Home » 2019 » August » 03

Daily Archives: August 3, 2019

مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش پر قائم ہوں، امریکی صدر

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش پر قائم ہوں۔

واشنگٹن میں میڈیا سے گفتگو میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر پاکستان اور بھارت کے درمیان مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کرتے ہوئے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے معاملے پر اپنی ثالثی کی پیشکش پر قائم ہوں، میرے خیال میں عمران خان اور مودی بہترین لوگ ہیں اور دونوں کی آپس میں اچھی بات چیت ہوگی۔

امریکی صدر نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے بارے میں پاکستان سے تو بات کی ہی ہے اور بھارت کے ساتھ بھی بلا تکلف انداز میں بات کی ہے، اگر دونوں ممالک چاہیں کہ کوئی مداخلت کرے یا مدد کرے تو امریکا کرسکتا ہے تاہم مودی پر منحصر ہے کہ وہ پیشکش کو قبول کرتے ہیں یا نہیں۔

اسلام آباد کے ماسٹر پلان کا ازسر نو جائزہ لینے کی ضرورت ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اسلام آباد کے ماسٹر پلان کا ازسر نو جائزہ لینے اور اسے مرتب کرنے کی ضرورت ہے۔

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی دارالحکومت کے ماسٹر پلان کے حوالے سے اجلاس ہوا جس میں معاون خصوصی ذوالفقاربخاری، اسد عمر، چیئرمین سی ڈی اے عامر احمد علی نے شرکت کی۔ اجلاس کے دوران چیئرمین سی ڈی اے کی جانب سے شجر کاری مہم پر بھی وزیرِ اعظم کو بریفنگ دی گئی۔

وزیراعظم نے اجلاس میں وفاقی دارالحکومت میں بے ربط تعمیرات اورعوام کو در پیش مشکلات بشمول ماحولیاتی و انتظامی مسائل پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آبادی میں مسلسل اضافے اورشہر کے پھیلاؤ سے متعلق مسائل کونظر انداز کیا گیا۔ گرین ایریاز میں کمی کے باعث ماحولیاتی تبدیلیوں کے منفی اثرات میں اضافہ ہوا ہے۔

وزیرِ اعظم نے کہا ماحولیاتی تغیر اور آلودگی ملک کا بڑا مسئلہ ہے جس پر فوری توجہ دینے کی ضرورت ہے جب کہ اسلام آباد کے ماسٹر پلان کا ازسر نو جائزہ لینے اورمرتب کرنے کی بھی ضرورت ہے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ گرین ایریاز کے تحفظ کے لئے فوری اقدامات اور تعمیراتی قوانین کو حتمی شکل دی جائے، کچی آبادیوں کے مکینوں کو بہتر رہائشی سہولتیں فراہم کی جائیں۔

(ن) لیگ اور پیپلزپارٹی نے کرپشن سے ناطہ نہ توڑا تو چند اضلاع تک محدود ہو جائیں گی، فردوس عاشق

اسلام آباد: معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے کرپشن سے ناطہ نہ توڑا تو چند اضلاع تک محدود ہو جائیں گی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنی ٹویٹ میں معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ جب وزیراعظم عمران خان سینیٹ انتخابات میں خفیہ رائے شماری کے بجائے ہاتھ اٹھا کر حق رائے دہی استعمال کرنے کی تجویز دی تھی تو ملک کی دونوں بڑی سیاسی جماعتوں نے اسے رد کر دیا تھا۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ ملکی سیاست میں اخلاقیات کا گلا گھونٹنے والے آج کس منہ سے گلے پھاڑ کر اخلاقی سیاست کا درس دیتے ہیں؟، 2018 کے انتخابات میں عوام سے مسترد ہونے کے بعد کل آپ کو سینیٹ میں شکست فاش کا سامنا کرنا پڑا، ان دو جماعتوں نے کرپشن سے ناطہ نہ توڑا تو چند اضلاع تک محدود ہو جائیں گی، کرپٹ قیادت کا دفاع کرنے والوں کا کوئی مستقبل نہیں۔

معاون خصوصی نے مسلم لیگ (ن) کے سینیئر رہنما احسن اقبال کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف واحد سیاسی جماعت ہے جس نے وفاداریاں بدلنے پر اپنی جماعت کے صوبائی ممبران کے خلاف کاروائی کی، اب بھی اس ضمن میں مثبت اقدام اور ترمیم کی حمایت کریں گے، احسن اقبال بھی تحقیقاتی کمیٹی ضرور بنائیں لیکن تحقیقات کا دائرہ چھانگا مانگا کے جنگلات اور مری کی پر فضا مقام پر قائم ریسٹ ہاوٴسز تک وسیع کریں۔

سینیٹ میں حکومت کی فتح اور اپوزیشن کا بے معنی واویلا

سینیٹ میں حکومت کو فتح حاصل ہونے کے بعد اپوزیشن کو اپنی حیثیت کا علم ہو جانا چاہیے، تحریک عدم اعتماد لانا جمہوریت کا حسن ہے مگر نتاءج کو بھی تسلیم کرنا جمہوریت کا حسن کہلاتا ہے ۔ المیہ یہ ہے ہمارے ملک میں جو جیت جائے اس کیلئے نتاءج درست اور جو ہار جائے وہ دھاندلی کا الزام عائد کردیتا ہے ۔ اب اپوزیشن نے سینیٹ نتاءج کو ماننے سے انکار اور اے پی سی بلانے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ ن لیگ نے ایک اورتحریک عدم اعتماد لانے کا عندیہ دیدیا ۔ تحریک عدم اعتماد نہ ہوئی یہ کوئی میوزیکل چیئر کا کھیل ہوگیا ۔ حکومت کی فتح کو تسلیم کرنا چاہیے اور ایوان کو جمہوری انداز میں چلانا چاہیے نہ کہ ایک دوسرے کی ٹانگیں کھینچنے میں وقت گزرتا جائے اور کوئی مثبت قانون سازی نہ ہوسکے ۔ چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی کے خلاف اپوزیشن اور ڈپٹی چیئرمین سلیم مانڈوی والا کے خلاف حکومتی تحریک عدم اعتماد ناکام ہو گئی، چیئرمین سینٹ اور ڈپٹی چیئرمین سینٹ کے خلاف تحاریک عدم اعتماد کی کامیابی کےلئے مطلوبہ تعداد میں ووٹ نہیں مل سکے، سینٹ کی تاریخ میں پہلی بار چیئرمین سینٹ کو عہدے سے ہٹانے کی قرارداد پر رائے شماری ہوئی، ووٹنگ کا عمل مکمل ہونے کے بعد حکومت اور اپوزیشن کے پولنگ ایجنٹس کے سامنے ووٹوں کی گنتی کی گئی، جماعت اسلامی کے دو ارکان سراج الحق اور مشتاق احمد نے ووٹ نہیں ڈالا جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن)کے سینیٹر چوہدری تنویر خان علاج کےلئے بیرون ملک گئے ہوئے ہیں ۔ پریذائیڈنگ افسر بیرسٹر محمد علی سیف نے ووٹوں کی گنتی کے بعد اعلان کیا کہ آئین کے مطابق قرارداد کے حق میں 50 ووٹ پڑے جس کی وجہ سے یہ قرارداد ارکان کی نصف تعداد سے زائد ووٹ نہ حاصل ہونے کی وجہ مسترد ہو گئی ہے، تحریک عدم اعتماد کی مخالفت میں 45 ووٹ پڑے جبکہ 5 ووٹ مسترد ہو گئے، کامیابی کیلئے 55 ووٹ درکار تھے، چیئرمین سینٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کے بعد حکومتی اراکین نے ڈیسک بجا کر ایک دوسرے کو مبارکباد دی اور حکومتی ارکان کی جانب سے ایک سنجرانی سب پر بھاری کے نعرے لگائے گئے، اسی طرح ڈپٹی چیئرمین سینٹ سلیم مانڈوی والا کے بھی خلاف حکومت کی تحریک عدم اعتماد ناکام ہوگئی،سلیم مانڈوی والا کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی قرار داد سینیٹ کے ارکان کی مجموعی تعداد سادہ اکثریت حاصل نہیں ہوسکی، پرایذاءڈنگ آفیسر نے کہا کہ سلیم مانڈوی والا کے خلاف پیش کی جانے والی قرارداد کے حق میں 32 ووٹ آئے اپوزیشن نے ووٹ نہیں ڈالے، قبل ازیں سینٹ میں قائد حزب اختلاف راجا ظفر الحق نے چیئرمین صادق سنجرانی کے خلاف تحریک عدم اعتماد کی قرارداد پیش کی جس کی تصدیق کے لیے ووٹنگ کرائی گئی اور 64ارکان نے اپنی نشستوں پر کھڑے ہو کر راجا ظفر الحق کی قرارداد کی حمایت کی، اپوزیشن کی جانب سے مسلم لیگ ن کے سینیٹر جاوید عباسی اور حکومت کی جانب سے نعمان وزیر کو پولنگ ایجنٹ مقرر کیا گیا ۔ وزیراعظم عمران خان نے تحریک اعتماد کی ناکامی پر چیئرمین سینٹ صادق سنجرانی کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ آپ نے ثابت کیا کہ آپ پر ایوان کا اعتماد ہے ۔ متحدہ اپوزیشن نے تحریک عدم اعتماد میں حکومت پر ہارس ٹریڈنگ کا الزام عائد کیا اور شکست کو قبول کرنے سے انکار کر دیا آئندہ سیاسی لاءحہ عمل تیار کرنے کے لئے ایک اور اے پی سی بلانے کا اعلان کر دیا ۔ وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ اپوزیشن کے اپنے ہی سینیٹرز نے انتشار کی سیاست کو مسترد کر دیا ہے ۔

وزیراعظم کا دورہ امریکہ پر اظہار اطمینان

وزیراعظم عمران خان نے دور ہ امریکہ پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے خطے میں قیام امن کیلئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ویژن کو قابل تعریف قرار دیا ہے وزیراعظم کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر بحری امور علی زیدی، زلفی بخاری، علی جہانگیر صدقی، ڈی جی آئی ایس آئی اور ڈی جی آئی ایس پی آر شریک تھے ۔ اجلاس میں دورہ امریکہ کا جائزہ لیا گیا ۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان بہتر تعلقات علاقائی امن و استحکام میں معاون ثابت ہونگے ۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنے کامیاب دورہ امریکہ پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی سوچ کو سراہا اور کہا کہ پاک امریکہ تعلقات اور علاقائی امن سے متعلق ان کی سوچ قابل ستائش ہے، پاک امریکہ بہتر تعلقات دونوں ممالک کی قیادت کی خواہش ہے، دونوں ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات علاقائی امن و استحکام میں معاون ثابت ہونگے ۔ دریں اثنا وزیراعظم سے وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی چوہدری فواد حسین نے ملاقات کی ۔ ملاقات میں وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی تنظیم نو کے حوالے سے معاملات پر بات چیت ہوئی ۔ وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی نے درخواست کی کہ ماہ اکتوبر کو سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا مہینہ قرار دیا جائے ۔ وزیراعظم عمران خان نے لاہورڈویلپمنٹ اتھارٹی کے وائس چیئرمین ایس ایم عمران کو ہدایت کی ہے کہ ایل ڈی اے میں کرپشن کے خاتمے اور میرٹ کی بالادستی کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے اور تمام معاملات کو سیاسی مداخلت سے پاک رکھتے ہوئے شہریوں کو بلا تفریق ریلیف فراہم کیا جائے ۔ ایل ڈی اے کے وائس چیئرمین ایس ایم عمران نے وزیراعظم سے ملاقات کی اور انہیں وزیراعظم کے ویژن کے مطابق ایل ڈی اے میں کئے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیا ۔

ایس کے نیازی کا اعزاز

پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روز نیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی کا دنیا ئے صحافت میں قدم رکھنے کے بعد یہ خاصا رہا ہے کہ انہوں نے ہمیشہ اپنے قارئین اور ناظرین کو ہمیشہ قبل ازوقت خبر سے آگاہ کیا ۔ اس مرتبہ بھی سینیٹ میں پیش کردہ تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے آگاہ کردیا تھا کہ صادق سنجرانی ہی فتح سے ہمکنار ہوں گے اور سو اسی طرح ہوا ۔ روزنامہ پاکستان اور روز نیوز کا ہمیشہ سے یہ اعزاز رہا اور اپنے قارئین اور ناظرین کو قبل ازوقت خبر سے ;200;گاہ رکھنے کا اعزاز برقرار رکھتا ہے اس سلسلے میں پاکستان گروپ ;200;ف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹراور روز نیوز کے چیئر مین ایس کے نیازی کا سنہرا کردار ہے ۔ چیئر مین سینٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے ایس کے نیازی نے پہلے ہی بتادیا تھا کہ فتح صادق سنجرانی کی ہی ہوگی ۔ سو اسی طرح ہوا اور اپوزیشن کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔ ایس کے نیازی نے کہا کہ میں نے اپنے روز نیوز کے پروگرام سچی بات میں پہلے ہی بتا دیا تھا کہ صادق سنجرانی جیتے گئے ۔ اس موقع پر ایس کے نیازی سے تحریک انصاف کے رہنماء شوکت بسرا نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نیازی صاحب ;200;پ نے ایک جملے میں سمندر کو کوزے میں بند کردیا ہے ۔ ایس کے نیازی نے کہا تھا کہ میں نے پیپلز پارٹی کے دو تین لیڈروں کی بات سنی وہ کہے رہے تھے ووٹ ضرورت دینگے لیکن یہ نہیں بتایا کہ وہ کس کو دینگے ۔ اس جواب پر شوکت بسرا نے ایس کے نیازی کو زبردست خراج تحسین پیش کیا ۔

ضمیر فروشی کرنے والے سینیٹ ارکان کو تلاش کریں گے، شہباز شریف

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ضمیر فروشی کرنے والے سینیٹ ارکان کو تلاش کرکے کارروائی کریں گے۔

اسلام آباد میں شہبازشریف کی زیر صدارت (ن) لیگ کے سینیٹرز کا اہم اجلاس ہوا جس میں تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کی وجوہات پر غور کیا گیا جب کہ اجلاس میں شہباز شریف نے پارٹی لائن سے انحراف کرنے والے سینیٹرز پر سخت موقف اپنانے کا فیصلہ کیا۔

اجلاس میں صدر (ن) لیگ شہبازشریف کا کہنا تھا تحریک عدم اعتماد کی ناکامی کی وجوہات تلاش کریں گے، جمہوریت کا وقار ایک بار پھرمجروح کیا گیا تاہم یہ صرف اپوزیشن کا نقصان نہیں، ضمیر فروشی کرنے والے ارکان کو تلاش کریں گے اور کارروائی ہوگی۔

شہباز شریف نے کہا کہ اپوزیشن کے کچھ سینیٹرز نے حکومت کے ساتھ مل کر سینیٹ اور اپنا وقار تباہ کیا ہے، تمام اپوزیشن کے ساتھ مل کر اس معاملے پر لائحہ عمل تیار کریں گے جب کہ 14سینیٹرز نے ضمیر فروشی کی اور تحریک کو ناکام بنایا۔

ذوالحج کا چاند نظر آگیا، پاکستان میں عیدالاضحیٰ 12 اگست کو منائی جائے گی

ملک کے مختلف حصوں میں ذوالحج کا چاند نظر آگیا جس کے بعد پاکستان میں عیدالاضحیٰ 12 اگست کو منائی جائے گی۔

چیئرمین مرکزی رویت ہلال کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے بھی چاند نظر آنے کا باضابطہ اعلان کر دیا۔

پاکستان میں یکم ذوالحج 1440 ہجری 3 اگست اور عید الاضحیٰ 12 اگست کو ہوگی۔

مفتی منیب الرحمان نے بتایا کہ لاہور، نواب شاہ، چھاچھڑو، سوات، کوئٹہ، ژوب اور دیگر مقامات سے چاند نظر آنے کے شواہد موصول ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ ذوالحج کا چاند دیکھنے کیلئے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس کراچی میں ہوا جہاں اجلاس کی صدارت چیئرمین کمیٹی مفتی منیب الرحمان نے کی۔

ذوالحج کا چاند دیکھنے کیلئے دیگر شہروں میں بھی زونل کمیٹیوں کے اجلاس ہوئے۔

لاہور میں ڈائریکٹر جنرل اوقاف پنجاب طاہر رضا بخاری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ صوبے میں 4 مقامات سے چاند نظرآنے کی شہادتیں موصول ہوئیں۔

طاہر رضا بخاری نے کہا کہ ناروول اور سیالکوٹ سے چاند نظر آنے کی شہادتیں موصول ہوئیں۔

اس کے علاوہ چھاچھرو، بدین، عمر کوٹ سمیت مختلف جگہوں سے بھی چاند کی شہادتیں موصول ہوئیں۔

یاد رہے کہ سعودی عرب میں گزشتہ روز ذوالحج کا چاند نظر آگیا تھا جس کے بعد وہاں آج یکم ذوالحج ہے۔

حج کا رکنِ اعظم یعنی وقوفِ عرفہ ہفتہ 10 اگست (9 ذوالحج) کو ادا کیا جائے گا جبکہ سعودی عرب میں اتوار 11 اگست کو عید الاضحیٰ کا پہلا روز ہوگا۔

پاکستان کرکٹ میں سدھار لانے کیلیے نسخوں کی تلاش شروع

لاہور: پاکستان کرکٹ میں سدھار لانے کیلیے نسخوں کی تلاش شروع کر دی گئی۔

اپنے قیام کے 8ماہ تک غیر فعال نظر آنے والی پی سی بی کی کرکٹ کمیٹی کو پہلی بڑی ذمہ داری مل ہی گئی، ورلڈکپ کی ناکام مہم کے بعد تبدیلیوں کی لہر چلنا یقینی ہے، کمیٹی کو مستقبل کے حوالے سے اہم سفارشات تیار کرکے چیئرمین پی سی بی احسان مانی کے سپرد کرنا ہیں، چیف سلیکٹر انضمام الحق نوشتہ دیوار پڑھتے ہوئے عہدہ چھوڑ چکے،ان کے جانشن کا انتخاب ہونا ہے،موزوں امیداروں کے ناموں پر غور ہوگا۔

ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور معاون اسٹاف کے مستقبل کا بھی فیصلہ ہونا باقی ہے،بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور نے تو پہلے ہی ورلڈکپ کو اپنی آخری ذمہ داری قرار دے دیا تھا، مکی آرتھر کو آئندہ سال شیڈول ورلڈ ٹی ٹوئنٹی تک برقرار رکھا جا سکتا ہے۔

سرفراز احمد سے ٹیسٹ ٹیم کی قیادت واپس لے کر صرف ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی فارمیٹ تک محدود کرنے کی تجویز بھی زیرغور ہے،ٹیسٹ اور محدود اوور کی کرکٹ کیلیے الگ الگ کوچز رکھنے کی اطلاعات گردش میں ہیں۔

پی سی بی کے ایم ڈی وسیم خان کرکٹ کمیٹی کے بھی سربراہ ہیں،ان کی زیر صدارت جمعے کی شام 5بجے قذافی اسٹیڈیم لاہورمیں ہونے والے اجلاس میں سابق کپتان مصباح الحق، قومی ویمنز ٹیم کی سابق کپتان عروج ممتاز، ڈائریکٹر انٹرنیشنل کرکٹ ذاکر خان، ڈائریکٹر ڈومیسٹک کرکٹ ہارون رشید اور ڈائریکٹر کرکٹ اکیڈمیز مدثر نذر شریک ہوں گے۔

کینیڈا میں موجود وسیم اکرم ویڈیو لنک کے ذریعے شامل ہوں گے،سابق چیف سلیکٹر انضمام الحق، تاحال ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور کپتان سرفراز احمد الگ الگ کمیٹی کے سامنے پیش ہوتے ہوئے ٹیم کی کارکردگی اور آئندہ کے امکانات پر بات کریں گے،کارکردگی کا پوسٹ مارٹم کرنے کے بعد کمیٹی سفارشات مرتب کرکے چیئرمین پی سی بی احسان مانی کو بھجوائے گی،ان کی روشنی میں پاکستان کرکٹ کے مستقبل کی راہوں کا تعین ہوگا۔

پی سی بی کے مطابق اجلاس میں نہ صرف قومی مینز بلکہ ویمنز، انڈر16اور انڈر19ٹیموں کی گزشتہ 3سال کی کارکردگی کا جائزہ لیتے ہوئے سفارشات مرتب کرکے چیئرمین بورڈ احسان مانی کے حوالے کردی جائیں گے۔

نیلم وادی میں متاثرین لیسوا کی خدمت

گزشتہ ہفتے کافی عرصے بعد ڈاکٹر آصف جاہ سے ملاقات ہوئی تو انہوں نے بتایا کہ وہ وادی نیلم کے علاقہ لیسوا میں مصروف رہے جس کی وجہ سے ملاقات نہ ہو سکی ۔ ڈاکٹر آصف محمود جاہ اللہ کے ان خوش نصیب بندوں میں سے ہیں جن کو اللہ تعالیٰ نے اپنے بندوں کی خدمت کےلئے منتخب کر رکھا ہے ۔ خدا کو اپنے بندوں میں عزیز تر وہی لوگ ہیں ، جو مخلوق خدا کے خدمت گزار ہیں ۔ ڈاکٹر صاحب نے میڈیکل کے شعبے میں اپنی اعلیٰ تعلیم کو اپنے لئے ذریعہ معاش نہیں بنایا ۔ انہوں نے اپنے محکمے میں سرکاری ڈیوٹی سرانجام دینے کے بعد اپنا سارا وقت غریب اور مستحق مریضوں کے علاج کے لئے قربان کر دیا ہے ۔ استفسار پر بتایا کہ یہاں چند ہفتے قبل شدید بارش ہوئی جس کی وجہ سے سارا نظام درہم برہم ہوگیا ۔ لہذا اس علاقے میں امدادی کیمپ لگا کر لوگوں کو امداد بہم پہنچائی ۔ ڈاکٹر صاحب نے تفصیلاً بتایا کہ علاقے میں 8 بجے کے قریب لیسوا کے پہاڑوں پراچانک کالے بادلوں نے بسیرا کر لیا ۔ اگلے ہی لمحے سخت بجلی چمکی ۔ اندھیرا تو پہلے ہی تھا بجلی ایسی کڑاکے کی چمکی کہ ایسے لگا بہت بڑا بم پھٹا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی پہاڑوں سے گولی کی رفتار سے پانی کا زبردست ریلا ;200;یا جس میں بڑے بڑے دیوہیکل پتھر بھی تھے ۔ پانی کے راستے میں جو بھی گھر سو سال پہلے پرانے درخت‘ مساجد‘ اور دکانیں تھیں سب منٹوں میں زمین بوس ہوگئیں ۔ صفحہ ہستی سے مٹ گئیں ۔ جہاں گھر تھے وہاں لگ رہا تھا کہ کبھی گھر تھے ہی نہیں ۔ 30 سے زیادہ لوگ جانوں سے گئے اور سینکڑوں لوگ بے گھر ہو گئے ۔ پاکستانی فوج کے جری نوجوانوں ‘ علاقے کے لوگوں اور پولیس نے فوراً پہنچ کر ;200;فت زدوں کی مدد کی ۔ فوجیوں نے ہیلی کاپٹر کے ذریعے لوگوں کو محفوظ مقامات تک پہنچایا ۔ کسٹمز ہیلتھ کیئر سوساءٹی کا طرہ امتیاز رہا ہے کہ جہاں کوئی ;200;فت ;200;تی ہے ۔ ہماری ٹی میں ادھر پہنچتی ہیں اور جاتے ہی ریسکیو اور ریلیف کے کام میں جُت جاتی ہیں ۔ دوستوں سے 100خاندانوں کےلئے راشن خریدنے کا کہا ۔ ہوتے ہوتے 150 پیکٹ راشن تیار کروا لیا ۔ خدمت اور علاج کا قافلہ ;200;فت زدوں کی خدمت اور مدد کےلئے وادی لیسوا بذریعہ مظفر;200;باد روانہ ہوا ۔ نوسیری برج سے گزرے جہاں نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پلانٹ سے جس سے 100 میگاواٹ سے زیادہ بجلی پیدا ہوتی ہے ۔ چہلہ برج سے پنج گراں ‘ بل گراں نوسیری ہوتے ہی ٹیٹوال چیک پوسٹ پہنچے ۔ جہاں پہنچتے ہی موبائل کا وقت خود بخود ;200;دھ گھنٹہ ;200;گے ہوگیا کیونکہ ٹیٹوال چیک پوسٹ کے ;200;گے ہندوستان ہے ۔ ہندوستان کا لفظ سن کر ایک کشمیری بابا بولا کہ بابا ہندوستان نہیں وہ ہمارا مقبوضہ کشمیر ہے ۔ چیک پوسٹ سے مقبوضہ کشمیر نظر ;200; رہا تھا ۔ ایک جیسے مناظر‘ ایک جیسا کلچر اور مشترکہ تاریخ کشمیر جنت نظیر وادی کو ہندءوں کے مظالم نے ظلم و ستم کی ;200;ماہ جگا بنا رکھا ہے ۔ لیسوا بائی پاس کے قریب تباہی و بربادی کے واضح ;200;ثار نظر ;200;نے لگے ۔ ٹوٹے ہوئے گھر زمین بوس ہوئے درخت ایسے لگ رہا تھا بہت زیادہ تباہی ہوئی ہے ہماری گاڑیاں رُکتے ہی بچوں اور عورتوں کی کثیر تعداد جمع ہوگئی ۔ بچوں میں گفٹس بانٹے عورتوں میں خوبصورت چادریں تقسیم کیں ۔ جا بجا ٹینٹ لگے ہوئے تھے ۔ مقامی لوگوں نے بچوں اور عورتوں سے ملایا جن کے باپ اور خاوند پانی کی نظر ہوگئے ۔ ان کی لاشوں کی تلاش ابھی تک جاری ہے ۔ بائی پاس سے فارغ ہو کر لیسوا بازار کی طرف بڑھے ۔ سیلاب میں لیسوا بازار مکمل طور پر تباہ ہوا ۔ کوئی دکان بھی سلامت نہ تھی گاڑیاں دیکھ کر متاثرین لیسوا جمع ہوگئے ۔ ایک کھلی جگہ پر سامان رکھا علاقے کے لوگ فوراً مدد کو ;200;گئے ۔ ایک ٹینٹ خالی کروا لیا ۔ جس میں دوائیاں رکھیں اور فوراً ڈسپنسری سجا لی ۔ شروع میں مریض کم تھے مگر ;200;ہستہ ;200;ہستہ ہمارا کام شروع ہوگیا ۔ شام تک 300 مریضوں کا چیک اپ اور علاج کیا ۔ الحمداللہ جس مقصد کےلئے ;200;ئے تھے پورا ہوا ۔ 350 مریضوں کا علاج ہوا ۔ 150 متاثرہ خاندانوں میں راشن تقسیم کیا ۔ یتیم بچوں کو کیش بھی دیا ۔ خواتین میں خوبصورت دیدہ زیب شالیں تقسیم کیں اور بچوں میں گفٹس تقسیم کئے ۔ مظفر;200;باد ہنستا بستا شہر ہے ۔ 2005ء کے زلزلہ کے بعد کا مظفر ;200;باد یاد ;200;گیا جب ہرطرف مایوسی اور افسردگی تھی ۔ موت کے سائے پھیلے ہوئے تھے ۔ پورا شہر ملبے کا ڈھیر بنا ہوا تھا ۔ ہر فیملی اور گھر کا کوئی نہ کوئی فرد زلزلہ میں لقمہ اجل بنا تھا ۔ سلمیہ کے علاقے میں 2005ء کے دنوں میں بنی ہوئی خوبصورت جھیل ابھی تک موجود ہے ۔ جس سے علاقے کی خوبصورتی میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ۔ یہاں پہنچتے ہی 2005ء کے زلزلے کے مناظر اور اثرات یاد ;200;گئے یہاں ;200; کر زلزلہ زدگان کی خدمت کی تھی ۔ زلزلہ میں شہید ہونے والوں کی مغفرت کے لئے دعا کی تھی ۔ سلمیہ میں بیٹھے ہی تھے کہ مریضوں کی ;200;مد شروع ہوگئی ۔ ;69;ye کلینک شروع کر دیا ۔ مقامی لوگوں کے ساتھ مسجد کے کمرے میں ڈسپنسری سجا لی ۔ مریض ڈاروں صورت میں ادھر ادھر سے بر;200;مد ہونا شروع ہوگئے ۔ نظر چیک کروانے کے بعد نظر کی کمزوری اور عینکیں ملنے کا پتہ چلا تو سب کی خواہش ہوگئی کہ انہیں عینکیں بھی ملیں اور نظر بھی چیک ہوئی ۔ چار بجے تک 150 مریضوں کا چیک اپ اور علاج ہوا ۔ جب ایک بھی مریض نہ رہا تو واپسی کا رخ کیا ۔ ;200;ج ماشاء اللہ مظفر;200;باد میں زندگی رواں دواں ہے ۔ خوبصورت وادیوں میں صاف و شفاف اور چوڑی سڑکیں ہیں ۔ وادی کشمیر اصل میں جنت ارضی ہے ۔ خوبصورت اور حسین سرسبز بل کھاتی وادیوں کی سرزمین ہے ۔ یہاں ;200; کر بندہ وادی کے حسین اور مسحور کن مناظر میں کھو جاتا ہے ۔ وادی نیلم تو اتنی خوبصورت ہے کہ بندہ اس کے ایک سے ایک خوبصورت اور حسین مناظر دیکھ کر ان میں کھو جاتا ہے ۔ وادی میں اب امن ہے اس لئے ملک بھر سے سیاح اس کا رخ کرتے ہیں ۔

Google Analytics Alternative