پاکستان خاص خبریں

عمران خان نے جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو کر اپنا بیان ریکارڈ کرا دیا

دہشت گردی کیس، عدالت نے عمران خان کومزید ریلیف دے دیا

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو کر اپنا بیان ریکارڈ کرادیا ہے 20 اگست کو اسلام آباد میں ریلی سے خطاب میں عمران خان نے اسلام آباد پولیس کے اعلٰی افسران اور خاتون ایڈیشنل سیشن جج کو مبینہ طور پر دھمکیاں دی تھیں جس پر ان کے خلاف تھانہ مارگلہ میں انسداد دہشت گردی کی دفعہ 7 کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی تھی عمران خان کئی نوٹسز اور عدالتی حکم کے بعد خاتون جج اور پولیس افسران کو دھمکیوں سے متعلق مقدمے میں جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو ئے عدالت کے باہر اخبار نویسوں کی ایک بہت بڑی تعداد سے کی جانے والی بات چیت میں عمران خان نے کہا کہ ایک طرف نجھے سیاست کرنے سے سے روکا جا رہا ہے تو دوسری طرف میی پارٹی کوبھی کچلنے کی کوشش کی جا رہی ہے ان کا کہنا تھا کہ کہنا تھا یہ جانتے ہوئے بھی کہ مقدمہ مذاق ہے، قانون کے احترام میں پیش ہوا ہوں انکا کہنا تھا کہ ’پہلے ملک کی معاشی حالات کی وجہ سے چُپ کر کے بیٹھے ہوئے تھے لیکن ہم سیلاب زدگان کے لیے پیسے اکٹھے کرنے لگے تو انہوں نے پابندیاں لگا دی۔ جتنا مجھے اور میری پارٹی کو دیوار کے ساتھ لگائیں گے ہم اتنا ہی تیار ہو رہے ہیں اور اسی مہینے تیار ہو رہے ہیں عمران خان نے کہا کہ انتظار کی گھڑیاں ختم ہونے والی ہیں۔ میں قوم کے سامنے پیغام دے رہا ہوں جب کال دوں گا یہ امپورٹڈ حکومت برداشت نہیں کر پائے گی، اب عوام کا جو سمندر نکلنے والا ہے میں چیلنج کر رہا ہوں جس دن کال دی آپ برداشت نہیں کر سکیں گے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔