Home » 2019 » March (page 4)

Monthly Archives: March 2019

شرح سود 10.75 فیصد کر دی گئی، بجلی، گیس کے نرخ اور روپے کی قدر میں کمی

کراچی:  اسٹیٹ بینک نے افراط زر کے دباؤ کو مدنظر رکھتے ہوئے پالیسی ریٹ میں مزید 50 بیسس پوائنٹس اضافہ کردیا ہے جس کے بعد بنیادی پالیسی ریٹ (شرح سود) 10.75فیصد تک پہنچ گیا ہے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی مانیٹری پالیسی کا اجلاس جمعے کو منعقد ہوا جس میں توازان ادائیگی کی صورتحال، مالیاتی خسارہ، افراط زر کے دباؤ، زرعی اور صنعتی پیداوار سمیت دیگر معاشی اشاریو ں پر غور کیا گیا۔ جس کے بعد مانیٹر ی پالیسی بیان جاری کرتے ہوئے اسٹیٹ بینک نے پالیسی ریٹ میں اضافے کا اعلان کیا۔ اسٹیٹ بینک نے مانیٹری پالیسی بیان میں مہنگائی کے عوامل کی نشاندہی کی جن میں بجلی وگیس کے نرخ، خوردنی اشیاکی قیمتوں میں اضافہ اور روپے کی قدر میں کمی سرفہرست ہیں۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق معاشی استحکام کے لیے حکومتی اقدامات کے اثرات سامنے آرہے ہیں۔ جنوری فروری کے دوران جاری کھاتے کے خسارے میں نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔ دوست ممالک سے رقوم کی آمد سے زرِ مبادلہ کے ذخائر پر دباؤ کم کرنے میں مدد ملی ہے اور بیرونی محاذ پر اس پیش رفت نے مالی منڈیوں میں استحکام کو بہتر بنایا۔ غیریقینی کیفیت کو کم کیا اور کاروباری اعتماد میں بہتری آئی ہے تاہم جاری کھاتے کا خسارہ کم ہونے کے باوجود ابھی تک بلند ہے اور مہنگائی میں اضافہ ہورہا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق فصلوں کے تازہ ترین دستیاب تخمینوں سے شعبہ زراعت کی ناقص کارکردگی کی عکاسی ہورہی ہے اور بڑی صنعتوں کی پیداوار میں بھی کمی کا رجحان ہے۔

اسٹیٹ بینک نے کہا کہ فروری میں مہنگائی کی رفتار جون 2014 کے بعد بلند ترین سطح پر ہے۔اسٹیٹ بینک نے معاشی چیلنجز کو مدنظر رکھتے ہوئے رواں مالی سال مجموعی قومی پیداوار کی شرح نمو 3.5فیصد تک محدود رہنے کی پیش گوئی کی ہے۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق محاصل کی وصولی میں کمی اور امن و امان سے متعلق بڑھتے ہوئے اخراجات کے بوجھ کی وجہ سے مالی سال 2019 کا مالیاتی خسارہ بھی ہدف سے تجاوز کرجائے گا۔ مرکزی بینک نے معاشی چیلنجز پر قابو پانے کے لیے مربوط اصلاحات کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ مانیٹری پالیسی بیان میں مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ مہنگائی میں اضافے کا رجحان برقرار ہے، مالیاتی خسارے کی سطح بلند ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہونے کے باوجود بلند ہے۔

مانیٹری پالیسی میں کہا گیا ہے کہ جولائی تا فروری مالی سال2019 میں اوسط عمومی مہنگائی بلحاظ صارف اشاریہ قیمت 6.5 فیصد تک پہنچ گئی جبکہ پچھلے برس کی اسی مدت میں 3.8 فیصد تھی۔ اس دوران سال بہ سال مہنگائی بلحاظ صارف اشاریہ قیمت میں خاصا اضافہ ہوا جو جنوری 2019ء میں7.2 فیصد اور فروری 2019میں 8.2 فیصد تک جاپہنچی جو جون 2014سے اب تک مہنگائی میں بلند ترین ضافہ ہے۔

مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ اگر تیل کی قیمتوں میں اضافہ نہ ہوتا تو یہ کمی مزید نمایاں ہوتی۔ ڈالر کی قدر میں برآمدات اس مدت کے دوران یکساں رہیں تاہم حجم کے لحاظ سے نمایاں بہتری آئی ہے۔اگرچہ جاری کھاتے کا خسارہ مالکاری کے حوالے سے ابھی تک ہمت آزما ہے تاہم اس کی کمی زر ِمبادلہ کی مارکیٹ میں کچھ استحکام کی شکل میں نمودار ہوئی ہے۔

بیرونی توازن میں بہتری کے ساتھ دوطرفہ تعلقات پر مبنی سرکاری رقوم کی آمد میں اضافے کی بنا پر اسٹیٹ بینک کے زر ِمبادلہ کے ذخائر میں بتدریج بہتری آئی ہے اور 25 مارچ 2019ء کو بڑھ کر 10.7 ارب ڈالر ہوگئے ہیں۔ اگرچہ ذخائر ابھی تک معیاری سطح کفایت (تین مہینے کی درآمدات کے مساوی) سے کم ہیں تاہم بیرونی محاذ پر حالیہ بہتری نے کاروباری اعتماد میں اضافہ کیا ہے۔

یکم جولائی سے 15 مارچ 2019 کے دوران حکومت نے اسٹیٹ بینک سے 3.3 ٹریلین روپے قرض لیا اور جدولی بینکوں کے 2.2 ٹریلین روپے کے قرضے (نقد بنیاد پر)واپس کیے۔ اس سے بینکوں کو مارکیٹ کی شرح سود پر دباؤ ڈالے بغیر نجی شعبے کے قرضے کی طلب پورا کرنے میں سہولت ملی اور یہ قرضے 9.2 فیصد بڑھ گئے۔

این ایف سی ایوارڈ کو 31 دسمبر تک حتمی شکل دینے پر اتفاق

لاہور /  اسلام آباد: قومی فنانس کمیشن ( این ایف سی ) کے چیئرمین و وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے تجویز دی کہ غربت کے خاتمے کیلیے مراعات اور سماجی شعبہ پر اخراجات کو بھی تفصیلی بحث کا حصہ بنایا جائے۔

این ایف سی کا پانچواں اجلاس گزشتہ روز این ایف سی کے سربراہ و وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت سول سیکریٹریٹ لاہور میں منعقد ہوا ۔ فروری میں پہلے اجلاس کے دوران تشکیل دیئے گئے 6 ذیلی گروپوں نے اپنے گروپوں کو دیے گئے اہداف کے ٹرمز آف ریفرنس کے مطابق وسائل کی تقسیم کے مختلف پہلوئوں سے متعلق پریزنٹیشن دی۔ ذیلی گروپوں کے تفصیلی تبادلہ خیال میں شفافیت ، ہم آہنگی اور ڈیٹا کی فراہمی پر توجہ دی گئی۔

کمیشن کے اراکین نے 6 ذیلی گروپوں کے اپنے پہلے اجلاس میں کیے گئے کام کی تعریف کی۔ یہ اتفاق رائے کیا گیا کہ ذیلی گروپ اپنا کام جاری رکھیں گے اور آئندہ اجلاسوں میں اپنی رپورٹس پیش کریں گے ۔

حکومت خیبرپختونخوا کے نمائندہ نے این ایف سی کے فریم ورک پر غور کی تجویز دی ۔ تمام ممبران نے فریم ورک پر اتفاق کیا اور اس حوالہ سے خیبرپختونخوا کی حکومت کی کوششوں کو سراہا ۔

چیئرمین کمیشن نے تفصیلی تبادلہ خیال اور اتفاق رائے پر مبنی قومی فنانس کمیشن ایوارڈ کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس سلسلہ میں تمام وفاقی یونٹوںپر بھاری ذمہ دار عائد ہوتی ہے ۔ اجلاس میں این ایف سی ایوارڈ کو 31 دسمبر 2019ء تک حتمی شکل دینے کیلیے کوششوں پر بھی اتفاق کیا گیا ۔

’کوئی تم جیسا نہیں‘: سجل نے احد رضا کی تعریفوں کے پل باندھ دیے

پاکستانی نامور اداکار آصف رضا میر کے صاحبزادے احد رضا میر کی تھیٹر اداکاری پر سپر اسٹار ماہرہ خان اور اداکارہ سجل علی نے تعریفوں کے پل باندھ دیے۔

احد رضا میر نے حال ہی میں کینیڈا کے شہر کیلگیری میں شیکسپیئر کے مشہور ناول ’ہیملٹ‘ پر مبنی تھیٹر پر اداکاری کے جوہر دکھائے جس کی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کی گئیں۔

احد رضا میر کی تھیٹر پرفارمنس کو نہ صرف مداحوں نے خوب سراہا بلکہ سپر اسٹار ماہرہ خان اور احد رضا میر کی قریبی دوست و اداکارہ سجل علی کی جانب سے بھی قابل ستائش قرار دیا گیا۔

View image on TwitterView image on TwitterView image on TwitterView image on Twitter

Farwa 🌸@farwaa_zaidi5

Ahad Raza Mir as Hamlet Appreciation Tweet.❤

See Farwa 🌸‘s other Tweets

سجل علی نے احد رضا میر کے لیے انسٹاگرام پر خصوصی پوسٹ کی جس میں اداکارہ نے احد کی تھیٹر پرفارمنس کی چند تصاویر شیئر کیں اور ان کو خوب داد دی۔

سجل علی نے لکھا کہ ’احد مجھے یہ تسلیم کرنا پڑے گا کہ کوئی تم جیسا نہیں، جس طرح زبان، جذبات اور کردار کا اثر دکھایا ہے وہ عمدہ ہے ’ہیملٹ‘ ایک کامیابی ہے‘۔

سجل علی نے لکھا کہ ’کسی بھی اداکار کی تمام پرفارمنس میں سے تمہارا ’ہیملٹ‘ سب سے بہترین تھا جس کی میں ہمشہ کیلئے گواہ ہوں‘۔

انہوں نے احد رضا میر سے درخواست کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ ایسے شو کو پاکستان میں لایا جائے تاکہ سب دیکھ سکیں کے ہمارے پاس کتنا نکھرا ہوا اداکار ہے۔

سجل علی کی اس پوسٹ پر ماہرہ خان نے بھی احد رضا میر کو داد دی اور تبصرے میں شیکسپیئر کے ناول ہیملٹ کی لائن احد رضا میر کے نام کی۔

اسکرین گریب—.

واضح رہے کہ احد اور سجل کی جوڑی پہلی بار ڈرامہ سیریل ’یقین کا سفر‘ میں جلوہ گر ہوئی تھی اور پرستاروں کی پسندیدہ جوڑی بن گئی۔

دونوں متعدد بار مختلف انٹرویوز میں ایک دوسرے کے لیے جذبات کا اظہار کر چکے ہیں لیکن اپنے رشتے کے حوالے سے کبھی کُھل کر بات نہیں کی۔

سجل بہت خاص اور مختلف ہیں، شادی کا فیصلہ وقت کرے گا: احد رضا میر

گزشتہ برس احد رضا میر سے بی بی سی ایشین نیٹ ورک کے ایک انٹرویو میزبان نے سوال کیا تھا کہ مداح چاہتے ہیں آپ لوگ شادی کرلیں اور اپنا مستقبل ساتھ بنائیں اس حوالے سے آپ کا کیا خیال ہے؟

جس پر احد نے مسکراتے ہوئے جواب دیا  تھا کہ ‘ہم دونوں ایک دوسرے کے بہت بڑے سپورٹر ہیں، یہاں تک کہ میری والدہ اور میرے گھر والے سب ہی سجل کو پسند کرتے ہیں اور ان کو سپورٹ کرتے ہیں کیونکہ وہ بہت اچھی انسان ہیں‘۔

تاہم شادی کا ہاں یا نا میں جواب دینے کے بجائے احد رضا میر کا کہنا تھا کہ ‘سجل اور میری شادی ہوگی یا نہیں، یہ تو وقت ہی بتائے گا’۔

انسٹاگرام میں آخرکار ویڈیوز کیلئے فاسٹ فارورڈ فیچر کی آزمائش

انسٹاگرام نے آخرکار وہ فیچر متعارف کرانے کا فیصلہ کرہی لیا، جس کا مطالبہ اس فوٹو شیئرنگ ایپ کے صارفین عرصے سے کررہے تھے۔

درحقیقت یہ وہ فیچر ہے جو اس اپلیکشن کے استعمال کا تجربہ زیادہ بہتر بنادے گا۔

جی ہاں انسٹاگرام نے یوزر فیڈ میں پوسٹ ویڈیوز کے لیے سیک بار (Seek bar) کے فیچر کی آزمائش شروع کردی ہے۔

اس فیچر کی بدولت آپ انسٹاگرام ویڈیوز کو اپنی مرضی کے مطابق آگے پیچھے کرسکیں گے جو کہ فی الحال ممکن نہیں، بلکہ کسی خاص منظر کو دیکھنے کے لیے پوری ویڈیو کو ہی دوبارہ شروع سے آخر تک دیکھنا پڑتا ہے۔

ٹوئٹر صارف جین مینچون وونگ نے اس فیچر کی آزمائش کا انکشاف ایک ٹوئیٹ میں کیا۔

یہ فیچر آئی جی ٹی وی میں پوسٹ ہونے والی ویڈیوز میں تو کام کررہا ہے مگر یوزر فیڈز کے لیے تاحال دستیاب نہیں۔

مگر یہ فیچر کب تک باقاعدہ طور پر صارفین کے لیے دستیاب ہوگا، فی الحال کچھ کہنا مشکل ہے مگر امکان ہے کہ بہت جلد اسے متعارف کرادیا جائے گا۔

خیال رہے کہ انسٹاگرام صارفین کی تعداد ایک ارب سے تجاوز کرچکی ہے اور یہ نوجوانوں میں بہت زیادہ مقبول ایپ ہے۔

وٹامن سی وینٹی لیٹر سے جلد چھٹکارا دلائے

فن لینڈ: سائنسدانوں نے کہا ہےکہ انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں ٹھہرنے والے مریضوں کی جلد بحالی اور ان کو وہاں سے باہر نکالنے میں وٹامن سی اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

نارنجی، کینو، لیموں اور دیگر کھٹے رسدار پھلوں میں پایا جانے والا وٹامن سی بعض مریضوں کو آئی سی یو سے باہر نکالنے میں انتہائی مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔ اس کا انکشاف آسٹریلیا اور فن لینڈ کے ماہرین نے کیا ہے جن میں جامعہ فِن لینڈ کے ڈاکٹر ہیری ہیمیلیا اور سڈنی یونیورسٹی کی ایلزبتھ چاکر شامل ہیں۔

انہوں نے درجنوں مطالعوں کے بعد کہا ہے کہ اگر انتہائی بیمار اور تشویشناک کیفیت میں مبتلا مریضوں کو وٹامن سی دیا جائے تو آئی سی یو میں ان کے وقت میں 8 فیصد تک کمی ہوسکتی ہے۔ تاہم انہوں نے آئی سی یو مریضوں اور وٹامن سی کے براہِ راست اثرات پر مزید تحقیق پر زور دیا ہے۔

ماہرین نےکہا ہے کہ وٹامن سی ایک جادوئی شے ہے جس کے فوائد سائنسی طور پر ثابت شدہ ہیں۔ یہ جسم میں کئی کام کرتا ہے جن میں خلیات میں توانائی کی پیداوار بڑھانا، بلڈ پریشر کو برقرار رکھنا، دل کو بحال رکھنا ، اچھے جینیاتی افعال میں اضافہ اور ناقص جینیاتی عمل کو کم کرنا شامل ہے۔

وٹامن سی عام

سردی لگنے کی شدت اور مدت کم کرتا ہے، ذیابیطس کے مریضوں میں گلوکوز کی سطح کم  رکھتا ہے اور سانس کی نالیوں کو ہمواربنانے میں مدد دیتا ہے۔ ان تمام باتوں کی وجہ سے مریض وٹامن سے بحال ہوتے ہیں اور شدید مرض کی کیفیت سے جلد باہر آجاتے ہیں۔ماہرین نے یہ بھی بتایا کہ حادثوں، سرجری، انفیکشن، دماغی تناؤ اور دیگر کیفیات میں جسم میں وٹامن سی تیزی سے کم ہونا شروع ہوجاتا ہے اور یوں تمام جسمانی افعال شدید متاثر ہونا شروع ہوجاتےہیں۔

اسی بنا پر ڈاکٹروں نے انتہائی بیمار افراد کو روزانہ 4 گرام وٹامن سی دینے کی تجویز پیش کی ہے جبکہ صحتمند فرد کو روزانہ0.1  گرام وٹامن سی درکار ہوتا ہے۔ دوسری جانب سائنسدانوں نے 18 مطالعات میں 2004 ایسے مریضوں کو دیکھا جو آئی سی یو میں منتقل کئے گئے تھے اور ان میں سے 13 افراد دل کی جراحی سے گزرے تھے۔

اس مطالعے سے معلوم ہوا کہ جن مریضوں نے وٹامن سی کی مناسب مقدار کھائی ان کے آئی سی یو میں رہنے کے اوقات میں 8 فیصد کمی واقع ہوئی۔ دلچسپ بات یہ بھی ہے کہ وٹامن سی استعمال کرنے والے مریض وینٹی لیٹر پر رہتے ہوئے بھی جلد ہی بہتر ہوئے اور وینٹی لیٹر کی ضرورت سے آزاد ہوئے

بھارت کو اطلاعات کی جنگ میں آئی ایس پی آر نے پچھاڑ دیا، بھارتی جنرل کا اعتراف

لندن: بھارت کے سابق لیفٹیننٹ جنرل عطا حسنین نے اعتراف کیا ہے کہ پاکستان نے ہائبرڈ وارمیں بھارت کو پچھاڑ دیا ہے جب کہ  انفارمیشن جنگ کیسے لڑنی ہے ہمیں آئی ایس پی آرسے سیکھنا چاہیے۔

بھارت کے سابق لیفٹیننٹ جنرل عطا حسنین نے برطانوی تھنک ٹینک سے خطاب میں اعتراف کیا کہ پاکستان نے ہائبرڈ وار میں بھارت کو پچھاڑ دیا، ہائبرڈ جنگ میں پاکستان جیت گیا ہے، روایتی جنگ کا تصور ختم ہو چکا یہ ہائبرڈ وار کا دور ہے اور ہائبرڈ جنگ میں میڈیا بڑا ہتھیار ہوتا ہے، آئی ایس پی آر نے یہ ثابت کردیا۔

عطا حسنین نے کہا کہ انفارمیشن جنگ کیسے لڑنی ہے ہمیں آئی ایس پی آرسے سیکھنا چاہیے، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے ہمیں سکھایا معلومات کی فراہمی کیا ہوتی ہیں،

اگر کسی نے سکھایا کہ اطلاعات کے ساتھ کیسے کھیلنا ہے تو وہ آئی ایس پی آر ہے، آئی ایس پی آر نے کمال حکمت عملی سے نہ صرف کشمیریوں کو بھارتی فوج سے متنفر کیا بلکہ بھارتی قوم کو بھی بھارتی فوج سے دور کردیا۔

سابق بھارتی لیفٹیننٹ جنرل نے کہا کہ پاکستان نے معلومات میں انتہائی پیشہ ورانہ مہارت دکھائی اور بھارت کو اس میدان میں پیچھے چھوڑ دیا جب کہ روایتی جنگ سے فتح نہیں ملتی۔

بھارت کے سابق کور کمانڈر نے کہا کہ اگر شام، عراق، افغانستان اور پاکستان میں دھماکے ہو سکتے ہیں تو کشمیر میں پلوامہ واقعے کا بھی قوی امکان تھا اور بحیثیت فوجی مجھے پلوامہ جیسے حملےکی توقع تھی کیوں کہ بھارتی حکومت کی غلط پالیسیوں سے کشمیری کھڑےہوئے۔

آپریشن ردالفساد؛ بلوچستان سے بڑی تعداد میں دھماکا خیز مواد واسلحہ برآمد

راولپنڈی: سیکیورٹی فورسز نے آپریشن ردالفساد کے تحت کارروائی کرتے ہوئے بلوچستان سے بڑی تعداد میں دھماکا خیز مواد، راکٹس اوراسلحہ برآمد کرلیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق ملک بھر میں آپریشن ردالفساد کے تحت کارروائیاں جاری ہیں۔ سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان میں سبی اورکوہلو کے درمیان بھمبور کی پہاڑیوں میں انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن کیا۔

آپریشن کے دوران سیکیورٹی فورسز نے دھماکا خیز مواد، راکٹس، مائنز، مارٹرودیگر اسلحہ برآمد کرلیا۔

عمران خان کی ہدایت پر آسٹریلین طرز کا ڈومیسٹک کرکٹ ماڈل تیار

وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر پاکستان کی ڈومیسٹک کرکٹ کے نظام کو تبدیل کرتے ہوئے آسٹریلین کرکٹ کی طرز کا مجوزہ ڈومیسٹک ماڈل تیار کرلیا۔

نیا ماڈل پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے پیٹرن ان چیف وزیراعظم عمران خان کی ہدات پر بنایا گیا ہے جو ان کے دستخط کے بعد نافذ العمل ہوگا۔

خیال رہے کہ 2 روز قبل چیئرمین پی سی بی نے چیف آپریٹنگ افسر (سی ای او) سبحان احمد اور ڈائریکٹر کرکٹ آپریشنز ہارون رشید سیمت بورڈ کے دیگر حکام کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔

اس ملاقات کے دوران پی سی بی وفد نے وزیراعظم عمران خان کے حکم پر ڈومیسٹک کرکٹ میں اصلاحات سے متعلق ریجنز اور ڈیپارٹمنٹس کا مسودہ تیار کیا تھا۔

اس مسودے کے مطابق ڈومیسٹک کرکٹ میں ٹیموں کی تعداد 8 رکھی گئی تھی تاہم عمران خان نے اس مسودے کو مسترد کردیا تھا۔

وزیراعظم نے پی سی بی کو ہدایت کی تھی کہ وہ آسٹریلین کرکٹ کے طرز کا فرسٹ کلاس ماڈل تیار کریں جس میں صرف 6 ٹیمیں شامل ہوں۔

تاہم ذرائع کے مطابق آج (30 مارچ کو) پی سی بی نے نئے ڈومیسٹک نظام کا مسودہ تیار کرلیا ہے جو وزیراعظم کی منظوری کے بعد نافذالعمل ہوجائے گا۔

اس مسودے کے مطابق اب پاکستان کی ریجنل و ڈومیسٹک ٹیموں کی تعداد 6 ہوگی۔

ان میں سندھ، بلوچستان اور خیبرپختونخوا کی ایک ایک ٹیمیں، پنجاب کی 2 جبکہ اسلام آباد، آزاد جموں و کشمیر، گلگت بلتستان اور پرانے روالپنڈی ریجن پر مشتمل ایک ٹیم تیار کی جائے گی۔

قائدِ اعظم ٹرافی، نیشنل ون ڈے کپ اور نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ میں یہی 6 ٹیمیں مدِ مقابل ہوں گی۔

نئے سسٹم کے تحت پاکستان کا فرسٹ کلاس سیزن 15 ستمبر سے 15 اپریل تک کھیلا جائے گا، جس کا آغاز ون ڈے کپ سے ہو گا۔

ون ڈے کپ 2 راؤنڈز پر مشتمل ہوگا جس کا آغاز 15 سمتبر جبکہ اختتام 5 اکتوبر کو ہوگا، جہاں ہر ٹیم 10، 10 میچز کھیلے گی۔

اس کے بعد 20 اکتوبر سے 4 روزہ کرکٹ کا آغاز ہوگا اور یہ بھی 2 راؤنڈز پر مشتمل ہوگا جس کا پہلا مرحلہ 20 اکتوبر سے 20 دسمبر جبکہ دوسرا مرحلہ 23 دسمبر سے 23 جنوری تک کھیلا جائے گا۔

پہلے راؤنڈ میں 6 ٹیمیں مد مقابل ہوں گی جو 10، 10 میچز کھیلیں گی جبکہ دوسرے راؤنڈ میں بہترین 4 ٹیمیں پہنچیں گی جو تین تین میچز کھیلیں گی۔

پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کی طرز پر نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ کھیلا جائے گا جس کے لیے ٹیموں کی تعداد بھی 6 ہوگی۔

نیشنل ٹی ٹوئنٹی کپ یکم فروری سے 25 فروری تک کھیلا جائے گا۔

چئیرمین پی سی بی جلد نئے سسٹم کے نفاذ کے لیے وزیراعظم عمران خان سے منظوری لیں گے۔

Google Analytics Alternative