- الإعلانات -

مریم نواز نے پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹراور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی سے خصوصی ملاقات,ایس کے نیازی کی صحافتی خدمات کو سراہا

لاہور(بیورو رپورٹ)حلقہ این اے 120ہمارا ہے ،نوازشریف کیخلاف فیصلہ عوام نے قبول نہیں کیا ۔یہ بات سابق وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹراور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی سے خصوصی ملاقات میں کہی ۔ملاقات جو کافی طویل رہی اس میں تمام امور پر سیرحاصل گفتگو کی گئی ۔مریم نواز نے ایس کے نیازی کی صحافتی خدمات کو سراہا اور انہوں نے پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز اور روزنیوز کی غیرجانبدارانہ پالیسیوں کی بھی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اس میڈیا گروپ نے ہمیشہ مثبت صحافت کو فروغ دیا ۔کلثوم نواز کی صحت کے حوالے سے بھی مریم نواز نے بتایا کہ وہ اب اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم سے روبصحت ہورہی ہیں ۔نوازشریف کی وطن واپسی کے حوالے سے مریم نواز نے کہا کہ وہ ضرور واپس آئیں گے ۔ایس کے نیازی نے لاہورمیں حلقہ این اے 120کا مکمل طور پر دورہ کیا ۔گلی گلی میں جاکر ہر طبقہ ہائے فکر زندگی سے ملے ۔ایس کے نیازی نے بتایا کہ مریم نواز حلقہ این اے 120کے حوالے سے انتہائی پرامید ہیں اوران کے مطابق کلثوم نواز بھاری اکثریت سے فتح حاصل کریں گی تاہم ضمنی انتخابات ہونے کے حوالے سے ان کے کچھ تحفظات ہیں ۔چونکہ یہ جنرل الیکشن نہیں اورضمنی انتخابات میں لوگ گھروں سے کم نکلتے ہیں لیکن اس کے باوجود مریم نواز کو قوی امید ہے کہ اس حلقے میں ن لیگ کی فتح ہوگی ۔حلقہ این اے 120سے اس مرتبہ بہت زیادہ امیدوار الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں یقینی طور پر ووٹ بھی تقسیم ہوگا ۔اس مرتبہ پاکستان تحریک انصاف کا گراف اتنا بلند نہیں ہے ۔ایس کے نیازی نے کہا کہ اگرکوئی خدانخواستہ حادثہ پیش نہ ہوا جیسا کہ گذشتہ روز ہم جس ہوٹل میں ٹھہرے تھے اسی علاقے سے ایک دہشتگرد پکڑا گیا ۔حالات صحیح رہے تو ن لیگ کو زیادہ ووٹ پڑینگے ۔عوام میں ن لیگ کے حوالے سے جوش وخروش پایا جاتاہے ۔ایس کے نیازی نے مزید بتایا کہ ن لیگ کو ہمدردی کا ووٹ بھی ملے گا اور جیت کلثوم نواز کی ہوگی ۔جہاں تک کلثوم نواز کے فتح حاصل کرنے کے بعد وزیراعظم بننے کا مسئلہ ہے تو اس حوالے سے کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا ۔یہ بھی امکان ہوسکتا ہے کہ کلثوم نواز وزیراعظم بن جائیں اور شاہد خاقان عباسی بھی وزیراعظم ہی رہ سکتے ہیں کیونکہ یہ بھی ن لیگ کے ہی ہیں ۔الیکشن کے بعد ن لیگ کی صدارت کا بھی فیصلہ ہونا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں ایس کے نیازی نے کہا کہ اگر نواز شریف وزیراعظم ہاؤس میںآکر بیٹھتے ہیں تو اس سے کیا مسئلہ ۔اگر لوگ انہیں پسند وکرتے ہیں تو ہم اس بارے میں کیا کہہ سکتے ہیں ۔ایس کے نیازی نے کہا کہ ہم کسی کے حامی نہیں نیوٹرل صحافت کرتے ہیں ۔ایس کے نیازی نے کہا کہ ہمارے اخبارات اورچینل کو عوام میں بے حد پذیرائی حاصل ہے ۔یہ اللہ تعالیٰ کا کرم اورورکروں کی انتھک محنت کا نتیجہ ہے ۔میں لاہور میں جس دفتر ،ہوٹل اوردکان میں گیا وہاں پر روز نیوز کو چلتے ہوئے دیکھا ۔مجھے لوگوں کی جانب سے بے حد پذیرائی ملی ۔میں نے حلقے میں خاموش ووٹر سے بھی گفتگو کی ۔
مریم نواز