- الإعلانات -

سینیٹ کمیٹی میں ایک ہزار مشکوک ٹرانزیکشنز کا انکشاف

اسلام آباد:سینیٹ قائمہ کمیٹی خزانہ کے اجلاس میں فنانشنل مانیٹری یونٹ کے حکام نے ملک میں ایک ہزارسے زائد مشکوک ٹرانزیکشنز کا انکشاف کیا ہے۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کا اجلاس سلیم مانڈوی والا کی زیرصدارت ہوا، جس میں فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کے حکام کی جانب سے ایگمونٹ گروپ کی ممبرشپ کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔فنانشل مانیٹرنگ یونٹ کے حکام نے بتایاکہ ملک میں ایک ہزار سے زائد مشکوک ٹرانزیکشنز کے کیسز کونیب، اسٹیٹ بینک،ایف آئی اے ایف بی آر کوبھجوایا گیا۔

اجلاس میں پاکستان کی ایگمونٹ گروپ (Egmont) میں ممبر شپ کے حوالے سے معاملے کاتفصیل سے جائزہ لیاگیا، ڈائریکٹر ایف ایم یونے کمیٹی کو بتایا کہ ایگمونٹ گروپ کے 156ممبران ہیں۔ پاکستان نے2012ء میں ممبرشپ کیلیے درخواست دی تھی۔ کچھ قانونی مسائل تھے جن کوحل کیا جارہا ہے،ممبرشپ کیلیے 2ممبرممالک اسپانسرکرتے ہیں۔ امریکا اور جاپان نے پاکستان کو اسپانسر کرنا ہے۔ ممبر شپ کیلیے دوبارہ درخواست دید ی گئی۔ اگلے سال تک ممبر شپ مل جائیگی۔جس پر چیئرمین کمیٹی نے کہا کہ اگرکہیں مسائل کا سامنا ہے تو کمیٹی مدد کرنے کو تیار ہے۔