- الإعلانات -

عمران خان کے ہاتھوں خواتین کی عزت محفوظ نہیں، عائشہ گلالئی کا الزام

پاکستان تحریک انصاف کو الوداع کہنے والی رکن قومی اسمبلی عائشہ گلا لئی نے شہر اقتدار میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے اپنی سابق جماعت اور اس کے چیئرمین عمران خان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔ ان کا کہنا تھا کہ:۔

1۔ این اے ون کے ٹکٹ کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔
2۔ جلسے میں تقریر کا بھی کوئی مسئلہ نہیں ہے۔
3۔ پیپلز پارٹی میں بہت احترام ملا تھا۔
4۔ عمران خان کے ہاتھوں خواتین کی عزت محفوظ نہیں۔
5۔ عمران خان خواتین کو عجیب ٹیکسٹ پیغامات بھیجتے ہیں۔
6۔ مسلم لیگ ن میں نہیں جا رہی۔
7۔ عمران خان اور ان کے ساتھیوں کے ہاتھوں عزتیں محفوظ نہیں ہیں۔
8۔ نواز شریف خاندانی آدمی ہیں۔
9۔ عمران خان نے بے نظیر کے خلاف بہت بری گفتگو کی۔
10۔ یہ آدمی مرے ہوئے لوگوں کو بھی نہیں چھوڑتا۔
11۔ بے نظیر کے بارے میں عمران خان کے الفاظ سن کر تکلیف ہوئی۔
12۔ جن کارکنوں کی وجہ سے پارٹی اس مقام پر پہنچی، انہیں ادنیٰ سمجھا جاتا ہے۔
13۔ کارکنوں کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ کسی کام کے نہیں۔
14۔ کارکن ڈنڈے کھاتے ہیں اور یہ بنی گالہ میں چھپ جاتے ہیں۔
15۔ عمران خان نفسیاتی مسائل کا بھی شکار ہیں۔
16۔ عمران خان قابل لوگوں کو پسند نہیں کرتے۔
17۔ کپتان قابل لوگوں کے سامنے احساس کمتری کا شکار ہو جاتے ہیں۔
18۔ پرویز خٹک مافیا کا ڈان ہے۔
19۔ عمران خان نفسیاتی مسائل کے بھی شکار ہیں۔
20۔ عمران خان قابل لوگوں کو پسند نہیں کرتے۔
21۔ پرویز خٹک کے سارے رشتہ دار حکومت سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔
22۔ پرویز خٹک کا بیٹا مخصوص نشستوں کے سودے کرتا ہے۔
23۔ عمران خان دو نمبر پٹھان ہے۔
24۔ عمران نیازی پرویز خٹک کے خلاف کوئی شکایت نہیں سنتے۔
25۔ کے پی میں ٹھیکے جہانگیر ترین کو ملتے ہیں، ان سے کچن عمران نیازی کا چلتا ہے