بین الاقوامی

مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کی فائرنگ سے ایک نوجوان شہید

سری نگر: ضلع پلوامہ میں بھارتی فورسز کی فائرنگ سے ایک نوجوان کشمیری شہید ہوگیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج نے ایک بار پھرضلع پلوامہ کے علاقے رتنی پورہ میں سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرتے ہوئے ایک نوجوان شہری کو شہید کردیا۔ بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔

نوجوان کی شہادت پر ضلع بھر میں شہریوں کی جانب سے احتجاج جاری ہے جب کہ موبائل اور انٹرنیٹ سمیت ٹرین سروس بھی تاحال معطل ہے۔ قبل ازیں اسی علاقے میں مسلح افراد کے حملے میں بھارتی فوج کے ایک کمانڈو سمیت 2 فوجی اہلکار ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا تھا۔

واضح رہے کہ 2 روزقبل بھی بھارتی فوج نے ضلع کلگام کا محاصرہ کرتے ہوئے ریاستی دہشت گردی کے دوران فائرنگ کرکے 5 کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا تھا۔

سابق افغان صدر صبغت اللہ مجددی انتقال کر گئے

کابل: افغانستان کے سابق صدر صبغت اللہ مجددی 93 برس کی عمر میں کابل میں انتقال کر گئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان سے سویت یونین کی افواج کے انخلاء کے بعد بننے والی پہلی افغان حکومت کے صدر صبغت اللہ مجددی 93 برس کی عمر میں مختصر علالت کے بعد خالق حقیقی سے جا ملے۔

صبغت اللہ مجددی نے 1992 میں نگراں صدر بن کر افغانستان میں روس کے زیر اثر حکومت کا خاتمہ کیا اور ملک میں سیاسی و جمہوری حکومت کے قیام کی راہ ہموار کی۔ بعد ازاں 2003 میں لویہ جرگہ کی سربراہی کرتے ہوئے افغانستان کا آئین تشکیل دیا اور 2005 سے 2011 تک پارلیمنٹ کے اسپیکر رہے۔

صبغت اللہ مجددی 21 اپریل 1925 کو کابل میں پیدا ہوئے اور مصر کی جامعہ ازہر سے اسلامی قوانین کی اعلیٰ تعلیم حاصل کرکے 1952 میں کابل یونیورسٹی میں درس و تدریس کا آغاز کیا تاہم روس کی افغانستان میں مداخلت اور تسلط کے خلاف صدائے احتجاج بلند کرنے پر 1957 میں گرفتار ہوئے۔

صبغت اللہ مجددی افغان لبریشن فرنٹ کے بانی بھی تھے اور افغانستان میں روس کی کٹھ پتلی کمیونسٹ حکومت کے خلاف متحرک تھے جس پر انہیں جلا وطن بھی ہونا پڑا اور 70 کی دہائی میں ان کے بھائی کو بھی اسی پاداش میں قتل کردیا گیا تھا۔ وہ اعتدال پسند گوریلا جنگجو کے طور پر شہرت رکھتے تھے۔

اقوام متحدہ کی امن فوج میں پاکستانی خواتین اہلکاروں کی تعداد میں اضافہ

نیویارک: پاکستان نے اقوام متحدہ کی امن فوج میں خدمات سرانجام دینے والی خواتین اہلکاروں کی تعداد میں اضافہ کردیا۔

اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے امن آپریشنز سے متعلق خصوصی کمیٹی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے اقوام متحدہ امن دستوں میں خواتین فوجیوں کی تعداد بڑھا کر 15 فیصد کردی ہے، پاکستانی فوجی دستے اقوام متحدہ کی قیام امن کوششوں میں سب سے آگے رہے ہیں اور خواتین اہلکار مختلف ممالک میں فوجی مبصرین اور اسٹاف آفیسرز کے فرائض سرانجام دے رہی ہیں۔

ملیحہ لودھی نے بتایا کہ پاکستان نے اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ سے ہمیشہ تعاون کیا ہے اور صرف 15 ماہ کی قلیل مدت میں خواتین کی تعداد صفر سے 15 فیصد تک کرتے ہوئے اقوام متحدہ مشنز میں خواتین کی شمولیت کا ہدف حاصل کرلیا ہے۔

ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کو امن مشنز کیلیے مختص بجٹ میں کمی نہیں کرنی چاہیے، کیونکہ اس سے قیام امن کی کوششوں پر منفی اثر پڑے گا، اقوام متحدہ کو امن مشنز میں فوجی دستے بھیجنے والے ممالک کے تجربات سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

ملیحہ لودھی نے بھارت اور پاکستان میں اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کو مزید موثر بنانے کے لئے اپنی حمایت کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے اقوام متحدہ کے اختیار پر عملدرآمد کے لئے ہمیشہ اپنی ذمہ داریاں نبھائی ہیں، لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی کی نگرانی کے مشن کو فعال بنانےکی بھی ضرورت ہے۔

نئی دہلی کے ہوٹل میں آگ لگنے سے 17 افراد ہلاک

نئی دلی: بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کے ہوٹل میں آگ لگنے کے نتیجے میں 17 افراد جھلس کر ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوگئے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دارالحکومت نئی دہلی کے کیرول باغ علاقے میں واقع آرپیت پیلس نامی ہوٹل میں اچانک آگ بھڑک اٹھی جس نے دیکھتے ہی دیکھتے شدت اختیار کرلی، آتشزدگی کے نتیجے میں 17 افراد ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوگئے۔

واقعہ کے بعد فائر بریگیڈ کی 22 گاڑیوں نے موقع پر پہنچ کر 4 گھنٹے میں آگ پر قابو پالیا جب کہ ریسکیو ٹیموں نے تقریباً 50 کے قریب افراد کو ہوٹل سے باہر نکالا، زخمیوں کو مقامی اسپتال میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے، 4 کی حالت نازک ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ زیادہ تر اموات ہوٹل کے کمروں میں دھواں بھر جانے سے دم گھٹ جانے کے باعث ہوئیں۔ تاحال آتشزدگی کی وجہ کا تعین نہیں کیا جا سکے ہے تاہم شارٹ سرکٹ کو بھی نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

وزیراعلیٰ اروند کجروال نے افسوسناک واقعے میں ہلاک ہونے والے لواحقین کے لیے 5 لاکھ فی کس امدادی رقم کا اعلان کیا ہے جب کہ وزیراعلیٰ کے حکم پر آتشزدگی کی تحقیقات کے لیے ایک کمیٹی بھی تشکیل دے دی گئی ہے۔

 

اشرف غنی کی طالبان کو افغانستان میں سیاسی دفتر کھولنے کی پیشکش

کابل: افغان صدر اشرف نے طالبان کو ملک کے تین صوبوں میں کہیں بھی سیاسی دفتر کھولنے کی پیشکش کی ہے۔

افغان میڈیا کے مطابق اشرف غنی نے صوبہ ننگرہار کے دورے کے موقع پر ایک اجتماع سے خطاب کے دوران کہا کہ وہ طالبان کے کابل، قندہار یا ننگرہار میں سیاسی دفتر کھولنے کی اجازت دینے کو تیار ہیں۔

افغان صدر نے کہا کہ ملک میں پائیدار امن اور عزت سے ساتھ امن ضرور آئے گا اور اس کے لیے وہ اپنی جان قربان کرنے کو بھی تیار ہیں۔

اشرف غنی نے طالبان اور اپوزیشن رہنماؤں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ کیا ہم مکہ میں امن چاہتے ہیں یا ماسکو میں، قوم پوچھتی ہے کہ افغانستان میں امن مذاکرات کے لیے طالبان اور اپوزیشن رہنما مکہ کے بجائے ماسکو گئے

یاد رہے کہ طالبان اور افغانستان کی اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کے درمیان ماسکو میں 5 اور 6 فروری کو مذاکرات ہوئے جس میں کئی اہم معاملات پر اتفاق کیا گیا تاہم اس کی تفصیلات سامنے نہیں آسکیں۔

افغان صدر اشرف غنی پہلے بھی کئی مرتبہ طالبان کو مذاکرات کی پیشکش کرچکے ہیں تاہم طالبان افغان قیادت کو امریکا کی کٹھ پتلی قرار دیتے ہوئے حکومت سے مذاکرات سے انکاری رہے ہیں اور وہ براہ راست امریکا سے مذاکرات کر رہے ہیں۔

سعودی ولی عہد کے دورے سے قبل ان کا سیکیورٹی وفد پاکستان پہنچ گیا

  اسلام آباد: سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورۂ پاکستان سے قبل ان کی سیکیورٹی ٹیم پاکستان پہنچ گئی۔

ذرائع کے مطابق محمد بن سلمان کی سیکیورٹی ٹیم نے اسلام آباد کے مختلف مقامات کا دورہ کیا اور سیکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا ہے

ذرائع کا کہنا ہےکہ محمد بن سلمان کے ڈاکٹرز کی ٹیم اور ان کے دورے کی کوریج کے لیے سعودی میڈیا کا وفد بھی پاکستان پہنچ گیا ہے۔

سعودی سفیر کے مطابق ولی عہد محمد بن سلمان 16 فروری کو بڑے وفد کے ہمراہ 2 روزہ دورے پر پاکستان آئیں گے۔

ذرائع کاکہنا ہےکہ محمد بن سلمان کے وزیراعظم ہاؤس میں قیام کا امکان ہے۔

واضح رہے کہ اسلامی فوجی کے اتحاد کے سربراہ جنرل (ر) راحیل شریف کی سربراہی میں وفد بھی پاکستان کے 2 روزہ دورے پر ہے جو  پاکستان کی سول و عسکری قیادت سے ملاقاتیں کرے گا۔

امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد پاکستان سمیت 5 ملکی دوروں پر روانہ

واشنگٹن: امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمتی عمل زلمے خلیل زاد 10 فروری سے 28 فروری تک 5 ممالک کے دورے پر روانہ ہوگئے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے مطابق زلمے خلیل زاد بیلجیئم، جرمنی، ترکی، قطر، افغانستان اور پاکستان کا دورہ کریں گے اور یہ دورہ افغان امن عمل کے لیے جاری کوششوں کا حصہ ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ زلمے خلیل زاد پانچ ممالک کے دوروں میں اپنے اتحادیوں سے مشاورت کریں گے

یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کئی بار افغانستان میں طویل عرصے سے جاری جنگ ختم کرنے اور فوج واپس بلانے کا اعلان کرچکے ہیں اور اس سلسلے میں زلمی خلیل زاد افغان طالبان سے مذاکرات اور اتحادیوں سے مشاورت کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

زلمے خلیل زاد مشرق وسطیٰ اور یورپ کا دورہ مکمل کر کے واشنگٹن پہنچے ہی تھے کہ انہیں مزید ممالک کے دوروں پر بھیج دیا گیا ہے۔

زلمے خلیل زاد حال ہی میں طالبان اور امریکا کے درمیان قطر میں 6 روز تک جاری رہنے والے مذاکرات کا حصہ تھے اور انہوں نے امریکی نمائندہ خصوصی کی حیثیت سے طالبان سے مذاکرات کیے۔

یمن: لاکھوں افراد کیلئے ذخیرہ کی گئی خوراک خراب ہونے کا خدشہ

اقوام متحدہ نے یمن کے شہر حدیدہ کے گوداموں میں وسیع پیمانے پر ذخیرہ کیے گئے اناج کے خراب ہونے کے خدشے کا اظہار کیا ہے جس وجہ سے لاکھوں افراد جان بچانے والی خوراک سے محروم ہوسکتے ہیں۔

فرانسیسی خبررساں ادارے ’ اے ایف پی‘ کے مطابق مغربی ساحلی شہر حدیدہ کے گودام میں اتنا اناج موجود ہے جس سے ایک مہینے تک لاکھوں افراد کے لیے کافی ہے۔

یمن میں اقوام متحدہ کے خصوصی مندوب نے ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ ’ورلڈ فوڈ پروگرام (ڈبلیو ایف پی) کے اناج کا ذخیرہ ایک ماہ تک 37 لاکھ افراد کا پیٹ بھرنے کے لیے کافی ہے لیکن گزشتہ 5 ماہ سے ان گوداموں تک اقوام متحدہ کی رسائی نہیں اور اس کے خراب ہونے کا خدشہ ہے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’ ہم اس بات پر اصرار کرتے ہیں کہ تمام گوداموں تک رسائی کو یقینی بنانا یمن جنگ میں ملوث تمام فریقین کی مشترکہ ذمہ داری ہے‘۔

خیال رہے کہ حدیدہ اور اس کے اناج کے گودام 2014 سے یمن کے حوثی باغیوں کے قبضے میں ہیں جب جنگجوؤں نے یمن کے ایک بڑے علاقے پر قبضہ کیا تھا۔

یمن میں اقوام متحدہ کے مندوب مارٹن گرفتھس کا کہنا ہے کہ ’باغیوں نے گودام تک جانے والی سڑک کی از سرِ نو تعمیر کے آغاز کی کوشش کی ہے‘۔

مارٹن گرفتھس گزشتہ برس دسمبر میں سعودی اتحاد اور باغیوں کے درمیان حدیدہ پر جنگ بندی کا معاہدہ کروانے میں کردار ادا کیا تھا۔

خیال رہے کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے مشترکہ اتحاد نے 2015 میں ایران کے حمایت یافتہ حوثی باغیوں کے خلاف جنگ کا آغاز کیا تھا ۔

اقوام متحدہ کی جانب اس جنگ کو بدترین انسانی بحران قرار دیا جارہا ہے جس کے نتیجے میں لاکھوں افراد قحط سالی کے خدشات کا شکار ہیں۔

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او ) کے مطابق 2015 سے اب تک 10 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ انسانی حقوق کے بعض گروہوں کا کہنا ہے کہ یمن جنگ میں ہلاکتوں کی شرح 5 گنا زیادہ ہوسکتی ہے۔

Google Analytics Alternative