- الإعلانات -

مناسب اقدامات نہ کیے تومانچسٹر جیسے حملے ہوتے رہیں گے، ٹرمپ

برسلزمیں مغربی دفاعی اتحاد نیٹو سربراہی اجلاس کے آغاز پرشرکا نے برطانوی شہر مانچسٹر میں ہونے والے خودکش حملے میں ہلاک ہونے والوں کے احترام میں ایک منٹ خاموشی اختیار کی ۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے خبردارکیا کہ عالمی رہنماؤں نے وحشیانہ ، انسانیت سوزدہشت گردحملوں کوروکنے کے لیے مناسب اقدامات نہ کیے تومانچسٹرجیسے حملے ہوتے رہیں گے۔

انہوںنے مانچسٹرحملے سے متعلق امریکی میڈیا میں افشا ہونے والی خفیہ معلومات پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امریکی حکام اس کی مکمل تحقیقات کریں ۔

صدرٹرمپ کا کہنا تھا کہ امریکا دہشت گردی کے خلاف جنگ جاری رکھے گاتاہم ہزاروں کی تعداد میں یورپ آنے والے تارکین وطن پربھی کڑی نگاہ رکھنی ہوگی ۔

امریکی صدر نے نیٹو میں شامل اتحادی ممالک پرزوردیا کہ وہ لازمی طور پر دفاعی بجٹ میں اپنے حصے کے مناسب اخراجات ادا کریں۔

سربراہ اجلاس موقع پر جرمن چانسلر انجیلا میرکل اور نیٹو کے سیکریٹری جنرل ژینس اسٹولٹن برگ نے نیٹو ہیڈکوارٹر میں دو نئی یادگاروں کی بھی نقاب کشائی کی۔

ایک یادگارمیں دیوار برلن کے دو ٹکڑوں کو جوڑا گیا ہے جس سے مراد یورپ کی تقسیم کا خاتمہ ہے۔ دوسری یادگار امریکا میں نائن الیون کے حملوں کے مقام سے لی گئی ایک اسٹیل بیم ہے جو نیٹو کے مشترکہ عزم کی عکاسی کرتی ہے۔