پاکستان صحت

محکمہ صحت نے ڈینگی کے سد باب کیلئے پانچ حساس اضلاع میں اقدامات تیز کرد ئیے ہیں

محکمہ صحت نے ڈینگی کے سد باب کیلئے پانچ حساس اضلاع میں اقدامات تیز کرد ئیے ہیں، اس سلسلے میں صبح و شام ڈینگی کُش سپرے کرنے کے ساتھ ساتھ، مردان میں ڈینگی مریضوں کیلئے سی بی سی ٹیسٹ بھی مفت کردیا گیا ہے

محکمہ صحت نے ڈینگی کے سد باب کیلئے پانچ حساس اضلاع میں اقدامات تیز کرد ئیے ہیں، اس سلسلے میں صبح و شام ڈینگی کُش سپرے کرنے کے ساتھ ساتھ، مردان میں ڈینگی مریضوں کیلئے سی بی سی ٹیسٹ بھی مفت کردیا گیا ہے جبکہ دس ہزار مچھر دانیاں تقسیم اور حساس اضلاع کے مراکز صحت میں ڈینگی آئسولیشن وارڈز قائم کی گئی ہیں جبکہ ہزاروں گھروں میں ڈینگی لاروا تلف کیا گیا ہے، ضلع خیبر، مردان، نوشہرہ، ہری پور اور پشاور میں لاروا ختم کرنے کیلئے ڈینگی سکواڈ متحرک کر دیا گیا ہے محکمہ صحت کے ترجمان نے ڈینگی سد باب بارے ہنگامی اقدامات کی تفصیلات جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ صوبے کے 90 فیصد ڈینگی کیسز پانچ اضلاع سے رپورٹ ہورہے ہیں جس کہ بنیاد پر ان پانچ حساس اضلاع میں ڈینگی کے سدباب کیلئے صبح شام ڈینگی کُش سپرے اور لاروا کُش کاروائیاں اور صبح شام مچھر مار فوگنگ جاری ہیں۔ محکمہ صحت کے مطابق موجود اعداد و شمار کے مطابق ضلع خیبر، مردان، نوشہرہ، ہری پور اور پشاور کو ڈینگی کے حوالے سے حساس قرار دیا گیا ہے جہاں ڈینگی لاروا ختم کرنے کیلئے ڈینگی سکواڈ ہمہ وقت متحرک ہے۔ محکمہ صحت کے ترجمان کے مطابق ضلع مردان میں ڈینگی مریضوں کی کُل تعداد پندرہ سو تک پہنچی ہے ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر کچکول نے ڈینگی مریضوں کیلئے سی بی سی ٹیسٹ مفت کردیا ہے۔ حساس اضلاع میں ڈینگی مچھر کے کاٹنے سے بچنے کیلئے دس ہزار مچھر دانیاں تقسیم کی گئی ہیں جبکہ حساس اضلاع کے مراکز صحت میں ڈینگی آئسولیشن وارڈز بھی قائم کردیے گئے ہیں۔ اُدھر ضلع خیبر میں ڈی ایچ او ڈاکٹر ظفر کے احکامات پر متاثرہ علاقوں میں گھروں کے اندر موجود کنٹینرز میں لاروا ختم کرنے، سپرے کرنے فوگنگ اور آگاہی سیشنز کے انعقاد کا سلسلہ زور و شور سے جاری ہے۔ ڈینگی کا قلع قمع کرنے کیلئے ڈینگی سکواڈز نے ہزاروں گھروں میں ڈینگی لاروا تلف کردیا ہے جبکہ گلی کوچوں سمیت گھروں کے اندر کھڑے پانی کی سخت نگرانی کی جارہی ہے۔ ترجمان کے مطابق متاثرہ حساس علاقوں میں گھروں کے اندر ڈینگی لاروا کش مہم تیزی سے جاری ہے جبکہ دوسری جانب حساس اضلاع کے متاثرہ علاقوں میں مساجد اور حُجروں میں آگاہی مہمات بھی چلائی جارہی ہیں۔ محکمہ صحت کے بروقت اقدامات سے پچھلے سال کی نسبت ڈینگی کیسز میں واضح کمی دیکھنے میں آئی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔