- الإعلانات -

شاہد خاقان کو قطر سے معاہدے کیوجہ سے لایا جا رہا ہے: شیخ رشید کا دعویٰ

پاکستان تحریک انصاف کے یوم تشکر کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ:۔
1۔ آج کا دن بہت بڑا دن ہے، ایک چور کیخلاف اللہ نے عمران کو فتح دی۔
2۔ وہ مجھے کہتا تھا کہ شیخ رشید اسمبلی میں نہیں ہو گا، میں نے کہا تھا میں اسمبلی میں ہوں گا، تم نہیں ہو گے۔
3۔ میری پیٹشن پر نواز شریف نااہل ہوا۔
4۔ نواز شریف کہتا ہے کہ کلنٹن نے پانچ بلین ڈالر آفر کئے، یہ منہ اور مسور کی دال۔
5۔ ان کے بچے بھی ارب پتی بن جاتے ہیں۔
6۔ کہا تھا کہ 2017ء اس کا آخری سال ہو گا۔
7۔ اب وہ شہباز شریف کو لا رہا ہے، یہ برادرِ یوسف ہے۔
8۔ شہباز شریف کیخلاف کل سپریم کورٹ میں حدیبیہ کا ریفرنس داخل ہو جائے گا۔
9۔ حدیبیہ کا کیس کھلا تو قوم پانامہ کو بھول جائے گی۔
10۔ روز کہتے تھے کہ شیخ رشید قربانی کا کہتا ہے، نہیں ہوتی، لو ہو گئی۔
11۔ پوری قوم سی پیک کیساتھ ہے۔
12۔ جس کو تم ڈکٹیٹر کہتے ہو، اس کے دور میں سی پیک کا فیصلہ ہوا۔
13۔ چین والو! ساری قوم سی پیک کیساتھ ہے۔
14۔ خدا کو گواہ بنا کر کہتا ہوں، ایٹمی دھماکہ راجہ ظفر الحق، گوہر ایوب اور میں نے کرایا، یہ تو بزدل ہیں۔
15۔ نواز شریف صاحب! معلوم ہے آپ مالدیپ کیا کرنے گئے تھے۔
16۔ کہتے ہیں سازش ہوئی ہے، شکر ہے خدا کا کہ اس ملک میں عظیم ادارے، عظیم ججز اور فوج ہے۔
17۔ جب قوم زندہ ہو اور عمران جیسا لیڈر ہو تو دنیا کی کوئی طاقت پاکستان کو نقصان نہیں پہنچا سکتی۔
18۔ یہ چاہتے ہیں کہ فوج پنجاب پولیس بن جائے۔
19۔ ان کا خیال تھا کہ جسٹس سعید کھوسہ جسٹس قیوم بن جائے گا۔
20۔ نواز شریف امریکی لیڈروں سے ملاقات کے دوران چٹ دیکھ کر پڑھتا تھا۔
21۔ اس کو ڈیلی ٹیلی گراف کے سپیلنگز کہاں سے آئیں گے؟
22۔ شہباز شریف صاحب! شاہد خاقان عباسی کو قطر معاہدے کیوجہ سے لایا جا رہا ہے۔
23۔ کل سیف الرحمان قطری گاڑی میں آیا کہ شاہد خاقان کو وزیر اعظم بناؤ۔
24۔ نواز شریف! تم نے ہماری ناک کٹوائی۔
25۔ اسحاق ڈالر میرا کالج، ہسپتال نہیں بنا تو کوئی بات نہیں۔
26۔ نواز شریف، اسحاق ڈار جب تم جیلوں میں ہو گے تو تمہیں یاد کراؤں گا کہ تم چور ہو۔
27۔ کہتا ہے میں ملک کا نقشہ بدلنا چاہتا تھا۔
28۔ عمران کا وزیر اعظم کے لئے امیدوار نامزد کرنے کا ادھار نہیں اتار سکتا۔
29۔ لوگو! عمران خان غریب تبدیلی چاہتے ہیں، ان کی امیدیں نہ توڑنا۔
30۔ فضل الرحمان تم نے دین کی بجائے اقتدار کو ترجیح دی، فضل الرحمان نے اسلام کی بجائے اسلام آباد کو ترجیح دی۔
31۔ سانپ مرا نہیں زخمی ہے