- الإعلانات -

جوہری تنازع، شمالی کوریا نے امریکا سے دوبارہ مذاکرات کیلئے ہامی بھرلی

سیئول: شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان نے امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ساتھ دوسرے مذاکراتی دور کے لیے ہامی بھرلی۔

واضح رہے کہ مذکورہ فیصلہ ایسے وقت پر سامنے آیا ہے جب امریکی سفیر نے پیانگ یانگ میں شمالی کوریا کے رہنما سے جوہری تنصیب کے خاتمے سے متعلق ’معنیٰ خیز‘ ملاقات کی۔

فرانسیسی خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق امریکی سیکریٹری اسٹیٹ مائیک پومپیو نے اتوار کی صبح کم جونگ ان سے دو گھنٹے کی ملاقات کی تھی۔

مائیک پومپیو نے کہا کہ ’کم جونگ ان نے امریکا-شمالی کوریا سمٹ پر جلدازجلد آمادگی کا اظہار کیا ہے‘۔

شمالی کوریا کے صدارتی افس سے جاری اعلامیہ میں سمٹ سے متعلق وقت اور مقام کے بارے میں کچھ نہیں کہا گیا۔

مائیک پومپیو کی شمالی کوریا کے رہنما سے ملاقات کے متعلق امریکی اعلامیہ میں کہا گیا کہ مائیک پومپیو اور کم جونگ ان نے شمالی کوریا کو جوہری تنصیبات سے پاک کرنے اور اس مسئلے پر امریکی حکومت کے کردار پر بات چیت کی‘۔

واضح رہے کہ مذکورہ دورہ مائیک پومپیو کا چوتھا دورہ تھا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کوریا کے رہنما سے جون میں سنگاپور میں ملاقات کی تھی تاہم ناقدین کا کہنا تھا کہ مذکورہ ملاقات رسمی تھی۔

دوسری جانب مائیک پومپیو نے ٹوئٹ کیا کہ ’مجھے اور میری ٹیم کی میزبانی کے لیے شکریہ ‘۔

کم جونگ ان نے مائیک پومیپو سے ملاقات کو ’اچھی ملاقات‘ قراردیا اور کہا کہ ’دونوں ملکوں کے درمیان اچھے دن کے ساتھ اچھے مستقبل کے وعدے ہوئے‘۔