بین الاقوامی

امریکی اراکین کانگریس کا نریندر مودی کے نام ایک خط

واشنگٹن: امریکی اراکین کانگریس نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے نام ایک خط میں بھارت میں اقلیتوں کے خلاف بڑھتے ہوئے تشدد اور عدم برداشت پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔

امریکی اراکین نے وزیر اعظم مودی پر زوردیاہے کہ وہ مذہبی بنیادوں پر اقلیتوں کے خلاف تشدد کو روکنے کیلئے عملی اقدامات کریں۔ اس خط پر آٹھ سینیٹرز اور 26 ارکان کانگریس نے دستخط کئے ہیں۔ خط میں بھارت میں ہندوﺅں کی طرف سے عیسائیوں، مسلمانوں اور سکھوں کے خلاف ناروا سلوک پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا۔

خط میں اراکین کانگریس نے بھارتی وزیراعظم کی توجہ 17 جون 2014ءکو صوبہ چھتیس گڑھ کے ضلع باستر کی 50 دیہی کونسلوں کی طرف سے منظور کردہ قرارداد کی طرف مبذول کرائی  جس میں ان اقلیتی فرقوں کے خلاف ہر قسم کے پروپیگنڈے، عبادات اور تقریروں پر پابندی عائد کی گئی تھی۔

مذہبی آزادی اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے حوالے سے نریندر مودی کے بیانات کا حوالہ دیتے ہوئے اراکین کانگریس نے ان بیانات کو عملی جامہ پہنانے کی ضرورت پر زور دیا۔

یورپ،مائیں اپنے بچے بیچنے لگیں

بر لن: دنیا کے ترقی یافتہ براعظم کی حاملہ خواتین جن کے لیے ایسی حالت میں چلنا بھی مشکل ہوتا ہے، ہمسایہ ملک کا سفر کرتی ہیں۔ واپسی پر ان کے بچے نہ تو پیٹ میں ہوتے ہیں اور نہ گود میں۔ البتہ ان کی جیبوں میں 2سے ساڑھے 3ہزار یورو کی رقم ضرور ہوتی ہے۔جرمن خبررساں ادارے نے لکھاکہ یہ بہت پریشان کن تفصیلات کسی ایک واقعے کی نہیں بلکہ ایک ایسے رجحان سے متعلق حقیقی اعداد و شمار ہیں جس کی تردید ناممکن ہے اور اب تک ایسے کوئی ایک دو نہیں بلکہ درجنوں واقعات دیکھنے میں آ چکے ہیں۔فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق ایسے واقعات کسی بہت ہی غریب افریقی یا ایشیائی ملک میں نہیں بلکہ براعظم یورپ میں دیکھنے میں آ رہے ہیں اور ان کے محور دو ایسے ملک ہیں جو یورپی یونین کے رکن بھی ہیں: بلغاریہ اور یونان!مشرقی یورپی ملک بلغاریہ کے روما نسل کے خانہ بدوشوں کی آبادی والے گاوٓں کے کئی والدین اپنے نومولود بچوں کو ہمسایہ ملک یونان میں پیدائش کے فوری بعد فروخت کر چکے ہیں۔ برگاس اور اس کے نواحی علاقوں میں رہنے والے غریب خاندانوں نے اپنے نومولود بچوں کی تجارت کا کام قریب 15 برس قبل شروع کیا تھا۔ اب یہ غیر قانونی اور مجرمانہ تجارت بلغاریہ کے کئی دوسرے علاقوں میں بھی پھیل چکی ہے۔2015ء میں برگاس میں رہنے والی حاملہ خواتین نے کم از کم 33 واقعات میں یونان جا کر اپنے بچوں کو جنم دیا اور پھر وہیں ان نومولود بچوں کو فروخت کر کے واپس لوٹیں۔عورتوں کو اپنے بچے فروخت کرنے پر ملنے والی رقم ساڑھے تین ہزار لِیوے (بلغاریہ کی کرنسی) سے لے کر سات ہزار لِیوے تک ہوتی ہے، جو 1800 سے لے کر 3500 یورو تک بنتی ہے۔ یہ رقم عام طور پر اس مجموعی رقم کا محض ایک چھوٹا سا حصہ ہوتی ہے، جو ایسی خواتین کے یونانی بے اولاد جوڑوں کے ساتھ رابطے قائم کرانے والے ایجنٹ وصول کرتے ہیں۔پھر بھی دو ہزار سے لے کر تین ہزار یورو تک کی یہ رقم ایک ایسے ملک میں بہت بڑی رقم ثابت ہوتی ہے، جہاں ایک عام مزدور کی ماہانہ آمدنی صرف 400 یورو کے برابر بنتی ہے۔

امریکا نے پاکستان سے ایٹمی ہتھیاروں میں کمی کا مطالبہ کردیا

واشنگٹن: مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے امریکا پر زور دیا ہے کہ وہ پاکستان کے سیکیورٹی تحفظات کو سمجھے، جبکہ امریکا نے پاکستان سے اپنے ایٹمی ہتھیاروں میں کمی کا مطالبہ کردیا۔

واشنگٹن میں پاک-امریکا اسٹریٹجک مذاکرات کے افتتاحی اجلاس کے دوران امریکا کے سیکریٹری آف اسٹیٹ جان کیری نے کہا کہ جوہری تحفظ پر بلاشبہ دونوں ممالک کے خدشات موجود ہیں، تاہم انھیں امید ہے کہ اس حوالے سے دونوں ممالک کے درمیان بات چیت جاری رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ ایک وقت تھا جب امریکا اور روس کے پاس 50، 50 ہزار سے زائد ایٹمی ہتھیار تھے، لیکن اب دونوں ممالک کے پاس صرف 15، 15 سو ایٹمی ہتھیار ہیں اور ہم ان میں مزید کمی لانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو چاہیے کہ وہ جوہری ہتھیاروں کے معاملے کو حقیقی معنوں میں اپنی پالیسی کا حصہ بنائے، جبکہ خواہش ہے کہ آئندہ ماہ جوہری سیکیورٹی کانفرنس میں وزیر اعظم نواز شریف شرکت کریں۔

جان کیری نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں، تاہم اس حوالے سے مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانیوں نے واضح کردیا ہے کہ دہشت گرد انہیں ترقی سے نہیں روک سکتے۔

مذاکرات کے دوران پاکستان نے اس بات پر زور دیا کہ وہ اپنے جوہری پروگرام کے حوالے سے کسی یکطرفہ روک تھام کو قبول نہیں کرے گا، جوہری ہتھیاروں میں کمی کا مطالبہ ہندوستان کے سامنے بھی اٹھایا جانا چاہیے، جبکہ امریکا کو پاکستان کے سیکیورٹی تحفظات کو بھی سمجھنا چاہیے۔

مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے پاکستان کو ایف 16 طیاروں کی فروخت کے حوالے سے پاکستانی موقف کی توثیق پر امریکا کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان دہشت گردوں کے خلاف ایف 16 طیاروں کا موثر استعمال کررہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایف سولہ طیاروں سے پاکستان کی آپریشنز کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوگا، جبکہ باہمی مفادات اور خطے کے استحکام کے لیے ان آپریشنز کا کامیاب ہونا ضروری ہے۔

افغانستان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان، افغانستان میں امن کا خواہاں ہے لیکن دیگرحکومتیں بھی امن عمل کی حمایت کریں۔

شام میں سیزفائرکی خلاف ورزیاں روکنےکےلیے حکمت عملی

واشنگٹن:امریکااورروس نےشام میں سیزفائرکی خلاف ورزیاں روکنےکےلیے حکمت عملی پراتفاق کرلیا۔

غیرملکی خبرایجنسی کےمطابق واشنگٹن میں جرمن وزیرخارجہ فرینک والٹر کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے بتایا کہ ان کی روسی ہم منصب سے گفتگوہوئی ہے۔ دونوں رہنماؤں نےفیصلہ کیا ہے کہ شام میں جنگ بندی کی خلاف ورزی کا ایک دوسرے کو الزام نہیں دیا جائے گا۔

جا ن کیری کے مطابق القاعدہ اورداعش پر موثرحملوں کی حکمت عملی بنائی جائے گی تاکہ شام میں امن قائم ہو سکے۔

امریکی وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ شام میں جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کے باوجود امن کے لیے کوشاں ہیں۔

سعودی عرب، دہشت گردی کے خلاف جاری عالمی جنگ کی حمایت کا اعلان

ریا ض : سعودی عرب نے افغانستان اور افریقی ملکوں صومالیہ اور کیمرون میں حالیہ دہشت گردی کے واقعات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے دہشت گردی کے خلاف جاری عالمی جنگ کی حمایت کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ ریاض میں قصر یمامہ شاہی محل میں خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی زیرصدارت کابینہ کے اجلاس میں مسلمان ممالک اور دوسری ملکوں میں دہشت گردی کے واقعات کی مذمت کی گئی۔ اجلاس میں صومالیہ، کیمرون اور افغانستان میں دہشت گردی کے تازہ واقعات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے مہلوکین کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کی گئی۔اجلاس میں عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی پربھی بحث کی گئی۔ اس حوالے سے ھیوسٹن میں کیمرج انرجی ریسرچ سینٹر میں عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں کو کنٹرول کرنے کے لیے ہونے والی مشاورت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس میں واضح کیا گیا کہ سعودی عرب تیل کی قیمتوں میں استحکام کے لیے ہرممکن کوشش جاری رکھے گا۔کابینہ کے اجلاس کے بعد جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ ریاض تیل پیدا کرنے والے تمام ممالک کے ساتھ مکمل رابطے میں ہے۔

پاک بھارت تعلقات کے لئےخوشگوار ماحول تیار کیا جائے”نریندر مودی “

اسلام آباد ; آج پاکستان اور بھارت کے درمیان ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلا جارہا ہے ۔دونوں ملکوں سمیت پوری دنیا کے کرکٹ لورز کی نگاہیں اس کانٹے دار میچ پر مرکو ز ہیں ۔ہائی وولیٹیج میچ سے قبل بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے کہاکہ پاک بھارت تعلقات کے لئے یہ لازمی ہے کہ مذاکرات سے پہلے پرامن اور خوشگوار ماحول تیار کیا جائے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو بھی اپنی ذمہ داری نبھانی چاہئے اور اس کے لئے ہر طرح کی انتہا پسندی کی سرگرمیوں کو مکمل طور ختم کرنا چاہئے جب تک سرحد پار کی ہند مخالف تمام انتہا پسند سرگرمیوں کا خاتمہ نہیں ہو گا تب تک بہتر تعلقات اور جامع مذاکرات میں کوئی بڑی پیش رفت نہیں ہو سکتی ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ جموں و کشمیر کے ساتھ ملک کے امن و ترقی کو سبوتاژ کرنے کے لئے کئی عناصر سرگرم ہیں لیکن ایسے عناصر کو سختی کے ساتھ کچلنے کی ضرورت ہے ۔

ہیلری کلنٹن کی تمام ای میلز پیر تک ریلیز کردی جائیں گی”امریکہ”

واشنگٹن: امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ ہیلری کلنٹن کی تمام ای میلز پیر تک ریلیز کردی جائیں گی۔امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ سابق وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن کی مزید 15 سو صفحات پر مشتمل ای میلز ہفتے کو ریلیز کی جارہی ہیں، جبکہ ان کی تمام ای میلز پیر تک ریلیز کردی جائیں گی

شام میں جنگ بندی کا آغاز ہو گیا

دمشق: شام میں 5 سال سے جاری خانہ جنگی کے بعد عالمی طاقتوں کے معاہدے کی روشنی میں پہلی بار جنگ بندی کا آغاز ہو گیا۔

امیڈیا کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے اسٹافن ڈی میستورا نے پریس بریفنگ میں بتایا کہ ابتدائی رپورٹس میں دمشق اور درعا میں حالات پرسکون ہوگئے ہیں۔

لبنان میں شام سے متعلق انسانی حقوق کی تنظیم کے ڈائریکٹر رمی عبدالرحمن کا کہنا تھا کہ شام کے شمالی علاقوں سے کچھ دھماکوں کی آوازیں ضرور آئی ہیں، تاہم ان کی نوعیت کا اندازہ نہیں ہو سکا۔

Google Analytics Alternative