- الإعلانات -

مسجد، مندر ہر جگہ دہشت گردی ہوئی، نظام ٹھیک کام کرتا تو یہ دن نہ دیکھنا پڑتا، سپریم کورٹ

اسلام آباد:جسٹس دوست محمد خان نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب اور کوئی ذات نہیں ہوتی، دہشت گرد حملے مساجد، امام بارگاہ ، مندر چرچ سمیت ہر جگہ ہوئے ہیں، اگر نظام ٹھیک کام کرتا تو یہ دن نہ دیکھنا پڑتا لیکن مایوس نہیں ہونا چاہیے۔

سانحہ سول اسپتال کوئٹہ پرلیے گئے ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران جسٹس دوست محمد خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ انشا اللہ پاکستان قائم ودائم رہے گا۔ اگرہم متحدہ رہے تو بہت جلددہشت گردی کے خطرات بھی ٹل جائیں گے، دہشت گردوں کاکوئی مذہب اورکوئی ذات نہیں ہوتی، دہشت گرد حملے مساجد، امام بارگاہ ، مندر چرچ سمیت ہر جگہ ہوئے ہیں، اگر نظام ٹھیک کام کرتا تو یہ دن نہ دیکھنا پڑتا لیکن مایوس نہیں ہونا چاہیے۔

جسٹس دوست محمد کا کہنا تھاکہ بلوچستان میں وفاقی حکومت اور دوست ممالک کوسی پیک کے تحت ایک جدیداور عالمی معیارکا اسپتال بنانا چاہیے۔جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے کہا کہ سی پیک اربوں روپے کا منصوبہ ہے، ہزاروں لوگ اس میں شامل ہوں گے ان کے لیے بھی اسپتال ضروری ہے۔