- الإعلانات -

سیف سٹی پراجیکٹ کا بھانڈہ پھوٹ گیا، دھماکے کے مقام پر کوئی کیمرہ نصب نہیں

شہر میں 8 ہزار میں سے صرف 1500 کیمرےنصب ہو سکے، دھماکے کی جگہ سے چند فٹ دور پول موجود، کیمرے نہیں لگائے گئے۔ ایم ڈی سیف سٹی کا رابطے پر موقف دینے سے انکار۔

 ایشیا کے سب سے بڑے سیف سٹی پراجیکٹ کا دعویٰ ٹھس ہو گیا۔ 12 ارب سے زائد لاگت کا منصوبہ 2016ء میں مکمل ہونا تھا تاہم اب تک صرف 1500 کیمرے لگائے جا سکے۔ دھماکے سے چند فٹ دور صرف پول نصب ہے جبکہ کیمرے غائب ہیں۔ دھماکے کی تحقیقات مشکل میں پڑ گئیں کیونکہ پولیس کو سیف سٹی کیمروں کی فوٹیج دستیاب نہیں ہو گی۔ تاخیر کے باعث منصوبے کی لاگت 12 سے بڑھ کر 13 ارب روپے ہو گئی ہے۔ ایم ڈی سیف سٹی کا رابطے پر مؤقف دینے سے انکار، کہتے ہیں کہ میٹنگ میں ہوں، میٹنگ لمبی چلے گی۔