- الإعلانات -

مشرف عوام پر دوبارہ جنگل کا قانون مسلط کرنا چاہتے ہیں: خورشید شاہ

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ کا پرویز مشرف کے جمہوریت اور آئین کے خلاف دیے گئے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہنا تھا کہ آئینی غدار شخص کی زبان سے آئین اور جمہوریت کیخلاف بیان بازی شرمناک ہے۔ آمروں نے متحدہ پاکستان میں عوام سے حقوق چھین کر نفرت اور علیحدگی کے بیج بوئے۔ ان کا کہنا تھا کہ آمریت کو طول دینے کیلئے ملک کو غیروں کی جنگوں میں جھونکا گیا۔ آمروں نے علاقائیت، لاقانونیت، دہشتگردی اور تعصب کی بنیاد رکھی جسے قوم بھگت رہی ہے۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا تھا کہ ڈکٹیٹر تاریخ سے سبق سیکھیں۔ گیارہ سال تک عوام کو آمریت کے حصار میں رکھنے والے آمر نفرت کا نشان بن کر رہ گئے ہیں۔ آمروں کا حلف ملک کی حفاظت تھا لیکن انہوں نے عوام پر ظلم و جبر کے ضابطے نافذ کئے۔ انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کی باتوں میں ان کی اصل اوقات چھپی ہے۔ پرویز مشرف 21ویں صدی میں ایک بار پھر عوام پر جنگل کا قانون مسلط کرنا چاہتے ہیں