- الإعلانات -

کورونا وائرس پر قابو پانے کیلئے اقوام متحدہ کا مزید تعاون کا مطالبہ

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گْوتریس نے کورونا وائرس کی عالمی وبا سے نمٹنے کے لیے مضبوط تر بین الاقوامی تعاون کا مطالبہ کیا ہے۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے ٹیلیفون پر میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ یہ عالمی وبا دوسری جنگ عظیم کے بعد انسانیت کو درپیش صریح بد ترین چیلنج ہے، اس کے باعث کئی افراد مر رہے ہیں اور معیشتیں تباہ ہو رہی ہیں۔انہوں نے نشاندہی کی کہ ممالک کے درمیان عدم اتفاق نظر آ رہا ہے۔ انہوں نے زور دیا کہ ترقی پذیر ملک جن کے طبی نظام ناکافی ہیں انہیں مدد کی ضرورت ہے۔اقوام متحدہ کو ترقی پذیر اور متحارب ملکوں کی مدد کے ساتھ ساتھ پناہ گزین کیمپوں میں اس وبا پر قابو پانے کے لیے 2 ارب ڈالر جمع کرنے کی توقع ہے۔ ادارے کے رکن ملکوں نے تاحال کل 40 کروڑ ڈالر دینے کا وعدہ کیا ہے۔ انہوں نے سب سے زیادہ عطیہ دینے والے ملک جاپان کو سراہتے ہوئے کہا کہ دنیا کو سمجھنا چاہیے کہ اقوام متحدہ کی فرائض کی انجام دہی کے لیے سرمائے کی فراہمی کی ضرورت ہے اور یونیورسل ہیلتھ کوریج کے سلسلے میں جاپان کا قائدانہ کردار یقیناً ناگزیرہے۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے عالمی ادارہ صحت کا دفاع بھی کیا۔ یاد رہے کہ عالمی وبا کی سنگینی کا درست اندازہ نہ لگانے اور اسے بروقت عالمی وبا قرار نہ دیئے جانے کے باعث ادارے پر تنقید کی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی ادارہ صحت محدود وسائل کے ساتھ صف اول پر برسر پیکار ہے اور انہیں اس پر فخر ہے.