بین الاقوامی

افغانستان: امریکی فضائی حملے میں بچوں، خواتین سمیت 10 شہری جاں بحق

افغانستان میں امریکی فضائی حملے میں ایک خاندان کے بچوں اور خواتین سمیت 10 افراد جاں بحق ہو گئے۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق افغان حکام نے تصدیق کی کہ صوبے پکتیا میں گزشتہ رات فضائی حملے میں متعدد معصوم شہری جاں بحق ہوئے۔

سابق صوبائی کونسلر ممبر شائستہ جان نے بتایا کہ مقامی افراد نے جاں بحق ہونے والوں کی لاشیں دیکھائی اور فضائی حملے کے خلاف احتجاج کیا۔

صوبائی حکومت کے ترجمان عبداللہ حسرت نے دعویٰ کیا کہ فضائی حملے میں 4 جنگجو بھی ہلاک ہوئے تاہم شہریوں کی ہلاکت سے متعلق تحقیقات کا آغاز کردیا گیا۔

افغانستان کے دوسرے صوبے ہلمند کے جنوبی حصے میں بھی فضائی حملہ ہوا جس میں طالبان کے شیڈو گورنر اور ان کے دو ساتھیوں کی ہلاکت کا دعویٰ کیا گیا۔

اس حوالے سے صوبائی حکومت کے ترجمان عمر زکاء نے بتایا کہ امریکی فضائی حملے میں طالبان کے نام نہاد گورنر ہلاک ہوا۔

افغانستان کے نصف حصے میں حکومت کے مقابلے میں برابری کی سطح پر انتظامی امور چلانے والے طالبان کی جانب سے تاحال کوئی درعمل سامنے نہیں آیا۔

این بی سی نیوز میں شائع رپورٹ کے مطابق افغانستان میں امریکی اتحادی فوجیوں کے ترجمان سارجنٹ ڈیبرا رچرڈ سن نے بتایا کہ فضائی حملے میں ایک خاندان کے افراد زخمی اور جاں بحق ہوئے جنہیں طالبان بطور انسانی تحفظ کے لیے استعمال کیا۔

واضح رہے کہ رواں برس ستمبر میں اقوام متحدہ مشن نے کہا تھا کہ دو مختلف امریکی فضائی حملوں میں 21 افغان شہریوں کو نشانہ بنایا گیا۔۔

افغانستان کے شمال مشرقی صوبے کاپیسا میں ایک فضائی حملے کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 9 افراد جاں بحق ہوئے تھے جن میں زیادہ تر بچے اور خواتین شامل تھیں۔

اقوام متحدہ کی جانب سے جاری دوسرے بیان میں کہا گیا تھا کہ ابتدائی تحقیق کے مطابق افغانستان کے شمالی صوبے وردک میں 23 ستمبر کو ملٹری آپریشن کے دوران فضائی حملے میں 12 خواتین اور بچے جاں بحق ہوئے۔

اسرائیلی پولیس کو وزیراعظم نیتن یاہو کی کرپشن کے ٹھوس شواہد مل گئے

تل ابيب: اسرائیلی پولیس نے ٹھوس شواہد ملنے پر وزیراعظم نیتن یاہو اور ان کی اہلیہ کے خلاف رشوت خوری، دھوکا دہی اور اعتماد کو ٹھیس پہنچانے کی دفعات کے تحت باقاعدہ مقدمہ درج کرنے کی سفارش کردی۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق وزیراعظم نیتن یاہو کے خلاف تحقیقات کرنے والی پولیس کی تفتیشی ٹیم کو ٹھوس شواہد مل گئے ہیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ وزیراعظم رشوت خوری، دھوکا دہی اور اعتماد کو ٹھیس پہنچانے کے جرائم کے مرتکب ہوئے ہیں۔

اسرائیلی پولیس نے ان شواہد کی بنیاد پر وزیراعظم اور ان کی اہلیہ کے خلاف مقدمہ درج کر کے باقاعدہ تفتیش کی سفارش کی ہے جس کے تحت وزیراعظم کو گرفتار بھی کیا جا سکتا ہے۔ وزیراعظم نیتن یاہو ان الزامات کی تردید کرتے ہیں اور ان کی کابینہ بھی اپنے لیڈر کی پشت پناہی کرتی ہے۔

وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو اور ان کے ساتھیوں پر الزام ہے کہ اُنہوں نے ٹیلی کام کمپنی بیزک کو خلافِ ضابطہ لاکھوں ڈالر کا بزنس دیا ہے تاکہ نیتن یاہو کی تشہیر مثبت انداز میں کی جا سکے، اس سے قبل وزیراعظم کے غیر قانونی ذرائع سے جائیداد بنانے پر اُن کے کاروباری شراکت داروں کو بھی حراست میں لیا گیا تھا جنہوں نے مختلف کمپنیوں سے رشوت لینے کا اعتراف بھی کیا تھا۔

امریکا اور چین کے مابین ’تجارتی جنگ بندی‘ کا معاہدہ

امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چین کی درآمدی مصنوعات پر 25 فیصد ڈیوٹی عائد کرنے کا فیصلہ 90 دن تک معطل کردیا۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق چین اور امریکا کے مابین ’تجارتی جنگ بندی‘ کا عارضی معاہدہ بیونس آرئس میں جی 20 سمٹ کے دوران طے پایا۔

وائٹ ہاؤس سے جاری اعلامیے کے مطابق بیونس آرئس میں عشائیہ کے دوران امریکا کے صدر نے اپنے چینی ہم منصب شی جن پنگ کو تجارتی تنازع حل کرنے کے لیے مہلت دی۔

دوسری جانب ڈونلڈٹرمپ نے جی 20 سمٹ میں ماحولیاتی تبدیلی اور دیگر تجارتی تنازع کے بارے میں بات کرنے سے گریز کیا۔

امریکا کی جانب سے ماحو لیاتی تبدیلی سے متعلق عالمی معاہدہ کو مسترد کردیا۔

واضح رہے کہ 22 مارچ کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چینی مصنوعات کی درآمدات پر تقریباً 60 ارب ڈالر کے محصولات عائد کرنے کے حکم نامے پر دستخط کیے تھے۔

جس کے بعد چین نے انتقاماً 128 امریکی مصنوعات پر درآمد ڈیوٹی میں 25 فیصد تک اضافہ کردیا تھا۔

واضح رہے کہ امریکا نے ارادہ ظاہر کیا تھا کہ وہ چینی سرمایہ کاری اور ایکسپورٹ کو کنٹرول کرنے کے لیے پابندیاں عائد کرے گا اور 50 ارب ڈالر مالیت کی چینی ٹیکنالوجی پر 25 فیصد ٹیکس نافذ کرے گا۔

دوسری جانب امریکی وفد نے ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے فیصلے سے دستبردار ہونے کا مشورہ دیا تھا۔

رواں برس جون میں چین نے امریکا کو خبردار کیا تھا کہ اگر تجارتی مذاکرات کے دوران چینی مصنوعات پر ٹیکس نافذ کرنے کا فیصلہ کیا تو بات چیت کی تمام ترکوششوں کو لاحاصل سمجھا جائے۔

چین کی سرکاری نیوز ایجنسی پر جاری اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ ‘اگر امریکی حکومت نے اقتصادی پابندی بشمول ٹیکس میں اضافہ کرنے کا سوچا تو اقتصادی و تجارتی مذاکرات کے لیے دو طرفہ تمام کوششیں ناکارہ ہو جائیں گی۔

افغانستان کے صوبے قندھار میں بم دھماکا، 37 جنگجو جاں بحق

کابل / واشنگٹن: افغانستان کے صوبے قندھار میں کار بم دھماکے میں 37 جنگجو جاں بحق ہوگئے۔

صوبائی گورنر ہاؤس کے ترجمان عزیز احمد عزیز نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کے صوبہ قندھار میں کار بم دھماکے میں 37 جنگجو جاں بحق ہوگئے۔ جنگجو مسلح ہو کر گاڑیوں میں سوار افغان پولیس چیک پوسٹ پر حملے کیلیے رواں دواں تھے کہ قافلے میں موجود ایک گاڑی میں بارودی مواد پھٹ گیا جس کے نتیجے میں 37 جنگجو جاں بحق ہوگئے۔

افغان وزارت دفاع کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ دھماکے میں 15موٹر سائیکلیں بھی تباہ ہوگئیں ۔ طالبان کی جانب سے کسی قسم کے ردعمل کا اظہار نہیں کیا گیا۔ ادھر افغان صوبے غزنی میں بم دھماکے سے ہلاک ہونے والے 3 امریکی فوجیوں کی لاشیں امریکا پہنچا دی گئی ہیں۔

امریکی پرچم میں لپٹے ہوئے ان تابوتوں کو لے کر ایک خصوصی پرواز ڈیلاویر شہر کے ڈوور ایئر فورس بیس پر پہنچ گئی۔ اس موقع پر سوگوار خاندان کے افراد کے علاوہ امریکی نائب صدر مائیک پنس اور میڈیا کے نمائندے بھی موجود تھے۔ یہ فوجی 27 نومبر کو ایسے علاقے میں ہلاک ہوئے جہاں طالبان کی سرگرمیوں کو غیر معمولی قرار دیا جاتا ہے۔

پینٹاگون نے ہلاک ہونے والے فوجیوں کی شناخت کا اعلان بھی کر دیا ہے۔

 

مودی سرکار کی پالیسی سے نالاں ہزاروں کسانوں کا احتجاجی مارچ

نئی دہلی: بھارت میں مودی حکومت کی کسان دشمن پالیسیوں کے خلاف ملک بھر کے ہزاروں کسانوں نے نئی دہلی میں جمع ہو کر پارلیمنٹ کی جانب احتجاجی مارچ کیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ملک بھر سے کسانوں کا دارالحکومت آمد کا سلسلہ جمعرات کے روز سے جاری تھا، ہزاروں کسانوں کے جمع ہونے پر احتجاج نے طویل مارچ کی شکل اختیار کرلی اور کسان پیدل چلتے ہوئے پارلیمنٹ پہنچے۔ مظاہرین نے وزیراعظم مودی کے خلاف شدید نعرے بازی کرتے ہوئے مستعفی ہونے کا مطالبہ کیا۔

مظاہرین نے کسان دشمن پالیسی کے خلاف بینرز اُٹھائے ہوئے تھے جس میں کسانوں کو کم قیمت پر بیجوں کی فراہمی، فصلوں کے منافع بخش نرخ، خشک سالی الاؤنس اور قرضوں کی قسطوں میں کمی کے مطالبے درج تھے۔ رواں برس کسانوں کا یہ ملک گیر چوتھا بڑا مظاہرہ تھا۔

کسانوں کے مظاہرے سے پارلیمنٹ میں اپوزیشن لیڈر اور کانگریس کے چیئرمین راہول گاندھی نے خطاب کرتے ہوئے کسان رہنماؤں کے زراعت سے جڑے مسائل کے حل کے لیے اسمبلی کا خصوصی اجلاس بلانے کے مطالبے کی حمایت کی اور کسان دشمن پالیسی پر مودی حکومت کی سخت گرفت کی یقین دہانی کرائی

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی بربریت، ایک ماہ میں 48 کشمیری شہید

سری نگر: قابض بھارتی فوج نے گزشتہ ایک ماہ کے دوران 3 خواتین اور 2 بچوں سمیت 48 کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق وادی کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جارحیت اور ظلم و بربریت کا سلسلہ دراز ہوتا جا رہا ہے، گزشتہ ماہ نام نہاد سرچ آپریشن اور ماورائے عدالت قتل کے واقعات میں 48 کشمیری شہید ہوگئے۔ شہید ہونے والوں میں 2 بچے اور 3 خواتین بھی شامل ہیں۔

انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی مرتکب بھارتی فوج نے گزشتہ ماہ ہونے والے احتجاجی مظاہروں کو کچلنے کے لیے پیلٹ گن کا بے دریغ استعمال کیا جب کہ فائرنگ، آنسو گیس شیلنگ اور لاٹھی چارج کے باعث 196 کشمیری زخمی ہوئے جن میں بزرگ اور خواتین بھی شامل ہیں۔

قابض بھارتی فوج نے چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے 169 کشمیری رہنماؤں اور نوجوانوں کو حراست میں لیا، کئی حریت رہنما تاحال نظر بند ہیں، خاتوں رہنما آسیہ اندرابی اپنی دو ساتھیوں کے ہمراہ بھارتی جیل میں قید ہیں جب کہ 26 گھروں کو مسمار کرکے معصوم شہریوں کو دربدر کر دیا گیا۔

واضح رہے کہ 1989 سے اب تک 95 ہزار 234 کشمیری شہید ہوئے جن میں 7 ہزار 120 ماورائے عدالت قتل ہیں اور 1 لاکھ 45 ہزار 342 کو حراست میں لیا گیا۔

امریکی ریاست الاسکا میں 7 اعشاریہ صفر شدت کا زلزلہ

الاسکا: ریاست الاسکا میں 7 اعشاریہ صفرشدت کے زلزلے نے تباہی مچا دی، کئی گاڑیاں ٹکراگئیں اور سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق امریکی ریاست الاسکا میں 7 اعشاریہ صفر شدت کے آنے والے 2 زلزلوں نے تباہی مچا دی، کئی عمارتوں کو شدید نقصان پہنچا، کئی گاڑیاں آپس میں ٹکرا گئیں جبکہ سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔

امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق پہلا آنے والا زلزلہ شدید نوعیت کا تھا۔ زلزلے کا مرکز ریاست الاسکا کا شہر اینکوریج سے 7 میل فاصلے پر تھا جب کہ زیر زمین زلزلوں کی گہرائی 25 کلومیٹر ریکارڈ کی گئی۔

زلزلے کے جھٹکوں کے بعد بھگدڑ مچ گئی اور افراتفری کے عالم میں تمام لوگ عمارتوں سے باہر نکل آئے۔ کئی گاڑیاں ٹکرائیں، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوئیں، بجلی کا نظام متاثر ہوا۔تاحال زلزلے کی وجہ سےکسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی۔

امریکی میڈیا کے مطابق زلزلے کے بعد سونامی کی وارننگ بھی جاری کی گئی تھی تاہم اب سونامی کا خطرہ ٹل گیا ہے۔

امریکی سینیٹ کی یمن جنگ میں سعودی عرب کی امداد ختم کرنے کی حمایت

واشنگٹن: امریکی سینیٹرز نے یمن جنگ میں سعودی اتحاد کی حمایت ختم کرنے کیلئے ایوان میں قرارداد لانے کی حمایت کردی۔

یمن جنگ میں سعودی عرب کی امداد روکنے کے حوالے سے قرارداد پیش کرنے اور اس پر بحث کیلئے امریکی سینیٹ میں ووٹنگ ہوئی۔ 63 سینیٹرز نے بحث کے حق میں جبکہ 37 نے مخالفت میں ووٹ کاسٹ کیا۔

اب اس حوالے سے سینیٹ میں ایک حتمی قرارداد پیش کیے جانے کا امکان ہے۔ دوسری جانب صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دھمکی دی ہے اگر کانگریس نے یمن جنگ کی حمایت ختم کرنے کی حتمی قرارداد منظور کی تو وہ اسے ویٹو کردیں گے۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ قرارداد لانے کیلئے یہ مناسب وقت نہیں، کیونکہ اس سے خطے میں ہماری امن کی کوششیں متاثر ہوں گی، جبکہ حوثی باغیوں اور ایرانیوں کی حوصلہ افزائی ہوگی۔

ترکی میں سعودی قونصل خانے میں صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے بعد سے امریکا سمیت دنیا بھر میں سعودی حکومت اور ولی عہد محمد بن سلمان کی مخالفت میں شدید اضافہ ہوا ہے اور امریکا پر سعودی عرب کی غیر مشروط حمایت سے دستبردار ہونے کے لیے کافی دباؤ ہے۔

دوسری طرف ٹرمپ انتظامیہ نے دو ٹوک الفاظ میں موجودہ سعودی حکومت کی حمایت سے دست بردار ہونے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کا ذمہ دار ولی عہد محمد بن سلمان کو قرار نہیں دیا جاسکتا۔

Google Analytics Alternative