Home » کالم » مہاتیرمحمدکی پاکستان آمد۔۔۔دونوں ممالک کے مابین مختلف معاہدوں پردستخط
adaria

مہاتیرمحمدکی پاکستان آمد۔۔۔دونوں ممالک کے مابین مختلف معاہدوں پردستخط

adaria

یوم پاکستان کی تقریب کے مہمان خصوصی کے طورپرملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیرمحمد تشریف لے کرآئے ،وہ تین روزہ دورے پر پاکستان آئے ہیں اس دوران پاکستان اورملائیشیا کے درمیان بہت سارے معاہدوں پردستخط بھی ہوئے اور دوست ملک نے جے ایف 17تھنڈرمیں خصوصی طورپردلچسپی کااظہارکیا۔ نیز ٹینک شکن میزائل خریدنے میں بھی دلچسپی ظاہر کی۔سرمایہ کاری کے حوالے سے ملائیشیاپاکستان پہلاکارپلانٹ بھی لگائے گا اس موقع پردونوں ممالک کے ہم منصب سربراہان نے مشترکہ پریس کانفرنس بھی جس میں اس بات کااظہارکیاگیاکہ اسلاموفوبیا کوجان بوجھ کرپھیلایاگیا اس کامقابلہ محبت سے کرناہوگا۔ پاکستان نے ملائیشیا کے ساتھ پاکستان میں کار پلانٹ لگانے سمیت 5بڑے منصوبوں کی مفاہمتی یاد داشتوں پر دستخط کئے ہیں۔ ملائیشیا نے جے ایف 17 تھنڈر طیاروں اور ٹینک شکن میزائلوں کی خریداری میں بھی دلچسپی ظاہر کی ۔ وزیراعظم عمران خان اور ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کی مشترکہ پریس کانفرنس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے۔ ملائیشیا پاکستان سے حلال گوشت اور چاول خریدنے میں دلچسپی رکھتا ہے۔ دونوں ممالک کے مابین بینکوں کی شاخیں کھولنے پر بھی اتفاق ہوا فریقین نے مختلف شعبوں میں لاکھوں ملین ڈالرز کے کاروبار اور سرمایہ کاری پر اتفاق کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے ملائیشیا کے وزیراعظم کو بھارت کے ساتھ حالیہ کشیدگی اور پاکستان کی خطے میں امن و استحکام کی خواہش کے بارے میں بھی بتایا۔اس موقع پر ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے کہا کہ انتہا پسندی کے خاتمہ کیلئے کوششیں کرنا ہوں گی، ہم غریب نہیں ہوتے کرپشن ہمیں غریب کر دیتی ہے، پاکستان کرپشن روکنے کیلئے ملائیشیا کے تجربات سے استفادہ کر سکتا ہے، دونوں وزرا اعظم کے درمیان تنہائی میں ملاقات ہوئی اور وفود کے سطح پر مذاکرات ہوئے۔ اس سے قبل مہاتیر محمد جب پی ایم ہاؤس پہنچے تو ان کا استقبال وزیر اعظم عمران خان نے کیا، معزز مہمان کو مسلح افواج کے دستے نے گارڈ آف آنر پیش کیا، دوطرفہ مذاکرات کے بعد دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون کے پانچ سمجھوتوں پر دستخط کئے گئے۔ ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے کہاکہ میں پاکستان اور ملائیشیا کی طویل دوستی میں نئے دور آنے پر بہت خوش ہوں، یوم پاکستان کی تقریب میں شرکت کرنا باعث اعزاز ہے جبکہ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ اسلامو فوبیا کے نتیجے میں مسلمانوں کی جدوجہد کو نقصان پہنچایا گیا اور کرائسٹ چرچ کا واقعہ بھی اسلامو فوبیا کا نتیجہ ہے۔ملائیشیا مسلم دنیا کیلئے ماڈل کے طور پر ابھرا اور اس نے مسلم دنیا کے معاملات کو حل کرنے کیلئے کردار ادا کیا۔ دہشت گردی نے اسلامی ممالک کو بہت متاثر کیا جبکہ دنیا بھر میں جان بوجھ کر اسلامو فوبیا کی ترغیب دی گئی۔ ملک کیلئے امن و استحکام ضروری ہے، ورنہ کوئی سرمایہ کاری نہیں کرے گا، ہمارے سب سے اچھے تعلقات ہیں سوائے اسرائیل کے۔ اسرائیل سے ہم نے کسی بھی قسم کا کوئی بھی تعلق نہیں رکھا۔ ڈاکٹر مہاتیر محمد نے پاکستان اور ملائیشیا کے درمیان سرمایہ کاری بڑھانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں امن و استحکام کے بغیر کوئی بھی سرمایہ کاری نہیں کرے گا۔ ملائیشین وزیراعظم نے کہا کہ ہمارے وزرا پھولوں کے سوا کوئی تحفہ قبول نہیں کرتے۔ ملائیشیا میں 500 ڈالر سے زیادہ تحفہ کرپشن کے زمرے میں آتا ہے۔ ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے وزیراعظم پاکستان کو ملائیشین کارکی چابی پیش کی اور تقریب میں پاکستان میں کار پلانٹ لگانے کا اعلان بھی کیا۔ ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد کو ایوان صدر میں تقریب کے دوران نشان پاکستان ایوارڈ سے نوازا گیا۔

او آئی سی نے نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کے اقدامات کو سراہا

نیوزی لینڈ کے سانحہ کرائسٹ چرچ میں پچاس مسلمانوں کی شہادت کے بعدوہاں کی وزیراعظم نے انتہائی اہم اقدامات اٹھائے جس میں خطرناک اسلحہ پرپابندی، مسلمانوں کے ساتھ اظہاریکجہتی ، نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ کاآغازتلاوت کلام پاک سے ہونا اور پھر خصوصی طورپرنیوزی لینڈ کی فضا اللہ اکبر سے گونج اٹھی جبکہ مسجد النور کے سامنے نمازِ جمعہ کے اجتماع میں وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کے علاوہ ہزاروں غیر مسلم افراد نے بھی شرکت کی،خطبے میں امام کا کہناتھاکہ ہم دل شکستہ ضرورلیکن حوصلے نہیں ٹوٹے، ہم سب متحد ہیں، نماز جمع سے قبل وزیر اعظم نے تقریر کا آغاز آنحضرت ﷺ کے ذکرسے کیا ، مسلمانوں کے ساتھ ساتھ غیر مسلم خواتین بھی حجاب میں نظر آئیں جبکہ مسلمانوں سے اظہار یکجہتی میں پورے ملک میں 2منٹ کی خاموشی بھی کی گئی ۔ اذان سے قبل جیسنڈا آرڈرن نے مسلمانوں کے نام ایک مختصر خطاب کیا ۔ انہوں نے مسلمانوں سے اظہارِ یکجہتی کرتے ہوئے کہا کہ نیوزی لینڈ آپ کے ساتھ سوگوار ہے، ہم ایک ہی ہیں۔اسلامو فوبیا ایک قاتل حقیقت ہے جس کا درد مسلمان کئی برسوں سے محسوس کررہے ہیں۔ نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کے یہ انتہائی احسن اورقابل تقلیداقدام ہیں دیگرممالک کو بھی ان پرعمل کرنے کی ضرورت ہے۔دوسری جانب اوآئی سی کے چھ نکاتی اعلامیے میں پاکستان کے چارنکات بھی شامل ہیں ،او آئی سی نے کہاکہ اسلا مو فوبیاپھیلانے والوں کو دہشت گرد قراردیاجائے ، سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کی طرف سے نفرت اورجرم پرمبنی تقریر روکنے کیلئے نظام وضع کرنے کی حمایت کی جائے۔بھارت جو نام نہاد جمہوریت کادعویدار ہے اسے بھی ہدف تنقیدبنایاگیا نیز پاکستان کی جانب سے پیش کردہ چارنکات کو بے حد پذیرائی ملی۔او آئی سی نے نیوزی لینڈ کی وزیراعظم کے اقدامات کو سراہاہے۔
یوم پاکستان کے موقع پرمودی کی ٹوئیٹ کامثبت جواب
23مارچ کے موقع پر بھارتی وزیراعظم نریندرمودی نے یوم پاکستان پروزیراعظم عمران خان کے نام نیک خوہشات کا پیغام بھیجا ہے ،اپنے ٹویٹ میں وزیر اعظم مودی کا پیغام شیئر کیا جس میں بھارتی وزیر اعظم نے پاکستان کے عوام کو یوم پاکستان کی مبارک باد دی اور نیک تمناؤں کا اظہاکیا۔دریں اثنا وزیر اعظم عمران خان نے اپنے جوبی ٹویٹ میں کہا ہے کہ وہ وزیر اعظم مودی کی طرف سے پاکستانی عوام کے نام پیغام کا خیر مقدم کرتے ہیں ،جیساکہ ہم پوم پاکستان منا رہے ہیں ،میںیقین رکھتا ہوں کہ وقت آگیا ہے کہ مسئلہ کشمیر جو مرکزی تنازعہ ہے سمیت تمام ایشوز کو حل کیلئے بھارت کے ساتھ جامع بات چیت شروع کی جائے۔وزیراعظم پاکستان نے ہمیشہ کی طرح فوری طورپر بھارت کو مثبت انداز میں جواب دیا۔اب مودی کوچاہیے کہ وہ اپنی ٹوئیٹ پرقائم رہتے ہوئے امن کی جانب مزیدآگے بڑھے۔
کراچی میں ٹارگٹ کلنگ،مولاناتقی عثمانی بال بال بچ گئے
شہرقائدایک مرتبہ پھردہشت گردی اورٹارگٹ کلنگ کے نرغے میں آگیاہے ۔گزشتہ روزکراچی کے علاقے گلشن اقبال میں ممتاز عالم دین مولانا تقی عثمانی اور مولانا عامر شہاب کی گاڑیوں پر فائرنگ کے نتیجے میں 2 محافظ جاں بحق ہوگئے ہیں۔ نیپا پل کے قریب موٹر سائیکل پر سوار نامعلوم ملزمان نے دارالعلوم کورنگی کی گاڑی پر اندھا دھند فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک شخص جاں بحق جبکہ دارالعلوم کورنگی کے مولانا شہاب زخمی ہوگئے جبکہ مولاناتقی عثمانی کواللہ تعالیٰ نے بال بال بچالیا۔وزیراعظم عمران خان نے مفتی محمد تقی عثمانی پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ۔

About Admin

Google Analytics Alternative