دلچسپ اور عجیب

حکومتی اتحاد میں شامل جماعتوں کا عمران خان کی جانب سے افواج پاکستان کو متنازعہ بنانے کی شدید مذمت

حکومتی اتحاد میں شامل جماعتوں کا عمران خان کی جانب سے افواج پاکستان کو متنازعہ بنانے کی شدید مذمت

حکومتی اتحاد میں شامل جماعتوں نے چئیرمین پی ٹی آئی عمران خان کے جلسہ عام میں افواج پاکستان اور اس کی قیادت کے خلاف نفرت پھیلانے اور حساس پیشہ وارانہ امورکو متنازعہ بنانے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری قوم سیلاب سے جبکہ نفرت، انتقام اور تکبر میں ڈوبا عمران خان مسلح افواج سمیت قومی اداروں اور عوام سے لڑرہا ہے اور سنگین بہتان تراشی کررہا ہے جس کا مقصد معاشی بحالی کے عمل کو متاثر کرکے پاکستان کو سری لنکا بنانا اورعوام کو فوج سے لڑاناہے اور فوج کے ’رینک اینڈ فائل‘ میں تصادم کی راہ ہموار کرنا ہے۔ آئین اور قانون کی طاقت سے اس مذموم سازش کو ناکام بنائیں گے اور سازشیوں سے آئین اور قانون کے مطابق نمٹیں گے۔ پیر کو مشترکہ بیان میں حکومتی اتحادی جماعتوں نے کہا کہ پاکستان آئین کے مطابق چلے گا، اسے کسی فرد واحد کے تکبر ، فسطائیت اور آمرانہ رویوں کا غلام بنانے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ وزیراعظم شہبازشریف کی قیادت میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں اور اداروں کے ساتھ مل کر مسلح افواج ملک میں سیلاب متاثرین کی مددکی قابل قدر خدمات انجام دے رہی ہیں جبکہ دوسری جانب دہشت گردی کے خلاف جرات وبہادری اور دلیری سے جنگ لڑرہی ہیں جس میں فوج کے افسر اور جوان جام شہادت نوش کررہے ہیں۔ ایک ایسے موقع پر جب پوری قوم دہشت گردی سے نجات ، معاشی استحکام ، سیلاب متاثرین کی مدد اور بحالی کے ایجنڈے پر متحد اور ایک آواز ہے ، ایسے میں ایک تنہاءآواز ہر روز قومی اتحاد کو پارہ پارہ کرنے کے لئے جھوٹ،پراپگنڈے اور بہتان تراشی کے ذریعے مسلسل نفرت پھیلا رہا ہے۔ حکومتی اتحادی جماعتوں کا مکمل اتفاق رائے ہے کہ معیشت کی بحالی سمیت قومی مفادات کے تحفظ، مسلح افواج سمیت قومی اداروں اور ان کی قیادت کے آئینی احترام اور حدود کی پاسداری اور عوام بالخصوص سیلاب زدگان کی امداد، بحالی اور ریلیف کے عمل کو ہرگز متاثر نہیں ہونے دیں گے۔ سازشی عناصر کو آئین اور قانون کے مطابق نمٹیں گے اوراُن کے پاکستان کو کمزور کرنے کے ہر مذموم ایجنڈے کو ناکام بنائیں گے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔