بین الاقوامی

امریکی عدالت کا وائٹ ہاؤس کو صحافی کا پریس کارڈ بحال کرنے کا حکم

واشنگٹن: امریکا کی وفاقی عدالت نے وائٹ ہاؤس کو سی این این کے صحافی جم اکوسٹا کا پریس کارڈ بحال کرنے کا حکم دے دیا۔

یہ فیصلہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے مقرر کیے گئے جج ٹموتھے کیلی نے سنایا۔ امریکی میڈیا کے مطابق عدالت نے فیصلہ دیا کہ وائٹ ہاؤس نے صحافی کا پریس کارڈ معطل کرنے کے لیے ضروری قانونی طریقہ کار پر عمل نہیں کیا۔

گزشتہ ہفتے وائٹ ہاؤس میں پریس بریفنگ کے دوران سی این این کے صحافی اور ڈونلڈ ٹرمپ میں بحث ہوئی تھی، صدر ٹرمپ نے صحافی کو ملک دشمن اور بدتمیز قرار دیتے ہوئے ان پر وائٹ ہاؤس کے دروازے بند کرنے کا حکم دیا تھا۔

وائٹ ہاؤس کی جانب سے اکوسٹا کا پریس کارڈ معطل کیے جانے کے خلاف سی این این نے قانونی چارہ جوئی کرتے ہوئے عدالت سے رجوع کیا جس پر ابتدائی دلائل سننے کے بعد عدالت نے صحافی کا پریس کارڈ بحال کرنے کا حکم دیا۔

واشنگٹن ڈی سی میں عدالت کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے جم اکوسٹا نے فیصلے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میں ان تمام ساتھیوں، صحافتی اداروں اور دوستوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنہوں نے ہمیں سپورٹ کیا اور ہمارے ساتھ کھڑے رہے۔

کیلی فورنیا کی تاریخ کی سب سے خوفناک آگ میں ہلاکتیں 71 ہوگئیں

لاس اینجلس: کیلی فورنیا کے جنگلات میں آتشزدگی کے سبب تباہ ہونے والے ’پیراڈائز ٹاؤن‘ اور ملحقہ علاقوں کے راکھ کے ڈھیر سے مزید لاشیں ملنے کے بعد ہلاکتوں کی تعداد 63 سے بڑھ کر 71 ہوگئی جب کہ 1 ہزار سے زائد افراد تاحال لاپتا ہیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق 8 نومبر کو امریکی ریاست کیلی فورنیا میں لگنے والی آگ پر قابو نہیں پایا جاسکا، کئی ہزار ایکڑ پر موجود درخت جل کر راکھ ہوگئے، آتشزدگی سے ہلاکتوں کی تعداد تیسرے دن 63 سے بڑھ کر 71 ہوگئی ہے جب کہ 1 ہزار سے زائد افراد تاحال لاپتا ہیں۔

آگ سے 7 ہزار 2 سو سے زائد تعمیرات خاکستر ہوگئیں جن میں شوبز ستاروں کے عالیشان گھر بھی شامل ہیں جب کہ 15 ہزار 5 سو سے زائد مزید تعمیرات کو خطرہ لاحق ہے۔ ایک لاکھ سے زائد افراد بے گھر ہوگئے۔ کیلی فورنیا جنگلات کی آگ نے لاس اینجلس کے گرفتھ پارک میں 1933 کو لگنے والی آگ کا ریکارڈ توڑ دیا۔

آگ کے شعلوں نے شوبز ستاروں کے رہائشی علاقے اگورا ہلز کو اپنی لپیٹ میں لے لیا جس کے باعث کئی اداکاروں کے گھرمکمل طور پر جل کر تباہ ہوگئے۔ آگ لگنے سے قبل اس علاقے کو خالی کرالیا گیا تھا مجموعی طور پر ڈھائی لاکھ افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا۔

California 2

امریکی میڈیا کے مطابق فائر فائٹرز تیز ہواؤں کے تھپیڑوں کے باعث تیزی سے پھیلنے والی آگ پر قابو پانے میں ناکام ہیں۔ جمعرات کو وسطی لاس اینجلس سے شروع ہونے والی آگ بڑھتے بڑھتے آج 35 ہزار ایکڑ تک پھیل کر ہائی وے 101 کے ساحلی علاقے کے نزدیک پہنچ گئی ہے۔

ادھر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے فائر بریگیڈ اور ریسکیو اداروں کی استعداد پر سوال اُٹھاتے ہوئے کہا کہ کیلی فورنیا کے جنگلات میں لگی آگ پر قابو نہ پانا ہماری صلاحیت اور کارکردگی میں اضافے کے لیے انقلابی اقدامات کی ضرورت کی جانب واضح اشارہ ہے۔

یمن میں اتحادی افواج کا فضائی حملہ، 10 ہلاک

حدیدہ: یمن کی بندرگاہ پر کنٹرول حاصل کرنے کے لیے اتحادی افواج نے باغیوں کے ٹھکانوں پر فضائی حملہ کیا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک ہوگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق یمن کے بندرگاہی شہر حدیدہ میں حوثی باغیوں کے زیر تسلط علاقے میں گھمسان کی جنگ جاری ہے۔ اتحادی افواج قبضہ واگزار کرانے کے لیے باغیوں کے ٹھکانوں پر تابڑ توڑ حملے کر رہی ہے جب کہ حوثی باغیوں کی جانب سے بھی سخت مزاحمت کا سامنا ہے۔

اتحادی فوج نے تازہ ترین جھڑپ میں باغیوں کے ٹھکانوں پر فضائی حملہ کیا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک ہوگئے اس طرح محض ایک ہفتے کے دوران ہلاک ہونے والوں کی تعداد 50 کے قریب پہنچ گئی ہے جب کہ ہزاروں شہری نقل مکانی پر مجبور ہوگئے۔ تازہ جھڑپ اتحادی افواج کی جانب سے رواں ہفتے عارضی جنگ بندی کے اعلان کے بعد ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ یمن کی بندرگاہ حدیدہ پر قبضے کے لیے حوثی باغیوں اور اتحادی افواج کے درمیان ایک ماہ سے جنگ جاری ہے، تاہم رواں ہفتے یمن کی جانب سے جنگ بندی کا اعلان کیا گیا تھا۔

خاشقجی کو سعودی ولی عہد کے حکم پر قتل کیا گیا، سی آئی اے

واشنگٹن: امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے نے تحقیقات میں پتہ لگایا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے حکم پر قتل کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق سی آئی اے نے خاشقجی کے قتل کی تحقیقات کے بعد کانگریس سمیت امریکی انتظامیہ کے مختلف اداروں کو بریفنگ دی کہ اس کے تجزیے کے مطابق اس قتل میں سعودی ولی عہد کا ہاتھ ہے۔ ادھر سعودی حکومت کا موقف ہے کہ شہزادہ محمد بن سلمان کا اس قتل سے کوئی تعلق نہیں جب کہ وائٹ ہاؤس اور امریکی محکمہ خارجہ دونوں نے اس خبر پر اپنا موقف دینے سے انکار کردیا ہے۔

یہ امریکا کا پہلا واضح تجزیہ ہے جس میں صاف صاف اس واقعے میں محمد بن سلمان کے ملوث ہونے کی بات کی گئی ہے۔ واشنگٹن میں سعودی سفارت خانے کی خاتون ترجمان نے سی آئی اے کے اس مجوزہ تجزیے کو بے بنیاد اور جھوٹا قرار دے دیا ہے۔

سعودی حکومت کے ناقد صحافی جمال خاشقجی کو 2 اکتوبر کو ترکی کے شہر استنبول میں سعودی قونصل خانے میں قتل کردیا گیا تھا۔ اس کام کے لیے سعودی عرب سے 15 افراد کی ٹیم ترکی بھیجی گئی تھی۔ سعودی حکومت نے اس قتل کو اتفاقیہ طور پر پیش آنے والا حادثہ قرار دیا ہے تاہم ترکی کا کہنا ہے کہ یہ ایک سوچی سمجھی سازش تھی اور سعودی عرب سے قاتلوں کو حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ سی آئی اے نے پتہ لگایا ہے کہ محمد بن سلمان کے بھائی اور امریکا میں سعودی سفیر شہزادہ خالد بن سلمان نے خاشقجی کو فون کرکے استنبول میں سعودی قونصلیٹ بلایا تھا۔ سی آئی اے کا خیال ہے کہ یہ فون کال ولی عہد کے کہنے پر کی گئی تھی۔ ادھر شہزادہ خالد بن سلمان کا کہنا ہے کہ انہوں نے خاشقجی کو کبھی فون کرکے ترکی جانے کا نہیں کہا، اور اگر امریکا کے پاس اس کا کوئی ثبوت ہے تو جاری کرے۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق خاشقجی کو قتل کرنے کے بعد استنبول میں سعودی قونصل خانے سے سیکیورٹی افسر ماہر مطرب نے شہزادہ محمد بن سلمان کے معاون سعود القحطانی کو فون کرکے بتایا تھا کہ کام ہوگیا ہے۔

زمبابوے میں بس کی چھت پر رکھا گیس سلنڈر پھٹنے سے 42 مسافر ہلاک

ہرارے: زمبابوے کے دارالحکومت سے 550 کلو میٹر دور ڈسٹرکٹ گوندا میں گاڑی میں اچانک آگ بھڑکنے کے باعث 42 مسافر ہلاک اور 20 زخمی ہوگئے۔

زمبابوے کے شہر گوندا سے پیٹ برج جانے والی مسافر بس آگ لگنے کے باعث مکمل طور پر تباہ ہوئی جس میں سوار 42 مسافر جھلس کر ہلاک اور 20 سے زائد زخمی ہیں۔

حادثے کے حوالے سے بتایا جاتا ہے کہ ممکنہ طور پر بس کی چھت پر رکھا گیا گیس سلنڈر پھٹنے کے باعث واقعہ پیش آیا۔

پولیس کے ترجمان چیرٹی چرمبا نے بس حادثے سے متعلق کہا کہ حادثے میں 42 افراد ہلاک اور 24 زخمی ہوئے، جب کہ زخمیوں میں سے بھی بیشتر کی حالت تشویشناک ہے۔

زمبابوے میں کام کرنے والے فلاحی ادارے ریڈ کراس نے حادثے کی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کی ہیں جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ آگ لگنے کے باعث بس مکمل طور پر تباہ ہوگئی۔

شمالی کوریا کا ’ہائی ٹیک ٹیکٹیکل‘ ہتھیاروں کا کامیاب تجربہ

پیانگ یانگ: شمالی کوریا نے جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس خود کار ہتھیاروں کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق شمالی کوریا نے صدر کم جونگ اُن کی موجودگی میں ’ہائی ٹیک ٹیکٹیکل‘ ہتھیاروں کے کامیاب تجربہ کیا ہے تاہم اس حوالے سے زیادہ معلومات فراہم نہیں کی گئیں۔

شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جونگ اُن کی سربراہی میں ہونے والی اس خصوصی تقریب میں سائنس دانوں، اعلیٰ فوجی حکام، وزراء اور دیگر اہم شخصیات نے شرکت کی اور کامیاب تجربے پر ایک دوسرے سے گلے ملے۔

شمالی کوریا کے سرکاری چینل نے اس اہم تقریب کا احوال نشر تو کیا تاہم ہتھیاروں کی نوعیت اور تفصیلات بتانے سے گریز کیا ہے جس سے ان ہتھیاروں کے جوہری ہونے سے متعلق شکوک و شبہات میں اضافہ ہوا ہے۔

شمالی کوریا اور جنوبی کوریا کے سربراہان کے درمیان سلسلہ وار ملاقاتوں اور کم جونگ اُن کی امریکی صدر سے تاریخی ملاقات میں ایٹمی ہتھیاروں سے سبک دوشی کے معاہدے کے بعد یہ پہلا موقع ہے جب شمالی کوریا نے جدید ترین ہتھیاروں کا تجربہ کیا۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کی اس ’ مبہم مہم جوئی‘ کا مقصد امریکا کو دباؤ میں لینا بھی ہوسکتا ہے اور عین ممکن ہے کہ کم جونگ اُن امریکا سے نرمی کے حصول کے لیے یہ سب کچھ کر رہے ہوں۔

سری لنکن پارلیمنٹ میں دوسرے روز بھی میدان جنگ کی صورت حال

سری لنکا میں پیدا ہونے والے آئینی بحرانی کے نتیجے میں ملک کی پارلیمنٹ میں دوسرے روز بھی اراکین نے اپنے مخالفین پر چلی پاؤڈر اور مکوں کی بارش کر دی جس کے نتیجے میں ایوان میدان جنگ بنا رہا۔

اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق سری لنکا کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کیرو جے سوریا کو ان کی پارٹی کے مخالفین نے ایوان میں داخل ہونے سے روک دیا تاہم ایک گھنٹے بعد غیرمسلح پیراملٹری فورس کے عہدیداروں اور افسران نے انہیں اسمبلی کے اندر پہنچایا۔

پیراملٹری فورس کے عہدیداروں نے اسپیکر جے سوریا کو گھیرے میں لے کر ایوان کا اعتماد کھونے والے وزیراعظم راجاپکسے کے حامیوں سے تحفظ فراہم کیا کیونکہ وہ اسپیکر پر کتابیں اور اسٹیشنری اچھال رہے تھے۔

راجاپکسے کے حامی اراکین نے فرنیچر کو توڑ کر پیراملٹری فورسز کے عہدیداروں پر بھی حملہ کیا جبکہ پولیس اور مخالف اراکین پر چلی پاؤڈر بھی پھینک دی۔

یاد رہے کہ سری لنکا میں 26 اکتوبر کو صدر متھری پالا سری سینا کی جانب سے وزیراعظم رانیل وکرماسنگھے کو ہٹا کر ان کی جگہ سابق صدر مہندا راجاپکسے کو وزیراعظم مقرر کیا گیا تھا۔

صدر کے اس فیصلے کے بعد ملک میں آئینی بحران پیدا ہوا تھا اور ایوان میں راجا پکسے کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک پیش کی گئی تھی جس کی کامیابی پر انہیں ایوان کا اعتماد حاصل نہیں تھا تاہم وہ اس تحریک کی کامیابی کو ماننے سے انکاری تھے۔

دوسری جانب سپریم کورٹ نے بھی صدر کے اقدام کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے پارلیمنٹ کو بحال کردیا تھا اور قبل از انتخابات کے فیصلے کو بھی کالعدم قرار دیا تھا۔

برطرف وزیراعظم رنیل وکرماسنگھے کی پارٹی کے رکن گیمینی جے وکراما پریرا کا کہنا تھا کہ ان کے چہرے پر چلی پاؤڈر پھینکا گیا جس کے باعث انہیں پارلیمنٹ کے میڈیکل سینٹر میں طبی امداد کی ضرورت پڑی۔

قبل ازیں گزشتہ روز بھی سری لنکا کی پارلیمنٹ میں مہندا راجہ پکسے کے اسپیکر سے متعلق متنازع دعویٰ پر پارلیمنٹ میدان جنگ بن گیا تھا۔

مہندا راجا پکسے نے دعویٰ کیا تھا کہ اسپیکر انہیں محض ’زبانی ووٹ‘ کے ذریعے وزارت عظمیٰ کے عہدے سے ہٹانے کا اختیار نہیں رکھتے جس پر مخالف سیاسی جماعت طیش میں آگئی اور چیمبر کے گرد لڑائی شروع ہو گئی تھی۔

ایوان میں معاملہ اس وقت شدت اختیار کر گیا تھا جب پارلیمنٹ کا اجلاس دوبارہ شروع ہوا اور اسپیکر اسمبلی کرو جے سوریا نے کہا کہ ملک میں نہ کوئی حکومت اور نہ ہی وزیراعظم ہے۔

اپوزیشن جماعت نے مہندرا راجہ پکسے کے بیان پر ووٹ دینے کا کہا اور اسی دوران متعدد اراکین اسمبلی ایوان کے وسط میں جمع ہو گئے اور متعدد اسپیکر کی جانب نعرے لگاتے ہوئے بڑھے اور ان کے رویے کو ’جانبدار‘ قرار دیتے ہوئے مخالفت کرنے لگے۔

جس کے بعد تقریباً 50 اراکان اسمبلی آپس میں لڑ پڑے، مہندرا راجا پکسے کے حامیوں نے پانی کی بوتلیں، کتابیں اور کچرا دان اسپیکر کی جانب پھینکے اور اسپیکر اسمبلی کی حامیوں نے انہیں اپنے گھیرے میں لیکر تحفظ فراہم کیا۔

سری لنکن پارلیمنٹ میں ’تشدد زدہ‘ ماحول آدھے گھنٹے تک جاری رہا جس کے بعد اسپیکر نے اجلاس ملتوی کردیا تھا۔

برازیل کے پائلٹ نے طیارہ اڑاتے ہوئے اسلام قبول کرلیا

ریاض: برازیلین پائلٹ نے 18ہزار فٹ کی بلندی پر اُڑتے طیارے میں  اسلام قبول کرلیا، نو مسلم پائلٹ کی اسلام قبول کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے۔

اماراتی میڈیا کے مطابق سعودی عرب آنے والی پرواز میں ایک برازیل سے تعلق رکھنے والے پائلٹ نے فرسٹ پائلٹ کے سامنے کلمہ پڑھ کر مسلمان ہونے کی سعادت حاصل کرلی۔

ویڈیو میں فرسٹ پائلٹ نے عربی میں کہا کہ اس وقت طیارہ سعودی عرب کے شہر تبوک کی فضاؤں میں ہے اور میرا ساتھی پائلٹ عماری کلمہ شہادت پڑھیں گئے۔

فرسٹ پائلٹ نے کلمہ شہادت کے الفاظ پڑھے تو ساتھی پائلٹ نے ان الفاظ کو دہرا کر مسلمان ہونے کا اقرار کیا۔

ویڈیو کے آخر میں فرسٹ پائلٹ نے کہا  کہ اب میرا بھائی مسلمان ہوگیا ہے ، اس نے اسلام قبول کرلیا ہے۔

Google Analytics Alternative