11 ہزار سے زائد مقدمات درج ہوئے لیکن صرف 436 افراد کو ہی سزائیں مل سکیں۔

6

الیکٹرانک و سائبر کرائم کے مقدمات کی رپورٹ کے

مطابق سائبر کرائم کے حوالے سے لاہور پہلے، راولپنڈی دوسرے اور پشاور تیسرے نمبر پر رہا۔لاہور کے 3ہزار 442 مقدمات میں سے 147، راولپنڈی کے 1228

مقدمات میں سے 59 اور پشاور کے 1188 میں 42 ملزمان کو سزائیں ہوئیں۔ کراچی کے 1 ہزار 174 مقدمات میں سے 27 مجرمان کو جیل بھیجا گیا۔ملک بھر میں 11028 مقدمات درج اور 436 افراد کو سزائیں ہوئیں جبکہ 793 مقدمات زیر التوا ہیں۔