ٹرمپ انتخابی مہم پر ہیں وہ پاکستان کے ساتھ کبھی مخلص نہیں ہوسکتے عمران خان کی خارجہ پالیسی بہترین ہے ،پروگرام ”سچی بات” میں ایس کے نیازی کی گفتگو

144

گرفتاریوں کا اختیار عدالت کے پاس ہونا چاہیے ،چوہدری منظور ،مہنگائی ایک حقیقت ہے،کنٹرول کرنے کیلئے کوشاں ہیں،ترجمان پنجاب حکومت
ہمارا سیاسی نظام دراصل سیاسی کرونا وائر س ہے سابق وزیراعلیٰ بلوچستان،لیگل سسٹم نیب گرفتاریوں کو سپورٹس نہیں کررہا، بریگیڈئر(ر) فاروق

اسلام آباد(عزیر احمد خان )میری ذاتی رائے ہے کہ شاہد خاقان عباسی دلیر،ایماندار اور محنتی لیڈر ہیں ان پر کیس کیسا بنا،کیوںبنایہ اداروں کو دیکھنا چاہیے۔ان خیالات کااظہار پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کی چیف ایڈیٹر اور روز نیوز کے چیئر مین ایس کے نیازی نے پروگرام ”سچی بات” میں گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ اُنہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ نواز شریف واپس نہیں آئیں گے اور مریم نواز بھی چلی جائینگے۔ شاید حکومت بھی یہ چاہتی ہے کہ نواز شریف واپس نہ آئیں۔پروگرام کے دوران پیپلز پارٹی کے رہنماء چوہدری منظور نے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم پہلے دن سے کہہ رہے ہیں کہ نیب کی گرفتاری کا اختیار سمجھ سے بالاتر ہے ان کے پاس کوئی ثبوت ہو تو تب گرفتار کریں ،گرفتاری کا اختیار عدالت کے پاس ہونا چاہیے۔ اُنہوں نے کہا نیازی صاحب آپ درست کہتے ہیں کہ 10سال بعد اگر کوئی شخص باعزت بری ہوجاتا ہے تو پھر اُس کی عزت کہا رہتی ہے۔ ہم نے جب18ویں ترمیم بن رہی تھی تو ن لیگ کو کہا تھا کہ وہ اس حوالے سے قانون بنائیں لیکن اُنہیں اس وقت یہ بات سمجھ نہیں آئی وہ سمجھتے تھے کہ شائد اُنہیں کوئی گرفتار نہیں کر سکے گا۔اب حالات یہ ہیں کہ ن لیگ پیپلز پارٹی سمیت تمام اپوزیشن بھی مل جائے تو اس حوالے سے قانون سازی کی اکثریت ہمارے پاس نہیںہے۔ ایک سوال کے جواب میں اُنہوں نے کہا فی الحال حکومت کے حالات مشکل کاشکار ہیں قانونی عدالتی بحران کے ساتھ ساتھ اشیاء خوردونوش آٹا اور چینی کا بحران چھایا ہوا ہے حکومت نے ساری مشرف کی ٹیم ہے جیسا مشرف کے فیصلے ہوتے تھے وہی ہورہے ہیں۔ عدالتی بحران کے حوالے سے اُنہوں نے کہا کہ اس پر ہم کچھ نہیں بول سکتے اس موقع پر ایس کے نیازی نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سب کچھ اپنا ہی کیا دھرہ ہے جو آگے آرہا ہے جب بھی کوئی سیاستدان بااختیار ہوتا ہے تووہ عوامی فلاح وبہبود کیلئے کام نہیں کرتا اُنہوں نے کہا کہ عمران خان مخلصسیاستدان ہیں اس موقع پر پنجاب حکومت کی ترجمان مسرت جمشید نے نواز شریف کی ضمانت مسترد ہونے کے حوالے سے کئے گئے سوالات کے جواب میں کہا کہ پاکستان میں تو نواز شریف اتنے بیمار تھے کہ وہ چل پھر نہیں سکتے تھے پلیٹ لیٹس کے حوالے سے عجیب وغریب واقعات ہوئے ہیں سائنس بھی حیران ہے باہر جا کر وہ نہ ہسپتال داخل ہوئے اور نہ ہی ہمیں وہاں کے ڈاکٹروں کوئی تازہ ترین رپورٹ بھی دی گئی اگر ڈاکٹر عدنان نے ہی علاج کرنا تھا تو وہ یہاں بھی کرسکتے تھے اگر ملک میں قانون ہے تو اس پر عملداری ہونا چاہیے۔اُنہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف لند میں حوا اور کھاناخوری کررہے ہیں ہم عدالتوں سے بالا تر نہیں ہم نے دشمن کی بنیادوں پر کسی کے خلاف مقدمات نہیں بنائے بلکہ حقائق کی بنیادپر بنائیں ایک سوال کے جواب میں اُنہوں نے کہا ہماری کوشش ہے کہ فلاحی ریاست بنے عوام کو سہولیات پہچانے کیلئے کوشاں ہیں مہنگائی کے حوالے سے کئے گئے سوال کے جواب میں کہا کہ مہنگائی ایک حقیقت ہے اس کو کنٹرول کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔فیڈرل لاجز میں یوٹیلیٹی سٹورز کے حوالے سے اُنہوں نے کہا کہ وہاں پر موجود غریب ملازمین کیلئے یہ سٹورز بنائیں گئے ہیں۔بریگیڈئر (ر) فاروق نے ٹیلیفونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جن لوگوں کو نیب نے گرفتار کیا تھا وہ سارے کے سارے باہر آرہے ہیں نیازی صاحب پاکستان میں جو احتساب کی لہر چلی تھی وہ ختم ہوتی نظر آرہی ہے دیگر سسٹم نیب کی گرفتاری کو سپورٹ نہیں کررہا کرونا وائرس کے حوالے سے ایس کے نیازی نے کہا کہ وزیر صحت کو قوم کو اس حوالے سے بریفنگ دینا چاہیے عوام میں آگاہی ہونا چاہیے کرونا وائرس کی وجہ سے معیشت تباہ ہورہی ہے اس کو زیادہ زیر بحث نہیں لانا چاہیے۔ پاکستان خوش قسمت ملک ہے کہ ابھی تک اس میں کرونا وائرس نہیں پہنچا سابق وزیراعلیٰ بلوچستان علائوالدین نے ٹیلی فونک گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران کے ساتھ ہمارا 500کلومیٹر کا باڈر ہے وہاں پر کوئی ایسی باڑ نہیں جس سے باقاعدہ آمدورفعت کو روکا جاسکے سرحد بند کرنے سے مسئلہ حل نہیں ہوسکتا کیونکہ اس سے بیروزگاری بھی بڑھے گی۔ بارڈر کے آس پاس رہنے والے لوگوں کا واحد ذریعہ تجارت ہی ہے جب اسے بند کردینگے تو پھر مسائل کیونکر حل ہوسکیں گے۔بلوچستان میں پینے کا صاف پانی تو میسر نہیں تو پھر اتنے بڑے مسئلے سے کیسا نمٹا جاسکتا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ دراصل ہمارا سیاسی نظام ہی سیاسی کرونا وائرس ہے۔بھارت میں ٹرمپ کے دورے کے حوالے سے ایس کے نیازی نے کہا کہ ٹرمپ اپنی انتخابی مہم پر ہے وہ پاکستان کے ساتھ کبھی مخلص نہیں ہوسکتے عمران خان کی بہترین خارجہ پالیسی کی وجہ سے امریکا پاکستان کے حق میں بولنے پر مجبور ہوا سابق سفیر شاہد امین نے کہا کہ سوال یہ ہے کہ بھارت پر مسئلہ کشمیر کے حوالے سے بین الاقوامی برادری کوئی دبائو نہیں ڈال رہی بھارتی حکومت مسئلہ کشمیر کے سلسلے میں بہت سخت گیر ہے وہ کشمیر کو اپنا اٹوٹ انگ قرار دیتی جو قطحی طور پر غلط ہے اگر ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر بات کرتے ہیں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ اُنہوں نے بھارتی موقف کو مسترد کردیا۔ بھارت نے ہمیشہ پاکستان کو تنہا کرنے کی کوشش کی لیکن اُسے ہمیشہ ناکامی کا سامنا رہا بھارت میں ٹرمپ کا پاکستان کے حوالے سے بیان پاکستان کی بہت بڑی کامیابی اور بھارت کی ناکامی ہے وادی میں جو بھارت مظالم کررہا ہے اُن کو وہ کسی صورت بھی جواب نہیں دے سکتا مودی اس وقت اندرونی اور بیرونی دبائو کا شکار ہے دہلی میں ہنگامے پھوٹ پڑے ہیں نریندر مودی کی جڑیں کھوکھلی ہوتی جارہی ہیں۔ مودی نے جو دعوے کئے تھے وہ غلط ثابت ہورہے ہیں اور آئندہ الیکشن میں مودی کی شکست اس کا مقدر بنے گی۔
سچی بات