- الإعلانات -

‘نواز شریف کو کہاں سے اشارہ ملا ہے کہ وہ دو اداروں کے پیچھے پڑ گئے ہیں؟’

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے بنی گالہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں بڑا اہم وقت آ گیا ہے، شریف فیملی کو پارلیمنٹ اور جے آئی ٹی میں صفائی کا موقع ملا، لمبی انویسٹی گیشن کے بعد پانچ ججز نے فیصلہ دیا، اب نواز شریف کہتا ہے کہ فیصلہ نہیں مانتا، سازش ہو گئی۔ انہوں نے کہا کہ اس ملک کیخلاف سب سے بڑی سازش ہو رہی ہے، مجرم کی نیب میں پیشی ہونے والی ہے اور وہ سرکاری خرچے پر لاہور جا رہا ہے، یہ پاکستان کیخلاف سازش ہے۔ عمران خان نے مزید کہا کہ جیلوں میں سارے چوروں کے برابر ان کے ایک بیٹے کے گھر کی مالیت ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ نواز شریف نیب سے خوفزدہ ہیں، انہیں علم ہے کہ نیب کیسز میں یہ پھنس جائیں گے، اقامہ منی لانڈرنگ کا آسان طریقہ ہے، نواز شریف نے لوگوں کو بیوقوف بنانے کا جرم بھی کیا ہے، اتنے چارجز کسی بھی چور پر عائد نہیں ہوتے جتنے نواز شریف پر عائد ہوتے ہیں، نواز شریف نے پارلیمنٹ میں جھوٹ بولا، نواز شریف قوم کو بتائیں کیا سازش ہو رہی ہے؟ عمران خان نے اعلان کیا کہ ہم جمہوری اداروں کیساتھ کھڑے ہوں گے، نواز شریف اپنی کرپشن بچانے کے لئے باہر نکل رہے ہیں، یہ جو مرضی کر لیں ان کو شکست ہو گی، ہزاروں کی چوری والے جیلوں میں ہیں اور یہاں تو اربوں کی چوری ہوئی، کیا سیاسی جماعت ایک فیملی کی کرپشن چھپانے کیلئے ہوتی ہے؟ عمران خان نے مزید کہا کہ ن لیگ کو شریف خاندان سے الگ ہونا ہو گا، سانحہ ماڈل ٹاؤن کے شہداء کو آج تک انصاف نہیں ملا، متاثرین کے ساتھ کھڑے ہیں، انصاف دلوانے میں طاہر القادری کی سپورٹ کریں گے، سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ شائع نہیں کی جا رہی۔ عمران خان سے صحافی نے استفسار کیا کہ کیا آپ اپنا موبائل تفتیش کیلئے دیں گے؟ تو انہوں نے جواب دیا کہ جو الزام لگاتا ہے، وہی ثبوت دیتا ہے۔