بین الاقوامی

پاک چین افواج کے درمیان تعاون بڑھانے پر اتفاق

راولپنڈی: پاکستان اور چین نے دونوں ممالک کی مسلح افواج کے درمیان تعاون مزید بڑھانے پر اتفاق کیا ہے ۔آئی ایس پی آر کے مطابق چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود سے چین کی وزارت قومی دفاع کے دفتر خارجہ امور کے ڈائریکٹر جنرل ریئر ایڈمرل گوان ژو فی نے ملاقات کی ۔ جوائنٹ سٹاف ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں ہونیوالی ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے امور بالخصوص خطے کی جیو سٹریٹجک صورتحال اور سکیورٹی چیلنجز پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ ملاقات میں پاکستان اور چین کی مسلح افواج کے درمیان تعاون کو مزید بڑھانے پر اتفاق کیا گیا ۔

سعودی عرب ;تمام حجاج کے فنگر پرنٹ لے کر محفوظ رکھے جائیں گے.

دمام : سعودی عرب کے پاسپورٹ ڈیپارٹمنٹ نے نیا سیکیورٹی سسٹم متعارف کرادیاہے جس کے تحت حج کیلئے بذریعہ ہوائی جہازیا بحری راستے سے سعودی عرب پہنچنے والے تمام مردوخواتین حجاج کرام کے فنگر پرنٹ لے کر محفوظ رکھے جائیں گے ، نئے سسٹم کے تحت انٹرنیشنل فنگر پرنٹ ٹیکنالوجی استعمال کے استعمال سے حج سیزن کے بعد حجاج کی واپسی یقینی ہوگی ۔ عرب نیوز کے مطابق حالیہ سالوں میں وزارت داخلہ کی طرف سے لائے جانیوالے پراجیکٹس میں سے اہم پراجیکٹ ہے جس سے فراڈ میں ملوث لوگوں کو بے نقاب کرنے اور کام کی جگہ سے غیرحاضری پکڑنے میں مدد ملے گی جبکہ اِسی کی مدد سے ریاست سے جانیوالے اور ملک بدرکیے گئے لوگوں کا سٹیٹس جانچنے میں آسانی ہوگی ۔ رپورٹ کے مطابق فنگر پرنٹ ٹیکنالوجی کی مدد سے مجرمانہ ریکارڈ رکھنے والے لوگوں کی شناخت ہوگی اور حکام مناسب طریقے سے نمٹ سکیں گے.

شرابی ماں،باپ کے بچے کو ایک کتیا نے اپنا دودھ پلا کر زندہ رکھا

چلی : غذائیت کی کمی کا شکار ایک بچے کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ اسے ایک حاملہ کتیا نے اپنا دودھ پلا کر زندہ رکھا۔یہ بچہ چلی کے شہر اریکا میں ایک مکینک کی ورکشاپ سے ملا ہے۔ مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق اسے کتیا کا دودھ پیتے دیکھا گیا ہے۔بچے کو ہسپتال لے جایا گیا، تاہم ایک دن کے بعد اسے مقامی فلاحی ادارے کے حوالے کر دیا گیا۔بچے کی شرابی ماں اور باپ کو گرفتار نہیں کیا گیا تاہم بچے کے مستقبل کے حوالے فیملی کورٹ نے اس ماہ کے آخر میں انہیں عدالت طلب کیا ہے۔ مقامی افراد رینا نامی کتیا کی تعریف کر رہے ہیں اور اسے ہیرو کا درجہ مل گیا ہے۔

امریکہ نواز شریف اور نریندر مودی کی ملاقات کے لئے متحرک

واشنگٹن: امریکہ وزیراعظم نواز شریف اور نریندر مودی کی نیویارک میں ملاقات کے لئے متحرک ہو گیا ہے۔ دونوں ملکوں کی قیادت کو پیغام دیا ہے کہ امریکہ پاکستان اور بھارت کے درمیان سرحدی کشیدگی کے خاتمے اور مسائل کا مذاکرات کے ذریعے حل چاہتا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی میں کمی کے لیے امریکہ بھرپور سفارتی کوششیں کر رہا ہے اس کی خواہش ہے کہ رواں ماہ نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر وزیراعظم نوازشریف اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی ملاقات ہو جائے جس میں کشیدگی میں کمی پر بات چیت ہو۔ امریکہ نے اس مقصد کے لئے سفارتی چینلز کو متحرک کیا ہے۔ دونوں ملکوں کو یہ پیغام دیا ہے وہ رواں ماہ نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے موقع پر نواز شریف اور نریندر مودی کی ملاقات کے لئے اقدامات کریں۔ پاکستان کو یہ پیغام امریکی قومی سلامتی کی مشیر سوزن رائس نے حالیہ دورے پر دیا کہ جبکہ بھارت میں امریکی سفیر رچرڈ ورما نے بھارتی قیادت کو سفارتی چینل کے ذریعے یہ پیغام پہنچایا۔ پاکستان بھارت کشیدگی میں کمی کے لیے امریکی سفارت کار دونوں ممالک کے اعلی حکام کے ساتھ رابطے میں ہیں۔ کوشش کی جارہی ہے کہ لائن آف کنٹرول اور ورکنگ بانڈری پر کشیدگی کی کیفیت ختم ہو دونوں ممالک دوبارہ سیز فائر کی طرف جائیں اور مسائل بامقصد مذاکرات کے ذریعے حل کئے جائیں۔ تاہم امریکی کوششوں کے باوجود نیویارک میں پاکستان بھارت وزرائے اعظم کی ملاقات کے حوالے سے ابھی تک کچھ واضح نہیں۔ امریکہ کی خواہش ہے کہ پاکستان زیادہ توجہ افغانستان کے ساتھ ملنے والی سرحد اور قبائلی علاقوں پر مرکوز رکھے تاہم بھارت کے ساتھ تعلقات خراب ہونے کی وجہ سے امریکی حکام کو اس بات کا ادراک ہے کہ پاکستان کے لیے ایسا کرنا مشکل ہے اس لیے کوشش ہے کہ جہاں طالبان اور افغان حکومت دوبارہ مذاکرات کی میز پر آئیں وہاں پاکستان اور بھارت بھی تعلقات بہتر بنانے کے لیے کام کریں۔ وزیراعظم نواز شریف کے اکتوبر میں ہونے والے دورہ امریکہ میں بھی امریکی صدر بارک اوباما کے ساتھ ان کی ملاقات میں دیگر اہم باہمی اور عالمی معاملات کے ساتھ ساتھ پاکستان بھارت کشیدگی پر بات ہوگی۔

قطر کے ایک ہزار فوجی یمن میں تعینات.

دوحہ: قطر نے پہلی بار یمن میں اپنے ایک ہزار فوجی تعینات کردیئے ہیں۔ عرب نیوز چینل کے مطابق ایک ہزار قطری فوجیوں کو یمن کے علاقے ماریب میں تعینات کیا گیا ہے اور ان کے ساتھ بکتر بند گاڑیوں اور ہیلی کاپٹربھی بھیجے گئے ہیں۔ماریب میں ہی گذشتہ ہفتے سعودی اتحاد کے 60 فوجی مارے گئے تھے۔ حوثی باغیوں کے ماریب میں گولہ بارود کے ایک ذخیرے پر راکٹ حملے کے نتیجے میں ہلاک ہونے والی فوجیوں میں سے متحدہ عرب امارات کے 45، سعودی عرب کے 10 اور بحرین کے 5 فوجی شامل تھے۔ سعودی عرب کی کمان میں قائم اتحاد کے ہزاروں فوجی یمن میں بھیجے گئے ہیں تاکہ صدر ہادی کی حکومت کو بحال کیا جا سکے۔ اتحادیوں نے جولائی میں ساحلی شہر عدن کا کنٹرول حوثی باغیوں سے لے لیا تھا اور اب ملک کے شمالی علاقوں کی جانب پیش قدمی کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ اقوام متحدہ کے مطابق یمن میں سعودی کمان میں ہونے والی فوجی کارروائیوں میں ساڑھے چار ہزار افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں سے دو ہزار سے زیادہ عام شہری ہیں۔

چینی نوجوانوں میں سب سے زیادہ مقبول مذہب اسلام ہے.نیوز ویک

کراچی: چینی نوجوانوں میں سب سے زیادہ مقبول مذہب اسلام ہے۔ امریکی جریدے ”نیوز ویک“کی رپورٹ میں کہا گیا کہ چینی حکومت کے رمضان میں کریک ڈاون اورمسلم اور اقلیت پرتاریخی ظلم و ستم کے باوجوداسلام چینی نوجوانوں میں سب سے زیادہ مقبول دین ہے۔ بیجنگ کی رینمن یونیورسٹی کے ریسرچ سینٹر کی طرف سے چین میں مذہب پر کیے گئے سروے کے مطابق لادین ریاست کی طرف سے تسلیم شدہ پانچ مذاہب میں اسلام 30سال سے کم عمر نوجوانوں میں سب سے زیادہ مقبول ہے۔ چینی مسلمانوں کی 22اعشاریہ 4 فیصد آبادی اسی عمر کے نوجوانوں پر مشتمل ہے۔2010ء کے پیو ریسرچ سینٹر کے اعداد و شمار کے مطابق چین میں مسلمانوں کی آبادی تقریباً دو کروڑ 3 3 لاکھ تھی جو کل چینی اْبادی کا 1عشاریہ 8فیصد ہے۔ سینٹر نے2030ء تک چین میں3کروڑ مسلم ا?بادی ہونے کی پیش گوئی کی تھی۔ نئے اعداد و شمار رمضان کے مقدس اسلامی مہینے میں مسلمانوں پر متنازع اقدامات کے نفاذ کے بعد سامنے آئے۔ اگرچہ کمیونسٹ پارٹی نے سنکیانگ صوبے میں اساتذہ، طلباء اور سرکاری ملازمین پر روزہ رکھنے پر مبینہ طور پرپابندی لگا دی ،تاہم چینی حکام نے ان الزامات کی تردید کی ہے۔ حکومت نے سب سے بڑے مسلم آبادی کے صونے سنکیانگ میں ”مذہبی انتہا پسندی“ کا مقابلہ کرنے کے لئے شراب اور سگریٹ فروخت کرنے کی مسلم دکانداروں اور ریستوران کے مالکان کو ہدایت کی ہے۔ اس طرح کی پابندیوں کے باوجود سروے میں عبادت گاہوں پر کام کرنے والے لوگوں میں سے 60 فیصد نے مذہبی آزادی پر حکومتی ضوابط کومنصفانہ سمجھا ہے۔ چین میں اسلام کے علاوہ کیتھولک، پروٹسٹنٹ، بدھ مت اور تاو مت سرکاری طور پر تسلیم شدہ مذاہب ہیں۔ مقبولیت میں کیتھولک چین میں دوسرے نمبر پر مذہب ہے، بدھ مت اور تاو مت ساٹھ سال سے زائد العمر لوگوں میں مقبول ہے۔ سروے کے مطابق مجموعی طور پر چین میں بدھ مت پیروکاروں کی سب سے زیادہ تعداد ہے۔ چین میں مسلمان آبادی کی سب سے سے زیادہ شرح پیدائش ہے

ترکی :ایلان کو دیکھ کر اپنا بیٹا یاد آیا, پولیس افسر

استنبول: گذشتہ ہفتے ترکی کے ساحل پر شامی بچے ایلان کردی کی لاش کو دیکھ کر جہاں ہر آنکھ اشک بار ہوئی، وہیں اس بچے کو گود میں اٹھانے والے ترکی کے پولیس افسر کو بھی اپنے بیٹے کا خیال آیا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق ترکی کی ڈوگن نیوز ایجنسی سے بات کرتے ہوئے محمد چپلق نے بتایا کہ جب انھوں نے اس بچے کی لاش ساحل پر دیکھی تو دعا کی کہ وہ زندہ ہو۔

“جب میں اس بچے تک پہنچا تو میں نے خود سے کہا، اے پروردگار! مجھے امید ہے یہ زندہ ہے، لیکن اُس (ایلان) میں زندگی کے کوئی آثار باقی نہیں تھے، مجھے بہت مایوسی ہوئی”۔

“میرا بھی ایک 6 سال کا بیٹا ہے، جب میں نے اس بچے کو دیکھا تو میرے ذہن میں اپنے بچے کا خیال آیا اور میں نے خود کو اُس بچے کے والد کی جگہ پر محسوس کیا، اس اداس اور المناک منظر کو لفظوں میں بیان نہیں کیا جاسکتا”۔

پولیس افسر کے مطابق انھیں اس تصویر کے بارے میں علم نہیں جو سوشل میڈیا کے ذریعے پوری دنیا میں پھیل گئی، “میں بس اپنی ڈیوٹی سرانجام دے رہا تھا”۔

 

ایلان کردی نامی بچہ اُن 12 شامی پناہ گزینوں میں سے ایک ہے جنھوں نے یونان پہنچنے اور وہاں ایک بہتر زندگی کے حصول کے لیے سمندر میں موت کا سفر کیا اور کشتی ڈوب جانے کے باعث جان کی بازی ہار گئے.

یہ تمام مسافر شامی کرد تھے جنھوں نے گذشتہ برس اسلامک اسٹیٹ (داعش) کے شدت پسندوں کی وجہ سے ترکی میں پناہ لی تھی.

3 سالہ ایلان، اس کے 4 سالہ بھائی غالب اور والدہ کی تدفین گذشتہ جمعے کو شام کے علاقے کوبانی میں کردی گئی۔

بچوں کے والد عبداللہ کردی حادثے میں محفوظ رہے اور انھوں نے شام میں اپنے آبائی علاقے کوبانی میں رہنے کا فیصلہ کیا ہے۔

گذشتہ چند ہفتوں کے دوران ترکی سے بذریعہ سمندر یونان جانے والے پناہ گزینوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے اور کشتیاں ڈوبنے کے واقعات بھی میڈیا پر آتے رہتے ہیں، لیکن ایلان کردی کی المناک موت نے یورپی عوام کو ہلا کر رکھ دیا، جس کے بعد یورپی یورپین پر اس حوالے سے اقدامات کرنے پر دباؤ ڈالا گیا۔

شین واٹسن نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا

آسٹریلین آل راؤنڈر شین واٹسن نے پنڈلی کی انجری کے سبب ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے۔

دورہ انگلینڈ میں ایک بار پھر انجری کا شکار ہونے والے شین وارن نے فوری طور پر ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے۔

وہ ہفتے کو لارڈز میں انگلینڈ کے خلاف ہونے والے پانچ میچوں کی سیریز کے دوسرے میچ کے دوران انجری کا شکار ہوئے، اس میچ میں آسٹریلیا 64 رنز سے فتحیاب رہا۔

اپنے دس سالہ ٹیسٹ کیریئر میں وقتاً فوقتاً انجری کا شکار رہنے والے 34 سالہ آسٹریلین کھلاڑی نے آج صبح ہی اپنی ٹیم کے کھلاڑیوں کو اپنے اس فیصلے سے آگاہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ کرنا آسان نہیں تھا لیکن میں سمجھتا ہوں کہ یہ آگے بڑھنے کا صحیح وقت ہے تاہم میں ابھی ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کھیلنے کیلئے پرامید ہوں۔

واضح رہے کہ شین واٹسن کو گزشتہ کچھ عرصے سے اپنی انجری اور فارم کی وجہ سے آسٹریلین ٹیم میں جگہ برقرار رکھنے میں شدید دشواری کا سامنا تھا۔

انہوں نے 59 ٹیسٹ میچوں میں آسٹریلیا کی نمائندگی کرتے ہوئے تین ہزار 731 رنز بنائے جبکہ 75 کھلاڑیوں کو بھی ٹھکانے لگایا۔

انہوں نے اپنی شاندار کارکردگی سے آسٹریلیا کو 14-2013 ایشز سیریز جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا جبکہ وہ 2011 میں سال کے بہترین ٹیسٹ کھلاڑی کا آئی سی سی کا ایوارڈ جیتنے کا اعزاز بھی رکھتے ہیں جبکہ اس کے علاوہ انہیں دو بار ایلن بارڈر میڈل جیتنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

جنوری 2005 میں پاکستان کے خلاف پہلا یسٹ کھیلنے والے واٹسن نے 23 سال کی عمر میں اپنی پہلی اننگ میں 31 رنز اسکور کرنے کے ساتھ ساتھ یونس خان کو اپنے کیریئر کی پہلی وکٹ بنایا تھا۔

واٹسن نے کہا کہ میں اپنے ٹیسٹ کیریئر میں وہ سب حاصل نہ کر سکا جس کا میں نے خواب دیکھا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ بحیثیت آل راؤنڈ میرا خواب تھا کہ میں بلے سے 50 سے زائد کی اوسط اور گیند سے 20 کے ہندسے میں اپنا ایوریج رکھ سکوں اور میں اس کے قریب بھی کچھ نہ کر سکا۔

لیکن انہوں نے کہا کہ مجھے فخر ہے کہ میں نے جتنی بھی کرکٹ کھیلی، اس میں اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

یاد رہے کہ واٹسن ایک ماہ کے عرصے میں ریٹائر ہونے والے تیسرے آسٹریلین کھلاڑی ہیں جہاں اس سے قبل سابق کپتان مائیکل کلارک اور اوپنر کرس راجرز ایشز سیریز کے اختتام پر کرکٹ سے علیحدگی اختیار کر چکے ہیں۔

Google Analytics Alternative