- الإعلانات -

کورونا وائرس کے خلاف پورے ملک میں یکساں پالیسی ہونی چاہئے، سیاسی پوائنٹ سکورنگ نہیں قومی یکجہتی کی ضرورت ہے:سینیٹر شیری رحمان

)پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہےکے پوری دنیاکورونا وائرس کی لپیٹ میں آگئی ہے، اس وائرس کے خلاف پورے ملک میں یکساں پالیسی ہونی چاہئے،اس وقت سیاسی پوائنٹ سکورنگ کی نہیں قومی یکجہتی کی ضرورت ہے،ہم کو ایک ہی صفحے پر ہونا چاہئے، سب سے پہلے غیر مستحکم اورکم آمدنی والے خاندانوں کو بچائیں، ان تک امداد پہنچائیں،پہلے جانیں بچائیں اور اس بارے میں کوئی الجھن نہیں ہونی چاہئے۔شیری رحمان نے کہا کہ سندھ حکومت دوسرے صوبوں کو راشن، کھانا اور معاشی امداد وغیرہ کی شکل میں مدد فراہم کررہی ہے۔ بلاول ہاؤس میڈیا سیل میں شازیہ مری، راشدربانی اور وقار مہدی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئےسینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ لوگوں کی زندگیوں پر سیاست کرنا مناسب نہیں،اس وقت تیاری اور منصوبہ بندی کی ضرورت ہے اور یہ تب ہی ممکن ہے جب آپ کی پالیسی واضح ہو اور کوئی الجھن نہ ہو،ہمیں ایک دوسرے سے نہیں بلکہ اس وبائی بیماری سے لڑنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیر اعظم پر تنقید نہ کرنے کا فیصلہ کیا کیونکہ اب وقت ہے کہ ہم اس وبا کے خلاف متحد ہوجائیں،احتیاطی تدابیرکے باوجودکوروناوائرس بڑھ رہاہے،وفاق اورصوبوں کاایک جیسابیانیہ ہوناچاہیئے،ابھی وقت ہے کہ ایک ہو کر قوم کے لیے سوچیں  ۔ شیری رحمان نے کہا کہ سندھ حکومت اوروفاقی حکومت کی کارکرگی سب کومعلوم ہے، ہم اس وقت کسی پر تنقید نہیں کرنا چاہتے، اس وقت ہماری اولین ترجیح عوام اور جانیں بچانا ہے، اب تک کرونا وائرس کاعلاج بس سماجی دوری ہے،ہم سب کو ویکسین بننے تک سماجی دوری اختیار کرنی ہوگی۔  پریس کانفرنس میں سینیٹر شیری رحمان ن کے ساتھ شازیہ مری، راشدربانی اور وقار مہدی بھی ہمراہ تھے۔