بین الاقوامی

سعودی عرب میں حرمین ٹرین اسٹیشن پر خوفناک آتشزدگی، 9 زخمی

جدہ: سعودی عرب میں حرمین ہائی اسپیڈ ریل اسٹیشن پر اچانک خوفناک آگ بھڑک اُٹھی جس کے نتیجے میں 9 افراد زخمی ہوگئے۔

سعودی میڈیا کے مطابق جدہ میں حرمین ہائی اسپیڈ ٹرین اسٹیشن پر اچانک آگ بھڑک اُٹھی اور دیکھتے ہی دیکھتے آگ بلند شعلوں میں تبدیل ہوگئے جس کے باعث آسمان پر کالے بادل چھا گئے۔ خوش قسمتی سے حادثے کے وقت اسٹیشن پر لوگوں کی تعداد معمول سے کم تھی۔

ریسکیو ادارے، سول ڈیفنس اور طبی ٹیم نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر امدادی کاموں کا آغاز کیا اور 6 گھنٹے کی مسلسل مشقت کے بعد آگ پر قابو پالیا ہے جس کے لیے سعودی فوج کے ایک ہیلی کاپٹر کی بھی مدد لی گئی۔

ایمبولینس کے ذریعے 5 زخمیوں کو اسپتال لایا گیا ہے جن کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔ 4 زخمیوں کو جائے وقوعہ پر ہی طبی امداد فراہم کی گئی۔ آگ لگنے کی وجوہات کا تعین کرنے کے لیے حکومت نے ایک انکوائری کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

واضح رہے کہ حرمین ریل اسٹیشن کو 6.7 بلین یورو کی خطیر رقم سے تعمیر کیا گیا تھا اور گزشتہ برس ہی اسٹیشن کا افتتاح کیا گیا تھا۔ اس اسٹیشن سے مکہ اور مدینہ جانے کے لیے 450 کلومیٹر طویل ٹریک بنایا گیا تھا۔

اسرائیلی پولیس کے پہرے میں سیکڑوں یہودی زبردستی بیت المقدس میں داخل

غزہ / مقبوضہ بیت المقدس: اسرائیلی پولیس کے حفاظتی حصار کے ساتھ سیکڑوں یہودی زبردستی مسجد اقصیٰ میں داخل ہوگئے اور مسلمانوں کو عبادت کی ادائیگی سے روک کر اپنی مذہبی رسومات ادا کیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق قابض اسرائیلی پولیس نے 200 سے زائد یہودیوں کو زبردستی بابِ رحمت سے  مسجد اقصیٰ کے صحن میں داخل کیا، جہاں یہودیوں نے عبرانی کیلنڈر کے سال کے آغاز کے اعتبار سے مذہبی تہوار روش ہاشنہ منایا اور مذہبی رسومات ادا کیں۔

اس موقع پر قابض اسرائیلی فوج نے مسجد کے صحن میں نماز کی ادائیگی کے لیے موجود مسلمانوں پر تشدد کیا اور جبری طور پر بے دخل کردیا۔ اس موقع پر انتہا پسند یہودی گروپ گلک کے ارکان بھی موجود تھے۔ فلسطینیوں نے اسرائیلی پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور سخت احتجاج کیا۔

قابض اسرائیلی پولیس کے متعصبانہ عمل اور یہودیوں کی دیدہ دلیری کو مدنظر رکھتے ہوئے بیت المقدس کی سپریم اسلامی اتھارٹی کے سربراہ شیخ عکرمہ صابری کی اپیل پر مسلمانوں کی بڑی تعداد ہمہ وقت مسجد اقصیٰ کے صحن میں موجود ہے تاکہ اسرائیلوں کو دوبارہ داخل ہونے سے روکا جاسکے

حوثی باغیوں کا نجران میں متعدد سعودی فوجیوں کی ہلاکت اور گرفتاری کا دعویٰ

نجران: حوثی باغیوں نے نجران میں حملہ کر کے کئی سعودی فوجیوں کو ہلاک اور گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق یمنی حوثی باغیوں نے سعودی عرب کے جنوبی علاقے نجران میں سعودی فورسز کے خلاف ایک بڑا آپریشن شروع کر کے سعودی فوجیوں کی ایک بڑی تعداد کو ہلاک، زخمی اور کئی اہلکاروں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

حوثی باغیوں کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ سرحد کے نزدیک نجران میں سعودی فورسز کو لڑائی میں زبردست نقصان ہوا ہے، کئی سینئر فوجی افسران کو گرفتار کرلیا گیا ہے جب کہ ہتھیاروں کا بڑا ذخیرہ اور بکتر بند گاڑیوں پر قبضہ کر لیا گیا ہے۔

عالمی خبر رساں ایجنسی راؤئٹرز کی طرف سے اس حملے کے بارے میں تصدیق کے لیے سعودی سربراہی میں قائم فوجی اتحاد کے ترجمان کرنل مالکی سے رابطہ کیا گیا تو فوری طور پر کوئی رد عمل سامنے نہیں آیا۔ سعودی حکومت کی جانب سے بھی حوثی باغیوں کے دعوے کی تردید یا تصدیق نہیں کی گئی۔

سوشل میڈیا پر ایسی تصاویر زیر گردش ہیں جن میں سعودی فوج کے افسران کو گرفتار کرتے ہوئے اور سعودی فوج کی گاڑیوں پر حوثی باغیوں کو بیٹھے دیکھا جا سکتا ہے جس میں وہ فتح کا نشان بنا رہے ہیں اور سعودی بکتربند گاڑیوں پر اپنے پرچم لہرا رہے ہیں۔

 

دولت مشترکہ کا مقبوضہ کشمیر میں بھارتی محاصرے کی تحقیقات کا فیصلہ

لاہور: سفارتی محاذ پر بھارت کو ایک اورشکست، دولت مشترکہ کی پارلیمانی ایسوسی ایشن نے یوگینڈا اجلاس کے دوران مقبوضہ کشمیر میں محاصرے کی تحقیقات کا فیصلہ کر لیا، بھارتی وفد کی معاملے کو اندرونی مسئلہ قرار دینے کی کوشش بھی ناکام ہو گئی۔

یہ فیصلہ بین الصوبائی رابطے کی وزیر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا کی قیادت میں پاکستانی مندوبین کی طرف سے ایوان کی مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی اقدامات کی طرف توجہ مبذول کروانے کے بعد کیا گیا۔

ایسوسی ایشن نے پاکستان سے کہا کہ وہ اس معاملے کی تحقیقات کیلئے ایک تحریری درخواست جمع کرائے۔ جب بھارت کے مندوب نے مسئلے کو بھارت کا اندرونی معاملہ قرار دینے کی کوشش کی تو رکن ملکوں نے اسے سختی سے رد کر دیا۔

بھارت 30 سال سے دہشتگردی میں ملوث، کلبھوشن ثبوت ہے، پاکستان کا جواب الجواب

نیویارک: اقوام متحدہ میں بھارت کے جواب پر پاکستان نے ایک بار پھر کرارا جواب دیا ہے۔ پاکستانی سفارتکار ذوالقرنین چھینہ نے کہا کہ بھارت 30 سال سے مقبوضہ کشمیر میں دہشتگردی کر رہا ہے، بھارتی جاسوس کلبھوشن نے پاکستان میں دہشتگردی کا اعتراف کیا جو ناقابل تردید ثبوت ہے۔ وزیراعظم نے دنیا کے سامنے بھارت کا چہرہ بےنقاب کر دیا۔

پاکستانی سفارتکار کا بھارت کو کرارا جواب، سفیر ذوالقرنین چھینہ نے جنرل اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت 30 برسوں سے وادی میں دہشت گردی کر رہا ہے، سفیر نے سوال اٹھایا کہ بھارت کااقدام اگر کشمیریوں کی فلاح کے لیے ہے تو کرفیو کیوں نہیں ہٹاتا۔

پاکستانی سفارتکار نے کہا کہ بھارت مقبوضہ وادی کا ذکر تک کرنے سے کترا رہا ہے، بھارت کشمیریوں کو بولنےکی آزادی کیوں نہیں دے رہا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت جو چھپانا چاہ رہا ہے وزیراعظم عمران خان نے وہ سب دنیا کو بتا دیا، وزیراعظم عمران خان نے دنیا کے سامنے بھارت کا چہرہ بےنقاب کر دیا، بھارتی حکومت آر ایس ایس کے نظریئے کو آگے بڑھا رہی ہے، مہاتما گاندھی کے قاتل سیکولر بھارت کے آئیڈیاز کو قتل کر رہے ہیں،
گجرات میں قتل عام کرنے والوں سے جواب طلب کیا جانا چاہیے تھا، بھارتی جاسوس کلبھوشن نے پاکستان میں دہشت گردی کا اعتراف کیا۔

دورہ امریکا کے بعد وزیراعظم وطن واپسی کیلئے نیو یارک سے روانہ

نیو یارک: وزیراعظم عمران خان کامیاب دورہ امریکا کے بعد وطن واپسی کے لیے نیویارک سے روانہ ہو گئے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان 7 روز کا دورہ امریکا مکمل کرنے کے بعد وطن واپسی کے لیے روانہ ہو گئے ہیں، وزیراعظم کے ہمراہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بھی ہمراہ ہیں۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان وطن واپسی کے لیے نجی پرواز سے روانہ ہوئے ہیں۔

دوسری طرف پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے وزیراعظم عمران خان کی وطن واپسی پر بھرپور استقبال کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کے دورۂ امریکا کا مکمل احوال

عمران خان کی وطن واپسی پر کارکنوں کی بڑی تعداد اسلام آباد آئے گی، اقوام متحدہ خطاب کی بھرپور پذیرائی پر وزیراعظم کا شایان شان استقبال کا فیصلہ کیا گیا ہے، کارکنوں کو مقامی قیادت کی جانب سے تیاری کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: سوچیں پاک بھارت ایٹمی جنگ ہوئی تو کیا ہوگا؟ وزیراعظم نے دنیا کو خبردار کردیا

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کمرشل فلائٹ سے پاکستان آئیں گے، پاکستان آنے سے قبل وہ سعودی عرب کے شہر جدہ میں روکیں گے۔ دورہ امریکا کے بارے میں جتنا اللہ کا شکر ادا کیا جائے کم ہے، دورہ بہت مفید رہا، امریکا میں 70 کے لگ بھگ ملاقاتیں ہوئی ہیں، 50 میٹنگ پہلے ہوئی ہیں کل ملا کر میں نے وزیراعظم عمران خان نے 120 ملاقاتیں کیں۔ ملاقاتوں میں تھنک ٹینک، ایڈیٹوریل بورڈ سمیت دیگر ملاقاتیں بھی شامل ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں خطاب کے دوران 25 سے 30 ہزار لوگ یو این اسمبلی کے باہر موجود تھے، 72 سالہ تاریخ میں اتنا بڑا اجتماع نیو یارک میں دیکھنے میں نہیں آیا، اس وقت 65ء والا جذبہ عوام میں دیکھنے میں آیا ہے۔

یاد رہے کہ جنرل اسمبلی اجلاس کے بعد وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سے ملاقات کی جس میں کشمیر کی صورتحال پر بات چیت کی گئی۔ عمران خان نے عالمی ادارے پر کشمیریوں کی نسل کشی کا نوٹس لینے پر زور دیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انٹونیو گوٹیرش سے ملاقات کی اور عالمی ادارے اور بین الاقوامی برادری پر زور دیا کہ وہ دیرینہ تنازع جموں و کشمیر کے حل میں مدد اور انسانی جانیں بچانے کیلئے فوری اقدامات کرے، جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس کے موقع پر یہ ملاقات ہوئی۔

بھارتی سپریم کورٹ: آرٹیکل 370 اور 35 اے کیس کی سماعت کیلئے بنچ تشکیل

نئی دہلی: بھارتی سپریم کورٹ نے آرٹیکل 370 اور 35 اے کیس کی سماعت کے لیے بنچ تشکیل دے دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق 5 رکنی بینچ یکم اکتوبر کو سماعت کا آغاز کرے گا۔

یاد رہے اس قبل بھارتی سپریم کورٹ نے مودی سرکار کو مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہٹا کر حالات نارمل کرنے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے کانگریس رہنما غلام نبی آزاد کو بھی وادی کا دورہ کرنے کی اجازت دیتے ہوئے اصل حقائق عدالت میں رپورٹ کرنے کی ہدایت کی تھی۔ چیف جسٹس کا کہنا تھا ضرورت پڑی تو وہ خود بھی مقبوضہ وادی جائیں گے۔

کشمیری سڑکوں پر نکل آئے، تاریخی خطاب پر عمران خان کے حق میں نعرے

وادی: مقبوضہ وادی میں بھارتی جبری پابندیوں کو آج 56 روز ہوگئے، صورہ میں سیکڑوں کشمیری سڑکوں پر نکل آئے، وزیراعظم عمران خان کے حق میں نعرے لگائے۔

اقوام متحدہ کے اجلاس میں کشمیریوں کی آواز بننے پر مقبوضہ وادی میں وزیراعظم عمران خان کے نعرے گونج اٹھے، صورہ میں سیکڑوں کشمیریوں نے پاکستانی جھنڈے تھام کر بھارت مخالف مظاہرہ کیا۔ وادی کے نوجوانوں نے عمران خان کے حق میں نعرے لگائے۔ کشمیری نوجوان نے وزیراعظم کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کے بعد عمران خان پر بھروسہ ہے۔

بھارتی فوج نے وادی میں 5 اگست سے کرفیو نافذ کر رکھا ہے، کشمیری اپنے گھروں میں قید ہو کر رہ گئے ہیں، 56 روز سے انٹرنیٹ موبائل سروس اور کاروبار بند ہیں جبکہ ہزاروں نوجوانون کو کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کیا جاچکا ہے۔

Google Analytics Alternative