بین الاقوامی

ہندوستان دھماکے میں 104 افراد ہلاک 80 سے زائد افراد زخمی

بھوپال: ہندوستان کی ریاست مدھیا پردیش کی عمارت میں دھماکے سے 104 افراد ہلاک ہو گئے۔این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق دو منزلہ عمارت منہدم ہونے سے کئی افراد ملبے تلے دب گئے جس سے ہلاکتوں میں اضافہ ہوا جبکہ 80 افراد کی لاشیں اسپتال منتقل کی گئیں۔ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق پولیس کے سب ڈویژنل آفیسر اے آر خان کا کہنا ہے کہ دھماکا صبح 8:30 پر ہوا، جس دکان میں میں دھماکا ہوا اس کے مالک کو دھماکا خیز مواد رکھنے کی اجازت تھی۔دھماکا جس دکان میں ہوا اس عمارت میں تین منزلہ ریسٹورانٹ بھی قائم تھا۔عمارت میں قائم دکان میں آتش گیر مادہ رکھا ہوا تھا، جو دھماکے سے پھٹ گیا۔ہوٹل کی عمارت میں دھماکا صبح سویرے ہوا، دھماکے کی شدت اس قدر زیادہ تھی کہ اس سے ہوٹل کی چھت گر گئی جبکہ اس میں 80 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے۔دھماکے سے آس پاس کی عمارتوں کو جزوی نقصان پہنچا۔قبل ازیں کہا جا رہا تھا کہ دھماکا ہوٹل میں رکھے گیس سیلنڈر پھٹنے سے ہوا۔متاثرہ مقام پر ریسکیو اہلکار ملبے سے لاشوں اور زخمیوں کو نکالنے کے لیے فوری طور پر پہنچے۔مدھیا پردیش کے وزیر اعلیٰ سیو راج سنگھ نے واقعے کی تحقیقات کا حکم دیا ہے۔شیو راج سنگھ نے کہا کہ ہلاک ہونے والوں کے لواحقین کو 2 لاکھ روپے جبکہ زخمی ہونےو الوں کو 50 ہزار روپے دیئے جائیں گے۔

200مساجد تعمیر کرنے کی پیشکش

ریاض (روز نیوز رپورٹ،اے این این)سعودی حکومت نے جرمنی میں شامی مہاجرین کے لیے 200 مساجد تعمیر کرنے کی پیشکش کی ہے۔سعودی عرب اپنا اخلاقی فریضہ سمجھتا ہے کہ مہاجرین کے غیر ملک میں اسلام پر صحیح طریقے سے عمل پیرا ہونے کو یقینی بنائے۔ سعودی عرب نے مساجدکی تعمیر کے سلسلے میں جرمن حکومت کو آمادہ کرنے کیلئے کوششیں شروع کردی ہیں ۔سعودی حکومت نے 2011 ءمیںشام میں خانہ جنگی کے آغاز کےساتھ ہی شامی شہریوں کو سعودی عرب میں پناہ دینے پر پابندی عائد کی ہوئی ہے۔ 2014ءتک سعودی عرب نے 561 شامی مہاجر ین کے علاوہ دیگر ایک سو درخواست گذاروں کو پناہ دی تھی۔ اقوام متحدہ کے اعداد و شمار کے مطابق یورپ میں رواں سال کے آغاز سے اب تک مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ سے آنے والے تارکین وطن کی تعداد 3لاکھ 78ہزار سے تجاوز کرچکی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق جنوب سے یورپ میں آنے والے مہاجرین کی تعداد آئندہ دو برس تک کم از کم ساڑھے 8لاکھ تک پہنچ جائے گی۔خیال کیا جاتا ہے کہ مہاجرین کی ایک بڑی تعداد جرمنی میں رہے گی۔

ترک فضائیہ کی شمالی عراق پر بمباری

دیار بکر: ترکی کے لڑاکا طیاروں نے شمالی عراق میں علیحدگی پسند گروپ کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے)کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔ترکی کے سکیورٹی ذرائع کے مطابق پندرہ جنگی طیاروں نے شمالی عراق میں قندیل ،زیپ ،اواشین کے پہاڑی علاقوں میں کرد باغیوں کے ٹھکانوں پر نصف شب سے چندے قبل فضائی حملے شروع کیے تھے اور یہ گرینچ معیاری وقت کے مطابق دو بجے تک جاری رہے تھے۔ترک حکومت اور علاحدگی پسند جنگجو گروپ کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے)کے درمیان جولائی میں جنگ بندی کے خاتمے کے بعد سے تشدد کا سلسلہ جاری ہے اور کم وبیش روزانہ ہی کرد باغیوں اور ترک سکیورٹی فورسز کے درمیان ملک کے جنوب مشرقی علاقوں میں جھڑپیں ہورہی ہیں یا پھر کرد باغی سکیورٹی فورسز پر بم حملے کررہے ہیں۔ترکی کی مسلح افواج نے جولائی میں شام کی سرحد کے نزدیک واقع قصبے سوروچ میں خودکش بم دھماکے کے بعد ملک کے جنوب مشرق اور شمالی عراق میں کرد باغیوں کے خلاف فضائی حملے شروع کررکھے ہیں۔واضح رہے کہ علاحدگی پسند کرد جماعت پی کے کے اور انقرہ حکومت کے درمیان سنہ 2012 کے آخر میں امن سمجھوتے پراتفاق ہوا تھا جس کے تحت کرد باغیوں نے سکیورٹی فورسز پر حملے روک دیے تھے اور ان کے خلاف ترک فوج نے بھی مہم بند کردی تھی لیکن اس کے بعد ترک حکومت اور کردوں کے درمیان امن مذاکرات میں گذشتہ تین عشروں سے جاری اس تنازعے کے خاتمے کے لیے کوئی نمایاں پیش رفت نہیں ہوسکی ہے۔1980 کے عشرے سے جاری اس خونریزی میں پینتالیس ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

چین میں چپکے سے حملہ کرنے والے نئے ہیلی کاپٹروں کی تیاری.

بیجنگ: چین نے چپکے سے حملہ کرنے والے نئے ہیلی کاپٹروں کی تیاری کا آغاز کردیا ہے جو 2020 تک چین کی مسلح افواج کو فراہم کردیئے جائیں گے.خبر رساں ادارے رائٹرز نے چین کے سرکاری روزنامے کے حوالے سے لکھا ہے کہ یہ ہیلی کاپٹر ملک کی سب سے بڑی اسلحہ بنانے والی ایوی ایشن انڈسٹری کارپوریشن آف چائنا ( اے وی آئی سی) تیار کرے گی.رپورٹ میں کمپنی کے چیئرمین لِن زومنگ کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ان ہیلی کاپٹروں کی مدد سے پیپلز لبریشن آرمی (پی ایل اے) کی ‘جنگی صلاحیتوں کی تشکیل نو’ میں مدد ملے گی.لن زومنگ کا کہنا تھا کہ “یہ رجحان ہے کہ زمینی افواج ہیلی کاپٹرز پر بہت زیادہ انحصار کرنے لگیں گی کیوں کہ ان میں بکتر بند گاڑیوں کے مقابلے میں حملہ کرنے کی بہتر صلاحیت ہوتی ہے جبکہ یہ سرحدی افواج کو نقل و حمل کی فراہمی میں بھی مددگار ثابت ہوں گے”.رپورٹ کے مطابق کمپنی کے چیف ہیلی کاپٹر ڈیزائنر وو شمنگ کا کہنا تھا کہ یہ ہیلی کاپٹر پیچیدہ ماحول میں غیر معمولی طور پر اپنی بقاء کو برقرار رکھنے کے ساتھ ساتھ مشترکہ آپریشن کی خاص صلاحیت کے حامل ہوں گے.واضح رہے کہ صدر شی جن پنگ نے چینی افواج کو مضبوط اور جدید بنانے کے عزم کا اظہار کیا ہے، تاکہ چین خطے بالخصوص جنوبی اور مشرقی چین کے سمندروں میں اپنے قدم مضبوطی سے جما سکے.اس مقصد کے لیے جدید ٹیکنالوجی سے مزین اسلحے، جیٹس، ایئر کرافٹس اور سیٹلائٹس کو مار گرانے والی ٹیکنالوجی کے حصول پر بھی زور دیا گیا ہے.

کشمیر میں جھڑپ کے دوران 2 ہندوستانی فوجی ہلاک.

سری نگر: ہندوستان کے زیرِ انتظام کشمیر میں جھڑپ کے دوران 2 ہندوستانی فوجی جبکہ دو مشتبہ مزاحمت کار ہلاک ہوگئے.خبر رساں ادارے اے ایف پی نے پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ فوج کو سری نگر سے 70 کلومیٹر پر واقع اریبل گاؤں میں مشتبہ عسکریت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع ملی، جس کے بعد جمعرات کی رات فوج اور عسکریت پسندوں کے مابین مقابلے کا آغاز ہوا.مقامی ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس غریب داس نے اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ “مقابلے میں دو مشتبہ عسکریت پسند اور دو فوجی ہلاک ہوئے”.یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب پاکستان رینجرز کا ایک وفد ہنوستان میں موجود ہے اور ان کی ہندوستانی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات بھی ہوئی ہے.کشمیر، پاکستان اور ہندوستان کے مابین ایک متنازع خطہ ہے اور سیکڑوں کشمیری حریت پسند آزادی یا پاکستان کے ساتھ الحاق کی خواہش کے جرم میں ہندوستانی فوجیوں سے جھڑپوں میں اپنی جانیں گنوا چکے ہیں.تاہم حالیہ کچھ ہفتوں کے دوران حریت پسندوں اور ہندوستانی فوج کے مابین مسلح مقابلوں کے نتیجے میں اضافہ ہوا ہے.گذشتہ ہفتے پوری رات جاری رہنے والے مقابلے کے دوران 4 مشتبہ عسکریت پسند اور ایک ہندوستانی فوجی ہلاک ہوگیا تھا.

سعودی عرب کی سوشل میڈیا پر پابندی متوقع

سعودی عرب کی مجلس شوریٰ نے دہشت گردی کے فروغ اور سائبر کرائم میں سماجی رابطے کی ویب سائٹس کو استعمال کیے جانے کے بعد “فیس بک”، “ٹیوٹر” اور “یو ٹیوب” سمیت کئی دوسری سوشل ویب سائٹس کی سروس بند کرنے پرغور شروع کیا ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی مجلس شوریٰ کے رکن ڈاکٹر فائزالشھری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ سوشل ویب سائٹس بالخصوص فیس بک، ٹیوٹر اور یو ٹیوب پر پابندی ان کی حکومت کا آئینی حق ہے۔ دنیا کے کئی دوسرے ممالک نے بھی جرائم کی روک تھام کی خاطر ان ویب سائٹس کو بلاک کر رکھا ہے۔ سعودی عرب بھی اس کا حق رکھتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ جب سوشل میڈیا معاشرے میں فتنہ و فساد پھیلانے کا موجب بنے تو اس پر پابندی ناگزیر ہو جاتی ہے۔ ذرائع کے مطابق سائبر کرائمز بل میں ان تمام ویب سائیٹس پر پابندی عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے جو دہشت گردی کے فروغ، بے حیائی، فحش مواد مہیا کرنے، انتہا پسندی کی حمایت، تفرقہ بازی پھیلانے، جادو ٹونے، تعویز گنڈے اور قمار بازی جیسے سماجی جرائم میں ملوث کو بلاک کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

پاکستان سے ایک لاکھ ہنر مند افراد مرحلہ وار قطر بھیجے جائیں گے

Qatarٹیوٹا کے ایک اعلان کے مطابق پاکستان سے آئندہ تین برس کے دوران ایک لاکھ ہنر مند افراد مرحلہ وار روزگار کے لئے قطر بھیجے جائیں گے۔ اس ضمن میں رمضان المبارک کے فوراً بعد 250 افراد کو پائلٹ پروجیکٹ کے طور پر بھیج دیا جائے گا۔ قطر بھیجنے جانے والے افراد کے پاسپورٹ، میڈیکل چیک اپ، پروٹیکٹر فیس نادرا کارڈ اور سفری اخراجات کے تمام معاملات حکومت پنجاب کا ادارہ ٹیوٹا ون ونڈو آپریشن سے نمٹائے گا۔ ماہر افرادی قوت ، سٹیڈیم، ہوٹلوں اور فیفا ورلڈکپ 2022ء کے دیگربنیادی ڈھانچے کی تعمیر کے لئے اپنی خدمات فراہم کرے گی۔ چیئرمین ٹیوٹانے بتایا کہ ٹیوٹا قطر کی ڈیمانڈ کے مطابق ایگزیکٹوز، پیرامیڈیکس، کمپیوٹر آپریٹروں، آپریٹرو (کرین، ایکس کیویٹر وشاول) ہیوی ڈیوٹی ڈرائیوروں، ایسوسی ایٹ انجینئروں، سپروائزرو ں اور دیگر افراد کے لئے کورسز متعارف کرائے گا تاکہ یہ افراد وہاں جا کر خوش اسلوبی سے کام کرسکیں۔ روزگار کے مواقع ملک میں محدود ہو چکے ہیں۔ توانائی کے بحران کی وجہ سے مینو فیکچرنگ کے شعبے میں فی الحال ملازمتیں کم دستیاب ہیں۔ حکومت پنجاب نے قطر سے ملازمتوں کے حوالے سے جو مذاکرات کئے ہیں اس کے نتیجے میں ایک لاکھ افراد کو روزگار ملنا کامیابی ہوگی۔ حکومت پنجاب کو ان ملازمتوں کے لئے ہنر مند افراد کے انتخاب میں میرٹ کو مدنظر رکھنا چاہیے۔ تمام افراد کا انتخاب پوری چھان بین کے بعد کیا جائے۔ اس ضمن میں کسی سفارش کو خاطر میں نہ لایا جائے۔ حکومتی محکمہ اس سلسلہ میں تمام خواہش مندوں کو مکمل معلومات فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ان کی بھرپور معاونت کرے تاکہ کسی سے زیادتی نہ ہو۔ افراد کے انتخاب میں ہر علاقے اور شہر کے افراد کو منتخب ہونے کا موقع دیا جائے تاکہ ہر اہل فرد کو ملازمت مل سکے۔ حکومت کو اس سلسلے میں متعلقہ حکام کو سختی سے ہدایت کرنی چاہیے کہ یہ سارا کام شفاف اور دیانتداری سے ہو تاکہ عام لوگوں کو اس سے فائدہ حاصل ہو سکے۔

پاک چین افواج کے درمیان تعاون بڑھانے پر اتفاق

راولپنڈی: پاکستان اور چین نے دونوں ممالک کی مسلح افواج کے درمیان تعاون مزید بڑھانے پر اتفاق کیا ہے ۔آئی ایس پی آر کے مطابق چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود سے چین کی وزارت قومی دفاع کے دفتر خارجہ امور کے ڈائریکٹر جنرل ریئر ایڈمرل گوان ژو فی نے ملاقات کی ۔ جوائنٹ سٹاف ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں ہونیوالی ملاقات کے دوران باہمی دلچسپی کے امور بالخصوص خطے کی جیو سٹریٹجک صورتحال اور سکیورٹی چیلنجز پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ ملاقات میں پاکستان اور چین کی مسلح افواج کے درمیان تعاون کو مزید بڑھانے پر اتفاق کیا گیا ۔

Google Analytics Alternative