- الإعلانات -

سبزیوں کی من مانی قیمت پر فروخت جاری

 کراچی:  پیاز، ٹماٹر ،لہسن ادرک سمیت سبزیوں کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ جاری ہے شہری انتظامیہ اور قرنطینہ ڈپارٹمنٹ بحران کو کوئی حل نہ نکال سکے جس کا خمیازہ صارفین کو بھگتنا پڑرہا ہے ٹماٹر اور پیاز کی قیمتوں کا بحران شدت اختیار کرگیا ہے لہسن ادرک اور سبزیاں بھی من مانی قیمتوں پر فروخت کی جارہی ہیں نذرونیاز کے لیے پیاز اور ٹماٹر کی طلب میں اضافہ ہوگیا ہے۔

جس کی وجہ سے شہر میں خوردہ سطح پر ٹماٹر 200 روپے جبکہ پیاز 80 سے 100روپے کلو فروخت کی جارہی ہے، لہسن اور ادرک کی قیمت 260 روپے فی کلو تک پہنچ گئی ہے ہری مرچ 180روپے کلو لیموں 200 روپے کلو فروخت ہونے لگی، بیوپاریوں اور درآمد کنندگان کے مطابق بھارت سے ٹماٹر اور پیاز درآمد کیا جائے تو قیمت 35 سے 40 روپے کی سطح پر لائی جاسکتی ہے تاہم قرنطینہ ڈپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر جنرل ایران سے ٹماٹر اور پیاز کی درآمد کو ترجیح دے رہے ہیں ایران کے راستے آذربائیجان کی پیاز کراچی کی منڈی میں فروخت کی جارہی ہے۔

بیوپاریوں اور درآمد کنندگان نے وفاقی حکومت سے اپیل کی ہے کہ عاشورہ کے تناظر میں بھارت سے پیازاور ٹماٹر کی محدود درآمد کی فوری اجازت دی جائے درآمد کنندگان کے مطابق ڈائریکٹر جنرل قرنطینہ ڈپارٹمنٹ کی ضد کی وجہ سے دبئی کے ذریعے درآمد کی جانے والی مصر کی پیاز کے5 کنٹینرز کراچی کی بندرگاہ پر پہنچ کر ضایع ہوچکے ہیں یہ کنٹینرز دو ہفتے قبل درآمد کیے گئے تھے جنھیں قواعد کے مطابق معمولی جرمانے کے بعد کلیئر کیا جاسکتا تھا تاہم قرنطینہ ڈپارٹمنٹ کی ناقص پالیسی کی وجہ سے یہ پیاز بروقت کراچی کے بازاروں میں نہ پہنچ سکی جس سے ایک جانب درآمد کنندگان کو بھاری نقصان کا سامنا کرنا پڑا وہیں صارفین کو بھی مہنگے داموں پیاز خریدنا پڑرہی ہے قرنطینہ ڈپارٹمنٹ کی امتیازی اور ناقص حکمت عملی کی وجہ سے طلب پوری کرنے کے لیے مہنگے ایرانی ٹماٹر بلوچستان کے راستے کراچی کی منڈی میں فروخت ہورہے ہیں۔