81

سلیکٹڈ کو خواب میں نظر آتا ہے کہ اسے سندھ حکومت مل رہی ہے، بلاول

کراچی: پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ سلیکٹڈ کو خواب میں نظر آتا ہے کہ اسے سندھ حکومت مل رہی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے سندھ کے جنرل ورکرز اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے 27 دسمبر کو اسی مقام پرجلسہ رکھا ہے جس شہر میں شہید ذوالفقارعلی بھٹو اوربے نظیربھٹو کو شہید کیا گیا، پیپلزپارٹی کوختم کرنے کی بہت کوشش کی گئی مگر پارٹی ختم نہ ہوئی ہم پھرروالپنڈی آرہے ہیں، پیپلزپارٹی کا ہرکارکن اوراس ملک کے عوام بھٹو کے نقش قدم پر چل کر اپنی منزل پرپہنچیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے ضیاء اور مشرف آمریت کا مقابلہ کیا، سلیکٹڈ حکمرانوں کا بھی مقابلہ کریں گے ہم 27 دسمبرکوراولپنڈی آرہے ہیں، ملک گیر تحریک کے لیے عوامی پالیسی کا اعلان کریں گے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہم آج یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ پیپلز پارٹی کو سلیکٹیڈ حکمران اور سلیکٹر دونوں قبول نہیں، جب سازش کرکے حکومتیں بٹھائی جاتی ہیں تو وہ عوام کا سوچنے کی بجائے اپنے سلیکٹر کے مفادات کا تحفظ کرتے ہیں، آج عوامی اورمنتخب حکومت ہوتی تو کبھی غریب کا معاشی قتل نہ ہوتا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ 27 دسمبر کو راولپنڈی میں عوامی پالیسی کا اعلان کریں گے، پنجاب کے بعد بلوچستان اور خیبر پختون خوا جائیں گے، رائے عامہ بیدار کرنے کے لیے پیپلزپارٹی 27 دسمبر کے بعد ملک گیر مہم چلائے گی، مجھے یقین ہے لوگ شہید بے نظیربھٹو کی طرح میرا ساتھ دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کی رہائی خوشی کی خبر ہے وہ کراچی میں رہیں گے، ہم ان کا علاج کراچی میں ہی کرائیں گے، ہمارے خلاف سندھ میں ہر دو گھنٹے بعد سازش کی جاتی ہے، سلیکٹڈ کو خواب میں نظر آتا ہے کہ اسے سندھ حکومت مل رہی ہے، یہ چاہتے ہیں کہ جس طرح باقی صوبوں میں کٹھ پتلی وزیراعلیٰ ہیں سندھ میں بھی کٹھ پتلی وزیراعلیٰ ہو اورسندھ کا کٹھ پتلی وزیراعلیٰ عمران نیازی کے اشاروں پرچلے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں