- الإعلانات -

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج رائے محمدایوب مارتھ کی سر براہی میں کمیٹی روم سیشن کورٹ نارووال میں کریمنل جسٹس کوآرڈینیشن کمیٹی کی میٹنگ کا انعقاد کیا گیا

نارووال (ظفراقبال پاشا) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج رائے محمدایوب مارتھ کی سر براہی میں کمیٹی روم سیشن کورٹ نارووال میں کریمنل جسٹس کوآرڈینیشن کمیٹی کی میٹنگ کا انعقاد کیا گیاجس میں ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج محمد ندیم شوکت ، ، سنئیر سول جج (سول ڈویژن)راشد طفیل ریحان،، سنئیر سول جج (کریمینل ڈویژن)عباس رسول وڑائچ، ، اے ڈی سی جی آرڈاکٹر فیصل سلیم، ایس ایس پی انوسٹی گیشن فدا حسین ، ،ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹر زاہد یونس ،، سپرنٹنڈنٹ ہیلتھ اللہ دتہ، ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال، سپرنٹنڈنٹ جیل، محمود فخری، ،ڈپٹی ڈسٹرکٹ اٹارنی محمد ادریس اور دیگر ممبران نے شرکت کی۔ میٹنگ میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے ڈپٹی کمشنر نارووال کو ہدایت کی کہ وہ ڈسٹرکٹ کمپلیکس نارووال میں سوئی گیس کی فراہمی اور اس کی صفائی کی بابت اقدامات کریں اور جن مقدمات میں گورنمنٹ آف پنجاب پارٹی ہے ان کے جلد از جلد فیصلہ کو یقینی بنائیںاور بدلتے موسم کو مدِ نظر رکھتے ہوئے وہ ڈسٹرکٹ کمپلیکس میں سڑک کے اطراف میں جھاڑیوں وغیرہ کو تلف کروائیں تاکہ ذہریلے کیڑے مکوڑوں کا سدِ باب ہو سکے۔ انہو ں نے دارالامان میں حکومت پنجاب کی پالیسی کے مطابق سہولیات فراہم کرنے کا حکم بھی صادر کیاگیا ۔ میٹنگ میں ایس پی انویسٹی گیشن کو ہدایت کی کہ وہ زیر تفتیش مقدمات فوری طور پر عدالتوں میں پیش کریں تاکہ ان کا فیصلہ بروقت ہو سکے اورکہ ناقص تفتیش کرنے والے تفتیشی افسران کے خلاف سخت محکمانہ قانونی کاروائی کر نے کی ہدا یت کی۔ ڈسٹر کٹ اینڈ سیشن جج نے ہد ایت کی کہ دوسرے اضلاع سے آنے والے قیدیوں کی محفو ظ منتقلی کے لیے پولیس گارڈ فراہم کریںتاکہ کسی بھی نا خوشگوار واقع سے بچا جا سکے اس کے علاوہ ہیڈ کوارٹر نارووال ، تحصیل شکرگڑھ اور تحصیل ظفروال میں موجود جوڈیشل کمپلیکسز کی سیکیورٹی کو مزید بہتر کیا جائے اور اس کے ساتھ ساتھ انصاف کی جلد فراہمی کے لیے مختلف مقدمات میں درکار گواہان کی متعلقہ کورٹس میں پیشی کو بروقت یقینی بنا یا جائے اور غفلت برتنے والے اہلکاران کے خلاف سخت کاروائی کی جائے ۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے ایس ایس پی انویسٹی گیشن کو ہدایت دی کہ ضلع بھر کی ماڈل کورٹس کو کامیاب بنانے کے لیے تمام تر صلاحیتیں بر وئے کار لائیں اور Gender Based Violence Court اور ضلع کی تمام عدالتوں میںسرکاری گواہان کی حاضری کو یقینی بنائیںاور مزید ملزم کو جیل میں داخل کرواتے وقت اس کے کمپیوٹرائز قومی شناختی کارڈ کی فوٹو کاپی جیل حکام کو مہیا کریںاور کم عمر ملزمان کی تصویر والے ب فارم مہیا کریں۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے تمام مجسٹریٹ کو ہدا یت کہ وہ زیر التوا مقدمات کا جلداز جلد فیصلہ کر کے عوام کو فوری انصاف مہیا کیا جائے۔ انہو ں نے سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل کو ہدایت کی کہ قیدیوں کو بروقت کھانا اور طبی سہولتوں کی فراہمی کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے ۔ ڈسٹر کٹ سیشن جج نے نمائندہ چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ اتھارٹی کو ہدایت کی وہ ضلع میں میڈیکو لیگل سرٹیفیکیٹ(MLC) اور پوسٹ مارٹم رپورٹ کے کمپیوٹرائزڈ اجرا کے اقدامات کریںاورنئے آنے والے ڈاکٹرز کو میڈیکو لیگل سرٹیفیکیٹ اور پوسٹ مارٹم رپورٹ کے اجرا کے متعلق بھی تربیت دیں۔ انہو ں نے پروبیشن آفیسر کو ہدایت کی کہ وہ پروبیشن پر رہا ہونے والے قیدیوں کی اصلاح کے لیے قانون کے مطابق اقدامات کرے۔