adaria 28

بھارت کو اینٹ کا جواب پتھر سے دیا جائے گا

وزیراعظم پاکستان عمران خان کی اپیل پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرنے کیلئے پوری قوم سڑکوں پرنکل آئی اور بھرپور بے مثال یکجہتی کا اظہار کیا، وزیراعظم نے اس موقع پر مرکزی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کو سبق سکھانے کا وقت آگیا ہے، کشمیری مسلمان نہ ہوتے تو دنیا ان کے ساتھ کھڑی ہوتی، یہ آخری پتہ کھیل گیا ہے اب کشمیر آزاد ہوگا، ہم جنگ کیلئے تیار ہیں ، فوج بھی تیار ہے، جنرل اسمبلی میں سب کو بتاءوں گا کہ دو ایٹمی قوتیں آمنے سامنے ہیں ، نقصان ہوا تو پوری دنیا کا ہوگا ۔ ہر فورم پر کشمیریوں کے حقوق کی جنگ لڑوں گا، بھارت نے آزاد کشمیر میں کوئی حرکت کی تو بھرپور جواب دیا جائے گا،عالمی برادری تجارتی مفادات سے ماورا ہوکر سوچے، جب بھی مسلمانوں پر ظلم ہوتا ہے تو اقوام متحدہ جیسے ادارے خاموش ہو جاتے ہیں نہ ہی بین الاقوامی برادری اس حوالے سے کوئی قدم اٹھاتی ہے ۔ مقبوضہ کشمیر سے کرفیو ہٹانے کی مہم شروع کریں گے، دنیا کی خاموشی پر افسوس ہے،80لاکھ کشمیری چار ہفتے سے کرفیو میں بند ہیں ، جب تک کشمیریوں کو آزادی نہیں ملتی پاکستان کی قوم ان کے ساتھ کھڑی ہے، ہ میں سمجھنا ہے کہ آج ہندوستان میں کس طرح کی حکومت ہے جو انسانوں پر ایسا ظلم کررہی ہے، ان کے سمجھنے کیلئے آر ایس ایس کی فلاسفی کا نظریہ سمجھنا پڑے گا، آر ایس ایس میں مسلمانوں کیخلاف نفرت پائی جاتی ہے وہ سمجھتی ہے کہ ہندو سب سے زیادہ اعلیٰ ہے ، جس طرح نازی پارٹی نے جرمنی پر قبضہ کیا اسی طرح آر ایس ایس کا نظریہ ہندوستان پر قبضہ کربیٹھا ہے ۔ دنیا دیکھ رہی ہے کشمیر میں کیا ہورہا ہے ۔ عمران خان نے وعدہ کیا جب تک کشمیر آزاد نہیں ہوتا ہر فورم پر ان کی آزادی کی جنگ لڑوں گا ۔ نیز انہوں نے نیو یارک ٹائمز میں ایک کالم بھی لکھا جس میں بتایا کہ کشمیریوں پر کس طرح سے ظلم ہورہا ہے، آر ایس ایس کا نظریہ مسیحی برادری کیلئے بھی برا ہے، ان پر بھی ظلم و ستم کیا جارہا ہے، اعتدال پسندوں کیلئے ہندوستان عذاب بن چکا ہے ۔ بی جے پی اور آر ایس ایس کی حکومت نے نہرو کی فلاسفی پر عمل نہیں کیا، آر ایس ایس والوں نے گاندھی کو قتل کیا تھا یہ لوگ صرف ہندو راج کو مانتے ہیں ۔ ہم نے عالمی رہنماءوں کو بتایا کہ آج دنیا مود کی فاشسٹ اور نسل پرست حکومت کے سامنے کشمیریوں کیلئے کھڑی نہیں ہوگی اور اس کا اثر ساری دنیا پر جائے گا اور یہ بات یہاں نہیں رکے گی ۔ ہ میں یہ بھی علم ہے کہ بھارت کی کوششیں ہیں کہ دنیا سے کشمیر کی نظر ہٹائی جائے ۔ اس وجہ سے دنیا کو بتارہے ہیں کہ وہ کشمیر کیلئے کچھ نہ کچھ کریں ۔ مودی کو صاف بتا دینا چاہتا ہوں کہ اینٹ کا جواب پتھرسے دیں گے ، ہماری فوج تیار ہے مودی جو تکبر میں کر بیٹھا ہے یہ آخری پتہ کھیل گیا ہے اس کے بعد کشمیر آزاد ہوگا ۔ عمران خان نے مقبوضہ کشمیر میں قتل عام کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ اگر دنیا میں کشمیر اور کشمیری عوام پر بھارتی یلغار روکنے کیلئے کچھ نہ کیا تو دو جوہری ریاستوں کے درمیان ممکنہ براہ راست فوجی محاذ آرائی سے پوری دنیا کا امن و امان تہہ و بالا ہو جائے گا ۔ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کے ناجائز الحاق کا فیصلہ واپس لینے کرفیو کے خاتمے اور اپنی افواج کو بیرکوں میں واپس بھیجنے کے بعد ہی مذاکرات شروع ہوسکتے ہیں ۔ وزیراعظم عمران خان کی یہ بات بالکل درست ہے کیونکہ ان اقدامات کی موجودگی میں بھارت کے ساتھ کسی قسم کی بات چیت کا سوال ہی نہیں پیدا ہوسکتا ۔ وہ آئے دن کشمیریوں پر ظلم و ستم بڑھاتا جارہا ہے، ماءوں بہنوں کی عزتیں مزید غیر محفوظ ہوگئی ہیں ، ہزاروں نوجوانوں کو گرفتار کیا جاچکا ہے ۔ ان کا نہیں معلوم کہ وہ اس وقت کہاں پر ہیں ،عمران خان نے اپنے کالم میں مزید لکھا کہ بھارتی وزیر دفاع نے ڈھکے چھپے الفاظ میں پاکستان کو ایٹمی حملے کی دھمکی دے دی ہے ۔ کیونکہ مودی کے توسیع پسندانہ عزائم ہیں جیسا کہ بتایا جاچکا ہے کہ وہ مسلمانوں کے خلاف ہے اسی وجہ سے اس نے آسام میں لاکھوں مسلمانوں کو بھارتی شہریت سے محروم کرنے کا منصوبہ تیار کرلیا ہے ۔ آسام سے ممکنہ احتجاج سے نمٹنے کیلئے سیکورٹی سخت اور 60ہزار پولیس اہلکار ڈیوٹیوں پر تعینات کردئیے گئے ہیں اس کے علاوہ 19ہزار فوجی اہلکار بھی آسام پہنچا دئیے گئے ہیں ۔ مودی سرکار اسی مشق کو مغربی بنگال کی سرحدی ریاستوں میں بھی دہرائے گی ۔ ادھر دوسری جانب بھارتی ریاست چھتیس گڑھ کے نکسل علیحدگی پسندوں نے کشمیریوں کی حمایت کا اعلان کردیا ہے ۔ عالمی میڈیا نے بھی مودی کی تمام تر چالاکیوں کا پردہ چاک کردیا ۔ بی بی سی، واشنگٹن ٹائم، وائس آف امریکہ، نیو یارک ٹائمز اور سی این این سمیت کئی دیگر عالمی خبر رساں ادارے وادی میں بھارتی ظلم و ستم کیخلاف واویلا مچا رہے ہیں اور مودی جو بھی الاپ رہا ہے اسے جھوٹا قرار دیا جارہا ہے ۔ بین الاقوامی میڈیا نے واضح کیا کہ بھارتی فورسز گھروں میں گھس کر کشمیریوں کو گرفتار کررہی ہے انہیں تشدد کا بدترین نشانہ بنایا جاتا ہے ، بجلی کے جھٹکے دئیے جاتے ہیں ، الٹا لٹکا دیا جاتا ہے اور کشمیریوں کوزندہ بھی جلانے کی کوششیں کی جارہی ہیں ۔ کیونکہ مودی فاشسٹ ہٹلر نظریے کا حامی ہے جس طرح اس نے لاکھوں یہودیوں کو زندہ گیس کے چیمبر میں جلا دیا تھا اور پھر ہولوکاسٹ رونما ہوا اسی طرح مودی بھی مقبوضہ وادی کے کشمیریوں کو زندہ جلانے کے درپے ہے ۔ یہی کام وہ آسام اور بنگلہ دیش کی مغربی سرحدوں پر بھی کرے گا ۔ نامعلوم دنیا کس لمحے کا انتظار کررہی ہے ۔ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے اپنی تازہ اشاعت میں ایک معصوم کشمیری بچے کی کہانی شاءع کی جس میں معصوم بچے کو قابض بھارتی فورسز نے حراست میں لے لیا اور اس پر ظلم و ستم کرنے کی دل دہلا دینے والی تصاویر بھی اپنے اخبار میں شاءع کی ۔ اسی طرح ماں سے چھینے جانے والے13سالہ نوجوان کی دلخراش کہانی بھی شاءع کی ۔ دنیا کیلئے اب ایسی کونسی ایسی گنجائش رہ گئی ہے کہ وہ آواز نہیں اٹھارہی ۔ وقت تقاضا کررہا ہے کہ مودی کو لگام ڈالی جائے ۔ ادھر چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہاکہ قوم نے کشمیر آور کے دوران اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ جس یکجہتی کا اظہار کیا وہ دنیا کیلئے ایک نہایت مضبوط پیغام ہے ۔ انہوں نے گوجرانوالہ کور ہیڈ کوارٹرز کے موقع پر ان خیالات کا اظہار کیا ۔ آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف کو کور کی آپریشنل تیاریوں کے بارے میں بھی بریفنگ دی گئی ۔ چیف آف آرمی سٹاف کا بیان بالکل درست ہے جس میں انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر بگڑتی ہوئی صورتحال خطے کے امن کیلئے خطرہ ہے ۔ دنیا کو حالات سمجھ کر فی الفور ایکشن لینا چاہیے ۔

ماڈل کورٹس نے عدالتی نظام میں جان ڈال دی

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہاکہ ماڈل کورٹس نے آئین کے آرٹیکل 37;68; کے مطابق تیز تر اور سستے انصاف کے تصور کو عملی جامہ پہنایا ہے ۔ سستے انصاف کے خواب کو حقیقت میں بدل دیا ہے ۔ سائلین اب جلد انصاف حاصل کررہے ہیں ، ملک بھر میں 167 ماڈل کورٹس نے صرف پانچ ماہ میں 12584 قتل اور نارکوٹکس کے مقدمات نمٹائے جوکہ قابل تحسین ہیں ۔ چیف جسٹس نے ججز میں ایوارڈز تقسیم کیے جس میں اسلام آباد کے سیشن جج سہیل ناصر نے پاکستان بھر میں پہلی پوزیشن حاصل کی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں