- الإعلانات -

بھارت میں جنسی زیادتی میں ناکامی پر ماں بیٹی کا سر مونڈھ دیا گیا

پٹنہ: بھارت میں جنسی زیادتی کیخلاف مزاحمت کرنے والی ماں بیٹی کو ملزمان نے ناصرف تشدد کا نشانہ بنایا بلکہ ان کے سر بھی مونڈھ دیئے اور ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بنایا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست بہار میں ایک دلخراش واقعے میں بااثر ملزمان نے ایک گھر پر حملہ کرکے نوجوان لڑکی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی کوشش کی جس پر لڑکی اور اس کی ماں نے سخت مزاحمت کی، اپنی ناپاک کوشش میں ناکام ملزمان نے الٹا ماں بیٹی پر فحاشی کا الزام عائد کرکے مارا پیٹا اور گنجا کر کے پورے گاؤں کا چکر لگوایا۔

پولیس نے علاقہ مکینوں کے احتجاج کے بعد ایف آئی آر درج کرنے کی زحمت کی اور 2 ملزمان کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے جب کہ دیگر 5 ملزمان کی تلاش جاری ہے۔ متاثرہ خواتین کا کہنا ہے کہ پولیس بااثر ملزمان کی پشت پناہی کر رہی ہے۔

ریاست بہار میں اس نوعیت کا یہ پہلا واقعہ نہیں اس سے قبل فروری میں 19 سالہ لڑکی کو باپ کے سامنے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا جب کہ ماہ اپریل میں بھی جنسی زیادتی پر مزاحمت کرنے والی لڑکی پر ملزمان نے تیزاب پھینک دیا تھا۔

واضح رہے کہ بھارت خواتین کے لیے غیر محفوظ ترین ممالک کی فہرست میں شامل ہے، ٹرینوں، بسوں اور عوامی مقامات پر جنسی زیادتی کے پے در پے واقعات کی بھرمار پرعالمی سطح پر طنزاً بھارت کو گائے کے لیے محفوظ اور عورت کے لیے غیر محفوظ مقام کہا جانے لگا ہے۔