وزیراعظم کاگیس اوربجلی کی قیمتیں نہ بڑھانے کاخوش آئنداعلان

32

عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی یقینی طورپرپاکستان کے لئے ایک رحمت ثابت ہورہی ہے اس سلسلے میں وزیراعظم کے معاون خصوصی بابرندیم نے بھی کہاکہ اس سے پاکستان کی معیشت مضبوط ہوگی، نیز وزیراعظم نے دوسوڈھائی گھنٹے تک اجلاس کی صدارت بھی کی جس میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں زیربحث آئیں ۔ اس وقت تیل کی قیمتیں 29 سال کی کم ترین سطح پر آگئی ہیں ۔ سعودی عرب کی قیادت میں تیل پیدا کرنے والے 14 ممالک نے روس سے خام تیل کی پیداوار میں کمی کا مطالبہ کیا تھا تاکہ تیل کی قیمتیں برقرار رکھی جاسکیں ۔ تاہم روس کے انکار کے بعد سعودی عرب نے اپریل میں ایشیاکو فروخت کیے جانےوالے تیل کی قیمتوں میں 4سے6ڈالرز فی بیرل جبکہ امریکا کیلئے7ڈالرز فی بیرل کمی کردی ۔ اس کے ساتھ ساتھ روس کی تیل کی سب سے بڑی مارکیٹ یورپ کیلئے بھی خام تیل کی قیمتوں میں کمی کردی ہے ۔ ممکنہ امکانات یہ ہیں کہ یہ قیمتیں مزیدنیچے گریں گی مگرسوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ آیا اس کاثمر عوام تک پہنچ پارہاہے تو اس کاجواب مثبت نظرنہیں آتا ۔ اگر حکومت بیس سے تیس روپے بھی پٹرول سستا کردے تو عوام کو بہت زیادہ ریلیف مل سکتاہے ۔ تحریک انصاف کی حکومت کو اللہ تعالیٰ نے یہ ایک ایساسنہری موقع دیاہے جس سے وہ معیشت کو مضبوطی کی جانب گامزن کرسکتی ہے ۔ ان ہی تمام حالات کوپیش نظررکھتے ہوئے عمران خان نے مہمند میں احساس کفالت پروگرام کے سلسلے میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اب ہم بجلی اور گیس کی قیمتیں مزید نہیں بڑھائیں گے اورہروہ اقدام اٹھائیں گے جس سے عوام کوریلیف ملے کیونکہ عوام مزیدمہنگائی کوبرداشت نہیں کرسکتے ۔ یہ ایک خوش آئنداعلان ہے مگر عمل کرنابھی بہت ضروری ہے ۔ ایک طر ف حالات مثبت انداز میں آگے بڑھ رہے ہیں دوسری جانب سٹاک مارکیٹ بھی کریش ہوتی ہوئی نظرآرہی ہے جس میں سرمایہ کاروں کے اربوں روپے ڈوب گئے ہیں ڈالرکی پروازبھی دوبارہ سے بلندی کی جانب گامزن ہے ان چیزوں کو بھی مدنظررکھنے کی ضرورت ہے ۔ معیشت کاپہیہ تب ہی مضبوط ہوسکتاہے جب روپے کی قدر میں اضافہ ہو سٹاک مارکیٹ مضبوط ہو ،گیس بجلی سستی ہو، عوام کو روزگار کے مواقع ملیں ،ملک میں صنعتیں لگائی جائیں ۔ اب یہ موقع ہے دیکھنا یہ ہے کپتان ان چیزوں کولیکرکس طرح آگے چلتے ہیں کیونکہ دوسری جانب چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ زبیرگیلانی بھی کچھ مبینہ وجوہات کی وجہ سے مستعفی ہوگئے ہیں تاہم وزیراعظم کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ وہ ذاتی وجوہات کی بناء پرمستعفی ہوئے ہیں ۔ چیئرمین ایف بی آرشبرزیدی جس کی صحت خراب ہے ان کے حوالے سے بھی حکومت واضح طورپربتائے گی ۔ مثبت خبروں کے ساتھ ساتھ ان خبروں پربھی توجہ دینے کی ضرورت ہے اگرکسی کے کوئی تحفظات ہیں تو انہیں دورکرناچاہیے ۔ اب یہ واضح نظرآرہاہے کہ حکومت عوام کو ریلیف دینے کے منصوبے پرعمل پیرا ہونے جارہی ہے اسی وجہ سے وزیراعظم نے مہمند میں خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہماری حکومت نے ملکی نظام ٹھیک کرنا شروع کر دیا ہے، مشکل وقت سے گزر آئے ہیں ، اب اچھا وقت آئے گا، مہنگائی پر قابو پا لیا ہے ذخیرہ اندوزی کرکے پیسہ کمانے والوں کو نہیں چھوڑوں گا،عوام مزیدبوجھ برداشت نہیں کرسکتے کچھ بھی ہو جائے بجلی گیس کی قیمت بڑھنے نہیں دیں گے بلکہ کم کریں گے ۔ بجلی اور گیس مہنگی ہونے سے عوام کو جو مشکلات درپیش ہیں ان کا ادراک ہے ۔ بجلی اور گیس کی قیمتیں اس لئے زیادہ ہیں کیونکہ پچھلی حکومتوں نے جو معاہدے کئے ہیں ہم ان کا خمیازہ بھگت رہے ہیں ۔ سابق حکومت نے باہرسے گیس منگوانے کا 15 سال کا معاہدہ کیا اور گیس کی جو قیمت طے کی اس سے 30 فیصد سستی گیس آج دستیاب ہے لیکن ہم مہنگی گیس خریدنے پر مجبور ہیں کیونکہ سابق حکومت نے یہ معاہدہ کیا تھا ۔ ملک اس وقت غریب ہوتے ہیں جب حکمران ملک کا پیسہ چوری کر کے باہر لے جائیں ۔

ٹانک میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی

متعلقہ خبریں

پاک فوج جوکہ ہمیشہ ہماری سرحدو ں کی محافظ، امن وامان اورملکی استحکام کی ضامن رہی ، انہوں نے اس سرزمین کواپنے لہوسے سینچا،دہشت گردوں کی بیخ کنی کی ،امن وامان قائم کیا اس کی واضح مثالیں آپریشن ردالفساد اورضرب عضب ہیں ، ٹانک میں ہونے والی دہشت گردی میں بھی پاک فوج نے جس جرات اوربہادری کامظاہرہ کیا صدرمملکت اوروزیراعظم نے اسے لائق تحسین قراردیتے ہوئے کہاکہ پاک فوج ہماری انتہائی پروفیشنل فوج ہے اوراس نے ہمیشہ اپنی جانوں کے نذرانے دیکرملکی استحکام کومضبوط کیا ۔ کچھ ملک دشمن عناصر جوکہ مذموم عزائم کوپایہ تکمیل تک پہنچاناچاہتے ہیں اوربچے کھچے دہشت گرد کوئی نہ کوئی موقع پاکرایسی کارروائی کرتے ہیں ان کے خاتمے کے لئے بھی پاک فوج ہمہ تن گوش ہے بین الاقوامی سطح پراس وقت پاکستان امن کے داعی اورپرامن ملک کے طور پر ابھرکرسامنے آرہاہے ۔ پی ایس ایل کے ہونے والے میچ اس بات کی غمازی کرتی ہے کہ دنیا نے پاکستان میں قیام امن کوتسلیم کرلیاہے اورپاکستان کی کی جانے والی کاوشوں کو نہ صرف سراہا جارہاہے بلکہ اس کی دی ہوئی تجاویزپرعملدرآمدکرکے مثبت نتاءج بھی حاصل کئے جارہے ہیں ۔ دہشت گردی کاواقعہ جو کہ ٹانک میں ہوا اس میں دودہشت گرد مارے گئے ان کے قبضے سے بھاری مقدار میں اسلحہ بارود بھی برآمدکرلیاگیا ۔ جبکہ کرنل مجیب الرحمان نے اس وطن کی خاطر اپنی قیمتی جان نچھاورکردی ۔ جب پاک فوج دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کررہی تھی تودہشت گردوں نے آگے سے فائرنگ شروع کردی جوابی کارروائی کے دوران دہشت گردوں کو ٹھکانے لگادیاگیا، علاقے میں مزیدآپریشن بھی جاری ہے ۔ یہ بات بالکل واضح ہے کہ حکومت اورپاک فوج نے یہ فیصلہ کرلیاہے کہ دہشت گرد جہاں پربھی ہوں گے انہیں کسی قیمت پرنہیں چھوڑاجائے گا ۔

شہراقتدار میں پینے کے صاف پانی کا سنگین مسئلہ;238;

صاف پانی کی فراہمی سب سے بنیادی مسئلہ ہے اگروفاقی دارالحکومت میں یہ مسئلہ درپیش ہے تو ملک کے دوردرازعلاقوں کی کیاحالت ہوگی اندرون سندھ ،اندرون پنجاب میں دیکھاجائے تو یہ مسئلہ بہت گھمبیرصورتحال میں درپیش ہے ۔ سی ڈی اے کی غفلت کے باعث باسیوں کو گزشتہ کئی ماہ سے مضرصحت اور گندہ پانی پلائے جانے کا انکشاف ہواہے ۔ سملی ڈیم ، سیدپور،گالف کورس واٹر ورکس اور شاہدرہ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ پر پانی کی صفائی کےلئے درکار کیمیکل ایلم سلفیٹ اورکلورین کے اسٹاک کے ختم ہوجانے کے باعث گزشتہ کئی ماہ سے مضر صحت پانی سپلائی کیاجارہاہے ۔ اس وقت کارپوریشن مذکورہ کیمیکل فراہم کرنے والی کمپنی کی 2کروڑ روپے سے زیادہ کی دھندہ ہے اور مذکورہ کمپنی نے مزید ادھار ایلم سلفیٹ اور کلورین کی فراہمی سے صاف انکار کردیاہے جس کے بعد گزشتہ روز ایک مرتبہ پھر ڈپٹی ڈائریکٹر ڈبلیو کیو سی سی اور واٹر ڈائریکٹوریٹ کی جانب سے ایک مراسلہ سی ڈی اے اور کارپوریشن انتظامیہ کو جاری کیاگیا سملی ڈیم سے شہریو ں کو مضر صحت پانی فراہم ہورہاہے جوکہ بہت سی مہلک امراض کا سبب بن سکتاہے،اس گندے پانی سے شہریوں میں پانی کے باعث پیدا ہونے والے امراض میں بھی اضافہ ہورہاہے ،اس سے قبل بھی متعدد احکامات جات جاری کئے جاچکے ہیں مگر افسوس کہ متعلقہ ادارے اس اہم ترین ایشو پر کوئی توجہ نہیں دے رہے ہیں ۔ اس سلسلے میں ترجمان سی ڈی اے کا کہنا ہے کہ سی ڈی اے بنیادی ضروریات پر کبھی بھی کمپرومائز نہیں کرتا ۔ ایلم سلفیٹ کلورین اور برڈفورڈ کےلئے ایم سی ;200;ئی کو سی ڈی اے کی فنانس ونگ بطور لون فنڈ جاری کرتا رہتا ہے ۔ اس مد میں گزشتہ ہفتے کے دوران بھی فنڈ جاری کیے گئے ہیں ،مزید بر;200;ں ایم سی ;200;ئی نے حال ہی میں پانی کو صاف کرنےوالے کیمیکلز کےلئے فنڈز کی درخواست کی تھی جس کی منظوری کے بعد فنڈز کا اجرا کیا جاچکا ہے ۔