کورونا وائرس سپین میں بھی چین سے زیادہ قیمتی جانوں کو نگل گیا ، ہلاکتوں میں ہوشربااضافہ

30

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اٹلی کے بعد اب اسپین میں بھی چین سے زیادہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ چین میں دسمبر 2019 سے 26 مارچ تک اس مہلک وائرس سے 3 ہزار291 مریض ہلاک ہوئے جب کہ متاثرین کی تعداد 81 ہزار726 ہے اور 74 ہزار 173 افراد صحت یاب ہوئے ہیں ۔

اٹلی میں کورونا وائرس سے ہونے والی ہلاکتیں چین کے مقابلے میں دگنی ہوگئی ہیں۔ 26 مارچ تک اٹلی میں اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں تعداد 7 ہزار 503تک جا پہنچی ہے جب کہ وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 74 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے اور حالات قابو سے باہر ہیں جبکہ اٹلی میں ابھی تک صرف 9 ہزار362 افراد صحت یاب ہونے کے بعد گھروں کو لو ٹ گئے ہیں

اٹلی کے بعد یورپ کے ایک اور ملک اسپین میں بھی کورونا وائرس نے بڑے پیمانے پر تباہی مچائی ہے اور تاحال اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 3 ہزار 647 ہوگئی ہے جو کہ کورونا وائرس کے مرکز چین سے بھی زیادہ ہے۔سپین میں گذشتہ 24 گھنٹے میں 738 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

چین، اٹلی اور اسپین کے بعد کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک ایران ہے جہاں ہلاکتوں کی تعداد 2 ہزار 77 ہوگئی ہے۔ ہلاک ہونے والوں میں اراکین پارلیمنٹ، مذہبی رہنما اور اعلٰی حکومتی حکام بھی شامل ہیں جب کہ 27 ہزار سے زائد افراد اس مہلک وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔واضح رہے کہ دنیا بھر میں کورونا وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد تقریباً 19 ہزار ہوگئی ہے جب کہ اس مہلک وائرس سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 4 لاکھ 23 ہزار 368 ہے۔