Home » کالم » پنجاب حکومت کا انسانیت دوست منصوبہ

پنجاب حکومت کا انسانیت دوست منصوبہ

ی ٹی آئی کی حکومت نے اقتدار سنبھالتے ہی عوامی فلاح و بہبود کے متعدد منصوبوں کا آغاز کیا ۔ صحت ، تعلیم ، بے گھر لوگوں کےلئے گھروں کا انتظام، فٹ پاتھ پر سونے والے غریبوں کےلئے شیلٹر ہومز ۔ غرض غریب عوام کو زندگی کی بہتر سہولیات مہیا کرنے میں مرکز کے ساتھ ساتھ پنجاب حکومت نے بہت سے اچھے اقدامات کئے ۔ عمران خان کا کہنا ہے کہ عثمان بزدار کواسی لئے پنجاب کا وزیر اعلیٰ بنایا ہے تاکہ جنوبی پنجاب کے محروم علاقوں کو ترقی یافتہ علاقوں کے برابر لایا جاسکے ۔ بانی پاکستان نے ایسی فلاحی اسلامی ریاست کا خواب دیکھا تھا جہاں تمام شہریوں کو رنگ;39; نسل;39; زبان اور صنف سے بالاتر ہوکر یکساں حقوق حاصل ہوں ۔ اسی لئے وزیراعظم عمران خان نے برسراقتدار آتے ہی کہا تھا کہ وہ بہت جلد ملک میں غربت کے خاتمے کیلئے ایک جامع پروگرام شروع کریں گے ۔ ان کے مطابق ملک میں غریب افراد کی تقدیر بدلنے کیلئے عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کام کرنے والی تمام تنظیموں کو یکجا کرنے کیلئے مربوط کوششوں کی ضرورت ہے ۔ پاکستان کو حقیقی معنوں میں ایک فلاحی ریاست بنانے کے اپنے عزم کا اظہار کرتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ لاہور میں بے گھر افراد کیلئے شیلٹر ہوم کا قیام اسی سمت میں ایک قدم ہے ۔ شیلٹر ہوم کی تعمیر کا مقصد ایسے لوگوں کی عزت نفس کو بحال کرنا ہے جو کھلے آسمان تلے رات گزارتے ہیں اور ریاست اور شہریوں کے ذریعے سماجی ذمہ داری کے حلقے کو وسیع کرنا ہے ۔ ان میں زیادہ تر وہ لوگ ہوتے ہیں جو محنت مزدوری کرنے چھوٹے شہروں اور دیہاتوں سے بڑے شہروں میں آتے ہیں مگر ان کے پاس رہائش کے لئے کوئی جگہ نہیں ہوتی ۔ اور اگر مزدوری نہ ملے تو دو وقت کھانے کےلئے پیسے بھی نہیں ہوتے ۔ یہ منصوبہ محفوظ مقامات پر قیام کے ذریعے مستحق افراد کی ضروریات بھی پوری کرے گا ۔ لہذا پنجاب حکومت نے صوبے کے ہر ضلع میں سڑکوں پر سونے والے افراد کیلئے پناہ گاہیں بنانے کا فیصلہ کیا ۔ ان پناہ گاہوں کی تعمیر سے بے گھر افراد کو شدید سردی، گرمی میں کھلے آسمان تلے نہیں سونا پڑے گا ۔ سڑکوں پر سونے والے افراد کو چھت اور کھانا فراہم کرکے ریاست اپنی ذمہ داری پوری کر رہی ہے اور انسانیت کی فلاح و خیر خواہی کیلئے خدمات سرانجام دینا حکومت کی ترجیحات میں اولین ہے ۔ گزشتہ روز لاہور میں ریلوے سٹیشن کے نزدیک تعمیر ہونے والی پناہ گاہ کے افتتاح پروزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا کہ 5 ماہ کی قلیل مدت میں داتا دربار‘ فروٹ مارکیٹ‘ ریلوے سٹیشن‘ لاری اڈا اور ٹھوکر نیاز بیگ میں قائم عارضی پناہ گاہوں میں 30 ہزار سے زائد افراد نے قیام کیا اور تقریباً ایک لاکھ مسافروں کو ناشتہ اور شام کا کھانا دیا گیا ۔ اگلے مالی سال میں تمام ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز اور اس سے اگلے مرحلے میں تمام اضلاع میں پناہ گاہیں قائم کرنے کا منصوبہ ہے ۔ اس کے علاوہ اگلے مالی سال میں لاہور کے6 بڑے ہسپتالوں میں مریضوں کے لواحقین کیلئے بھی پناہ گاہیں پوری طرح فنکشنل ہوں گی او ر ان شیلٹرز کی تعمیر مخیر حضرات اپنے وسائل سے کریں گے ۔ وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق پنجاب حکومت نادار لوگوں کیلئے قیام و طعام کے ایک اور وعدے کی تکمیل کی جانب قدم بڑھا رہی ہے جبکہ ماضی میں حکومتی سطح پر اس نوعیت کے منفرد ادارے کے قیام کی کوئی مثال نہیں ملتی ۔ وزیراعلیٰ کا کہنا ہے کہ پناہ گاہوں کے انتظام و انصرام کیلئے گوہر اعجاز کی سربراہی میں بورڈ آف گورنر تشکیل دیاجا چکا ہے جو پناہ گاہوں کے امور کا نگران ہوگا ۔ وزیراعلیٰ نے پناہ گاہوں کے قیام کیلئے تعاون کرنے والے مخیرحضرات کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں پورے یقین اور اعتماد سے کہہ سکتا ہوں کہ وہ وقت دور نہیں جب کوئی مزدور،کوئی مسافر کھلے آسمان تلے خالی پیٹ سونے پر مجبور نہیں ہوگاکیونکہ اب احساس کی دولت سے مالا مال لوگ اسے سنبھالنے کیلئے موجود ہو ں گے ۔ عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ معاشرے کے پسے ہوئے افراد کی مدد کرنا ہی صلہ رحمی ہے ۔ صلہ رحمی اور حسن سلوک معاشرے میں محبت اور بھائی چارے کو فروغ دینے کا موثر ذریعہ ہے اور اس سے انسانی زندگیوں میں آسانیاں پیدا ہوتی ہیں ۔ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر لاہور اور راولپنڈی میں سڑکوں پر سونے والے افراد کیلئے پناہ گاہوں کی تعمیر کا کام تیزی سے جاری ہے اور میں ذاتی طور پر پناہ گاہوں کے تعمیر کے منصوبے کی نگرانی کر رہا ہوں ۔ پہلے مرحلے میں پنجاب کے بڑے شہروں میں 12عوامی پناہ گاہوں کا قیام مکمل ہو چکا ہے جہاں ہر آنے والے کو رہائش اور شب بسری کی سہولیات کے ساتھ ساتھ رات کا کھانا اور صبح کا ناشتہ بھی دیا جائے گا ۔ بیماری کی صورت میں ابتدائی طبی امداد اور لانڈری و واش روم کی سہولت بھی مہیا کی گئی ہے ۔ پنجاب حکومت وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کی سربراہی میں عام آدمی کی فلاح و بہبود کی پالیسی پر عمل پیرا ہے ۔ معاشرے کے پسے ہوئے افراد کا خیال رکھنا حکومتی ذمہ داری بھی ہے اور فرض بھی اور ایسے افراد سے حسن سلوک اور صلہ رحمی کا درس دین اسلام بھی دیتا ہے ۔ پنجاب حکومت صلہ رحمی کو فروغ دینے کیلئے اقدامات کر رہی ہے اور پناہ گاہ جیسے فلاحی منصوبے بنانا اسی سلسلے کی کڑی ہے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ حکومت نے کھلے آسمان تلے سونے والے افراد کو چھت دی ہے، یہ ان لوگوں پر کوئی احسان نہیں بلکہ ان کا حق ہے،اللہ تعالیٰ نے بھی صلہ رحمی کا حکم دیا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان کی انقلابی سوچ سے رہنمائی لیتے ہو ئے عوام کی تقدیر بدلیں گے اور معاشرے کے پسے ہوئے افراد کو ان کا حق لوٹائیں گے ۔

About Admin

Google Analytics Alternative