Home » 2019 » April » 01

Daily Archives: April 1, 2019

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 6 روپے فی لیٹر اضافہ کردیا

 اسلام آباد: حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 6 روپے فی لیٹر اضافہ کردیا ہے۔

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ کردیا ہے۔ اوگرا نے پیٹرول کی قیمت میں 11 روپے 92 پیسے اضافے کی سفارش کی تھی مگر حکومت کی جانب سے پیٹرول کی قیمت میں 6 روپے

فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں بھی 11 روپے 17 پیسے فی لیٹر کا اضافہ تجویز کیا گیا تھا مگر وہ بھی 6 روپے مہنگا کیا گیا ہے جب کہ لائٹ ڈیزل اور مٹی کے تیل کی قیمت میں 3،3 روپے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے۔

آسٹریلیا نے ون ڈے سیریز میں پاکستان کو وائٹ واش کردیا

دبئی: آسٹریلیا نے پاکستان کو آخری میچ میں بھی شکست دے کر 5 میچوں کی ون ڈے سیریز میں وائٹ واش کردیا۔

ورلڈکپ کی تیاری کے سلسلے میں پاکستان کی تجرباتی ٹیم کے لیے آسٹریلیا کے خلاف سیریز ڈراؤنا خوب ثابت ہوئی، نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل قومی ٹیم ایک بھی میچ میں کامیابی حاصل نہیں کرسکی، سینئرز کے ساتھ ساتھ نوجوان کھلاڑی بھی متاثر کن کارکردگی نہ دکھا پائے۔

سیریز کے آخری میچ میں کینگروز کے 328 رنز کے جواب میں گرین شرٹس کے بلے بازوں نے نسبتاً زیادہ مزاحمت کا مظاہرہ کیا لیکن کامیابی کے ساتھ میچ فنش نہ کرنے کی روایت کو برقرار رہی اور پاکستانی ٹیم مقررہ 50 اوورز میں 7 وکٹوں پر 307 رنز تک محدود رہی، مڈل آرڈر بیٹسمین حارث سہیل کے 130، شان مسعود اور عماد وسیم کی نصف سنچریاں بھی ٹیم کو شکست سے نہ بچا سکی۔

گزشتہ میچ کے ہیرو عابد علی صفر، محمد رضوان 12، عمر اکمل 43، سعد علی 4، یاسر شاہ 11 رنز پر پویلین لوٹے جب کہ آسٹریلیا کی جانب سے بہرینڈروف نے سب سے زیادہ 3 وکٹیں حاصل کیں، رچرڈسن، لائن، میکسویل اور زمپا کے حصے میں ایک ایک وکٹ آئی۔

اس سے قبل قومی ٹیم کے کپتان عماد وسیم نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو بیٹنگ کی دعوت دی، کینگروز بلے بازوں نے پراعتماد بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ اوورز میں 7 وکٹوں پر 327 رنز بنائے۔

ایرون فنچ اور عثمان خواجہ نے ٹیم کو 134 رنز کا عمدہ آغاز فراہم کیا، اس دوران دونوں بلے بازوں نے اپنی نصف سنچریاں مکمل کیں تاہم ایرون فنچ 53 رنز بنانے کے بعد عثمان شنواری کا شکار بن گئے جب کہ عثمان خواجہ 98 رنز پر آؤٹ ہوئے۔

مڈل آرڈر بیٹسمین شان مارش 61، میکسویل 70 ، اسٹوئینس 4، ہینڈزکومب 8 اور کیرے صفر پر پویلین لوٹے، بیہرینڈوف 6 اور رچرڈسن 5 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے۔ پاکستان کی جانب سے عثمان شنواری نے سب سے زیادہ 4 اور جنید خان نے 3 وکٹیں حاصل کیں۔

جو دیمک اداروں کو لگی اس کا سب سے بڑا کیڑا خورشید شاہ ہیں، فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ جو دیمک اداروں کو لگی اس کا سب سے بڑا کیڑا خورشید شاہ ہیں۔

اپنی ٹوئٹ میں فواد چوہدری نے کہا کہ خورشید شاہ اپنے اعمال کو سامنے رکھتے ہوئے بے نظیراور ذوالفقار بھٹو کے ناموں کو بیچنا بند کریں، اداروں کی تباہی میں سب سے بڑا حصہ خورشید شاہ کا ہے۔

فواد چوہدری نے مزید کہا کہ خورشید شاہ اس کمیٹی کے سربراہ تھے جس نے اداروں میں میرٹ کے برعکس سیاسی بھرتیوں کا انبار لگایا، جو دیمک اداروں کو لگی اس کا سب سے بڑا کیڑا خورشید شاہہیں۔

آرمی چیف قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کو بریفنگ دیں گے

 اسلام آباد: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ 4 اپریل کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کو بریفنگ دیں گے۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی دعوت پر قومی اسمبلی کی دفاعی کمیٹی امجد خان کی سربراہی میں 4 اپریل کو جی ایچ کیو کا دورہ کرے گی جہاں آرمی چیف دفاعی کمیٹی کو کنٹرول لائن، ورکنگ باونڈری اور انٹرنیشنل بارڈرز کی صورت حال پر بریفنگ دیں گے۔

بریفنگ کےدوران قومی اسمبلی کی دفاعی کمیٹی کو بھارتی جارحیت اور اشتعال انگیزیوں پر پاک فوج کے جوابی اقدام کے بارے میں آگاہ کیا جائے گا اور جی ایچ کیو سمیت مسلح افواج کے امور پر بھی اعتماد میں لیا جائے گا۔

آرمی چیف کی بریفنگ کے بعد کمیٹی اراکین یادگار شہدا پر بھی حاضری دیں گے جب کہ قومی اسمبلی کی 21 رکنی کمیٹی میں تمام پارلیمانی جماعتوں کے اراکین شامل  ہیں۔

بے نظیر اِنکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کرنے کیخلاف مزاحمت کریں گے، خورشید شاہ

سکھر: خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ بے نظیر اِنکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کرنے کیخلاف مزاحمت کریں گے۔

سکھر میں کارکنوں اور میڈیا سے بات کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ نے کہا کہ ذوالفقارعلی بھٹو نے ایٹم بم بنا کرسرحدوں کی حفاظت کا اعلان کیا تھا، کوئی دشمن ملک پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا، لیکن ہمارے حکمران کشکول اٹھا کر گھومتے ہیں، آج کے حکمران قرضہ لیتے وقت شرماتے نہیں بلکہ مسکراتے ہیں، یہ کہتے تھے کہ مہنگائی کم کریں گے، لوگوں کو روزگار اور غریبوں کو گھر دیں گے، کہاں ہیں یہ ساری چیزیں۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ بینظیر اِنکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کرنے کی خبر ٹی وی پر دیکھی، اس طرح کی حرکت کوئی کم ظرف انسان ہی کر

سکتا ہے، سلیکٹڈ وزیراعظم سے اسی طرح کے کاموں کی ہی توقع کی جا سکتی ہے، ضیاالحق اور پرویز مشرف بھی بے نظیر بھٹو کے نام سے خوف زدہ تھے، موجودہ حکومت بھی مشرف کی بی ٹیم ہے اس لئے وہ بے نظیر بھٹو کے نام سے خوف زدہ ہیں

رہنما پیپلزپارٹی نے کہا کہ بے نظیر بھٹو نے ملک میں جمہوریت کی خاطر جام شہادت نوش کیا، ان کے نام سے خوف زدہ نام نہاد سیاستدانوں کو عوام نے ہمیشہ مسترد کیا ہے، بے نظیر بھٹو اور بھٹو خاندان پاکستان کے عوام کے دلوں پر راج کرتا ہے، بے نظیر بھٹو ایک نظریہ کا نام ہے پرویز مشرف کی بی ٹیم کچھ بگاڑ نہیں سکتی، بے نظیر اِنکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کرنے کے خلاف مزاحمت کریں گے۔

عمران خان نہ ڈھیل کے قائل ہیں اور نہ ڈیل پر آمادہ، وزیر خارجہ

ملتان: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ 6 ماہ پہلے (ن) لیگ اور پی پی دست و گریباں تھے آج ایک جھولی میں بیٹھ گئے ہیں لیکن عوام مک مکا کی سیاست کے خلاف آج عوام اٹھا رہے ہیں۔

ملتان میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پی پی 218 ضمنی الیکشن میں (ن) لیگ اور پی پی کا گٹھ جوڑ سب کے سامنے ہے، 6 ماہ پہلے (ن) لیگ اور پی پی دست و گریباں تھے آج ایک جھولی میں بیٹھ گئے، گٹھ جوڑ کی سیاست کے خلاف لوگ آواز اٹھا رہے ہیں، جنوبی پنجاب صوبہ نعرے نہیں ضرورت ہے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج پاکستان کو سفارتی طور پر تنہا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے، پاکستان کو گرے سے بلیک لسٹ میں دھکیلنے کی کوشش کی جارہی ہیں لہذا ملکی مفاد کے لیے سب کو اکٹھے ہونا ہوگا، اپوزیشن رہنماؤں کو قومی سلامتی امور پر ایک ہونے کی پھر دعوت دیتا ہوں۔

وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ مہنگائی پر لوگ چلا رہےہیں، یہ ماحول کس کا پیدا کیا ہوا ہے، پاکستان کو معاشی طور پر ان حالات میں کس نے کھڑا کیا، ڈالر مہنگا ہونے سے مہنگائی بڑھے گی لیکن سب جانتے ہیں کہ ڈالر کی قیمت مصنوعی طور پر کس نے روکے رکھی،  عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے، مشکل حالات کےباوجودعوام پر کم بوجھ ڈالنا چاہتے ہیں، ایسے اقدامات اٹھانے کی کوشش کررہے ہیں جس سے مہنگائی نہ ہو اور جتنا ہوسکے عوام کو اتنا رلیف ملے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نیب سب کا احتساب کرنے کا استحقاق رکھتا ہے،  نیب کے معاملات میں مداخلت کرنا حکومت کا کام نہیں ہے، نیب ہمارے لوگوں کے خلاف بھی تحقیقات کررہا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ محترمہ کے نام سے بنے ادارے سے کوئی مسئلہ نہیں اور ذاتی طور پر ادارے کا نام تبدیل کرنے کے حق میں نہیں ہوں لیکن اتحادیوں نے بے نظیر انکم فنڈز پروگرام کے غلط استعمال پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ نہیں اور نہ فوجی طاقت اس کا حل ہے، بھارتی صحافی

دوحا: بھارتی صحافی اور مصنفہ ارون دھتی رائے نے کہا ہے کہ مودی سرکار کی نفرت آمیز پالیسیوں کے باعث بھارت میں انتہا پسندی خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے اور انہی متنازع پالیسیوں کے باعث کشمیر میں بھی حالات خراب ہوئے۔

بین الاقوامی نشریاتی ادارے الجزیرہ کو انٹرویو دیتے ہوئے معروف بھارتی دانشور، مصنفہ اور صحافی ارون دھتی رائے نے کہا کہ فوجی طاقت کا استعمال مسئلہ کشمیر کا حل نہیں ہے اور نہ ہی کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ ہے۔ اس مسئلے کو وہاں کی عوام پر چھوڑ دیا جائے۔

مودی سرکار کی منافقت کا پردہ

چاک کرتے ہوئے بھارتی مصنفہ کا کہنا تھا کہ حالیہ پاک بھارت کشیدگی میں وزیراعظم مودی کا رویہ انتہائی غیر ذمہ دارانہ تھا۔ مودی کی پالیسیوں کے باعث بھارت انتہا پسندی کا شکار ہو گیا اور بھارتی میڈیا سے لیکر عوام تک جنگی جنون میں مبتلا ہوگئے۔

ایک سوال کے جواب میں  خاتون صحافی کا کہنا تھا کہ بھارت میں کسان، عدالتی نظام، تاجر اور طلباء سب پریشان ہیں کوئی بھی حکمراں جماعت کی کارکردگی سے مطمئن نہیں۔ تاہم بھارتی انتخابات ذات پات کی پیچیدگیوں میں جکڑے ہوئے ہیں اس لیے نتائج کچھ بھی ہوسکتےہیں۔

عروس البلاد کراچی کے لئے بڑا پیکج

adaria

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت گورنر ہاؤس میں منعقدہ ایک اجلاس میں وزیراعظم نے 162 ارب روپے کے کراچی پیکج کی منظوری دی ہے جس کے تحت شہر قائد میں 18 منصوبوں پر کام کیا جائے گا، پیکج میں سیوریج،ٹرانسپورٹ سمیت دیگر منصوبے شامل ہیں۔ان منصوبوں میں پبلک ٹرانسپورٹ کے 10 منصوبے اور سیوریج اور پانی کے 7 منصوبے ہیں۔وزیراعظم نے حیدرآباد میں ایک یونیورسٹی کی منظوری بھی دی ہے، 5 اپریل کو اس یونیورسٹی کاسنگ بنیاد رکھا جائے گا۔خوش آئند امر یہ ہے کہ کراچی کے ٹرانسپورٹرز کے لئے نئی ٹرانسپورٹ سکیم متعارف کروانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے، سکیم کے تحت ٹرانسپورٹرز بینک سے آسان قرضے حاصل کر سکیں گے، 500ٹرانسپورٹرز کو500نئی بسیں خریدنے کے لئے قرضہ دیا جائے گا۔ قرضے کی مدت 6سال ہو گی اور اس پر سود وفاق ادا کرے گا۔لیاری ایکسپریس وے کو ہیوی ٹریفک کے لئے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور ٹریک کو بہتر بنانے کے لئے 2ارب روپے کے فنڈ جاری کیا جائے گا جب کہ کراچی سرکلر ریلوے کی بحالی کے لئے دوبارہ جاپانی کمپنی جائیکا سے مدد لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔وفاقی حکومت نے کراچی کے 6اضلاع میں شمسی توانائی کے 200آر او پلانٹ لگانے کا منصوبہ بنایا ہے جس کے تحت ڈسٹرکٹ ویسٹ میں 5ایم جی ڈی پانی کا آر او پلانٹ لگانے کا فیصلہ کیا گیا، کورنگی میں پانی کو قابل استعمال بنانے کے لئے ٹریٹمنٹ پلانٹ کی فنڈنگ کا فیصلہ ہوا ہے۔ گورنر ہاؤس میں اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ کراچی کی ترقی پورے پاکستان کے لیے ضروری ہے، اس شہر کے لیے کیے گئے اپنے وعدوں کو نہیں بھول سکتے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کا ماسٹر پلان بھی ایک مسئلہ ہے، یہاں سبزہ دکھائی نہیں دیتا کراچی شہر پھیلتا جارہا ہے اور شہر جتنا پھیلتا ہے اس کے لیے اتنے ہی مسائل بڑھتے ہیں، تاہم اب ہم چاہتے ہیں کہ شہرِقائد کو پھیلنے سے روکا جائے اور یہاں کثیرالمنزلہ عمارتیں بنائی جائیں۔انہوں نے کہا کہ کراچی کے ماسٹر پلان کی تیاری تک اس کے لیے عبوری اقدامات اٹھائے جائیں، کیونکہ اگر یہ اقدامات نہیں اٹھائے گئے تو آئندہ ڈھائی سال کے اندر پتہ نہیں یہ شہر کہاں پہنچ جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ میں آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ ہم کراچی میں پانی بچانے کے لیے مہم چلائیں گے جس کے لیے شہری انتظامیہ تیاری کرے، کیونکہ آج تک پاکستان میں اس کی منصوبہ بندی نہیں کی گئی۔اس موقع پر انہوں نے سندھ حکومت کو ہدف تنقید بنایا کہ کراچی کا مسئلہ حکومتِ سندھ کی ذمہ داری ہے، کیونکہ اندرونِ سندھ سے ایک جماعت الیکشن جیت جاتی ہے اور پھر اس کی خبر نہیں لیتی ۔گزشتہ دس سال میں اس نے کراچی کے ساتھ کیا کیا وہ سب کے سامنے ہے۔درایں اثنا وزیراعظم عمران خان نے کراچی کے شہریوں کے لیے بنائے گئے بن قاسم پارک کا بھی افتتاح کیا۔پارک کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ضروری ہے کہ کراچی کے لیے سرسبز جگہوں کو بچائیں۔ گلوبل وارمنگ سے متاثر ہونے والے 10 ممالک میں پاکستان کا 8واں نمبر ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہماری آنے والی نسلوں کو ایک اچھا ماحول ملنا چاہیے، یہاں کھیل کے میدان اور پارکس ضروری ہیں جن پر قبضہ ہوچکا ہے۔ وزیراعظم نے کراچی کے جن مسائل کا ذکر کیا ہے وہ بنیادی اور سب سے اہم مسائل ہیں جن کے حل کے لیے ماضی میں کسی حکومت نے توجہ نہیں دی۔کراچی پاکستان کا معاشی حب ہیں مگر بدقسمتی سے حکومتوں کی چشم پوشی اور کرپشن کی وجہ سے آج عروس البلاد مسائل کا بھی حب بن چکا ہے۔بے ہنگم تعمیرات نے اس شہر کا حلیہ بگاڑ کر رکھ دیا ہے۔شہر کا شہر کچرا کنڈی میں تبدیل ہو رہا ہے۔ غیرقانونی تعمیرات اور قبضہ مافیہ کے راج سے پبلک پارکس حتیٰ کہ قبرستان تک غائب ہو رہے ہیں۔پینے کے صاف پانی کی فراہمی جوئے شیر کے مترادف ہے۔ایک معاشی حب ہونے کی وجہ سے روزگار کے سلسلے میں ملک کے دیگر چھوٹے شہروں اور دیہاتوں سے لوگ اس شہر کی جانب رخ کر رہے ہیں ۔جس سے یہاں آبادی کا دباؤ بہت تیزی کے ساتھ بڑھ رہا ہے۔آبادی کے اس بڑھتے ہوئے دباؤ سے جہاں سیوریج ،پینے کے صاف پانی کی دستیابی کے علاوہ ٹرانسپورٹ کے مسائل نے بھی اس شہر کے باسیوں کا جینا حرام کر رکھا ہے۔چنانچہ اسی لیے کراچی پیکج میں پبلک ٹرانسپورٹ کے 10منصوبوں کو شامل کیا گیا ہے جبکہ دوسرے نمبر پر سیوریج کے سات منصوبے شامل کیے گئے ہیں۔اگر مقامی اور صوبائی حکومت ماضی میں صدق دل کے ساتھ کراچی کے مسائل پر توجہ دیتی رہتیں تو آج یہ شہر بین الاقوامی توجہ کا مرکز ہوتا۔ضرورت اس امر کی ہے کہ روشنیوں کے اس شہر کے مسائل پر سیاست کرنے کی بجائے ان کے حل پر توجہ دی جائے۔امید ہے کہ موجودہ حکومت ماضی کی حکومتوں کی روش ترک کرتے ہوئے آگے بڑھے گی اور اسے ایک بین الاقوامی معیار کا شہر بنانے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑے گی۔

تحریک آزادی کشمیرکودبانے کیلئے ایک اوربھارتی ہتھکنڈا
بھارت نے تحریک آزادی کشمیر کو دبانے کیلئے نیا ہتھکنڈا آزمانے کا فیصلہ کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر کیلئے ٹیررازم مانیٹرنگ گروپ (ٹی ایم جی)یعنی مخصوص دہشت گردی نگرانی گروپ تشکیل دے دیا۔ٹی ایم جی کا ہفتہ وار اجلاس ہو گااور یہ گروپ ایکشن رپورٹ پیش کریگا۔اس گروپ میں پولیس، انٹیلی جینس ایجنسیوں کے حکام شامل ہونگے۔ بھارتی حکومت کی طرف سے حکم نامہ جاری کر دیا گیاہے۔بھارت کی جانب سے اس گروپ کی آڑ میں کشمیریوں کی جائیداد، املاک اور گھروں کو نقصان پہنچانے کا منصوبہ بنایا گیاہے ۔دہشت گردوں کی مالی معاونت کے بہانے بے گناہوں کی گرفتاریاں کی جائیں گی ۔ کشمیری تنظیموں کیخلاف کریک ڈاؤن کا نیا سلسلہ شروع ہو گا۔تحریک آزادی کیلئے چندہ اکٹھا کرنے والے افراد یا تنظیمیں خصوصی طور پر نشانہ ہوں گے۔بھارت سرکار اپنے ذرائع ابلاغ کو گمراہ کن پروپیگنڈے سے یہ تاثر دینے کی کوشش میں لگی ہے کہ کشمیر میں سب کچھ ٹھیک ہے لیکن حقیقت اس کے برعکس اور تشویشناک ہے۔ بھارت اپنی آٹھ لاکھ فوج استعمال کرنے کے باوجود کشمیریوں کی تحریک آزادی کو روک نہیں سکا اور وہ زیادہ دیر تک طاقت کے استعمال سے کشمیریوں کو غلام نہیں رکھ سکتا۔اقوام عالم اور انسان دوست ممالک سے اپیل ہے کہ وہ کشمیر کی ابتر سیاسی صورتحال کا سنجیدہ نوٹس لے کر بھارت کی سرکاری دہشت گردی روکنے میں کر دار ادا کریں اور تنازعہ کشمیر کو حل کرنے کیلئے کشمیری عوام کی رائے اور امنگوں کا لحاظ رکھیں۔

Google Analytics Alternative