Home » 2019 » March

Monthly Archives: March 2019

نوازشریف اور آصف زرداری قوم کا پیسہ واپس کریں ہم انہیں چھوڑ دیں گے، وزیراعظم

گھوٹکی: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ زرداری اور نوازشریف چاہے اکٹھے ہوجائیں پھر بھی انہیں نہیں چھوڑیں گے تاہم ان کے پاس ایک ہی راستہ ہے کہ قوم کا پیسہ واپس لوٹا دیں ہم انہیں چھوڑ دیں گے۔

گھوٹکی میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ قومیں غریب نہیں ہوتیں،کرپشن غریب اورمقروض کردیتی ہے، پاکستان ایشیا میں تیزی سےترقی کررہا تھا لیکن آج پاکستان کے بچے بچے پرقرضہ ہے، قرضوں کی قسطیں ادا کرنے کے لیے بھی قرضے لینے پڑ رہے ہیں، 2 ہزارارب روپے قرضوں کی قسطیں ادا کرنے میں لگ جاتے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ سندھ پاکستان کا سب سے خوشحال صوبہ ہونا چاہیے، سندھ کی زمین زرخیز ہے لیکن کیا وجہ ہے اندرون سندھ میں سارے پاکستان سے زیادہ غربت ہے، اندرون سندھ میں غربت کی ایک ہی وجہ ہے، وہ کرپشن ہے، ماضی میں بے دردی سے ملک کو مقروض کیا گیا، قوم کو مقروض کیا گیا، پیسا کہاں گیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ کراچی پاکستان کا معاشی حب ہے،سب سے زیادہ گیس سندھ سے نکلتی ہے اور 10 سال میں سندھ کو 237 ارب روپے گیس رائلٹی کی مد میں ملے اس میں سے گھوٹکی کوکتنا ملا، حالانکہ گھوٹکی میں گیس کے ڈھائی سوکنویں ہیں، سندھ کی 70 فیصد گیس یہاں سے ملتی ہے جب کہ سندھ میں پہلے شکار کرنے آیا کرتا تھا لیکن اب سیاست میں میرا شکارتبدیل ہوگیا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ 18ویں ترمیم کے بعد وفاق دیوالیہ ہوگیا ہے، اخراجات کے بعد وفاق 700 ارب روپے خسارے میں چلا جاتا ہے اور کرپشن کا پیسا جعلی اکاؤنٹس میں جاتا ہے، جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے منی لانڈرنگ کرکے پیسا بیرون ملک بھجوایا جاتا ہے، سندھ کی سیاسی خاتون کےدبئی میں پانچ گھرنکلے ہیں لیکن آج ڈرامہ ہورہا ہے کہ جمہوریت خطرے میں ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ احتساب ہورہا ہے تو ڈرامہ کیا جارہا ہے کہ جمہوریت خطرے میں پڑگئی، اور اپنی چوری بچانے کے لیے ٹرین مارچ کیا گیا، لوگوں کو 2،2 ہزارروپے کا کہہ کرٹرین مارچ میں بلایا گیا لیکن اس میں 200 روپے دے کرغریبوں کے ساتھ بھی دھوکا کیا گیا جب کہ چوری بچانے کے لیے نوازشریف اورزرداری اکٹھے ہوگئے ہیں، زرداری اور نوازشریف چاہے اکٹھے ہوجائیں پھر بھی انہیں نہیں چھوڑیں گے تاہم  نوازشریف اور آصف زرداری قوم کا پیسہ واپس کریں ہم انہیں چھوڑ دیں گے۔

عمران خان کی سیاست نیب سے شروع ہوکر نیب پر ختم ہوتی ہے، بلاول بھٹو زرداری

لاڑکانہ: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ عمران خان کی سیاست میں نیب کا اہم کردار ہے، ان کی سیاست نیب سے شروع ہوکر نیب پر ختم ہوتی ہے۔

لاڑکانہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ نیب کالا قانون ہے، جو صرف سیاسی انتقام بنانے کے لئے ہے، عمران خان کی سیاست میں نیب کا اہم کردار ہے، اور ان کی سیاست نیب سے شروع ہو کر نیب پر ہی ختم ہو جاتی ہے۔ وزیراعظم صرف سیاسی لوگوں کو احتساب کا نشانہ بنا رہے ہیں، ایک وفاقی وزیر کے خلاف ناجائز اثاثوں کے ثبوت ہیں وہ انہیں کب پکڑیں گے، احتساب کا عمل، سیاستدان، جج اور جرنیل سب کے لئے ایک ہونا چاہئے۔

پیپلزپارٹی کے چیئرمین نے کہا کہ عمران خان کے ساتھ جو لوگ  بیٹھے ہیں وہ آئین کے مخالف ہیں، دہشت گردوں کے سہولت کار وفاقی وزیر بن گئے ہیں، کالعدم تنظیموں کے ساتھ تعلق پر وزرا کو ہٹانےکے بجائے ایک اور سہولت کار وزیر بنا دیا گیا، نئے وزیر کا نام بے نظیر شہید کے قتل میں ہے، ملک کے مستقبل کیلئے کالعدم تنظیموں اور دہشتگردوں کیخلاف کارروائی کرنی پڑے گی۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ عوام ان لوگوں کی شکلیں پہچانیں، وسائل اور ادارے عوام کے ہیں اور حکمران ان سے چھیننا چاہتے ہیں،  پنجاب، بلوچستان، سندھ سب کو کہہ رہا ہوں کہ یہ صوبوں کے وسائل چھیننا چاہتے ہیں، صوبوں کے پاس ذمے داریاں زیادہ ہیں تو پیسے بھی زیادہ ملنے چاہئے، اٹھارویں ترمیم کے بعد ادارے ملے لیکن وسائل اور پیسے نہیں ہمارا مطالبہ ہے کہ ہمارا حق ہمیں دیں، آدھا خود خرچ کریں آدھا ہمیں دیں، سرخ لکیر عبور نہ کی جائے، ورنہ برداشت نہیں کریں گے اور کسی کو سندھ کے وسائل چھیننے نہیں دیں گے ۔

چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ ہمیں عوام کی محبت جو ملی اس سے مخالفین بوکھلا گئے ہیں، کاروان بھٹو کو ٹرین مارچ کہہ رہے ہیں، ہم تو اپوزیشن کر رہے ہیں لیکن مخالفین ہم سے اپوزیشن بھی چھین لینا چاہتے ہیں۔ آصف زرداری میرے اور میں آصف زرداری کے ساتھ ہوں، زرداری بیک فٹ پر نہیں بلکہ ہم دونوں فرنٹ فٹ پر کھیلتے ہیں، صدر زرداری نے سندھ بھر کے دورے کئے، میں بھی کر رہا ہوں، نواز شریف نے بھی اسلام آباد لاہور مارچ کرکے مقاصد حاصل کیے تھے۔

وزیراعظم کا کراچی کیلیے 162 ارب روپے کے پیکیج کا اعلان

کراچی: وزیراعظم نے کراچی کے لیے ترقیاتی پیکج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کی ترقی کے بغیر ملک آگے ترقی نہیں کرسکتا اور کراچی کی ترقی پورے پاکستان کے لیے ضروری ہے۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ٹرانسفارمیشن کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم نے کراچی کے لیے ترقیاتی پیکج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کی ذمہ داری سندھ حکومت کی ہے لیکن وہ اندرونِ سندھ سے کامیاب ہوتی ہے اس لیے انہوں نے کراچی کے ساتھ جو سلوک کیا وہ سب کے سامنے ہے، کراچی میں ترقی کا عمل رکنے کا نقصان پورے ملک کو ہوا، کراچی کی ترقی کے بغیر ملک آگے ترقی نہیں کرسکتا، کراچی کی ترقی پورے پاکستان کے لیے ضروری ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کراچی کے لیے 162 ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کیلیے جو منصوبہ بندی کی ہے اس پر عملدرآمد کا وقت آگیا ہے، کراچی پیکیج کے تحت 18 منصوبوں پر کام کیا جائے گا، کراچی میں ٹرانسپورٹ کا بہت بڑا مسئلہ ہے جس کے لیے 10 منصوبے شروع کریں گے، کراچی میں سیوریج کا مسئلہ بھی سنگین ہے.

وزیراعظم کاکہنا تھا کہ کراچی میں کچی آبادیاں سب سے زیادہ ہیں، اس شہر کو مزید پھیلنے سے روکنے کی ضرورت ہے جس کے لیے جلد ماسٹر پلان بنائیں گے، کراچی کو دیکھ کر ایسا لگتا ہے جیسے کونکریٹ کا سلب رکھا ہوا ہے، کراچی میں دستیاب جگہ بچانے کیلیے بلند عمارتوں کی اجازت دیں گے، جس کے لیے سول ایوی ایشن کو بھی کہا ہے کہ ائیرپورٹ اور اطراف کے ایسے علاقوں کی نشاندہی کریں جہاں بلند عمارتیں نہیں بن سکتیں اس کے علاوہ جتنی چاہیں بلند عمارتوں کی اجازت ہونی چاہیے۔

 

عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں کبھی کسی نے پانی ذخیرہ کرنے کا نہیں سوچا، پانی بچانے کی مہم سے پانی کا بہت بڑا ذخیرہ بن سکتا ہے، جب کہ ملک میں پانی بچانے کیلیے کوئی مہم نہیں چلائی گئی جو ہم شروع کریں گے جب کہ کراچی میں ٹرانسپورٹ اورصاف پانی کامنصوبہ لارہے ہیں اور پانی اورنکاسی آب کے 7 منصوبے شروع کریں گے۔

وزیراعظم نے حیدرآباد میں یونیورسٹی بنانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ تھرپارکر میں بھی ایک ارب روپے کے آر او پلانٹس لگائیں گے اور تھرپارکرمیں 2 میڈیکل موبائل یونٹس بھی بھیجیںگے۔

بھکر میں بس نے اسکول رکشے کو کچل دیا، 6 طالبات سمیت 7 جاں بحق

بھکر: جھنگ روڈ پر مسافر بس نے رکشے کو ٹکر مار دی جس کے نتیجے میں اسکول کی 6 طالبات اور رکشہ ڈرائیور جاں بحق ہوگئے۔

بھکر میں 9 ویں جماعت کی طالبات امتحان دے کر واپس اپنے گاؤں جارہی تھیں کہ جھنگ روڈ پر مخالف سمت سے آنے والی تیز رفتار بس ان کے رکشے پر چڑھ دوڑی۔

حادثہ اتنا سنگین تھا کہ رکشہ ڈرائیور اور 5 طالبات موقع پر ہی دم توڑ گئیں۔ ایک زخمی طالبہ کو اسپتال منتقل کیا گیا جہاں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے وہ بھی چل بسی۔ رکشہ اس بری طرح کچلا

گیا کہ اس کی باڈی کو کاٹ کر لاشوں کو نکالا گیا۔ اس موقع پر المناک مناظر دیکھے گئے اور بچیوں کی کتابیں ان ہی کے خون میں ڈوبی پڑی تھیں۔

جائے حادثہ پر بڑی تعداد میں شہری جمع ہوگئے اور معصوم بچیوں کی ہلاکت پر ان میں غم و غصے کی لہر دوڑ گئی۔ مشتعل افراد نے بس کو آگ لگانے کی کوشش کی تاہم پولیس کی نفری موقع پر پہنچ گئی جس نے ہجوم کو قابو کیا۔

مشتعل افراد نے واقعے کے خلاف اور ٹرانسپورٹ مافیا کے خلاف جھنگ روڈ پر احتجاج کرتے ہوئے ٹریفک بلاککردی۔

اب کوئی بھی باہر سے پاکستان کے نظام کو مفلوج نہیں کرسکے گا، شہریار آفریدی

 کراچی: وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی کا کہنا ہے کہ اب کوئی بھی باہر سے پاکستان کے نظام کو مفلوج نہیں کرسکے گا۔

رینجرز ہیڈ کوارٹرز کراچی میں 26 ویں پاسنگ آؤٹ پریڈ کی تقریب سے خطاب کے دوران وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی نے کہا کہ رینجرز نے سرحدوں کی حفاظت اور کراچی میں دہشت گردی کے خلاف کردار ادا کیا، رینجرز نے پانچ سال میں 16 ہزار آپریشن کیے اور 12 ہزار سے زائد دہشت گرد گرفتار کرکے پولیس کے حوالے کیے، سندھ رینجرزکی کوششوں سے کراچی میں امن قائم ہوا، کراچی کی روشنی اور امن

بحال ہوچکا ہے، کراچی ایک بار پھر معاشی اور تجارتی سرگرمیوں کا مرکز بن چکا ہے۔

وزیر مملکت برائے داخلہ نے کہا کہ بیرونی کوششوں سے ہمارے امن کو خراب کرنے کی کوشش کی گئی، آنے والا وقت پاکستان کا اور پاکستانیوں کا ہے، اب ملک کے آئین پر سودے بازی نہیں ہوگی، کوئی اب باہر سے فیصلہ ڈکٹیٹ نہیں کراسکے گا، اندر بیٹھ کر دشمن کی بولی بولنے والے اپنا قبلہ درست کرلیں، ریاست اب کوئی سمجھوتا نہیں کرے گی، ریاست اب بلیک میل نہیں ہوگی، اب کوئی بھی باہر سے یہاں کے نظام کو مفلوج نہیں کرسکے

بھارتی عوام ارجیت سنگھ سے زیادہ عاطف اسلم کے دیوانے

ممبئی: معروف پاکستانی گلوکار عاطف اسلم نے اپنی سُریلی آواز سے پاکستانیوں کو تو دیوانہ بنایا ہواہے تاہم ان کے چاہنے والے بھارت میں بھی کم نہیں ہیں جو آج بھی بھارتی گلوکاروں کے مقابلے عاطف اسلم کو سُننا چاہتے ہیں۔

پاک بھارت حالیہ کشیدگی کے باعث بھارتی حکومت نے پاکستانی فنکاروں پر تو پابندی لگادی ہے تاہم بھارتی عوام کے دلوں سے پاکستانی فنکاروں کو نکالنے میں کامیاب نہیں ہوسکے۔ عاطف اسلم اور راحت فتح علی خان سمیت پاکستانی فنکار آج بھی بھارتی عوام کے دلوں میں بستے ہیں جب کہ بالی ووڈ موسیقاروں اور ہدایت کاروں کی آج بھی پہلی پسند بھارتی گلوکاروں کے بجائے پاکستانی گلوکار ہیں۔

حال ہی میں بالی ووڈ میوزک کمپوزر امال ملک نے ٹوئٹر پر اپنی مایوسی کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی اگلی فلم’’دے دے پیار دے‘‘میں عاطف کے بجائے ارجیت سنگھ کی آواز میں گانا ریکارڈ کرائیں گے۔ کیونکہ عاطف اسلم پر بھارت میں پابندی ہے اسلیے اگر عاطف نہیں تو پھر ارجیت سنگھ۔ ان کے ٹوئٹ سے واضح ہورہا ہے کہ بالی ووڈ میوزک ڈائریکٹرز اور میوزک کمپنیوں کی پہلی پسند اور ترجیح عاطف اسلم ہیں تاہم عاطف کے موجود نہ ہونے کی وجہ سے اب وہ گلوکار ارجیت سنگھ کو ترجیح دے رہے ہیں۔

دوسری جانب امال ملک کی

اس ٹوئٹ نے سوشل میڈیا پر ایک نئی بحث چھیڑ دی ہے کہ عاطف اسلم اور ارجیت سنگھ میں کون بہترین گلوکار ہے۔ بھارتی سوشل میڈیا صارفین نے امال ملک کے اس فیصلے پر سخت مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ارجیت بھائی عاطف جیسا نہیں گا پائیں گے۔

ایک اور صارف نے کہا بھائی کوئی اور راستہ نہیں ہے عاطف کے لیے چاہے البم نہ ہو لیکن وہ کوئی سنگل گانا ہی گائیں۔

امال ملک نے سوشل میڈیا پر دونوں گلوکاروں کے درمیان موازنہ کرنے پر ٹوئٹ کرتے ہوئے کہاسب کا اپنا ٹیلنٹ ہوتاہے مہربانی کرکے دونوں کا موازنہ کرنا اور منفی باتیں پھیلانا بند کریں۔

ایک اور صارف نے جب ارجیت سنگھ کو عاطف اسلم سے بہتر گلوکار قرار دیا تو امال ملک نے عاطف کی حمایت میں ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ارجیت ارجیت ہے اور عاطف عاطف ہے، دونوں کا اپنا اسٹائل اور اپنی خوبیاں ہیں۔

نواز شریف کو 4 روز بعد بھی اسپتال میں داخل نہیں کروایا گیا، فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو نیب کیسز میں پلی بارگین کا مشورہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں 4 روز بعد بھی اسپتال میں داخل نہیں کروایا گیا۔

فواد چوہدری نے ٹوئٹ کرتے ہوئے نواز شریف کی بیماری پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کی رہائی کا چوتھا روز ہے لیکن تاحال انہیں اسپتال میں داخل نہیں کروایا گیا، کیا نواز شریف کا مقصد صرف جیل سے باہر آنا تھا یا بیماری کے علاج کیلئے وہ آخری ہفتے کا انتظار کررہے ہیں۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ میرا پھر نواز شریف کو مشورہ ہے کہ پلی بارگین آسان راستہ ہے، یہ حسن

اور حسین کا پیسہ نہیں آپ کا ہے، اس قوم نے تین بار آپ کو عزت دی قوم کا پیسہ اسے واپس کردیں۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے نواز شریف کی طبی بنیادوں پر 6 ہفتوں کے لیے ضمانت منظور کی ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی سیکیورٹی فورس کی بس کے نزدیک کار دھماکا

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی سیکیورٹی فورس کی بس کے نزدیک ایک کار زوردار دھماکے سے مکمل طور پر تباہ ہو گئی۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع رمبان کی سری نگر ہائی وے پر بھارتی سیکیورٹی فورس CRPF کی بس کے نزدیک ایک کار میں زوردار دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں کار مکمل طور پر تباہ ہوگئی جب کہ سیکیورٹی فورس کی بس کو بھی نقصان پہنچا۔

بھارتی سیکیورٹی فورسز نے جائے وقوعہ کو گھیراؤ کرلیا، کار کا ڈرائیور ممکنہ طور پر فرار ہوگیا ہے۔ تباہ ہونے والی کار کے ٹکڑوں کو فرانزک لیب بھیج دیا گیا ہے اور کار کی ملکیت کے لیے چھان بین کی جارہی ہے۔ ابتدائی طور پر حادثہ سلنڈر دھماکا لگتا ہے۔ دھماکے میں سیکیورٹی فورس کے اہلکار محفوظ رہے۔

زور دار دھماکے سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا جب کہ سیکیورٹی فورس کے اہلکار بھی خوف کے باعث بس سے باہر نکل آئے اور ٹریفک معطل کرکے کسی کو جائے وقوعہ کے قریب سے گزرنے کی اجازت نہیں دی گئی۔

واضح رہے کہ رواں برس فروری میں مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں سیکیورٹی فورسز کی بس پر خود کش کار بمبار حملے میں 44 اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

Google Analytics Alternative