- الإعلانات -

نواز شریف اور جہانگیر ترین کی تاحیات نااہلی کیخلاف آئینی درخواست دائر

اسلام آباد : سپریم کورٹ میں  سابق وزیراعظم نواز شریف اور جہانگیر ترین کی تاحیات نا اہلی کیخلاف آئینی درخواست  دائر کردی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق  سپریم کورٹ میں سابق وزیراعظم نواز شریف اور جہانگیر ترین کی تاحیات نااہلی کیخلاف آئینی درخواست دائر کردی گئی ہے ، درخواست صدر سپریم کورٹ باراحسن بھون نے دائر کی۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ تاحیات نااہلی کا اطلاق صرف انتخابی تنازعات میں استعمال کیاجائے، آرٹیکل 184تھری کےتحت سپریم کورٹ ٹرائل کورٹ کے امورانجام نہیں دے سکتی۔

دائر درخواست میں کہا گیا کہ آرٹیکل 184کی شق 3کے تحت عدالتی فیصلے کےخلاف اپیل کا حق نہیں ملتا، عدالتی فیصلے کیخلاف اپیل کا حق نہ ملنا انصاف کے اصولوں کے منافی ہے ، سپریم کورٹ نےفیصلوں میں آرٹیکل62 ون ایف کے اطلاق کے پیرامیٹرزطے کئے۔

نواز شریف کب واپس آئیں گے ؟ منظور وسان نے پیش گوئی کر دی

سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے فوجداری قانون میں ترامیم مسترد کردیں

درخواست میں استدعا کی گئی کہ آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت جو الیکشن چیلنج ہوا صرف اس کو کالعدم کیا جائے۔

اس حوالے سے سینئر قانون دان اعتزازاحسن نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا میراتومؤقف رہا ہے کہ تاحیات نااہلی نہیں ہونی چاہیے، درخواست پر مؤقف درست ہے، کسی کی ذات کے حوالے سے پٹیشن دائرنہیں ہونی چاہیے، درخواست مفاد عامہ میں ہو تو دائر کی جاسکتی ہے۔

اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ بارکوذات کے حوالے سے کیس میں نہیں آناچاہیے، متاثرہ افراد کو خود درخواست دائر کرنی چاہیے تھی، میرا نہیں خیال کہ درخواست کا لینا دیناعوام الناس سے ہے۔