنوعی ذہانت (آرٹیفشل انٹیلی جنس) کی بنا پر تجزیاتی ماڈل بنائیں گے جس سے حقیقی وقت میں غذا، فصلوں اور خوراک کی صورتحال پر نظررکھنا ممکن ہوگا۔

اس ضمن میں انڈونیشیا میں 13 اکتوبر کو منعقد کی جانے والی بین الاقوامی کانفرنس میں عملی فیصلے کیے جائیں گے۔

امریکا نے روہنگیا پناہ گزینوں کی امداد دگنی کردی

نیویارک: امریکا نے روہنگیا پناہ گزینوں کے لیے مختص امدادی رقم میں دگنا اضافہ کر دیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کی اقوام متحدہ میں مستقل سفیر نِکی ہیلی نے امریکی حکومت کی جانب سے روہنگیا پناہ گزینوں کے لیے 185 ملین ڈالر امداد دینے کا اعلان کیا ہے۔ یہ امدادی رقم اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے برائے بحالی پناہ گزین (UNHCR) کے ذریعے فراہم کی جائے گی۔

امریکی سفیر نکی ہیلی کا مزید کہنا تھا کہ امریکا روہنگیا مہاجرین کی بہبود اور بحالی کے لیے امدادی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے اور انسانی المیے سے نمٹنے کے لیے امدادی رقم کو دگنا کردیا گیا ہے۔ یہ رقم بنگلہ دیش میں پناہ لیے روہنگیا مہاجرین کی بہبود میں خرچ ہوگی۔

نکی ہیلی نے دیگر ممالک کو روہنگیا مہاجرین کی بہبود کے لیے عملی اقدام کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ اس عالمگیر معاملے پر سب کو اپنا حصہ ڈالنا ہوگا۔ یہ لوگ ہماری ذمہ داری ہیں جسے ہمیں نبھانا ہے۔

واضح رہے کہ اس وقت بنگلہ دیش کی سرحد پر قائم پناہ گزین کیمپوں میں 7 لاکھ سے زائد روہنگیا مہاجرین موجود ہیں جو گزشتہ برس اگست میں میانمار فوجیوں کے مظالم اور نسل کشی کے باعث اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوگئے تھے۔ ان مظالم پر عالمی فوجداری عدالت نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں مزید 3 کشمیری نوجوان شہید

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی فائرنگ سے مزید 3 کشمیری نوجوانوں کی شہادت سے 24  گھنٹے میں شہید ہونے والوں کی تعداد 5 ہو گئی ہے۔

کشمیری میڈیا کے مطابق جنت نظیر وادی میں قابض بھارتی فوج کے مظالم کا سلسلہ جاری ہے۔ ضلع کپواڑہ میں سرچ آپریشن کے دوران بھارتی فوج کی فائرنگ سے مزید 3 کشمیری نوجوان شہید ہوگئے جب کہ اسی ضلع میں گزشتہ روز بھی 2 نوجوانوں کی شہادت کا واقعہ رونما ہوا تھا۔

چوبیس گھنٹوں کے دوران ایک ہی ضلع میں 5 نوجوانوں کی شہادت پر وادی میں سوگ کا سا سماں ہے، سرچ آپریشن کے باعث ضلع کپواڑہ میں پہلے ہی معمولات زندگی معطل ہیں۔ اسی ضلع میں ایک پولیس اہلکار کی ہلاکت کی بھی اطلاع ہے۔

دریں اثناء مقبوضہ کشمیر کے اضلاع باندی پورہ اور پلوامہ میں ایک ہفتے قبل ہونے والی نوجوانوں کی شہادت پر آج چوتھے روز  بھی مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال کی جا رہی ہے جس کے باعث کاروباری سرگرمیاں معطل، تعلیمی ادارے بند اور ذرائع نقل و حمل نہ ہونے کے باعث شاہراؤں پر مکمل سناٹا ہے۔

 

Google Analytics Alternative